Urdu-Page-406

SGGS Page 406
ਦਇਆ ਕਰਹੁ ਕਿਰਮ ਅਪੁਨੇ ਕਉ ਇਹੈ ਮਨੋਰਥੁ ਸੁਆਉ 
da-i-aa karahu kiram apunay ka-o ihai manorath su-aa-o. ||2||
Please be kind on this humble servant of Yours; this alone is my desire. ||2||
ਆਪਣੇ ਇਸ ਨਾਚੀਜ਼ ਸੇਵਕ ਉਤੇ ਮੇਹਰ ਕਰ ਕੇ ਮੇਰਾ ਇਹ ਮਨੋਰਥ ਪੂਰਾ ਕਰਮੇਰੀ ਇਹ ਲੋੜ ਪੂਰੀ ਕਰ 
 دئِیا کرہُ کِرم اپُنے کءُ اِہےَ منورتھُ سُیاءُ  
منورتھ ۔ مقصد۔ سوآؤ۔ غرض ۔ ضرورت
میری یہ عرض و مقصد پوری کیجئے ۔ 


ਤਨੁ ਧਨੁ ਤੇਰਾ ਤੂੰ ਪ੍ਰਭੁ ਮੇਰਾ ਹਮਰੈ ਵਸਿ ਕਿਛੁ ਨਾਹਿ 
tan Dhan tayraa tooN parabh mayraa hamrai vas kichh naahi.
 O’ God, You are my Master and this body and wealth are given by You ; there is nothing under our control. ਹੇ ਪ੍ਰਭੂਇਹ ਸਰੀਰ ਅਤੇ ਇਹ ਧਨ ਤੇਰਾ ਹੀ ਦਿੱਤਾ ਹੋਇਆ ਹੈਤੂੰ ਹੀ ਮੇਰਾ ਮਾਲਕ ਹੈਂ ਸਾਡੇ ਵੱਸ ਵਿਚ ਕੁਝ ਨਹੀਂ ਹੈ
 تنُ دھنُ تیرا توُنّ پ٘ربھُ میرا ہمرےَ ۄسِ کِچھُ ناہِ  
(2) وس۔ طاقت ۔کھا ہے کھاتے ہیں۔
میری یہ دؤلت اور جسم آپ کا ہی دیا ہوا ہے ۔ میرے کچھ بھی اختیار نہیں ۔


ਜਿਉ ਜਿਉ ਰਾਖਹਿ ਤਿਉ ਤਿਉ ਰਹਣਾ ਤੇਰਾ ਦੀਆ ਖਾਹਿ 
ji-o ji-o raakhahi ti-o ti-o rahnaa tayraa dee-aa khaahi. ||3||
We live as You keep us and we eat whatever You give us. ||3||
ਤੂੰ ਸਾਨੂੰ ਜਿਸ ਜਿਸ ਹਾਲ ਵਿਚ ਰੱਖਦਾ ਹੈਂ ਉਸੇ ਤਰ੍ਹਾਂ ਹੀ ਅਸੀਂ ਜੀਵਨ ਬਿਤਾਂਦੇ ਹਾਂਅਸੀਂ ਤੇਰਾ ਹੀ ਦਿੱਤਾ ਹੋਇਆ ਹਰੇਕ ਪਦਾਰਥ ਖਾਂਦੇ ਹਾਂ 
 جِءُ جِءُ راکھہِ تِءُ تِءُ رہنھا تیرا دیِیا کھاہِ 
جیسے جیسے تو ہمیں رکھتا ہے ویسے ہی رہتے ہیں تیرا عنایت کردہ کھاتے ہیں۔


ਜਨਮ ਜਨਮ ਕੇ ਕਿਲਵਿਖ ਕਾਟੈ ਮਜਨੁ ਹਰਿ ਜਨ ਧੂਰਿ 
janam janam kay kilvikh kaatai majan har jan Dhoor.
The sins of countless births are washed off by humbly serving God’s devotees.
ਪਰਮਾਤਮਾ ਦੇ ਸੇਵਕਾਂ ਦੇ ਚਰਨਾਂ ਦੀ ਧੂੜ ਵਿਚ ਕੀਤਾ ਹੋਇਆ ਇਸ਼ਨਾਨ ਮਨੁੱਖ ਦੇ ਜਨਮਾਂ ਜਨਮਾਂਤਰਾਂ ਦੇ ਕੀਤੇ ਹੋਏ ਪਾਪ ਦੂਰ ਕਰ ਦੇਂਦਾ ਹੈ,
 جنم جنم کے کِلۄِکھ کاٹےَ مجنُ ہرِ جن دھوُرِ  
کلل وکھ۔ گناہ دوش ۔ مجن ۔ تیرتھ یاترا۔ دہور۔ دہول ۔
 الہٰی خادموں کی دھول سے اور اس کی برکت و عنایت سے اور اس کے غسل سے دیرینہ گناہ عافو ہو جاتے ہیں۔ 


