Urdu-Page-386

ਸੋ ਨਾਮੁ ਜਪੈ ਜੋ ਜਨੁ ਤੁਧੁ ਭਾਵੈ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥
so naam japai jo jan tuDh bhaavai. ||1|| rahaa-o.
He alone is pleasing to Your Will, who chants the Naam. ||1||Pause||
 سو نامُ جپےَ جو جنُ تُدھُ بھاۄےَ
۔ تد بھاوے ۔ جسے تو چاہے ۔ 
مگر وہی شخص تیری ریاض کرتا ہے جو تجھے پیارا ہے 

 ਤਨੁ ਮਨੁ ਸੀਤਲੁ ਜਪਿ ਨਾਮੁ ਤੇਰਾ ॥
tan man seetal jap naam tayraa.
My body and mind are cooled and soothed, chanting the Name of the Lord.
 تنُ منُ سیِتلُ جپِ نامُ تیرا
تن من دل و جان ۔ ستیل ۔ ٹھنڈا ۔ پر سکون ۔ 
۔ اے خدا تیری ریاض سے دل و جان کو سکون ملتا ہے 

 ਹਰਿ ਹਰਿ ਜਪਤ ਢਹੈ ਦੁਖ ਡੇਰਾ ॥੨॥
har har japat dhahai dukh dayraa. ||2||
Meditating on the Lord, Har, Har, the house of pain is demolished. ||2||
ہرِ ہرِ جپت ڈھہےَ دُکھ ڈیرا
۔ اور خدا کو یاد کرنے سے تمام عذاب مٹ جاتے ہیں

 ਹੁਕਮੁ ਬੂਝੈ ਸੋਈ ਪਰਵਾਨੁ ॥
hukam boojhai so-ee parvaan.
He alone, who understands the Command of the Lord’s Will, is approved.
ہُکمُ بوُجھےَ سوئیِ پرۄانُ 
پروان منظور۔ قبول 
وہ الہٰی رضا کو سمجھ کر وہ شخص بارگاہ الہٰی منظو رہو جاتا ہے 

 ਸਾਚੁ ਸਬਦੁ ਜਾ ਕਾ ਨੀਸਾਨੁ ॥੩॥
saach sabad jaa kaa neesaan. ||3||
The True Shabad of the Word of God is his trademark and insignia. ||3||
 ساچُ سبدُ جا کا نیِسانُ
۔ ساچ سبد۔ سچا کلمہ ۔ نیسان ۔ مراد نشانہ ۔ 
سچا کلام جس کی منزل ہے 
۔ 

 ਗੁਰਿ ਪੂਰੈ ਹਰਿ ਨਾਮੁ ਦ੍ਰਿੜਾਇਆ ॥
gur poorai har naam drirh-aa-i-aa.
The Perfect Guru has implanted the Lord’s Name within me.
گُرِ پوُرےَ ہرِ نامُ د٘رِڑائِیا
(درڑائیئا۔د ل میں مکمل طور پر بسایئیا
جب سے کامل مرشد نے میرے دل میں پختہ طور بسادیا ہے 

 ਭਨਤਿ ਨਾਨਕੁ ਮੇਰੈ ਮਨਿ ਸੁਖੁ ਪਾਇਆ ॥੪॥੮॥੫੯॥
bhanat naanak mayrai man sukh paa-i-aa. ||4||8||59||
Prays Nanak, my mind has found peace. ||4||8||59||
 بھنتِ نانکُ میرےَ منِ سُکھُ پائِیا
۔ بھنت ۔ بیان 
نانک بیان کرتا ہے ۔ میرے دل کو سکون نے روحانی طور پر سکون محسوس کیا ہے 

 ਆਸਾ ਮਹਲਾ ੫ ॥
aasaa mehlaa 5.
Aasaa, Fifth Mehl:
 ਜਹਾ ਪਠਾਵਹੁ ਤਹ ਤਹ ਜਾਈ ॥
jahaa pathaavhu tah tah jaa-eeN.
Wherever You send me, there I go.
 جہا پٹھاۄہُ تہ تہ جائیِ
پٹھادہو۔ بھیجو 
۔ جہاں میرے آقا بھیجو جاتے ہیں

