Urdu-Page-433

ਛਛੈਛਾਇਆਵਰਤੀਸਭਅੰਤਰਿਤੇਰਾਕੀਆਭਰਮੁਹੋਆ॥
chhachhaichhaa-i-aa varteesabhantartayraakee-aa bharam ho-aa.
Chhachha: O’ God, the spiritual ignorance and doubt which exists within everyone is Your doing.
ਹੇਪ੍ਰਭੂਜੋਅਵਿੱਦਿਆਸਭਜੀਵਾਂਦੇਅੰਦਰਪ੍ਰਬਲਹੋਰਹੀਹੈਤੇਮਨਵਿੱਚਭਟਕਣਾਹੈਇਹਤੇਰੀਹੀਬਣਾਈਹੋਈਹੈ
 چھچھےَ چھائِیا ۄرتیِ سبھ انّترِ تیرا کیِیا بھرمُ ہویا 
چھایئیا ۔ لا لعمی ۔ نادانی ۔ جہالت۔ بھرم۔ شک ۔ و شبہ۔ وہم وگمان۔
روحانی لاعلمی اور شک جو سب کے اندر موجود ہے آپ کا کرنا ہے

 ਭਰਮੁਉਪਾਇਭੁਲਾਈਅਨੁਆਪੇਤੇਰਾਕਰਮੁਹੋਆਤਿਨ੍ਹ੍ਗੁਰੂਮਿਲਿਆ॥੧੦॥
bharamupaa-ay bhulaa-ee-an aapaytayraakaram ho-aa tinHguroomili-aa. ||10||
Having created doubt, You Yourself cause them to wander in delusion; those whom You bless with Your mercy meet with the Guru. ||10||
ਸੰਦੇਹਪੈਦਾਕਰਕੇਤੂੰਖੁਦਹੀਇਨਸਾਨਾਂਨੂੰਕੁਰਾਹੇਪਾਉਂਦਾਹੈਜਿਨ੍ਹਾਂਉਤੇਤੇਰੀਮਿਹਰਹੈਉਹਨਾਂਨੂੰਗੁਰੂਜੀਮਿਲਦੇਹਨ੧੦
 بھرمُ اُپاءِ بھُلائیِئنُ آپے تیرا کرمُ ہویا تِن٘ہ٘ہ گُروُ مِلِیا ੧੦
بھلائین ۔ گمراہ ۔ کرم۔ بخشش۔
یہ گمراہی بھی اے خدا تیری پیدا کی وہئ ہے ۔ خدا نے خود ہی وہم وگمان پیدا کرکے انسانوں کو گمراہ کیا ہوا ہے ۔ اے خدا جن پر تیری کرم و عنایت ہے ان کا مرشد سے ملاپ ہو جاتا ہے ۔ 

 ਜਜੈਜਾਨੁਮੰਗਤਜਨੁਜਾਚੈਲਖਚਉਰਾਸੀਹਭੀਖਭਵਿਆ॥
jajaijaanmangatjanjaachai lakh cha-oraaseehbheekhbhavi-aa.
Jajja: O’ my mind, realize that God from whom everyone begs for Naam while wandering through millions of existences.
(ਹੇਮਨ!) ਉਸਪ੍ਰਭੂਨਾਲਸਾਂਝਪਾਜਿਸਤੋਂਹਰੇਕਜੀਵਚੌਰਾਸੀਲੱਖਜੂਨਾਂਵਿੱਚਭਟਕਦਾਹੋਇਆਮੰਗਤਾਬਣਕੇਦਾਨਮੰਗਦਾਹੈ
 ججےَ جانُ منّگت جنُ جاچےَ لکھ چئُراسیِہ بھیِکھ بھۄِیا 
جان ۔ سمجھ ۔منگت۔ بھکاری ۔ جن خدمتگار ۔ جاپے ۔ مانگتا ہے ۔ بھیکھ ۔ خیرات۔ بھویا۔ بھٹکتا پھرتا ہے ۔ ـ
اے انسان سمجھ لے کہ ہر انسان بھکاری ہوکر خدا سے بھیک مانگتا ہے اور چوراسی لاکھ قسموں کے جانداروں میں بستا ہے اس لئے خود ہی بھیک مانگنے والا ہے

 ਏਕੋਲੇਵੈਏਕੋਦੇਵੈਅਵਰੁਨਦੂਜਾਮੈਸੁਣਿਆ॥੧੧॥
aykolayvaiaykodayvaiavarnadoojaamaisuni-aa. ||11||
It is only one God who gives and takes; I have not heard of any other. ||11||
ਇਕਹੈਪ੍ਰਭੂਦੇਣਵਾਲਾਹੈਤੇਉਹਹੀਲੈਣਵਾਲਾਹੈਮੈਂਅਜੇਤਕਨਹੀਂਸੁਣਿਆਕਿਉਸਤੋਂਬਿਨਾਕੋਈਹੋਰਭੀਦਾਤਾਂਦੇਣਜੋਗਾਹੈ੧੧
ایکو لیۄےَ ایکو دیۄےَ اۄرُ ن دوُجا مےَ سُنھِیا ੧੧
خیرا ت دینے والا سخی ہے جو سخاوت کرتا ہے ۔ اس کے علاوہ میں نے دوسرا کوئی نہیں سنتا