ਭਾਇ ਭਗਤਿ ਭਰਮ ਭਉ ਨਾਸੈ ਹਰਿ ਨਾਨਕ ਸਦਾ ਹਜੂਰਿ ੧੩੯
bhaa-ay bhagat bharam bha-o naasai har naanak sadaa hajoor. ||4||4||139||
O’ Nanak, loving adoration of God dispels all fears and doubts and one feels living in His presence forever. ||4||4||139||
ਹੇ ਨਾਨਕਪ੍ਰਭੂ ਦੀ ਪ੍ਰੇਮ ਮਈ ਭਗਤੀ ਦੀ ਰਾਹੀਂ ਮਨੁੱਖ ਦਾ ਹਰੇਕ ਕਿਸਮ ਦਾ ਡਰ ਵਹਮ ਨਾਸ ਹੋ ਜਾਂਦਾ ਹੈਤੇ ਪ੍ਰਭੂ ਸਦਾ ਅੰਗਸੰਗ ਪ੍ਰਤੀਤ ਹੋਣ ਲੱਗ ਪੈਂਦਾ ਹੈ ੧੩੯
 بھاءِ بھگتِ بھرم بھءُ ناسےَ ہرِ نانک سدا ہجوُرِ ੧੩੯
بھائے ۔ محبت۔
اےنانک الہٰی پیار اور عشق عبادت سے ہر قسم کے خوف اور وہم وگمان ختم ہو جاتے ہیں۔ اور خدا حاضر ناظر معلوم ہونے لگتا ہے


ਆਸਾ ਮਹਲਾ  
aasaa mehlaa 5.
Raag Aasaa, Fifth Guru:
 آسا مہلا   
ਅਗਮ ਅਗੋਚਰੁ ਦਰਸੁ ਤੇਰਾ ਸੋ ਪਾਏ ਜਿਸੁ ਮਸਤਕਿ ਭਾਗੁ 
 agam agochar daras tayraa so paa-ay jis mastak bhaag.
 O’ God, You are infinite and incomprehensible, only the one who is predestined can realize You and behold Your blessed vision.
ਹੇ ਪ੍ਰਭੂਤੂੰ ਮਨੁੱਖਾਂ ਦੇ ਗਿਆਨਇੰਦ੍ਰਿਆਂ ਦੀ ਪਹੁੰਚ ਤੋਂ ਪਰੇ ਹੈਂਤੇਰਾ ਦਰਸਨ ਓਹੀ ਮਨੁੱਖ ਕਰਦਾ ਹੈਜਿਸ ਦੇ ਮੱਥੇ ਉਤੇ ਕਿਸਮਤ ਜਾਗ ਪੈਂਦੀ ਹੈ
 اگم اگوچرُ درسُ تیرا سو پاۓ جِسُ مستکِ بھاگُ  
اگم ۔ انسان رسائی سے بلند۔ اگوچر۔ جو بیان نہ کیا جا سکے ۔ درس دیدار ۔ سوپائے ۔ وہ پاتا ہے ۔ مستک ۔ پیشانی ۔
انسانی رسائی سے باہر جو بیان نہیں کیا جا سکتا دیدار تیرا اُسے ملتاہ ے ۔ جس کی پیشانی پر اُس کی تقدیر میں تحریر ہوتا ہے 


ਆਪਿ ਕ੍ਰਿਪਾਲਿ ਕ੍ਰਿਪਾ ਪ੍ਰਭਿ ਧਾਰੀ ਸਤਿਗੁਰਿ ਬਖਸਿਆ ਹਰਿ ਨਾਮੁ 
aap kirpaal kirpaa parabh Dhaaree satgur bakhsi-aa har naam. ||1||
The one on whom the merciful God bestowed His mercy, the true Guru blessed him with the gift of meditation on God’s Name ||1||
ਜਿਸ ਮਨੁੱਖ ਉਤੇ ਮਿਹਰਬਾਨ ਪ੍ਰਭੂ ਨੇ ਕਿਰਪਾ ਦੀ ਨਿਗਾਹ ਕੀਤੀ ਸਤਿਗੁਰੂ ਨੇ ਉਸ ਨੂੰ ਪ੍ਰਭੂ ਦੇ ਨਾਮ ਸਿਮਰਨ ਦੀ ਦਾਤਿ ਬਖ਼ਸ਼ ਦਿੱਤੀ 
 آپِ ک٘رِپالِ ک٘رِپا پ٘ربھِ دھاریِ ستِگُرِ بکھسِیا ہرِ نامُ  
کرپال مہربان۔ کرپاپرتھ ۔ دھاری ۔ خدا نے مہربانی فرمائی ۔ الہٰی نام سچ وحقیقت
 رحمان الرحیم نے خود مہربانی کی سچے مرشد نے الہٰی نام سچ اور حقیقت عنایت کیا۔


