Urdu-Page-407

SGGS Page 407
ਕਿਛੁ ਕਿਛੁ  ਚਾਹੀ 
kichh kichh na chaahee. ||2||
I do not need any such thing. ||2||
ਮੈਨੂੰ ਕਿਸੇ ਚੀਜ਼ ਦੀ ਭੀ ਲੋੜ ਨਹੀਂ 
 کِچھُ کِچھُ ن چاہیِ  
چاہی ۔ چاہیے ۔
نہ کوئی نعمت چاہیے 


ਚਰਨਨ ਸਰਨਨ ਸੰਤਨ ਬੰਦਨ  ਸੁਖੋ ਸੁਖੁ ਪਾਹੀ 
 charnan sarnan santan bandan. sukho sukh paahee.
I find comfort and peace in the refuge of the saint (Guru) and humbly bowing before him.
ਸੰਤ ਜਨਾਂ ਦੇ ਚਰਨਾਂ ਦੀ ਸਰਨਸੰਤ ਜਨਾਂ ਦੇ ਚਰਨਾਂ ਤੇ ਨਮਸਕਾਰ ਵਿਚ ਮੈਂ ਸੁਖ ਹੀ ਸੁਖ ਅਨੁਭਵ ਕਰਦਾ ਹਾਂ
 چرنن سرنن سنّتن بنّدن  سُکھو سُکھُ پاہیِ  
(
2) چرنن۔ سرنن۔پاؤ ں کا سایہ ۔ سنتن ۔ سنتوں ۔ بندھن۔ غلامی ۔ خدمتگاری ۔
خدا رسیدہ پاکدامن ( سنتوں ) کے پاؤں کا سایہ اور خدمت اور خدمتگاری چاہیے ۔ اس میں بیشمار آرام و سائش ہے


ਨਾਨਕ ਤਪਤਿ ਹਰੀ  ਮਿਲੇ ਪ੍ਰੇਮ ਪਿਰੀ ੧੪੩
naanak tapat haree. milay paraym piree. ||3||3||143||
O Nanak, the anguish of worldly desires from the mind is removed by receiving the love of the beloved God. ||3||3||143||
 
ਹੇ ਨਾਨਕਜੇ ਪਿਆਰੇ ਪ੍ਰਭੂ ਦਾ ਪ੍ਰੇਮ ਮਿਲ ਜਾਏ ਤਾਂ ਉਹ ਮਨ ਵਿਚੋਂ ਤ੍ਰਿਸ਼ਨਾ ਦੀ ਸੜਨ ਦੂਰ ਕਰ ਦੇਂਦਾ ਹੈ ੧੪੩ 
 نانک تپتِ ہریِ  مِلے پ٘ریم پِریِ ੧੪੩
تپت ہری ۔ تپش مٹائی ۔ پریم پری ۔ پیارے کا پیارا۔
اے نانک اس سے تپش مٹتی ہے اور پیارے کا پیار ملتا ہے


ਆਸਾ ਮਹਲਾ  
aasaa mehlaa 5.
Raag Aasaa, Fifth Guru:
 آسا مہلا   
ਗੁਰਹਿ ਦਿਖਾਇਓ ਲੋਇਨਾ  ਰਹਾਉ 
gureh dikhaa-i-o lo-inaa. ||1|| rahaa-o.
O’ God, the Guru has helped me to behold You with my own eyes. ||1||pause||
ਹੇ ਪ੍ਰਭੂਗੁਰੂ ਨੇ ਮੈਨੂੰ ਇਹਨਾਂ ਅੱਖਾਂ ਨਾਲ ਤੇਰਾ ਦਰਸਨ ਕਰਾ ਦਿੱਤਾ ਹੈ  ਰਹਾਉ 
 گُرہِ دِکھائِئو لوئِنا  رہاءُ  
گریہہ۔ مرشد نے ۔ لوآئییا س ۔ آنکھوں سے رہاؤ۔
مرشد نے آنکھوں سے دیدار کرایا (
1) رہاؤ۔ 


ਈਤਹਿ ਊਤਹਿ ਘਟਿ ਘਟਿ ਘਟਿ ਘਟਿ ਤੂੰਹੀ ਤੂੰਹੀ ਮੋਹਿਨਾ 
eeteh ooteh ghat ghat ghat ghat tooNhee tooNhee mohinaa. ||1||
O’ fascinating God, here and hereafter and in each and every heart, I see You and only You ||1||
ਹੇ ਮੋਹਨਪ੍ਰਭੂਇਸ ਲੋਕ ਵਿਚਪਰਲੋਕ ਵਿਚਹਰੇਕ ਸਰੀਰ ਵਿਚਹਰੇਕ ਹਿਰਦੇ ਵਿਚ (ਮੈਨੂੰਤੂੰ ਹੀ ਦਿੱਸ ਰਿਹਾ ਹੈਂ 
 ایِتہِ اوُتہِ گھٹِ گھٹِ گھٹِ گھٹِ توُنّہیِ توُنّہیِ موہِنا  
اتیہہ۔ یہاں ادتیہہ۔ وہاں۔ گھٹ گھٹ۔ ہر دل میں۔ موہنا۔ اے دل کو لبھانے والے ۔
اے پیارے ہر دو علاموں میں اور ہر دل میں تو ہی بستا ہے 