 ਝਝੈਝੂਰਿਮਰਹੁਕਿਆਪ੍ਰਾਣੀਜੋਕਿਛੁਦੇਣਾਸੁਦੇਰਹਿਆ॥
jhajhaijhoormarahuki-aa paraanee jo kichhdaynaa so day rahi-aa.
Jhajha: O mortal, why are you dying of anxiety? Whatever God is to give, He is giving it to you.
ਹੇਪ੍ਰਾਣੀ !ਤੂੰਕਿਊਂਚਿੰਤਾਨਾਲਮਰਦਾਹੈਂਜੋਕੁਝਪ੍ਰਭੂਨੇਤੈਨੂੰਦੇਣਾਹੈਉਹਆਪਹੀਦੇਰਿਹਾਹੈ
 جھجھےَ جھوُرِ مرہُ کِیا پ٘رانھیِ جو کِچھُ دینھا سُ دے رہِیا 
پرانی ۔ جاندار۔ انسان۔ جھور۔ فکر و تشویش
اے انسان روٹی روزی کی فکر و تشویش کیوں کرتا ہے اور روحانی موت کیوں مر رہے ہو وہ خود ہی تجھے دینے کا فیصلہ کیا ہو اہے وہ خود ہی دے رہا ہے

 ਦੇਦੇਵੇਖੈਹੁਕਮੁਚਲਾਏਜਿਉਜੀਆਕਾਰਿਜਕੁਪਇਆ॥੧੨॥
day dayvaykhaihukamchalaa-ay ji-o jee-aa kaarijakpa-i-aa. ||12||
He gives sustenance and watches over everyone; He executes His command by making sure that all creatures receive their destined sustenance. ||12||
ਉਹਸਭਨੂੰਰਿਜ਼ਕਦੇਰਿਹਾਹੈਸੰਭਾਲਭੀਕਰਰਿਹਾਹੈਤੇਰਿਜ਼ਕਵੰਡਣਵਾਲਾਆਪਣਾਹੁਕਮਵਰਤੋਂਵਿਚਲਿਆਰਿਹਾਹੈ੧੨
 دے دے ۄیکھےَ ہُکمُ چلاۓ جِءُ جیِیا کا رِجکُ پئِیا ੧੨
۔ دیکھے ۔ نگہبانی ۔ رزق۔ روزی
جیسے جیسے رزق مقرر ہے ۔ وسب کو دے رہا ہے اور نگرانی کرتا ہے ۔ 

 ਞੰਞੈਨਦਰਿਕਰੇਜਾਦੇਖਾਦੂਜਾਕੋਈਨਾਹੀ॥njanjainadarkarayjaadaykhaadoojaa ko-eenaahee.Nyanya: When God bestows His glance of grace, then I see none other than Him as benefactor
ਜਦੋਂਪ੍ਰਭੂਮੇਹਰਦੀਨਜ਼ਰਕਰੇ,ਤਾਂਉਸਤੋਂਬਿਨਾਮੈਨੂੰਕੋਈਹੋਰਦਾਤਾਨਹੀਂਦਿੱਸਦਾ
 جنْنّجنْےَ ندرِ کرے جا دیکھا دوُجا کوئیِ ناہیِ 
ندر کرے.
کرم و عنایت فرمائے
جس رازق کی دی ہوئی نعمتیں ہر جاندار استعمال کر رہا ہے ۔ اس کا نہ آج وصال ودیدار حاصل ہوا ہے 

 ਏਕੋਰਵਿਰਹਿਆਸਭਥਾਈਏਕੁਵਸਿਆਮਨਮਾਹੀ॥੧੩॥
aykoravrahi-aa sabhthaa-eeaykvasi-aa man maahee. ||13||
God is pervading everywhere and He dwells in every heart. ||13||
ਪ੍ਰਭੂਆਪਹੀਹਰਥਾਂਮੌਜੂਦਹੈਹਰੇਕਦੇਮਨਵਿਚਪ੍ਰਭੂਆਪਹੀਵੱਸਰਿਹਾਹੈ੧੩
 ایکو رۄِ رہِیا سبھ تھائیِ ایکُ ۄسِیا من ماہیِ ੧੩
۔ رورہیا۔ بستا ہے ۔ سبھ تھائی ۔
خدا ہر جگہ موجود رہا ہے اور وہ ہر دل میں بستا ہے 