 ਜੋ ਤੁਮ ਦੇਹੁ ਸੋਈ ਸੁਖੁ ਪਾਈ ॥੧॥
jo tum dayh so-ee sukh paa-eeN. ||1||
Whatever You give me, brings me peace. ||1|
جو تُم دیہُ سوئیِ سُکھُ پائیِ=
۔ پائیں۔ پاتا ہے ۔ ملتا ہے ۔ 
اور جو دیتے ہو وہی کھاتے ہیں۔ اسے ہی سے سکون پاتے ہیں۔ خوشی مناتے ہیں۔ 
(

 ਸਦਾ ਚੇਰੇ ਗੋਵਿੰਦ ਗੋਸਾਈ ॥
sadaa chayray govind gosaa-ee.
I am forever the chaylaa, the humble disciple, of the Lord of the Universe, the Sustainer of the World.
 سدا چیرے گوۄِنّد گوسائیِ
چیرے ۔ شاگرد۔ بوبند۔ گوسائیں۔ آقا۔ مالک۔ خدا 

اے خدا ہمیشہ تیرا شاگرد اور خادم ہون۔ تیری رحمت سے دنیاوی دولت سے ہی صابر اور قانع ہوا ہوں 

 ਤੁਮ੍ਹ੍ਹਰੀ ਕ੍ਰਿਪਾ ਤੇ ਤ੍ਰਿਪਤਿ ਅਘਾਈ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥
tumHree kirpaa tay taripat aghaa-eeN. ||1|| rahaa-o.
By Your Grace, I am satisfied and satiated. ||1||Pause||
تُم٘ہ٘ہریِ ک٘رِپا تے ت٘رِپتِ اگھائیِ|
۔ کرپا۔ کرم وعنایت ۔ مہربانی رپت۔ تسلی ۔ تسکین 
۔ تیری رحمت سے ہی پر سکون گذر اوقات کر رہا ہوں۔ 

 ਤੁਮਰਾ ਦੀਆ ਪੈਨ੍ਹ੍ਹਉ ਖਾਈ ॥
tumraa dee-aa painHa-o khaa-eeN.
Whatever You give me, I wear and eat.
 تُمرا دیِیا پیَن٘ہ٘ہءُ کھائیِ
۔ گھائیں۔ سبر ہو جاتا ہے ۔ خواہش مٹ جاتی ہے ۔ رہاؤ
جو پوشیش کے لئے اور کھانے کے لئے دیتے ہو وہی پہنتے اور کھاتے ہیں
 

 ਤਉ ਪ੍ਰਸਾਦਿ ਪ੍ਰਭ ਸੁਖੀ ਵਲਾਈ ॥੨॥
ta-o parsaad parabh sukhee valaa-eeN. ||2||
By Your Grace, O God, my life passes peacefully. ||2||
 تءُ پ٘رسادِ پ٘ربھ سُکھیِ ۄلائیِ=
۔ دلائیں۔ بتاتا ہوں۔ گذارتا ہوں
۔ تیری رحمت سے ہی پر سکون گذر اوقات کر رہا ہوں
 

 ਮਨ ਤਨ ਅੰਤਰਿ ਤੁਝੈ ਧਿਆਈ ॥
man tan antar tujhai Dhi-aa-eeN.
Deep within my mind and body, I meditate on You.
من تن انّترِ تُجھےَ دھِیائیِ
دھیائیں بساتا ہوں۔ یاد کرتاہوں۔ ریاضت کرتا ہوں
میری دل و جان اور ذہن میں تو ہی بستا ہے ۔

 ਤੁਮ੍ਹ੍ਹਰੈ ਲਵੈ ਨ ਕੋਊ ਲਾਈ ॥੩॥
tumHrai lavai na ko-oo laa-eeN. ||3||
I recognize none as equal to You. ||3||
تُم٘ہ٘ہرےَ لۄےَ ن کوئوُ لائیِ
۔ لولے ۔ برابر 
اور کسی کو تیرا ثانی نہیں سمجھتا 