ਕਾਰਨ ਕਰਨਾ ਧਾਰਨ ਧਰਨਾ ਏਕੈ ਏਕੈ ਸੋਹਿਨਾ 
kaaran karnaa Dhaaran Dharnaa aikai aikai sohinaa. ||2||
O’ my beauteous God, You alone are the cause of causes and the support of the entire universe.||2||
ਹੇ ਸੋਹਣੇ ਪ੍ਰਭੂਇਕ ਤੂੰ ਹੀ ਸਾਰੇ ਜਗਤ ਦਾ ਮੂਲ ਰਚਨ ਵਾਲਾ ਹੈਂਇਕ ਤੂੰ ਹੀ ਸਾਰੀ ਸ੍ਰਿਸ਼ਟੀ ਨੂੰ ਸਹਾਰਾ ਦੇਣ ਵਾਲਾ ਹੈਂ 
 کارن کرنا دھارن دھرنا ایکےَ ایکےَ سوہِنا  
(
1)کارن۔ سبب ۔ موقعہ ۔دھرنا۔ عالم۔ جہان ۔ سوہنا۔ خوبصورت ۔
تو ہی کارساز ہے اور سارا عالم تیرے سہارے تیرے نظام میں منسلک ہے ۔ (2)


ਸੰਤਨ ਪਰਸਨ ਬਲਿਹਾਰੀ ਦਰਸਨ ਨਾਨਕ ਸੁਖਿ ਸੁਖਿ ਸੋਇਨਾ ੧੪੪
santan parsan balihaaree darsan naanak sukh sukh so-inaa. ||3||4||144||
O’ Nanak, I humbly bow to the saint-Guru, by whose grace I am blessed with His sight and remain immersed in bliss . ||3||4||144||
ਹੇ ਨਾਨਕ! (ਆਖਹੇ ਮੋਹਨ ਪ੍ਰਭੂ!) ਮੈਂ ਤੇਰੇ ਸੰਤਾਂ ਦੇ ਚਰਨ ਛੁੰਹਦਾ ਹਾਂ ਉਹਨਾਂ ਦੇ ਦਰਸਨ ਤੋਂ ਸਦਕੇ ਜਾਂਦਾ ਹਾਂ (ਸੰਤਾਂ ਦੀ ਕਿਰਪਾ ਨਾਲ ਹੀ ਤੇਰਾ ਮਿਲਾਪ ਹੁੰਦਾ ਹੈਤੇਸਦਾ ਲਈ ਆਤਮਕ ਆਨੰਦ ਵਿਚ ਲੀਨਤਾ ਪ੍ਰਾਪਤ ਹੁੰਦੀ ਹੈ ੧੪੪
 سنّتن پرسن بلِہاریِ درسن نانک سُکھِ سُکھِ سوئِنا ੧੪੪
سنتن پرسن۔ خدا رسیدہ پاکدامن کی چھوہ ۔ بلہاری ۔ قربان ۔ درسن ۔ دیدار ۔سکھ سویئنا۔ آرام وآسائش میں محووجذوب
قربان ہوں دیدار خدا رسیدہ پاکدامن اور چھوہ سنت پر اس سے ہمیشہ روحانی سکون اور محویت حاصل ہوتی ہے ۔ 


ਆਸਾ ਮਹਲਾ  
aasaa mehlaa 5.
Raag Aasaa, Fifth Guru:
 آسا مہلا   
ਹਰਿ ਹਰਿ ਨਾਮੁ ਅਮੋਲਾ 
har har naam amolaa.
One who is blessed with the priceless Name of God,
ਜਿਸ ਮਨੁੱਖ ਨੂੰ ਪਰਮਾਤਮਾ ਦਾ ਅਮੋਲਕ ਨਾਮ ਪ੍ਰਾਪਤ ਹੋ ਜਾਂਦਾ ਹੈ,
 ہرِ ہرِ نامُ امولا  
امولا۔ بیش قیمت۔ اتنی زیادہ قیمت جس کا تعین نہ ہو سکے ۔
الہٰی نام کی قیمت بیان سے باہر ہے 


ਓਹੁ ਸਹਜਿ ਸੁਹੇਲਾ  ਰਹਾਉ 
oh sahj suhaylaa. ||1|| rahaa-o.
lives in peace and poise.||1||pause||
ਉਹ ਆਤਮਕ ਅਡੋਲਤਾ ਵਿਚ ਟਿਕਿਆ ਸੌਖਾ ਜੀਵਨ ਬਿਤੀਤ ਕਰਦਾ ਹੈ  ਰਹਾਉ 
 اوہُ سہجِ سُہیلا  رہاءُ  
سہج۔ روحانی سکون ۔ سہیلا ۔ آسان (
1) رہاؤ۔
اس سے روحانی سکون اور آرام و آسائش پاتا ہے ۔ (1) رہاؤ۔ 