 ਟਟੈਟੰਚੁਕਰਹੁਕਿਆਪ੍ਰਾਣੀਘੜੀਕਿਮੁਹਤਿਕਿਉਠਿਚਲਣਾ॥
tataitanchkarahuki-aa paraaneegharheekemuhatkeuthchalnaa.
Tatta: O’ mortals, why do you indulge in useless deeds? In a moment or so, you would depart from this world.
ਹੇਪ੍ਰਾਣੀਵਿਅਰਥਧੰਧੇਕਿਉਂਕਰਦਾਹੈਥੋੜੇਹੀਸਮੇਵਿਚਤੂੰਇਸਜਗਤਤੋਂਉਠਕੇਚਲੇਜਾਣਾਹੈ
 ٹٹےَ ٹنّچُ کرہُ کِیا پ٘رانھیِ گھڑیِ کِ مُہتِ کِ اُٹھِ چلنھا 
ٹخچ ۔ کنجوسی ۔ فضول کام۔ گھڑی ۔ مہت ۔ بہت ۔ جلد ۔
اے انسان کیوں فضول کاموں میں مصروف ہے ۔ کیونکہ اس جہاں سے بہت جلد چلے جانا ہے

 ਜੂਐਜਨਮੁਨਹਾਰਹੁਅਪਣਾਭਾਜਿਪੜਹੁਤੁਮਹਰਿਸਰਣਾ॥੧੪॥
joo-ai janamnahaarahuapnaabhaajparhahutum har sarnaa. ||14||
Don’t lose the game of life, instead hurry to God’s refuge. ||14||
ਆਪਣਾਮਨੁੱਖਾਜਨਮਜੂਏਵਿਚਵਿੱਚਨਾਂਹਾਰਤੂੰਛੇਤੀਪਰਮਾਤਮਾਦੀਸਰਨਪੈਜਾ੧੪
 جوُئےَ جنمُ ن ہارہُ اپنھا بھاجِ پڑہُ تُم ہرِ سرنھا ੧੪
جوئے ۔ جنم نہ بار ہو۔ زندگی فضول نہ گنواؤ۔ بھاج پڑ ہو۔ جلدی کرؤ۔ سرنا۔ پناہ۔ سایہ
۔ اے انسان جوئے جیسے فضول کاموں کیوں گنواتا ہے جلدی الہٰی پناہ میں آؤ۔
نوٹ: جوئے باز جو آکھیلتا ہے جب جو آہار جاتا ہے تو کمار خانے سے خالی ہاتھ جاتا ہے ۔ اسی طرح سے جو انسان زندگی فضول کاموں میں گنواتا ہے ۔ موت آنے پر یہ فضول کام نہیں رہ جاتے ہین اور انسان اس دنیا سے جیسے ذاتی باتھ آتا ہے ویسے ہی چلا جاتا ہے ۔

 ਠਠੈਠਾਢਿਵਰਤੀਤਿਨਅੰਤਰਿਹਰਿਚਰਣੀਜਿਨ੍ਹ੍ਹਕਾਚਿਤੁਲਾਗਾ॥
thathaithaadhvarteetin antar har charneejinHkaa chitlaagaa.
Thatha: Peace pervades within those whose consciousness remains attuned to Gord’s Name.
ਜਿਨ੍ਹਾਂਮਨੁੱਖਾਂਦਾਮਨਪਰਮਾਤਮਾਦੇਚਰਨਾਂਵਿਚਟਿਕਿਆਰਹਿੰਦਾਹੈਉਹਨਾਂਦੇਮਨਵਿਚਠੰਡਸ਼ਾਂਤੀਬਣੀਰਹਿੰਦੀਹੈ
 ٹھٹھےَ ٹھاڈھِ ۄرتیِ تِن انّترِ ہرِ چرنھیِ جِن٘ہ٘ہ کا چِتُ لاگا 
ٹھاڈ۔ سکون ۔ سانت۔ سوئی ۔ وہی نسترے ۔ کامیاب ہوئے
جو انسان الہٰی یاد میں محو ومجذوب رہتے ہیں۔ 

 ਚਿਤੁਲਾਗਾਸੇਈਜਨਨਿਸਤਰੇਤਉਪਰਸਾਦੀਸੁਖੁਪਾਇਆ॥੧੫॥
chitlaagaa say-eejannistarayta-o parsaadeesukhpaa-i-aa. ||15||
O’ God, only those, whose minds are attuned to You, cross over the world-ocean of vices and by Your grace they obtain celestial peace. ||15||
ਹੇਪ੍ਰਭੂਉਹੀਪਾਰਲੰਘਦੇਹਨਜਿਨ੍ਹਾਂਦਾਮਨਤੇਰੇਚਰਨਾਂਵਿਚਜੁੜਿਆਹੈਤੇਰੀਮਿਹਰਨਾਲਉਹਨਾਂਨੂੰਆਤਮਕਸੁਖਪ੍ਰਾਪਤਹੋਇਆਰਹਿੰਦਾਹੈ੧੫
 چِتُ لاگا سیئیِ جن نِسترے تءُ پرسادیِ سُکھُ پائِیا ੧੫
تو ؤ پر سادی ۔ اس کی رحمت سے
جنہوں نے خدا دل میں بسایئیا اس کی رحمت سے آرام و آسائش پایئیا