 ਕਹੁ ਨਾਨਕ ਨਿਤ ਇਵੈ ਧਿਆਈ ॥
kaho naanak nit ivai Dhi-aa-eeN.
Says Nanak, this is my continual meditation:
 کہُ نانک نِت اِۄےَ دھِیائیِ
اے نانک کہہ کہ میں اسی طرح تجھے یاد کرتا ہوں 

 ਗਤਿ ਹੋਵੈ ਸੰਤਹ ਲਗਿ ਪਾਈ ॥੪॥੯॥੬੦॥
gat hovai santeh lag paa-eeN. ||4||9||60||
that I may be emancipated, clinging to the Feet of the Saints. ||4||9||60||
 گتِ ہوۄےَ سنّتہ لگِ پائ
گت۔ بلند روحانی حالت 
اور پاکدامن عارفوں کے پاؤں چھوکر بلند روحانیت سے فیضیاب ہوں۔ 

 ਆਸਾ ਮਹਲਾ ੫ ॥
aasaa mehlaa 5.
Aasaa, Fifth Mehl:
 ਊਠਤ ਬੈਠਤ ਸੋਵਤ ਧਿਆਈਐ ॥
oothat baithat sovat Dhi-aa-ee-ai.
While standing up, and sitting down, and even while asleep, meditate on the Lord.
اوُٹھت بیَٹھت سوۄت دھِیائیِئےَ 
اوٹھت بیٹھت ۔ اُٹھتے اور بیٹھے وقت
خدا کو آٹھتے بیٹھے اور سوتے مراد ہر وقت یاد رکھو

 ਮਾਰਗਿ ਚਲਤ ਹਰੇ ਹਰਿ ਗਾਈਐ ॥੧॥
maarag chalat haray har gaa-ee-ai. ||1||
Walking on the Way, sing the Praises of the Lord. ||1||
مارگِ چلت ہرے ہرِ گائیِئےَ 
۔ مارگ ۔ راستے 
اور راہ چلتے وقت بھی اسے یاد رکھو 

 ਸ੍ਰਵਨ ਸੁਨੀਜੈ ਅੰਮ੍ਰਿਤ ਕਥਾ ॥
sarvan suneejai amrit kathaa.
With your ears, listen to the Ambrosial Sermon.
س٘رۄن سُنیِجےَ انّم٘رِت کتھا 
کھتا۔ کہانی ۔ سرون ۔ کانوں سے ۔
اے انسانوں کانوں سے آب حیات کلام الہٰی سنیئے 

 ਜਾਸੁ ਸੁਨੀ ਮਨਿ ਹੋਇ ਅਨੰਦਾ ਦੂਖ ਰੋਗ ਮਨ ਸਗਲੇ ਲਥਾ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥
jaas sunee man ho-ay anandaa dookh rog man saglay lathaa. ||1|| rahaa-o.
Listening to it, your mind shall be filled with bliss, and the troubles and diseases of your mind shall all depart. ||1||Pause||
 جاسُ سُنیِ منِ ہوءِ اننّدا دوُکھ روگ من سگلے لتھا  رہاءُ 
۔ جاس ۔ من ہوئے انندا۔ سکون ملے دل کو ۔لتھا۔ لیہہ جائے ۔ ختم ہو جائے 
۔ جس کے سننے سے دل کو روحانی سکون ملتا ہے ۔ اور تمام ذہنی و روحانی کوفتیں اور بیماریاں ختم ہوجاتی ہیں ر

 ਕਾਰਜਿ ਕਾਮਿ ਬਾਟ ਘਾਟ ਜਪੀਜੈ ॥
kaaraj kaam baat ghaat japeejai.
While you work at your job, on the road and at the beach, meditate and chant.
کارجِ کامِ باٹ گھاٹ جپیِجےَ 
کارج۔ کام ۔ واٹ ۔ راستے ۔ گھاٹ کنارا۔ دریائی 
کام کرتےوقت سفر میں دریاؤں کے کنار حمد وثناہ کرتے رہو 