ਕਲਿਜੁਗੁ ਉਧਾਰਿਆ ਗੁਰਦੇਵ 
kalijug uDhaari-aa gurdayv.
O’ the divine Guru, you have even saved the people in the present age Kalyug, the worst of all ages.
ਹੇ ਸਤਿਗੁਰੂਤੂੰ (ਤਾਂਕਲਿਜੁਗ ਨੂੰ ਭੀ ਬਚਾ ਲਿਆ ਹੈ (ਜਿਸ ਨੂੰ ਹੋਰ ਜੁਗਾਂ ਨਾਲੋਂ ਭੈੜਾ ਸਮਝਿਆ ਜਾਂਦਾ ਹੈ),
 کلِجُگُ اُدھارِیا گُردیۄ  
(1)کلجگ۔ مشینری کا دور۔ ادھاریا۔ بچایئیا۔ گردیو۔ فرشتے مرشد نے ۔
اے خدا تو نے کلجگ کو بچایئیا ہے


ਮਲ ਮੂਤ ਮੂੜ ਜਿ ਮੁਘਦ ਹੋਤੇ ਸਭਿ ਲਗੇ ਤੇਰੀ ਸੇਵ  ਰਹਾਉ 
mal moot moorh je mughad hotay sabh lagay tayree sayv. ||1|| rahaa-o.
Even those fools who used to be filthy and dirty, by following your teachings are now engaged in devotional worship of God ||1||Pause||

ਜੇਹੜੇ ਪਹਿਲਾਂ ਗੰਦੇ ਤੇ ਮੂਰਖ ਸਨ ਉਹ ਸਾਰੇ ਤੇਰੀ ਦੱਸੀ ਪ੍ਰਭੂ ਦੀ ਸੇਵਾਭਗਤੀ ਕਰਨ ਲੱਗ ਪਏ ਹਨ ਰਹਾਉ 
 مل موُت موُڑ جِ مُگھد ہوتے سبھِ لگے تیریِ سیۄ  رہاءُ  
مل مؤت۔ گندے ۔ مندے ۔ موڑ۔ جاہل۔ مگدھ ۔ نہایت جاہل۔ سیو۔ خدمت(1) رہاؤ۔
۔ گندے جاہل اور نادان بھی تیرے خدمت کرتے ہیں(1) رہاؤ۔


ਤੂ ਆਪਿ ਕਰਤਾ ਸਭ ਸ੍ਰਿਸਟਿ ਧਰਤਾ ਸਭ ਮਹਿ ਰਹਿਆ ਸਮਾਇ 
too aap kartaa sabh sarisat Dhartaa sabh meh rahi-aa samaa-ay.
O’ God, You Yourself are the Creator and the sustainer of the entire universe and You are pervading in all.
ਹੇ ਪ੍ਰਭੂਤੂੰ ਆਪ ਸਾਰੀ ਸ੍ਰਿਸ਼ਟੀ ਦਾ ਪੈਦਾ ਕਰਨ ਵਾਲਾ ਅਤੇ ਆਸਰਾ ਦੇਣ ਵਾਲਾ ਹੈਂਤੂੰ ਆਪ ਹੀ ਸਾਰੀ ਸ੍ਰਿਸ਼ਟੀ ਵਿਚ ਵਿਆਪਕ ਹੈਂ,
 توُ آپِ کرتا سبھ س٘رِسٹِ دھرتا سبھ مہِ رہِیا سماءِ  
کرتا ۔ کرنے والا۔ سب سر شٹ دھرتا۔ سارے عالم کو قائم کرنے والا۔ سب میں رہیا۔ سمائے ۔ سب میں بستا ہے ۔
اے خدا تو کل عالم کو پیدا کرنے والا ہے اور سب کو تیری ہی سہارا ہے اور خود ہی تمام عالم میں بستا ہے ۔ 