 ਡਡੈਡੰਫੁਕਰਹੁਕਿਆਪ੍ਰਾਣੀਜੋਕਿਛੁਹੋਆਸੁਸਭੁਚਲਣਾ॥
dadaidamfkarahuki-aa paraanee jo kichh ho-aa so sabhchalnaa.
Dadda: O’ mortal why do you make such ostentatious shows,? Whatever is created is perishable.
ਹੇਜੀਵਵਿਖਾਵਾਕਿਉਂਕਰਦਾਹੈਂਜਗਤਵਿਚਜੋਕੁਝਪੈਦਾਹੋਇਆਹੈਸਭਇਥੋਂਚਲੇਜਾਣਵਾਲਾਹੈ (ਨਾਸਵੰਤਹੈ)
 ڈڈےَ ڈنّپھُ کرہُ کِیا پ٘رانھیِ جو کِچھُ ہویا سُ سبھُ چلنھا 
ڈنف ۔ شیخی بگھارنا۔ وکھاوا۔ سرلوہ ۔ خدمت کرؤ۔
اے انسان کیوں اور کیسی شیخی بگھارتا ہے کہ اس جہاں میں جو کچھ بھی ہے اس نے آخر ختم ہو جانا ہے ۔ 

 ਤਿਸੈਸਰੇਵਹੁਤਾਸੁਖੁਪਾਵਹੁਸਰਬਨਿਰੰਤਰਿਰਵਿਰਹਿਆ॥੧੬॥tisaisarayvhutaasukhpaavhusarabnirantarravrahi-aa. ||16||
You would find peace only if you remember that God, who pervades in all. ||16||
ਆਤਮਕਆਨੰਦਤਦੋਂਹੀਮਿਲੇਗਾਜੇਉਸਪਰਮਾਤਮਾਦਾਸਿਮਰਨਕਰੋਗੇਜੋਸਭਜੀਵਾਂਦੇਅੰਦਰਇਕਰਸਵਿਆਪਕਹੈ੧੬
 تِسےَ سریۄہُ تا سُکھُ پاۄہُ سرب نِرنّترِ رۄِ رہِیا ੧੬
سرب۔ سب مینہہ۔ نرنتر۔ لگاتار۔ روہیا۔ بستا ہے
اس کی خدمت کرو اور یاد کرو۔ جو لگاتار سب میں بس رہا ہے ۔ اسی سے روحانی سکون حاصل ہوگا۔ 

 ਢਢੈਢਾਹਿਉਸਾਰੈਆਪੇਜਿਉਤਿਸੁਭਾਵੈਤਿਵੈਕਰੇ॥
dhadhaidhaahiusaaraiaapay ji-o tis bhaavaitivaikaray.
Dhadha: God dismantles and builds this universe on His own; as it pleases Him, so He does.
ਪਰਮਾਤਮਾਆਪਹੀਜਗਤਰਚਨਾਨੂੰਨਾਸਕਰਦਾਹੈਆਪਹੀਬਣਾਂਦਾਹੈਜਿਵੇਂਉਸਨੂੰਚੰਗਾਲੱਗਦਾਹੈਤਿਵੇਂਕਰਦਾਹੈ
 ڈھڈھےَ ڈھاہِ اُسارےَ آپے جِءُ تِسُ بھاۄےَ تِۄےَ کرے 
ڈھاہے ۔ مٹائے ۔ اُسارے ۔ پیدا کرئے ۔ بنائے ۔ بھاوے ۔ چاہتا ہے رضا ہے ۔
خدا نے خود ہی یہ عالم پیدا کیا اور خود ہی فناہ کرتا ہے جیسے اس کی رضا و رغبت ہے ویسا ہی کرتا ہے 

 ਕਰਿਕਰਿਵੇਖੈਹੁਕਮੁਚਲਾਏਤਿਸੁਨਿਸਤਾਰੇਜਾਕਉਨਦਰਿਕਰੇ॥੧੭॥
karkarvaykhaihukamchalaa-ay tis nistaarayjaa ka-o nadarkaray. ||17||
Having created the creation, He watches over it and execute His command; He ferries him across the worldly ocean of vices on whom He bestows grace. ||17||
ਪ੍ਰਭੂਜੀਵਪੈਦਾਕਰਕੇ (ਸਭਦੀਸੰਭਾਲਕਰਦਾਹੈ, (ਹਰਥਾਂਆਪਣਾਹੁਕਮਵਰਤੋਂਵਿਚਲਿਆਰਿਹਾਹੈਜਿਸਮਨੁੱਖਉਤੇਪ੍ਰਭੂਮੇਹਰਦੀਨਜ਼ਰਕਰਦਾਹੈਉਸਨੂੰ (ਨਾਸਵੰਤਸੰਸਾਰਦੇਮੋਹਵਿਚੋਂਪਾਰਲੰਘਾਲੈਂਦਾਹੈ੧੭
 کرِ کرِ ۄیکھےَ ہُکمُ چلاۓ تِسُ نِستارے جا کءُ ندرِ کرے ੧੭
نستارے ۔ کامیابی عنایت کرتا ہے ۔ جاکوؤ۔ جسے ندر نگاہ شفقت ۔
۔ اپنا فرمان جاری کرکے اس کی نگرانی کرتا ہے جس پر اس کی نگاہ شفقت ہوتی ہے اسے کامیابی عنایت کرتا ہے ۔ 