 ਗੁਰ ਪ੍ਰਸਾਦਿ ਹਰਿ ਅੰਮ੍ਰਿਤੁ ਪੀਜੈ ॥੨॥
gur parsaad har amrit peejai. ||2||
By Guru’s Grace, drink in the Ambrosial Essence of the Lord. ||2||
گُر پ٘رسادِ ہرِ انّم٘رِتُ پیِجےَ 
کنارے ۔ گر پرساد۔ رحمت مرشد سے
اور رحمت مرشد سے آب حیات الہٰی یاددل میں بساؤ

 ਦਿਨਸੁ ਰੈਨਿ ਹਰਿ ਕੀਰਤਨੁ ਗਾਈਐ ॥
dinas rain har keertan gaa-ee-ai.
The humble being who sings the Kirtan of the Lord’s Praises, day and night,
دِنسُ ریَنِ ہرِ کیِرتنُ گائیِئےَ 
ونس رین ۔ روز وشب ۔ دان اور رات ۔ کیرتن حمدوثناہ 
روز وشب دن رات خدا کی حمدو ثناہ صفت صلاح کرؤ

 ਸੋ ਜਨੁ ਜਮ ਕੀ ਵਾਟ ਨ ਪਾਈਐ ॥੩॥
so jan jam kee vaat na paa-ee-ai. ||3||
does not have to go with the Messenger of Death. ||3||
سو جنُ جم کیِ ۄاٹ ن پائیِئےَ 
۔ جسم کی وات ۔ زندگی کا وہ رستہ جہاں روحانی یا اخلاقی موت آجاتی ہے ۔ 
۔ زندگی کے سفر میں روحانی موت کے راستہ پر نہیں جانا پڑت

 ਆਠ ਪਹਰ ਜਿਸੁ ਵਿਸਰਹਿ ਨਾਹੀ ॥
aath pahar jis visrahi naahee.
One who does not forget the Lord, twenty-four hours a day, is emancipated;
 آٹھ پہر جِسُ ۄِسرہِ ناہیِ
آٹھ پہر ۔ ہر وقت۔ وسریہہ۔ بھولے 
جو انسان کسی وقت بھی خدا کو ہیں بھلاتا ۔ 

 ਗਤਿ ਹੋਵੈ ਨਾਨਕ ਤਿਸੁ ਲਗਿ ਪਾਈ ॥੪॥੧੦॥੬੧॥
gat hovai naanak tis lag paa-ee. ||4||10||61||
O Nanak, I fall at his feet. ||4||10||61||
 گتِ ہوۄےَ نانک تِسُ لگِ پائیِ
۔ گھت روحانی طور پر بلندی 
اے نانک۔اس کے پاوں پڑنے سے بلند روحانیت حاصل ہو جاتی ہے ۔ 

 ਆਸਾ ਮਹਲਾ ੫ ॥
aasaa mehlaa 5.
Aasaa, Fifth Mehl:
 ਜਾ ਕੈ ਸਿਮਰਨਿ ਸੂਖ ਨਿਵਾਸੁ ॥
jaa kai simran sookh nivaas.
Remembering Him in meditation, one abides in peace;
جا کےَ سِمرنِ سوُکھ نِۄاسُ 
سمرن۔ یاد ۔ دھیان۔ سکھ نواس۔ آرام ملتا ہے 
ہمیشہ مرشد کی خوشودی حاصل کرتے رہو 

 ਭਈ ਕਲਿਆਣ ਦੁਖ ਹੋਵਤ ਨਾਸੁ ॥੧॥
bha-ee kali-aan dukh hovat naas. ||1||
one becomes happy, and suffering is ended. ||1||
بھئیِ کلِیانھ دُکھ ہوۄت ناسُ 
۔ کیلان خیرو عافیت (
ایک خوش ہوجاتا ہے ، اور تکلیف ختم ہو جاتی ہے