ਧਰਮ ਰਾਜਾ ਬਿਸਮਾਦੁ ਹੋਆ ਸਭ ਪਈ ਪੈਰੀ ਆਇ 
Dharam raajaa bismaad ho-aa sabh pa-ee pairee aa-ay. ||2||
The righteous judge of Dharma is wonder-struck at the sight of everyone paying homage to You. ||2||
ਸਾਰੀ ਲੁਕਾਈ ਤੇਰੀ ਚਰਨੀਂ ਲੱਗ ਰਹੀ ਵੇਖ ਕੇ ਧਰਮ ਰਾਇ ਹੈਰਾਨ ਹੋ ਗਿਆ ਹੈ 
 دھرم راجا بِسمادُ ہویا سبھ پئیِ پیَریِ آءِ  
دھر مراج ۔ الہٰی منصف ۔ بسماد۔ حیران ۔
الہٰی منصف حیران ہے کہ تمام لوگ تیرے پاؤں پڑتے ہیں۔ 


ਸਤਜੁਗੁ ਤ੍ਰੇਤਾ ਦੁਆਪਰੁ ਭਣੀਐ ਕਲਿਜੁਗੁ ਊਤਮੋ ਜੁਗਾ ਮਾਹਿ 
satjug taraytaa du-aapar bhanee-ai kalijug ootmo jugaa maahi.
Satyug, Treta, and Duappar are considered superior ages but actually the Kalyug is the best.
ਸਤਿਜੁਗ ਨੂੰਤ੍ਰੇਤੇ ਨੂੰਦੁਆਪਰ ਨੂੰ (ਚੰਗਾਜੁਗ ਆਖਿਆ ਜਾਂਦਾ ਹੈ (ਪਰ ਪ੍ਰਤੱਖ ਦਿੱਸ ਰਿਹਾ ਹੈ ਕਿ ਸਗੋਂਕਲਿਜੁਗ ਸਾਰੇ ਜੁਗਾਂ ਵਿਚ ਸ੍ਰੇਸ਼ਟ ਹੈ,
 ستجُگُ ت٘ریتا دُیاپرُ بھنھیِئےَ کلِجُگُ اوُتمو جُگا ماہِ  
(2) بھنیئے۔ کہا جاتا ہے ۔ اُتمو۔ بلند رجہ ۔
 سجگتریتا اور دوآپر کو کہا جاتا ہے ۔ مگر کلجگسب سے اعلٰی جگ ہے 


ਅਹਿ ਕਰੁ ਕਰੇ ਸੁ ਅਹਿ ਕਰੁ ਪਾਏ ਕੋਈ  ਪਕੜੀਐ ਕਿਸੈ ਥਾਇ 
 ah kar karay so ah kar paa-ay ko-ee na pakrhee-ai kisai thaa-ay. ||3||
 Everyone gets the reward or punishment of one’s actions; none is punished in place of another in God’s court. ||3||
ਜੇਹੜਾ ਹੱਥ ਕੋਈ ਕਰਮ ਕਰਦਾ ਹੈਉਹੀ ਹੱਥ ਉਸ ਦਾ ਫ਼ਲ ਭੁਗਤਦਾ ਹੈ ਕੋਈ ਮਨੁੱਖ ਕਿਸੇ ਹੋਰ ਮਨੁੱਖ ਦੇ ਥਾਂ ਫੜਿਆ ਨਹੀਂ ਜਾਂਦਾ 
 اہِ کرُ کرے سُ اہِ کرُ پاۓ کوئیِ ن پکڑیِئےَ کِسےَ تھاءِ  
ایہہ کر اس باتھ ۔ کسے تھائے ۔ کسی جگہ ۔
کیونکہ اس جگ میںجو اپنےہاتھ سے جیسا اعمال کوئی کرتا ہے ویسا ہی اس کا انجام پاتا ہے ۔ کسی کو کسی دوسرے کی جگہ پکڑا نہیں جاتا


ਹਰਿ ਜੀਉ ਸੋਈ ਕਰਹਿ ਜਿ ਭਗਤ ਤੇਰੇ ਜਾਚਹਿ ਏਹੁ ਤੇਰਾ ਬਿਰਦੁ 
har jee-o so-ee karahi je bhagat tayray jaacheh ayhu tayraa birad.
O’ reverend God, You only give what Your devotees beg for, because this is Your inherent disposition.
ਹੇ ਪੂਜਨੀਯ ਵਾਹਿਗੁਰੂ! ਤੂੰ ਓਹੀ ਕੁਝ ਕਰਦਾ ਹੈਂ ਜੋ ਤੇਰੇ ਭਗਤ ਤੇਰੇ ਪਾਸੋਂ ਮੰਗਦੇ ਹਨਇਹ ਤੇਰਾ ਮੁਢ ਕਦੀਮਾਂ ਦਾ ਸੁਭਾਉ ਹੈ
 ہرِ جیِءُ سوئیِ کرہِ جِ بھگت تیرے جاچہِ ایہُ تیرا بِردُ  
(3) سوئی کریہہ۔ وہی کرتا ہے ۔ جاچیہہ۔ مانگتے ہیں۔ برد۔ عادت ۔
(3) اےخدا تو وہی کرتا ہے جو تیرے پیار تجھ سے مانگتے ہیں۔ یہی تیری قدیم عادت ہے ۔ 