 ਣਾਣੈਰਵਤੁਰਹੈਘਟਅੰਤਰਿਹਰਿਗੁਣਗਾਵੈਸੋਈ॥
naanairavatrahaighatantar har gungaavai so-ee.
Nanna: Within whose heart God manifests Himself, that person starts singing His praises.
ਜਿਸਮਨੁੱਖਦੇਹਿਰਦੇਵਿਚਪਰਮਾਤਮਾਆਪਣਾਆਪਪਰਗਟਕਰਦੇਵੇਉਹਮਨੁੱਖਉਸਦੀਸਿਫ਼ਤਸਾਲਾਹਕਰਨਲੱਗਪੈਂਦਾਹੈ
 نھانھےَ رۄتُ رہےَ گھٹ انّترِ ہرِ گُنھ گاۄےَ سوئیِ 
روت رہے گھٹ انتر۔ جس کے دل میں بستا ہے ۔
جس کے دل میں خدا اپنے آپ کو ظاہر کرتا ہے ، وہ شخص اپنی حمد گانا شروع کرتا ہے۔وہی الہٰی حمدوثناہ کرتا ہے 

 ਆਪੇਆਪਿਮਿਲਾਏਕਰਤਾਪੁਨਰਪਿਜਨਮੁਨਹੋਈ॥੧੮॥
aapayaapmilaa-ay kartaapunrapjanamna ho-ee. ||18||
The Creator then unites that person with Himself and such a person does not go through the cycles of birth and death. ||18||
ਕਰਤਾਰਆਪਹੀਉਸਪ੍ਰਾਣੀਨੂੰਆਪਣੇਨਾਲਮਿਲਾਲੈਂਦਾਹੈਤੇਫਿਰਉਸਨੂੰਮੁੜਮੁੜਜਨਮਨਹੀਂਮਿਲਦਾ੧੮
 آپے آپِ مِلاۓ کرتا پُنرپِ جنمُ ن ہوئیِ ੧੮
۔ اُسے خدا از خود اپنا ملاپ عنایت کرتا ہے ۔ اسے تناسخ میں نہیں پڑنا پڑتا۔ 

 ਤਤੈਤਾਰੂਭਵਜਲੁਹੋਆਤਾਕਾਅੰਤੁਨਪਾਇਆ॥
tataitaaroobhavjal ho-aa taakaa antnapaa-i-aa.
Tatta: The terrible world-ocean of vices is so very deep that the extent of its depth cannot be known.
ਇਹਸੰਸਾਰਸਮੁੰਦਰ (ਜਿਸਵਿਚਵਿਕਾਰਾਂਦਾਹੜ੍ਹਠਾਠਾਂਮਾਰਰਿਹਾਹੈਬਹੁਤਹੀਡੂੰਘਾਹੈਇਸਦਾਪਾਰਲਾਬੰਨਾਭੀਨਹੀਂਲੱਭਦਾ
 تتےَ تاروُ بھۄجلُ ہویا تا کا انّتُ ن پائِیا ز
تارو۔گہرا۔ بھوجل۔ خوفناک ۔ سمندر ۔انت۔ آخر۔ اعداد وشمار ۔ حساب
یہ دنیاوی سمندر نہایت گہر اور خوفناک ہے جس کا اندازہ کرنا نہای دشوار ہے ۔ 

 ਨਾਤਰਨਾਤੁਲਹਾਹਮਬੂਡਸਿਤਾਰਿਲੇਹਿਤਾਰਣਰਾਇਆ॥੧੯॥
naatar naatulhaa ham boodastaarlayhitaaranraa-i-aa. ||19||
We do not have any boat or raft (Naam or virtues), so we are drowning. O’ savior God, please help us swim across this world-ocean of vices. ||19||
ਸਾਡੇਪਾਸਨਾਹਕੋਈਬੇੜੀਹੈਨਾਕੋਈਤੁਲਹਾਹੈਅਸੀਂਡੁੱਬਜਾਵਾਂਗੇਹੇਤਾਰਣਦੇਸਮਰੱਥਪ੍ਰਭੂ,ਸਾਨੂੰਪਾਰਲੰਘਾਲੈ੧੯
 نا تر نا تُلہا ہم بوُڈسِ تارِ لیہِ تارنھ رائِیا 
۔ ترنا۔کشتی ۔ تلہا ۔ عارضی کشتی ۔ بوڈس۔ ڈوبتے ہیں۔ تارن راہئیا۔ پارلگانے والے حکمران ۔
نہ کشتی ہے نہ عارضی کشتی ۔ اے خدا ہم ڈوب رہے ہیں۔ اے پارلگانے والے ہمیں پارلگا۔ اے عالم کے ناخدا ۔