 ਅਨਦੁ ਕਰਹੁ ਪ੍ਰਭ ਕੇ ਗੁਨ ਗਾਵਹੁ ॥
anad karahu parabh kay gun gaavhu.
Celebrate, make merry, and sing God’s Glories.
اندُ کرہُ پ٘ربھ کے گُن گاۄہُ 
اور اس کے دیئے ہوئے سبق کے مطابق الہٰی حمدوثناہ کرتے رہوے

 ਸਤਿਗੁਰੁ ਅਪਨਾ ਸਦ ਸਦਾ ਮਨਾਵਹੁ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥
satgur apnaa sad sadaa manaavahu. ||1|| rahaa-o.
Forever and ever, surrender to the True Guru. ||1||Pause||
ستِگُرُ اپنا سد سدا مناۄہُ  رہاءُ 
منادہو۔ خوشیاں حاصل کرو۔ سچے مرشد سچے کلام پر عمل کر و لہذا پر سکون ہوکر ملاپ پاؤ۔ 
ہمیشہ مرشد کی خوشودی حاصل کرتے رہو 

 ਸਤਿਗੁਰ ਕਾ ਸਚੁ ਸਬਦੁ ਕਮਾਵਹੁ ॥
satgur kaa sach sabad kamaavahu.
Act in accordance with the Shabad, the True Word of the True Guru.
ستِگُر کا سچُ سبدُ کماۄہُ 
۔ سچ سبد۔ سچا کلام پر عمل کرو لہذا پر سکون ہوکر ملاپ پاؤ
اس سچے مرشد کے سبق پر عمل کرؤ 

 ਥਿਰੁ ਘਰਿ ਬੈਠੇ ਪ੍ਰਭੁ ਅਪਨਾ ਪਾਵਹੁ ॥੨॥
thir ghar baithay parabh apnaa paavhu. ||2||
Remain steady and stable within the home of your own self, and find God. ||2||
تھِرُ گھرِ بیَٹھے پ٘ربھُ اپنا پاۄہُ 
تھر گھر ۔ مستقل مزاج 
مستقل مزاج پر سکون اپنے اندر خدا کو پاؤ

 ਪਰ ਕਾ ਬੁਰਾ ਨ ਰਾਖਹੁ ਚੀਤ ॥
par kaa buraa na raakho cheet.
Do not harbor evil intentions against others in your mind,
پر کا بُرا ن راکھہُ چیِت 
پر ۔ دوسرا۔ چیت۔ دل میں 
دل میں کسی کی برائی نہ سوچو

 ਤੁਮ ਕਉ ਦੁਖੁ ਨਹੀ ਭਾਈ ਮੀਤ ॥੩॥
tum ka-o dukh nahee bhaa-ee meet. ||3||
and you shall not be troubled, O Siblings of Destiny, O friends. ||3||
تُم کءُ دُکھُ نہیِ بھائیِ میِت 
میت۔ دوست۔ 
۔ تب اے بھائی تمہیں کوئی تکلیف برداشت نہ کرنی پڑے گی

 ਹਰਿ ਹਰਿ ਤੰਤੁ ਮੰਤੁ ਗੁਰਿ ਦੀਨ੍ਹ੍ਹਾ ॥
har har tant mant gur deenHaa.
The Name of the Lord, Har, Har, is the Tantric exercise, and the Mantra, given by the Guru.
ہرِ ہرِ تنّتُ منّتُ گُرِ دیِن٘ہ٘ہا 
(تنت منت۔ تعویز ۔ گنڈے ۔ جادو
۔ انسان کو خدا نے سچ الہٰی نام کا تعویذ اور جادو دیا ہے جس کی یاد سے آرام و آسائش حاصل ہو

 ਇਹੁ ਸੁਖੁ ਨਾਨਕ ਅਨਦਿਨੁ ਚੀਨ੍ਹ੍ਹਾ ॥੪॥੧੧॥੬੨॥
ih sukh naanak an-din cheenHaa. ||4||11||62||
Nanak knows this peace alone, night and day. ||4||11||62||
 اِہُ سُکھُ نانک اندِنُ چیِن٘ہ٘ہا
۔ اندن ہر روز ۔ چینا ۔ پہچاننا 
اے نانک ۔ اسے اس تعویز اور جادو سے ملا روحانی سکون کی پہچان ہو 
۔