ਸੰਗਿ ਸਹਾਈ ਛੋਡਿ  ਜਾਈ ਓਹੁ ਅਗਹ ਅਤੋਲਾ 
sang sahaa-ee chhod na jaa-ee oh agah atolaa. ||1||
God is our everlasting companion, He never forsakes us, He is unfathomable and is incomparable.||1||
ਪ੍ਰਭੂ ਸਦਾ ਨਾਲ ਰਹਿਣ ਵਾਲਾ ਸਾਥੀ ਹੈਉਹ ਕਦੇ ਛੱਡ ਨਹੀਂ ਜਾਂਦਾਉਹ ਅਥਾਹ ਹੈ ਉਸ ਦੇ ਬਰਾਬਰ ਦਾ ਹੋਰ ਕੋਈ ਨਹੀਂ ਹੈ 
 سنّگِ سہائیِ چھوڈِ ن جائیِ اوہُ اگہ اتولا  
سنگ سہائی ۔ مددگار ساتھی ۔ اگیہہ۔ جو گرفت میں نہ آئے
وہ مدد گا ر ساتھی ہے ساتھ چھوڑ کر نہیں جاتا ۔ کسی کی گرفت میں نہیں آتا اور اس کا کوئی ثانی نہیں۔


ਪ੍ਰੀਤਮੁ ਭਾਈ ਬਾਪੁ ਮੋਰੋ ਮਾਈ ਭਗਤਨ ਕਾ ਓਲ੍ਹ੍ਹਾ 
pareetam bhaa-ee baap moro maa-ee bhagtan kaa olHaa. ||2||
God is my friend, brother, father and my mother; He is the support of His devotees.||2||
ਪ੍ਰਭੂ ਹੀ ਮੇਰਾ ਪ੍ਰੀਤਮ ਹੈ ਮੇਰਾ ਭਰਾ ਹੈ ਮੇਰਾ ਪਿਉ ਹੈ ਤੇ ਮੇਰੀ ਮਾਂ ਹੈਪ੍ਰਭੂ ਹੀ ਆਪਣੇ ਭਗਤਾਂ (ਦੀ ਜ਼ਿੰਦਗੀਦਾ ਸਹਾਰਾ ਹੈ 
 پ٘ریِتمُ بھائیِ باپُ مورو مائیِ بھگتن کا اول٘ہ٘ہا  
اوہلا پردہ ۔
خدامیرا محبتی۔ پیارا بھائی۔ باپ او ر ماں ہے ۔ عابدان۔ کا سہارا ہے ۔ 


ਅਲਖੁ ਲਖਾਇਆ ਗੁਰ ਤੇ ਪਾਇਆ ਨਾਨਕ ਇਹੁ ਹਰਿ ਕਾ ਚੋਲ੍ਹ੍ਹਾ ੧੪੫
alakh lakhaa-i-aa gur tay paa-i-aa naanak ih har kaa cholHaa. ||3||5||145||
O’ Nanak, the incomprehensible God is comprehended and realized through the Guru this is the wondrous play of God. ||3||5||145||
ਹੇ ਨਾਨਕਅਦ੍ਰਿਸ਼ਟ ਸੁਆਮੀਗੁਰਾਂ ਦੇ ਰਾਹੀਂ ਦੇਖਿਆ ਅਤੇ ਪਾਇਆ ਜਾਂਦਾ ਹੈ ਇਹ ਵਾਹਿਗੁਰੂ ਦਾ ਚੁਹਲ ਹੈ ੧੪੫
 الکھُ لکھائِیا گُر تے پائِیا نانک اِہُ ہرِ کا چول٘ہ٘ہا ੧੪੫
الکھ۔ نا قابل اندازہ ۔ لکھایئیا ۔ سمجھ آئی ۔ چولا۔ عجیب تماشہ
اے نانک ۔ وہ بیان سے باہر ہے اس کی سمجھ مرشد سے آتی ہے مرشد سمجھاتا ہے مرشد ہی ملاپ کراتا ہے ۔ یہ اس کا عجیب و غریب کھیل ہے


ਆਸਾ ਮਹਲਾ  
 aasaa mehlaa 5.
 Raag Aasaa, Fifth Guru:
 آسا مہلا   
ਆਪੁਨੀ ਭਗਤਿ ਨਿਬਾਹਿ  ਠਾਕੁਰ ਆਇਓ ਆਹਿ  ਰਹਾਉ 
aapunee bhagat nibaahi. thaakur aa-i-o aahi. ||1|| rahaa-o.
O’ my Master-God, with great expectation I have come to You; please help me sustain my devotional worship.
ਹੇ ਮੇਰੇ ਮਾਲਕਮੈਂ ਤਾਂਘ ਕਰ ਕੇ (ਤੇਰੀ ਸਰਨਆਇਆ ਹਾਂਮੈਨੂੰ ਆਪਣੀ ਭਗਤੀ ਸਦਾ ਦੇਈ ਰੱਖ  ਰਹਾਉ  
 اپُنیِ بھگتِ نِباہِ  ٹھاکُر آئِئو آہِ  رہاءُ  
نبھا ہے ۔ مکمل کیجئے ۔ ٹھاکر۔ مالک ۔ آہے ۔ بخوشی ۔ بااُمید (
1) رہاؤ۔
مجھے اپنا مکمل پیار اور عبادت عنایت کر۔ اے خدا میرے آقا میں اس امید سے تیرے سایہ میں آیا ہو (1) رہاؤ 