 ਥਥੈਥਾਨਿਥਾਨੰਤਰਿਸੋਈਜਾਕਾਕੀਆਸਭੁਹੋਆ॥
thathaithaanthaanantar so-eejaakaakee-aa sabh ho-aa.
Thatha: That God, who has created this universe is pervading in all places and the interspaces.
ਜਿਸਪਰਮਾਤਮਾਦਾਬਣਾਇਆਹੋਇਆਇਹਸਾਰਾਜਗਤਹੈਉਹੀ (ਇਸਜਗਤਦੇਹਰੇਕਥਾਂਵਿਚਮੌਜੂਦਹੈ
 تھتھےَ تھانِ تھاننّترِ سوئیِ جا کا کیِیا سبھُ ہویا 
جس خدا نے تمام کائنات قدرت اور تمام عالم پیدا ہوا ہے ۔ اور جو تمام عالم میں بستا ہے 

 ਕਿਆਭਰਮੁਕਿਆਮਾਇਆਕਹੀਐਜੋਤਿਸੁਭਾਵੈਸੋਈਭਲਾ॥੨੦॥
ki-aa bharamki-aa maa-i-aa kahee-ai jo tis bhaavai so-eebhalaa. ||20||
What can we say about doubt and Maya (worldly allurements)? Whatever pleases God is good for all. ||20|| |
ਸੰਦੇਹਜਾਂਮਾਇਆਦਾਕੀਕਹੀਏਜੋਉਸਪ੍ਰਭੂਨੂੰਚੰਗਾਲੱਗਦਾਹੈਉਹੀਜੀਵਾਂਵਾਸਤੇਚੰਗਾਹੋ੨੦
 کِیا بھرمُ کِیا مائِیا کہیِئےَ جو تِسُ بھاۄےَ سوئیِ بھلا ੨੦
کیا ہے وہم وگمان اور کیا مایئیا یہ سارا اسی کا پیدا کردہ ہے ۔ جیسی اس کی رضا ہے وہی اچھا ہے 

 ਦਦੈਦੋਸੁਨਦੇਊਕਿਸੈਦੋਸੁਕਰੰਮਾਆਪਣਿਆ॥
dadaidos naday-ookisaidos karammaaaapni-aa.
Dadda: I do not blame any other for my problems, because the fault lies with my own past deeds.
ਕਿਸੇਹੋਰਨੂੰਮੈਂਦੋਸ਼ਨਹੀਂਦੇਦਾਦੋਸ਼ਤਾਂਪਿਛਲੇਕੀਤੇਕਰਮਾਂਦਾਹੈ
 ددےَ دوسُ ن دیئوُ کِسےَ دوسُ کرنّما آپنھِیا 
دوس۔ الزام ۔ کرنماں۔ اعمال۔ تقدیر اور دوسروں کو
انسان جیسے اس کے اعمال ہیں ویسا پھل پاتا ہے کسی دوسرے پر الزام نہیں لگانا چاہیے ۔ 

 ਜੋਮੈਕੀਆਸੋਮੈਪਾਇਆਦੋਸੁਨਦੀਜੈਅਵਰਜਨਾ॥੨੧॥
jo maikee-aa so maipaa-i-aa dos nadeejaiavarjanaa. ||21||
Whatever I did, I received its result; I do not blame anyone else. ||21||
ਜੋਮੈਕੀਤਾ,ਉਸਦਾਫਲਮੈਂਪਾਲਿਆਦੂਜਿਆਂਨੂੰਮੈਂਦੋਸ਼ਨਹੀਂਦੇਦਾ੨੧
 جو مےَ کیِیا سو مےَ پائِیا دوسُ ن دیِجےَ اۄر جنا ੨੧
یہ قصور تو اپنے اعمال کا ہ ۔ تقدیر کا مراد انسان کو کسی پر الزام لگانے کی بجائے اپنے اعمال درست کرنے چاہییں۔ 

 ਧਧੈਧਾਰਿਕਲਾਜਿਨਿਛੋਡੀਹਰਿਚੀਜੀਜਿਨਿਰੰਗਕੀਆ॥
DhaDhaiDhaarkalaajinchhodee har cheejeejin rang kee-aa.
Dhadha:That God who created this creation in many shapes and colors and whose power upholds the universe,
ਜਿਸਹਰੀਨੇ (ਸਾਰੀਸ੍ਰਿਸ਼ਟੀਵਿਚਆਪਣੀਸੱਤਿਆਟਿਕਾਰੱਖੀਹੈਜਿਸਕੌਤਕੀਪ੍ਰਭੂਨੇਇਹਰੰਗਾਰੰਗਦੀਰਚਨਾਰੱਚਦਿੱਤੀਹੈ,
 دھدھےَ دھارِ کلا جِنِ چھوڈیِ ہرِ چیِجیِ جِنِ رنّگ کیِیا 
کلا۔ قوت ۔ جن چھوڑی ۔ اپنائی ہوئی ۔ چیچی چوج۔ خوشی سے بے ترتپسے کام کرمی کرمی ۔ اعمال کے حساب سے
جس خدا نے اپنی تمام ترقوت عالم میں بسا رکھی ہے اور اقسام اقسام اور بیشمار گنوں ۔ نسلوں کی پیدا کی ہوئی ہے ۔ 