ਕਰ ਜੋੜਿ ਨਾਨਕ ਦਾਨੁ ਮਾਗੈ ਅਪਣਿਆ ਸੰਤਾ ਦੇਹਿ ਹਰਿ ਦਰਸੁ ੧੪੦
kar jorh naanak daan maagai apni-aa santaa deh har daras. ||4||5||140||
O’ God, With folded hands, Nanak begs from You the blessed vision of Your saints. ||4||5||140||
ਹੇ ਹਰੀਨਾਨਕ ਆਪਣੇ ਦੋਵੇਂ ਹੱਥ ਜੋੜ ਕੇ ਤੇਰੇ ਦਰ ਤੋਂ ਦਾਨ ਮੰਗਦਾ ਹੈ ਕਿ ਨਾਨਕ ਨੂੰ ਆਪਣੇ ਸੰਤ ਜਨਾਂ ਦਾ ਦਰਸਨ ਦੇਹ ੧੪੦
 کر جوڑِ نانک دانُ ماگےَ اپنھِیا سنّتا دیہِ ہرِ درسُ ੧੪੦
کر جوڑ ۔ ہاتھ باندھ کر۔ دست بستہ۔ دان خیرات۔ ہر درس ۔ دیدار خدا۔
اے خدانانک تجھ سے دست بستہ یہ خیرات مانگتا ہے کہ تو اپنےخدا رسیدہ پاکدامن (سنتوں ) کا دیار عطا کر ۔ 


ਰਾਗੁ ਆਸਾ ਮਹਲਾ  ਘਰੁ ੧੩
raag aasaa mehlaa 5 ghar 13
Raag Aasaa, Thirteenth beat, Fifth Guru:
 راگُ آسا مہلا  گھرُ ੧੩ 
 ਸਤਿਗੁਰ ਪ੍ਰਸਾਦਿ 
ik-oNkaar satgur parsaad.
One eternal God, realized by the grace of the true Guru:
ਅਕਾਲ ਪੁਰਖ ਇੱਕ ਹੈ ਅਤੇ ਸਤਿਗੁਰੂ ਦੀ ਕਿਰਪਾ ਨਾਲ ਮਿਲਦਾ ਹੈ
  ستِگُر پ٘رسادِ  
ਸਤਿਗੁਰ ਬਚਨ ਤੁਮ੍ਹ੍ਹਾਰੇ  ਨਿਰਗੁਣ ਨਿਸਤਾਰੇ  ਰਹਾਉ  
satgur bachan tumHaaray. nirgun nistaaray. ||1|| rahaa-o. have

O’ true Guru, countless people with no virtues have crossed over the worldly ocean of vices by following your divine words. ||1||Pause||
ਹੇ ਸਤਿਗੁਰੂਤੇਰੇ ਬਚਨਾਂ ਨੇਅਨੇਕਾਂ ਗੁਣਹੀਣ ਬੰਦਿਆਂ ਨੂੰ ਸੰਸਾਰਸਮੁੰਦਰ ਤੋਂ ਪਾਰ ਲੰਘਾ ਦਿੱਤਾ  ਰਹਾਉ 
 ستِگُر بچن تُم٘ہ٘ہارے  نِرگُنھ نِستارے  رہاءُ  
ستگر سچا مرشد۔ بچن ۔ سبق۔ نرگن۔ بے اوصاف۔ نستارے ۔ کامیاب بناتا ہے (1) رہاؤ۔
سچے مرشد کے سبق و کلام سے بے وصفوں نے بھی کامیابی حاصل کی(1) رہاؤ


ਮਹਾ ਬਿਖਾਦੀ ਦੁਸਟ ਅਪਵਾਦੀ ਤੇ ਪੁਨੀਤ ਸੰਗਾਰੇ 
mahaa bikhaadee dusat apvaadee tay puneet sangaaray. ||1||

Even the most argumentative, vicious and indecent people have become immaculate by living in your company and by following your teachings. ||1||
ਬੜੇ ਖਰ੍ਹਵੇ ਸੁਭਾਵਭੈੜੇ ਆਚਰਨ ਤੇ ਮੰਦੇ ਬੋਲ ਬੋਲਣ ਵਾਲੇ ਬੰਦੇ ਭੀ ਤੇਰੀ ਸੰਗਤਿ ਵਿਚ ਰਹਿ ਕੇ ਪਵਿਤ੍ਰ ਆਚਰਣ ਵਾਲੇ ਬਣ ਗਏ ਹਨ 
 مہا بِکھادیِ دُسٹ اپۄادیِ تے پُنیِت سنّگارے  
دکھادی۔ شوری ۔ جھگڑنے والا۔ دشٹ۔ گناہگار ۔ پوادی ۔ بد کلام ۔ پنیت سنگارے ۔ صحبت میں پاک
 بھاری جھگڑا لو اور کمینے بد کلام صحبت و ساتھ سے پاک ہوئے ۔ 