ਨਾਮੁ ਪਦਾਰਥੁ ਹੋਇ ਸਕਾਰਥੁ ਹਿਰਦੈ ਚਰਨ ਬਸਾਹਿ 
naam padaarath ho-ay sakaarath hirdai charan basaahi. ||1||
O’ God, enshrine Your love in my heart and bless me with the wealth of Naam, so that my life may become fruitful. ||1||
ਹੇ ਮੇਰੇ ਮਾਲਕਆਪਣੇ ਚਰਨ ਮੇਰੇ ਹਿਰਦੇ ਵਿਚ ਵਸਾਈ ਰੱਖਮੈਨੂੰ ਆਪਣਾ ਕੀਮਤੀ ਨਾਮ ਦੇਈ ਰੱਖਤਾਕਿ ਮੇਰਾ ਜੀਵਨ ਸਫਲ ਹੋ ਜਾਏ 
 نامُ پدارتھُ ہوءِ سکارتھُ ہِردےَ چرن بساہِ  
نام پدارتھ ۔ نام کی نعمت ۔ حقیقت ۔ سکارتھ ۔ کامیاب۔ بسا ہے ۔ بسایئے (
1) یہی نجات ہے یہی طریقہ ہے کہ مجھے پاکدامن خدا رسیدہ ( سنتو) صحبت و قربت میں رکھیئے ۔
میرے اپنے پاؤں کا پیار میں دل میں بسایئے تاکہ الہٰی نام کی نعمت سے زندگی ۔ کامیاب ہو۔ یہی نجات ہے یہی طریقہ ہے کہ مجھے خدا رسیدہ پاکدامن سنتوں کی صحبت و قربت عنایت فرمایئے ۔ 


ਏਹ ਮੁਕਤਾ ਏਹ ਜੁਗਤਾ ਰਾਖਹੁ ਸੰਤ ਸੰਗਾਹਿ 
ayh muktaa ayh jugtaa raakho sant sangaahi. ||2||
O’ God, please keep me in the company of the saints, this alone is the right way of life and salvation. ||2||
ਹੇ ਮੇਰੇ ਮਾਲਕਮੈਨੂੰ ਆਪਣੇ ਸੰਤਾਂ ਦੀ ਸੰਗਤਿ ਵਿਚ ਰੱਖੀ ਰੱਖਇਹੀ ਮੇਰੇ ਵਾਸਤੇ ਮੁਕਤੀ ਹੈਤੇ ਇਹੀ ਮੇਰੇ ਵਾਸਤੇ ਜੀਵਨਚੱਜ ਹੈ 
 ایہ مُکتا ایہ جُگتا راکھہُ سنّت سنّگاہِ  
مکتا ۔ نجات ۔ جگتا ۔ طریقہ ۔ سنت سنگاہے ۔صحبت و قربت سنددتاں ۔
مجھے حقیقت الہٰی نام میں توجہ لگاؤخدا رسیدہ پاکدامن سنتوں کی صحبت و قربت عنایت فرمایئے


ਨਾਮੁ ਧਿਆਵਉ ਸਹਜਿ ਸਮਾਵਉ ਨਾਨਕ ਹਰਿ ਗੁਨ ਗਾਹਿ ੧੪੬
naam Dhi-aava-o sahj samaava-o naanak har gun gaahi. ||3||6||146||
Nanak says, O’ God, bless me so that I may keep singing Your praises and by meditating on Naam, I may remain absorbed in celestial peace. ||3||6||146||

ਹੇ ਨਾਨਕ! (ਆਖ-) ਹੇ ਹਰੀ! (ਮੇਹਰ ਕਰਤੇਰੇ ਗੁਣਾਂ ਵਿਚ ਚੁੱਭੀ ਲਾ ਕੇ ਮੈਂ ਤੇਰਾ ਨਾਮ ਸਿਮਰਦਾ ਰਹਾਂ ਤੇ ਆਤਮਕ ਅਡੋਲਤਾ ਵਿਚ ਟਿਕਿਆ ਰਹਾਂ ੧੪੬
 نامُ دھِیاۄءُ سہجِ سماۄءُ نانک ہرِ گُن گاہِ ੧੪੬
نام دھیاوہو۔ سچ میں دھیان لگاؤ۔ سہج سماوؤ۔ روحانی سکون میں محو و مجذوب رہو۔ ہرگن گاہو۔ الہٰی اوصاف کی خیال آرائی اور وچارکرؤ۔
اے نانک بتا دے کہ الہٰی اوصاف کی خیال آرائی کرؤ اور سوچو سمجھو اور وچار کرؤ اور روحانی سکون میں محو و مجذوب ہو جاؤ


ਆਸਾ ਮਹਲਾ  
aasaa mehlaa 5.
Raag Aasaa, Fifth Guru:
 آسا مہلا   
ਠਾਕੁਰ ਚਰਣ ਸੁਹਾਵੇ 
thaakur charan suhaavay.
Beautiful is the love of God,
ਮਾਲਕਪ੍ਰਭੂ ਦੇ ਚਰਨ ਸੋਹਣੇ ਹਨ,