 ਤਿਸਦਾਦੀਆਸਭਨੀਲੀਆਕਰਮੀਕਰਮੀਹੁਕਮੁਪਇਆ॥੨੨॥
tis daadee-aa sabhnee lee-aa karmeekarmeehukampa-i-aa. ||22||
everyone is consuming the bounties blessed by Him; but the divine law for receiving these blessings is according to the past deeds of each individual. ||22||
ਉਸੇਦੀਆਂਬਖ਼ਸ਼ੀਆਂਦਾਤਾਂਸਾਰੇਜੀਵਵਰਤਰਹੇਹਨਪਰ (ਇਹਨਾਂਦਾਤਾਂਦੇਬਖ਼ਸ਼ਣਵਿਚਹਰੇਕਜੀਵਦੇਆਪੋਆਪਣੇਕੀਤੇਕਰਮਾਂਅਨੁਸਾਰਹੀਪ੍ਰਭੂਦਾਹੁਕਮਵਰਤਰਿਹਾਹੈ੨੨
 تِس دا دیِیا سبھنیِ لیِیا کرمیِ کرمیِ ہُکمُ پئِیا ੨੨
اور تمام جاندار اس کی دی ہوئی نعمتیں استعمال کرر ہے ہیں اور انسان کے لئے کئے ہوئے اعمالات کے مطابق فرمان جاری ہوتا ہے ۔ 

 ਨੰਨੈਨਾਹਭੋਗਨਿਤਭੋਗੈਨਾਡੀਠਾਨਾਸੰਮ੍ਹਲਿਆ॥
nannainaahbhog nitbhogainaadeethaanaasammli-aa.
Nanna: That God, whose bounties are being enjoyed by all; I have neither seen Him, nor I have ever remembered Him.
ਜਿਸਪ੍ਰਭੂਦੇਦਿੱਤੇਹੋਏਪਦਾਰਥਹਰੇਕਜੀਵਵਰਤਰਿਹਾਹੈਮੈਂਉਸਨੂੰਨਾਹਹੀਵੇਖਿਆਹੈਨਾਹਹੀਉਸਨੂੰਯਾਦਕੀਤਾਹੈ
 ننّنےَ ناہ بھوگ نِت بھوگےَ نا ڈیِٹھا نا سنّم٘ہلِیا 
نا بھوگ۔ نانعمتیں ۔ انت ہر روز ۔ بھوگے ۔ استعمال کئے ۔ نہ ڈیٹھا نہ دیدار کیا۔ نہ سمجھ لیا۔ نہ کبھی سنبھال کی ۔ یاد کیا۔ گلی ہوں
جس رازق کی دی ہوئی نعمتیں ہر جاندار استعمال کر رہا ہے ۔ اس کا نہ آج تک وصال و دیدار حاصل ہوا ہے 

 ਗਲੀਹਉਸੋਹਾਗਣਿਭੈਣੇਕੰਤੁਨਕਬਹੂੰਮੈਮਿਲਿਆ॥੨੩॥
galee ha-o sohaganbhainaykantnakabahooNmaimili-aa. ||23||
O’ sister, just by mere words I have been calling myself a fortunate soul-bride, but in fact the husband-God has never met me. ||23||
ਹੇਭੈਣੇਮੈਂਨਿਰੀਆਂਗੱਲਾਂਨਾਲਹੀਆਪਣੇਆਪਨੂੰਸੋਹਾਗਣਿਆਖਦੀਰਹੀਪਰਕੰਤਪ੍ਰਭੂਮੈਨੂੰਅਜੇਤਕਕਦੇਨਹੀਂਮਿਲਿਆ੨੩
 گلیِ ہءُ سوہاگنھِ بھیَنھے کنّتُ ن کبہوُنّ مےَ مِلِیا ੨੩
سوہاگن۔ باتوں باتوں میں سہاگ یا خاوند والی ۔ مراد خدا پرست۔ کنت خاوند ۔ خدا۔ نہ کبہؤ۔ ملیا۔ ملاپ ہوا۔
نہ دل میں بسایئیا ہے ۔ صرف باتوں سے ہی خدا پرست ہو رہے ہو۔ 

 ਪਪੈਪਾਤਿਸਾਹੁਪਰਮੇਸਰੁਵੇਖਣਕਉਪਰਪੰਚੁਕੀਆ॥
papaipaatisaahuparmaysarvaykhan ka-o parpanchkee-aa.
Pappa: God, the sovereign king, created this expanse of the universe for us to behold Him in it.
ਪਰਮੇਸਰਪਾਤਿਸ਼ਾਹਨੇਆਪਇਹਸੰਸਾਰਰਚਿਆਹੈਕਿਜੀਵਇਸਵਿਚਉਸਦਾਦੀਦਾਰਕਰਨ
 پپےَ پاتِساہُ پرمیسرُ ۄیکھنھ کءُ پرپنّچُ کیِیا 
پرپنچ۔ عالم کا پھیلاؤ۔ 