ਜਨਮ ਭਵੰਤੇ ਨਰਕਿ ਪੜੰਤੇ ਤਿਨ੍ਹ੍ਹ ਕੇ ਕੁਲ ਉਧਾਰੇ 
janam bhavantay narak parhantay tinH kay kul uDhaaray. ||2||
O’ true Guru, you have redeemed the entire lineages of those who had been wandering and suffering like hell through myriad of births. ||2||
ਹੇ ਸਤਿਗੁਰੂਤੂੰ ਉਹਨਾਂ ਦੀਆਂ ਕੁਲਾਂ ਦੀਆਂ ਕੁਲਾਂ ਬਚਾ ਲਈਆਂਜੇਹੜੇ ਨਰਕ ਵਿਚ ਪਏ ਅਨੇਕਾਂ ਜੂਨਾਂ ਵਿਚ ਭਟਕਦੇ  ਰਹੇ ਸਨ 
 جنم بھۄنّتے نرکِ پڑنّتے تِن٘ہ٘ہ کے کُل اُدھارے  
(1)جنم بھونتے ۔ جو تناسخ میں ہیں۔ نرک۔ دوزخ۔ کل قبیلہ ۔ خاندان ۔ ادھارے ۔بچائے ۔
تناسخ اور دوزخ میں پڑے ان کے قبیلے اور خاندان بچائے۔ 


ਕੋਇ  ਜਾਨੈ ਕੋਇ  ਮਾਨੈ ਸੇ ਪਰਗਟੁ ਹਰਿ ਦੁਆਰੇ 
ko-ay na jaanai ko-ay na maanai say pargat har du-aaray. ||3||
O’ my true Guru, even those whom no one knew or cared for became honorable in God’s court by following your immaculate words. ||3||
ਹੇ ਸਤਿਗੁਰੂਜਿਨ੍ਹਾਂ ਨੂੰ ਕੋਈ ਜਾਣਦਾਪਛਾਣਦਾ ਨਹੀਂ ਸੀ ਉਹ ਮਨੁੱਖ ਭੀ ਪ੍ਰਭੂ ਦੇ ਦਰ ਤੇ ਆਦਰਮਾਣ ਹਾਸਲ ਕਰਨ ਜੋਗੇ ਹੋ ਗਏ
 کوءِ ن جانےَ کوءِ ن مانےَ سے پرگٹُ ہرِ دُیارے  
(2)) پرگٹ۔ مشہور۔ دوآرے ۔ در پر۔
جن کو کوئی جانتا تک نہ تھا گمنا م تھے وہ دربار خدا میں اُنہیں بھی وقار حاصل ہوا۔ 


ਕਵਨ ਉਪਮਾ ਦੇਉ ਕਵਨ ਵਡਾਈ ਨਾਨਕ ਖਿਨੁ ਖਿਨੁ ਵਾਰੇ ੧੪੧
kavan upmaa day-o kavan vadaa-ee naanak khin khin vaaray. ||4||1||141||
O’ true Guru, what praise and what greatness should I attribute to You? Each and every moment of Nanak is dedicated to You. ||4||1||141||

ਹੇ ਸਤਿਗੁਰੂਮੈਂ ਤੇਰੀ ਕੀਹ ਸਿਫ਼ਤਿ ਕਰਾਂਮੈਂ ਤੇਰੀ ਕੀਹ ਵਡਿਆਈ ਕਰਾਂਮੈਂ ਨਾਨਕ ਤੈਥੋਂ ਹਰੇਕ ਖਿਨ ਸਦਕੇ ਜਾਂਦਾ ਹਾਂ ੧੪੧
 کۄن اُپما دیءُ کۄن ۄڈائیِ نانک کھِنُ کھِنُ ۄارے ੧੪੧
اُپما۔ تعریف۔ وڈائی ۔ عظمت ۔ وارے ۔ قربان
اے نانک اس کی کیا تعریف کروں جو کہوں میں تجھ پر بار بار قربان ہوں۔ 