 ٹھاکُر چرنھ سُہاۄے  
چرن سہاوے ۔ خوبصورت پاؤں مددگار پاؤں۔
پائے الہٰی مقدم و مقدس ہیں۔ 


ਹਰਿ ਸੰਤਨ ਪਾਵੇ  ਰਹਾਉ 
 har santan paavay. ||1|| rahaa-o.
 but only God’s saints are blessed with this love. ||1||pause||
ਤੇ ਪ੍ਰਭੂ ਦੇ ਸੰਤਾਂ ਨੂੰ ਇਹਨਾਂ ਦਾ ਮਿਲਾਪ ਪ੍ਰਾਪਤ ਹੁੰਦਾ ਹੈ  ਰਹਾਉ 
 ہرِ سنّتن پاۄے  رہاءُ  
ہر سنس پاوے الہٰی سنت پاتے ہیں(
1) رہاؤ۔
مگر سنت ہائے خدا ہی پاتے ہیں(1) رہاؤ ۔ 


ਆਪੁ ਗਵਾਇਆ ਸੇਵ ਕਮਾਇਆ ਗੁਨ ਰਸਿ ਰਸਿ ਗਾਵੇ 
aap gavaa-i-aa sayv kamaa-i-aa gun ras ras gaavay. ||1||
Eradicating their self-conceit, God’s devotees perform devotional worship by delightfully singing His praises. ||1||
ਪਰਮਾਤਮਾ ਦੇ ਸੰਤ ਆਪਾਭਾਵ ਦੂਰ ਕਰ ਕੇ ਪਰਮਾਤਮਾ ਦੀ ਸੇਵਾਭਗਤੀ ਕਰਦੇ ਹਨ ਤੇ ਉਸ ਦੇ ਗੁਣ ਬੜੇ ਆਨੰਦ ਨਾਲ ਗਾਂਦੇ ਰਹਿੰਦੇ ਹਨ 
 آپُ گۄائِیا سیۄ کمائِیا گُن رسِ رسِ گاۄے  
آپ گوایئیا ۔ خودی مٹا کر ۔ سیو کمایئیا ۔ خدمت کی ۔ گن ۔ وصف۔ رس رس۔ بالطف ۔ مزے سے ۔
خودی ختم کرکے الہٰی عبادت و خدمت اور بالطف پر سکون ہوکر حمدو ثناہ کرتے ہیں۔ 


ਏਕਹਿ ਆਸਾ ਦਰਸ ਪਿਆਸਾ ਆਨ  ਭਾਵੇ 
aykeh aasaa daras pi-aasaa aan na bhaavay. ||2||
The saints have only one desire and hope in their hearts and that is their craving to see His vision; nothing else is pleasing to them. ||2||
ਸੰਤਾਂ ਨੂੰ ਇਕ ਪ੍ਰਭੂ ਦੀ ਸਹਾਇਤਾ ਦੀ ਹੀ ਆਸਾ ਟਿਕੀ ਰਹਿੰਦੀ ਹੈਉਹਨਾਂ ਨੂੰ ਪ੍ਰਭੂ ਦੇ ਦਰਸਨ ਦੀ ਤਾਂਘ ਲੱਗੀ ਰਹਿੰਦੀ ਹੈ ਇਸ ਤੋਂ ਬਿਨਾ ਕੋਈ ਹੋਰ ਚੰਗੀ ਨਹੀਂ ਲੱਗਦੀ 
 ایکہِ آسا درس پِیاسا آن ن بھاۄے  
ایکہہ ۔ ایک ہی ۔ آسا۔ اُمید ۔ درسپیار سا دیدار کی بھوک۔ آن اور دیگر ۔ بھاوے ۔ اچھا نہیں لگاتا
وہ واحد خدا سے ہی اپنی اُمید باندھتے ہیں کوئی دوسروی اُمید و خواہش انہیں نہیں بھاتی ۔ 


ਦਇਆ ਤੁਹਾਰੀ ਕਿਆ ਜੰਤ ਵਿਚਾਰੀ ਨਾਨਕ ਬਲਿ ਬਲਿ ਜਾਵੇ ੧੪੭
da-i-aa tuhaaree ki-aa jant vichaaree naanak bal bal jaavay. ||3||7||147||
O’ God, the love in the hearts of Your saints is due to Your kindness, what could a helpless person do? Nanak is dedicated to You.||3||7||147||
ਹੇ ਪ੍ਰਭੂਸੰਤਾਂ ਦੇ ਹਿਰਦੇ ਵਿਚ ਤੇਰਾ ਪ੍ਰੇਮ ਹੋਣਾ ਤੇਰੀ ਹੀ ਮੇਹਰ ਹੈ ਵਿਚਾਰੇ ਜੀਵਾਂ ਦਾ ਕੀਹ ਜ਼ੋਰ ਹੈਨਾਨਕ ਤੇਰੇ ਊਤੋਂ ਸਦਕੇ ਜਾਂਦਾ ਹੈ llll੧੪੭l
 دئِیا تُہاریِ کِیا جنّت ۄِچاریِ نانک بلِ بلِ جاۄے ੧੪੭
دیا۔ مہربانی ۔ جنت ۔ جیؤ
اے نانک ۔ الہٰی کرم و عنایت اور مہربانی ہے ورنہ انسان میں کون سی توفیق ہے خادم تجھ پر قربان ہے ۔ 