وہ پرمیشور شاہوں کا شاہ ہے جس نے نظر آنے والی دنیا کو وسعت دی ہے

 ਦੇਖੈਬੂਝੈਸਭੁਕਿਛੁਜਾਣੈਅੰਤਰਿਬਾਹਰਿਰਵਿਰਹਿਆ॥੨੪॥
daykhaiboojhaisabhkichhjaanaiantarbaaharravrahi-aa. ||24||
He knows all about our minds and cherishes us all; He pervades everywhere, both outside and inside. ||24||
ਪ੍ਰਭੂਹਰੇਕਜੀਵਦੀਸੰਭਾਲਕਰਦਾਹੈਹਰੇਕਦੇਦਿਲਦੀਜਾਣਦਾਹੈਉਹਸਾਰੇਸੰਸਾਰਵਿਚਅੰਦਰਬਾਹਰਹਰਥਾਂਵਿਆਪਕਹੈ੨੪
 دیکھےَ بوُجھےَ سبھُ کِچھُ جانھےَ انّترِ باہرِ رۄِ رہِیا ੨੪
دیکھے ۔ نگرانی کرتا ہے ۔ بوجھے سمجھتا ہے ۔ انتر باہر رورہیا ۔ ہر جا بسا ہوا ہے ۔ 
وہ دیکھتا ہے سمجھتا ہے سب کچھ جانتاہے وہ ہمارے ظاہر و باطن میں سمایا ہوا ہے

 ਫਫੈਫਾਹੀਸਭੁਜਗੁਫਾਸਾਜਮਕੈਸੰਗਲਿਬੰਧਿਲਇਆ॥
fafaifaaheesabh jag faasaa jam kai sangalbanDh la-i-aa.
Faffa: The entire world is caught in the noose of worldly attachments and is bound in the chains of the demon of death.
ਸਾਰਾਸੰਸਾਰਮਾਇਆਦੀਫਾਹੀਵਿਚਫਸਿਆਹੋਇਆਹੈਜਮਦੇਸੰਗਲਨੇਬੰਨ੍ਹਰੱਖਿਆਹੈ l
 پھپھےَ پھاہیِ سبھُ جگُ پھاسا جم کےَ سنّگلِ بنّدھِ لئِیا 
پھاہی ۔ پھندہ ۔ غلامی کی رسی ۔ پھاسا۔ گرفتار
سارال عالم دنیاوی دولت کی غلامی کے کسی نہ کسی پھندے میں گرفتار ہے اور موت کی زنجیروں میں جکرا ہوا ہے 

 ਗੁਰਪਰਸਾਦੀਸੇਨਰਉਬਰੇਜਿਹਰਿਸਰਣਾਗਤਿਭਜਿਪਇਆ॥੨੫॥
gurparsaadee say narubray je har sarnaagatbhajpa-i-aa. ||25||
By the Guru’s grace, they alone have escaped from this noose, who have hastened to God’s refuge. ||25||
ਇਸਫਾਹੇਵਿਚੋਂਗੁਰੂਦੀਕਿਰਪਾਨਾਲਸਿਰਫ਼ਉਹੀਬੰਦੇਬਚੇਹਨਜਿਹੜੇਦੌੜਕੇਪਰਮਾਤਮਾਦੀਸਰਨਜਾਪਏਹਨ੨੫
 گُر پرسادیِ سے نر اُبرے جِ ہرِ سرنھاگتِ بھجِ پئِیا ੨੫
۔ گر پر سادی رہمت مرشد سے ۔ اھرے ۔ بچے ۔ ہر سرناگت ۔ الہٰی پناہ
اس غلامی اور پھندے سے وہی بچتے ہیں جنہوں نے رحمت مرشد سے الہٰی پناہ اختیار کی ہوئی ہے ۔

 ਬਬੈਬਾਜੀਖੇਲਣਲਾਗਾਚਉਪੜਿਕੀਤੇਚਾਰਿਜੁਗਾ॥
babaibaajeekhaylanlaagaa cha-uparhkeetaychaarjugaa.
Babba: God Himself is playing the world game like a board game, He has made the four ages like the four tracks of the game.
ਪਰਮਾਤਮਾਆਪ (ਚੌਪੜਦੀਖੇਡਖੇਡਰਿਹਾਹੈਚਾਰਜੁਗਾਂਨੂੰਉਸਨੇ (ਚੌਪੜਦੇਚਾਰਪੱਲੇਬਣਾਇਆਹੈ,
 ببےَ باجیِ کھیلنھ لاگا چئُپڑِ کیِتے چارِ جُگا 
چوہڑ۔ چار پلیؤ والہ کپڑا ۔ ساری نرواں۔ گوتیاں۔ پاسہ۔ چار یا چھ طرفوں والے ٹوٹے جن پر بندیوں کے نشان ہوتے ہیں۔ مراد چارجکوں کا چوپڑ بنایئیا اور سارے جاندار اس میں کھیلنے کے لئے ۔ 
خدا نے خود ہی عالم کو یہ وقت کو چار حصوں میں تقسیم کرکے ان چار جکوں کے چار پلے بنایئیا ہے