ਆਸਾ ਮਹਲਾ  
aasaa mehlaa 5.
Raag Aasaa, Fifth Guru:
 آسا مہلا   
ਬਾਵਰ ਸੋਇ ਰਹੇ  ਰਹਾਉ 
baavar so-ay rahay. ||1|| rahaa-o.
People gone crazy in the love for Maya remain unaware of reality. ||1||Pause||
(ਮਾਇਆ ਦੇ ਮੋਹ ਵਿਚਝੱਲੇ ਹੋਏ ਮਨੁੱਖ (ਗ਼ਫ਼ਲਤ ਦੀ ਨੀਂਦ ਵਿਚਸੁੱਤੇ ਰਹਿੰਦੇ ਹਨ  ਰਹਾਉ 
 باۄر سوءِ رہے  رہاءُ  
باور۔ پاگل۔ دیوانے(1) رہاؤ۔
دنیاوی دولت کی محبت میں ) غافل پاگل انسان سو یا رہتا ہے (1) رہاؤ۔ 


ਮੋਹ ਕੁਟੰਬ ਬਿਖੈ ਰਸ ਮਾਤੇ ਮਿਥਿਆ ਗਹਨ ਗਹੇ 
moh kutamb bikhai ras maatay mithi-aa gahan gahay. ||1||
Being engrossed in the love for their families and sensory pleasures, they hold fast to false worldly attachments. ||1||
ਉਹ ਪਰਵਾਰ ਦੇ ਮੋਹ ਅਤੇ ਵਿਸ਼ਿਆਂ ਦੇ ਸੁਆਦਾਂ ਵਿਚ ਮਸਤ ਹੋ ਕੇ ਕੂੜੀਆਂ ਮੱਲਾਂ ਮੱਲਦੇ ਰਹਿੰਦੇ ਹਨ 
 موہ کُٹنّب بِکھےَ رس ماتے مِتھِیا گہن گہے 
اپنے کٹنب کی محبت اور بد کاریوں کی لذتوں میں مست جھوٹے راستوں کے راہگیر ہو جاتے ہیں۔ 


ਮਿਥਨ ਮਨੋਰਥ ਸੁਪਨ ਆਨੰਦ ਉਲਾਸ ਮਨਿ ਮੁਖਿ ਸਤਿ ਕਹੇ 
mithan manorath supan aanand ulaas man mukh sat kahay. ||2||
 False ambitions are like worldly delights and pleasures in dreams; these people believe them as permanent in their minds and also say so. ||2||
ਝੂਠੀਆਂ ਮਨੋਕਾਮਨਾਂ ਜੋ ਸੁਪਨਿਆਂ ਵਿਚ ਪ੍ਰਤੀਤ ਹੋ ਰਹੇ ਮੌਜਮੇਲਿਆਂ ਵਾਂਗ ਹਨ, ਉਹ ਬੰਦੇ ਇਹਨਾਂ ਨੂੰ ਆਪਣੇ ਮਨ ਵਿਚ ਸਦਾ ਕਾਇਮ ਰਹਿਣ ਵਾਲੇ ਸਮਝਦੇ ਹਨਮੂੰਹੋਂ ਭੀ ਉਹਨਾਂ ਨੂੰ ਹੀ ਪੱਕੇ ਸਾਥੀ ਆਖਦੇ ਹਨ 
 مِتھن منورتھ سُپن آننّد اُلاس منِ مُکھِ ستِ کہے  
متھن منورتھ ۔ جھوٹے۔ مقصد۔ جھوٹی خواہشات ۔ اُلاس۔ خوشیاں ۔ بلوے۔ مکھ۔ زبان سے ۔ ست کہے ۔ سچے کہے (2)
ان نعمتوں کا لالچ کرتے ہیں جو ساتھ دینے والے نہیں جو خواب میں موج مستی اور سکون دینے والے ہیں اور زبان سے انہیں صدیوی اور ساتھی سمجھتے ہیں۔ 


ਅੰਮ੍ਰਿਤੁ ਨਾਮੁ ਪਦਾਰਥੁ ਸੰਗੇ ਤਿਲੁ ਮਰਮੁ  ਲਹੇ 
amrit naam padaarath sangay til maram na lahay. ||3||
The wealth of the ambrosial Naam, which is within them, but they do not care to find even a tiny bit of its mystery. ||3||
ਆਤਮਕ ਜੀਵਨ ਦੇਣ ਵਾਲਾ ਨਾਮ ਪਦਾਰਥ ਸਦਾ ਉਨ੍ਹਾਂ ਦੇ ਨਾਲ ਹੈ ਪਰ ਉਹ ਇਸ ਦਾ ਹਵਾ ਮਾਤ੍ਰ ਭੀ ਭੇਤ ਨਹੀਂ ਪਾਊਦੇ 
 انّم٘رِتُ نامُ پدارتھُ سنّگے تِلُ مرمُ ن لہے  
(2) انمرت نام۔ آب حیات نام سچ جس سے روحانی زندگی حاصل ہوتی ہے ۔ پدارتھ ۔ نعمتیں سنگے ۔ ساتھ ۔ مرم۔ راز
 الہٰی نام کی نعمت جو روحانیت اور روحانی زندگی عنایت کرنے والا ہے ۔ جو ہر وقت ساتھ دینے والا ہے دنیاوی دؤلت میں پاگل انسان ذرا بھر بھیر از سمجھ نہیں پاتے ۔ 