ਆਸਾ ਮਹਲਾ  
aasaa mehlaa 5.
Raag Aasaa, Fifth Guru:
 آسا مہلا   
ਏਕੁ ਸਿਮਰਿ ਮਨ ਮਾਹੀ  ਰਹਾਉ 
ayk simar man maahee. ||1|| rahaa-o.
Meditate only on the one God in your mind. ||1||pause||
ਆਪਣੇ ਮਨ ਵਿਚ ਇਕ ਪਰਮਾਤਮਾ ਨੂੰ ਸਿਮਰਦਾ ਰਹੁ  ਰਹਾਉ 
 ایکُ سِمرِ من ماہیِ  رہاءُ  
ایک سمر۔ واحد خدا کو یاد کر۔ من ماہی ۔ دل میں (
1) دلمیں۔
دل میں واحد خدا کو یاد کر (1) رہاؤ۔ 


ਨਾਮੁ ਧਿਆਵਹੁ ਰਿਦੈ ਬਸਾਵਹੁ ਤਿਸੁ ਬਿਨੁ ਕੋ ਨਾਹੀ 
naam Dhi-aavahu ridai basaavhu tis bin ko naahee. ||1||
Yes, meditate on Naam and keep it enshrined in your heart, because there is no one other than Him who can help us. ||1||
ਪ੍ਰਭੂ ਦਾ ਨਾਮ ਸਿਮਰਿਆ ਕਰੋਹਰਿਨਾਮ ਆਪਣੇ ਹਿਰਦੇ ਵਿਚ ਵਸਾਈ ਰੱਖੋ ਪ੍ਰਭੂ ਤੋਂ ਬਿਨਾ ਹੋਰ ਕੋਈ (ਸਹਾਈਨਹੀਂ ਹੈ 
 نامُ دھِیاۄہُ رِدےَ بساۄہُ تِسُ بِنُ کو ناہیِ  
نام دھیاوہو۔ سچ اورحقیقت یعنی الہٰی نام میں اپنی توجہ مرکوز کرؤ۔ ردے بساوو۔ دل میں بساؤ
سچ و حقیقت الہٰی نام میں اپنی توجہ مرکوز مبذول میں بساؤ اس کے بغیر دوسری کوئی ہستی نہیں ہے ۔ 


ਪ੍ਰਭ ਸਰਨੀ ਆਈਐ ਸਰਬ ਫਲ ਪਾਈਐ ਸਗਲੇ ਦੁਖ ਜਾਹੀ 
parabh sarnee aa-ee-ai sarab fal paa-ee-ai saglay dukh jaahee. ||2||
Let us seek the refuge of God and attain all the fruits of our heart’s desires; in God’s refuge all sufferings are taken away.||2||
ਆਓ ਪ੍ਰਭੂ ਦੀ ਸਰਨ ਪਏ ਰਹੀਏ (ਤੇ ਪ੍ਰਭੂ ਪਾਸੋਂਸਾਰੇ ਫਲ ਹਾਸਲ ਕਰੀਏ (ਪ੍ਰਭੂ ਦੀ ਸਰਨ ਪਿਆਂਸਾਰੇ ਦੁੱਖ ਦੂਰ ਹੋ ਜਾਂਦੇ ਹਨ 
 پ٘ربھ سرنیِ آئیِئےَ سرب پھل پائیِئےَ سگلے دُکھ جاہیِ  
(
1 ) پربھسرقی ۔ سایہ خدا ۔ سگلے دکھ جاہی ۔ تمام عذاب مٹ جاتے ہیں۔\
الہٰیسایہ اور پناہ میں رہنے سے سارے پھل ملتے ہیں ۔ اور تمام عذاب ختم ہو جاتے 


ਜੀਅਨ ਕੋ ਦਾਤਾ ਪੁਰਖੁ ਬਿਧਾਤਾ ਨਾਨਕ ਘਟਿ ਘਟਿ ਆਹੀ ੧੪੮
 jee-an ko daataa purakh biDhaataa naanak ghat ghat aahee. ||3||8||148||
 O’ Nanak, the Creator God is the Giver of all beings and He dwells in each and every heart.||3||8||148||
ਹੇ ਨਾਨਕ! (ਆਖ-) ਸਿਰਜਨਹਾਰ ਅਕਾਲ ਪੁਰਖ ਸਭ ਜੀਵਾਂ ਨੂੰ ਦਾਤਾਂ ਦੇਣ ਵਾਲਾ ਹੈਉਹ ਹਰੇਕ ਸਰੀਰ ਵਿਚ ਮੌਜੂਦ ਹੈ ੧੪੮
 جیِئن کو داتا پُرکھُ بِدھاتا نانک گھٹِ گھٹِ آہیِ ੧੪੮
(
2)جیئین کوداتا۔ زندگی عنایت کرنے والا۔ پرکھ بدھاتا ۔ تقدیر و تدبیر بنانے والا۔ گھٹ گھٹ آہی ۔ ہر دل میں بستا ہے
 اے نانک ہیں عالم کو پیدا کرنے والا تقدیریں اور تدبیریں بنانے والا ۔ اے نانک وہ ہر د ل میں ہے


ਆਸਾ ਮਹਲਾ  
aasaa mehlaa 5.
Raag Aasaa, Fifth Guru:
 آسا مہلا   
ਹਰਿ ਬਿਸਰਤ ਸੋ ਮੂਆ  ਰਹਾਉ 
har bisrat so moo-aa. ||1|| rahaa-o.
One who has forsaken God, deem that one as spiritually dead. ||1||pause||
ਜਿਸ ਮਨੁੱਖ ਨੂੰ ਪਰਮਾਤਮਾ ਦੀ ਯਾਦ ਭੁੱਲ ਗਈ ਉਹ ਆਤਮਕ ਮੌਤੇ ਮਰ ਗਿਆ  ਰਹਾਉ 
 ہرِ بِسرت سو موُیا  رہاءُ  
ہر وسرت۔ خدا کو بھال کر ۔ سو ۔ وہ موآ۔ اس کی اخلاقی موتـ
(1) رہاؤ۔
جس نے خدا بھلا دیا وہ روحانی موت مر کیا (1) رہاؤ۔ 


ਨਾਮੁ ਧਿਆਵੈ ਸਰਬ ਫਲ ਪਾਵੈ ਸੋ ਜਨੁ ਸੁਖੀਆ ਹੂਆ 
naam Dhi-aavai sarab fal paavai so jan sukhee-aa hoo-aa. ||1||
One who meditates on Naam with loving devotion, obtains all fruits of his mind’s desires and lives in peace. ||1||
ਜੇਹੜਾ ਮਨੁੱਖ ਪਰਮਾਤਮਾ ਦਾ ਨਾਮ ਸਿਮਰਦਾ ਰਹਿੰਦਾ ਹੈਉਹ ਸਾਰੇ (ਮਨਇੱਛਤਫਲ ਹਾਸਲ ਕਰ ਲੈਂਦਾ ਹੈ ਤੇ ਸੌਖਾ ਜੀਵਨ ਗੁਜ਼ਾਰਦਾ ਹੈ 
 نامُ دھِیاۄےَ سرب پھل پاۄےَ سو جنُ سُکھیِیا ہوُیا  
نام دھیاوے ۔ سچ یا حقیقت میں توجہ دے ۔ سرب پھل۔ تمام کامابیاں (
1)
سچ ۔ حقیقت اور نام میں توجہ دینے سے تمام کامیابیاں حاصل ہوتی ہیں اور آرام و آسائش ملتی ہے 


ਰਾਜੁ ਕਹਾਵੈ ਹਉ ਕਰਮ ਕਮਾਵੈ ਬਾਧਿਓ ਨਲਿਨੀ ਭ੍ਰਮਿ ਸੂਆ 
raaj kahaavai ha-o karam kamaavai baaDhi-o nalinee bharam soo-aa. ||2||
One who calls himself a king and indulges in egotistic deeds, is caught by his own deeds, like a parrot in a trap. ||2||
ਜੋ ਆਪਣੇ ਆਪ ਨੂੰ ਰਾਜਾ ਅਖਵਾਂਦਾ ਹੈਅਤੇ ਹੰਕਾਰੀ ਕੰਮ ਕਰਦਾ ਹੈਉਸ ਨੂੰ ਹੰਕਾਰ ਨੇ ਐਉ ਪਕੜ ਲਿਆ ਹੈ ਜਿਵੇਂ ਤੋਤੇ ਨੂੰ ਕੁੜਿੱਕੀ ਨੇ 
 راجُ کہاۄےَ ہءُ کرم کماۄےَ بادھِئو نلِنیِ بھ٘رمِ سوُیا  
راج حکومت۔ حکمران ہوں۔ خودی ۔ کرم ۔ اعمال ۔ بھرم۔ وہم وگمان ۔ سوآ۔ طوطا
جو حکمران کہلاتا ہے اور مغرور ہوتا ہے گمھنڈ میں کام کرتا ہے ۔ وہ خودی میں اس طرح بندھ جاتا ہے جیسے نلکی میں طوطا بندھ جاتا ہے ۔ 