ਕਰਿ ਕਿਰਪਾ ਰਾਖੇ ਸਤਸੰਗੇ ਨਾਨਕ ਸਰਣਿ ਆਹੇ ੧੪੨
kar kirpaa raakhay satsangay naanak saran aahay. ||4||2||142||
O’ Nanak, only those people remain in God’s refuge, on whom He bestows His mercy and keep them in the holy congregation. ||4||2||142||
ਹੇ ਨਾਨਕਪ੍ਰਭੂ ਮੇਹਰ ਕਰ ਕੇ ਜਿਨ੍ਹਾਂ ਮਨੁੱਖਾਂ ਨੂੰ ਸਾਧ ਸੰਗਤਿ ਵਿਚ ਰੱਖਦਾ ਹੈ ਉਹੀ ਉਸ ਪ੍ਰਭੂ ਦੀ ਸਰਨ ਆਏ ਰਹਿੰਦੇ ਹਨ ੧੪੨
 کرِ کِرپا راکھے ستسنّگے نانک سرنھِ آہے ੧੪੨
اےنانک۔ خدا جنہیں اپنی کرم و عنایت سے سچے پاکدامنوں کی صحبت و قربت عنایت کرتا ہے وہ اپنی زندگی الہٰی سایہ میں گذارتے ہیں


ਆਸਾ ਮਹਲਾ  ਤਿਪਦੇ 
aasaa mehlaa 5 tipday.
Raag Aasaa, tipadas (three stanzas), Fifth Guru:
 آسا مہلا  تِپدے  
ਓਹਾ ਪ੍ਰੇਮ ਪਿਰੀ  ਰਹਾਉ 
ohaa paraym piree. ||1|| rahaa-o.
I seek only the Love of my Beloved God. ||1||Pause||
(ਮੈਨੂੰ ਤਾਂਪਿਆਰੇ (ਪ੍ਰਭੂਦਾ ਉਹ ਪ੍ਰੇਮ ਹੀ (ਚਾਹੀਦਾ ਹੈ ਰਹਾਉ 
 اوہا پ٘ریم پِریِ  رہاءُ  
اوہا۔ وہی ۔ پری ۔ پیارا۔ (1) رہاؤ۔
وہی پیارے کا پیار(1) رہاؤ۔ 


ਕਨਿਕ ਮਾਣਿਕ ਗਜ ਮੋਤੀਅਨ ਲਾਲਨ ਨਹ ਨਾਹ ਨਹੀ 
kanik maanik gaj motee-an laalan nah naah nahee. ||1||
I do not need gold, jewels, big pearls or diamonds, yes I do not need these. ||1|| 
ਸੋਨਾਵੱਡੇ ਵੱਡੇ ਮੋਤੀਹੀਰੇਲਾਲਮੈਨੂੰ ਇਹਨਾਂ ਵਿਚੋਂ ਕੋਈ ਭੀ ਚੀਜ਼ ਨਹੀਂ ਚਾਹੀਦੀਨਹੀਂ ਚਾਹੀਦੀ 
 کنِک مانھِک گج موتیِئن لالن نہ ناہ نہیِ  
کنک۔ سونا مانک موتی ۔ گج ۔ ہاتھی
سونا۔ موتی ۔ ہاتھی کے لعل۔ یا ہیرے نہیں چایئے(1) 


ਰਾਜ  ਭਾਗ  ਹੁਕਮ  ਸਾਦਨ 
raaj na bhaag na hukam na saadan.
Neither any kingdom nor worldly possessions, neither any power nor any dainty dishes,
(ਪ੍ਰਭੂਪਿਆਰ ਦੇ ਥਾਂਨਾਹ ਰਾਜਨਾਹ ਧਨਪਦਾਰਥਨਾਹ ਹੁਕੂਮਤ ਨਾਹ ਸੁਆਦਲੇ ਖਾਣੇ,
 راج ن بھاگ ن ہُکم ن ساد ن  
سادن۔لذیز کھانے ۔
حکومت نہ دؤلت ۔ نہ کوئی نعمت چاہیے ۔