ਕਹੁ ਨਾਨਕ ਜਿਸੁ ਸਤਿਗੁਰੁ ਭੇਟਿਆ ਸੋ ਜਨੁ ਨਿਹਚਲੁ ਥੀਆ ੧੪੯
kaho naanak jis satgur bhayti-aa so jan nihchal thee-aa. ||3||9||149||
Nanak says, one who meets the true Guru and follows his teachings, achieves a unshakable spiritual life. ||3||9||149||
ਨਾਨਕ ਆਖਦਾ ਹੈ– ਜਿਸ ਮਨੁੱਖ ਨੂੰ ਸਤਿਗੁਰੂ ਮਿਲ ਪੈਂਦਾ ਹੈ ਉਹ ਮਨੁੱਖ ਅਟੱਲ ਆਤਮਕ ਜੀਵਨ ਵਾਲਾ ਬਣ ਜਾਂਦਾ ਹੈ ੧੪੯
 کہُ نانک جِسُ ستِگُرُ بھیٹِیا سو جنُ نِہچلُ تھیِیا ੧੪੯
(
2)نہچل۔ مستقل مزاج۔ جو نہ ڈگمگائے ۔ تھیا ۔ ہوا۔
(3)اے نانک بنادے جس کا ملاپ سچے مرشد سے ہوگیا وہ انسان ڈگمگاتا نہیں۔ مستقل مزاج ہو جاتا ہے ۔ 


ਆਸਾ ਮਹਲਾ  ਘਰੁ ੧੪
aasaa mehlaa 5 ghar 14
Raag Aasaa, Fourteenth Beat, Fifth Guru:
 آسا مہلا  گھرُ ੧੪ 
 ਸਤਿਗੁਰ ਪ੍ਰਸਾਦਿ 
 ik-oNkaar satgur parsaad.
 One eternal God, realized by the grace of the true Guru:
ਅਕਾਲ ਪੁਰਖ ਇੱਕ ਹੈ ਅਤੇ ਸਤਿਗੁਰੂ ਦੀ ਕਿਰਪਾ ਨਾਲ ਮਿਲਦਾ ਹੈ
  ستِگُر پ٘رسادِ  
ایک لازوال خدا ، سچے گرو کے فضل سے سمجھا گیا


ਓਹੁ ਨੇਹੁ ਨਵੇਲਾ 
oh nayhu navaylaa.
That love is forever fresh and new,
ਉਹ ਪਿਆਰ ਸਦਾ ਨਵਾਂ ਰਹਿੰਦਾ ਹੈ ( ,
 اوہُ نیہُ نۄیلا  
ینہو۔ پیار ۔محبت ۔ نویلا۔ نیا ۔
الہٰی محبت ہمیشہ نئی اور تروتازہ رہتی ہے ۔ 


ਅਪੁਨੇ ਪ੍ਰੀਤਮ ਸਿਉ ਲਾਗਿ ਰਹੈ  ਰਹਾਉ 
apunay pareetam si-o laag rahai. ||1|| rahaa-o.
which is for the Beloved-God. ||1||Pause||
ਜੇਹੜਾ ਪਿਆਰ ਪਿਆਰੇ ਪ੍ਰੀਤਮ ਪ੍ਰਭੂ ਨਾਲ ਬਣਿਆ ਰਹਿੰਦਾ ਹੈ  ਰਹਾਉ 
 اپُنے پ٘ریِتم سِءُ لاگِ رہےَ  رہاءُ  
پریتم۔ پیار ۔ (
1) رہاؤ
جس کی محبت خدا سے بنی رہتی ہے (1) رہاؤ۔ 


ਜੋ ਪ੍ਰਭ ਭਾਵੈ ਜਨਮਿ  ਆਵੈ 
jo parabh bhaavai janam na aavai.
One who is pleasing to God escapes repeated births
 ਜੇਹੜਾ ਮਨੁੱਖ ਪ੍ਰਭੂ ਨੂੰ ਪਿਆਰਾ ਲੱਗਣ ਲੱਗ ਪੈਂਦਾ ਹੈ ਉਹ ਮੁੜ ਮੁੜ ਜਨਮ ਵਿਚ ਨਹੀਂ ਆਉਂਦਾ 
 جو پ٘ربھ بھاۄےَ جنمِ ن آۄےَ  
پربھ بھاوے ۔ خدا چاہتا ہے ۔ جنم نہ آوے ۔ تناسخ نہیں پاتا۔
جو انسان خدا کا پیارا مجتی ہو جاتا ہے اسے تناسخ میں نہیں پڑنا پڑتا ۔ 


ਹਰਿ ਪ੍ਰੇਮ ਭਗਤਿ ਹਰਿ ਪ੍ਰੀਤਿ ਰਚੈ 
har paraym bhagat har pareet rachai. ||1||
One who engages in the devotional worship, he always remains engrossed in the love of God. ||1||
 ਜਿਸ ਮਨੁੱਖ ਨੂੰ ਹਰੀ ਦਾ ਪ੍ਰੇਮਭਗਤੀ ਪ੍ਰਾਪਤ ਹੋ ਜਾਂਦੀ ਹੈ ਉਹ (ਸਦਾਹਰੀ ਦੀ ਪ੍ਰੀਤ ਵਿਚ ਮਸਤ ਰਹਿੰਦਾ ਹੈ 
 ہرِ پ٘ریم بھگتِ ہرِ پ٘ریِتِ رچےَ  
ہر پریم۔ الہٰی پیار۔ بھگت۔ عابد ۔ رچے ۔ مجذوب ہو۔
جسے الہٰی پیار حاصل ہو جائے وہ عابد ہوجاتا ہے اور الہٰی پریم پیار میں محوو جذوب ہو جاتا ہے (
1)