 ਆਸਾ ਮਹਲਾ ੫ ॥
aasaa mehlaa 5.
Aasaa, Fifth Mehl:
 ਜਿਸੁ ਨੀਚ ਕਉ ਕੋਈ ਨ ਜਾਨੈ ॥
jis neech ka-o ko-ee na jaanai.
That wretched being, whom no one knows
جِسُ نیِچ کءُ کوئیِ ن جانےَ 
نیچ۔ کمینہ ، کمزات 
اس کم ذات نادار کو کوئی نہیں جانتا تھا 
 

 ਨਾਮੁ ਜਪਤ ਉਹੁ ਚਹੁ ਕੁੰਟ ਮਾਨੈ ॥੧॥
naam japat uho chahu kunt maanai. ||1||
– chanting the Naam, the Name of the Lord, he is honored in the four directions. ||1||
نامُ جپت اُہُ چہُ کُنّٹ مانےَ 
۔ چوہ ۔ کنٹ ۔ چاروں طرف۔ جانے مشہور
تیری ریاض خدا سے چاروں طرف مشہور ہواخوشحال ہوا عذاب مٹے ۔ 

 ਦਰਸਨੁ ਮਾਗਉ ਦੇਹਿ ਪਿਆਰੇ ॥
darsan maaga-o deh pi-aaray.
I beg for the Blessed Vision of Your Darshan; please, give it to me, O Beloved!
درسنُ ماگءُ دیہِ پِیارے 
میرے پیارے خدا تیرا دیدار مانگتا ہوں۔ دیجئے ۔ 

 ਤੁਮਰੀ ਸੇਵਾ ਕਉਨ ਕਉਨ ਨ ਤਾਰੇ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥
tumree sayvaa ka-un ka-un na taaray. ||1|| rahaa-o.
Serving You, who, who has not been saved? ||1||Pause||
تُمریِ سیۄا کئُن کئُن ن تارے  رہاءُ 
۔ تمری سیوا۔ تمہارے خدمت ۔ تارے ۔ کامیابی پائی (
جس نے بھی کی خدمت تیری کامیابی اسے عنایو ہوئی(

 ਜਾ ਕੈ ਨਿਕਟਿ ਨ ਆਵੈ ਕੋਈ ॥
jaa kai nikat na aavai ko-ee.
That person, whom no one wants to be near
جا کےَ نِکٹِ ن آۄےَ کوئیِ 
نکٹ۔ نزدیک 
جس کے نزدیک نہ کوئی جاتا تھا 

 ਸਗਲ ਸ੍ਰਿਸਟਿ ਉਆ ਕੇ ਚਰਨ ਮਲਿ ਧੋਈ ॥੨॥
sagal sarisat u-aa kay charan mal Dho-ee. ||2||
– the whole world comes to wash the dirt of his feet. ||2||
 سگل س٘رِسٹِ اُیا کے چرن ملِ دھوئیِ 
۔ سگل سرشٹ ۔ سارے عالم ۔ اوآ۔ اس کے چرن ۔ پاؤ ن
سارے اس کے پاؤں دھوتے ہیں۔

 ਜੋ ਪ੍ਰਾਨੀ ਕਾਹੂ ਨ ਆਵਤ ਕਾਮ ॥
jo paraanee kaahoo na aavat kaam.
That mortal, who is of no use to anyone at all
جو پ٘رانیِ کاہوُ ن آۄت کام 
اے خدا جس میں طاقت نہ تھی کام کسی کے سنوارنے کی 

 ਸੰਤ ਪ੍ਰਸਾਦਿ ਤਾ ਕੋ ਜਪੀਐ ਨਾਮ ॥੩॥
sant parsaad taa ko japee-ai naam. ||3||
– by the Grace of the Saints, he meditates on the Naam. ||3||
سنّت پ٘رسادِ تا کو جپیِئےَ نام
سنت پرساد۔ رحمت پاکدامن عارف سے تاکو اس کو نام یاد کیا جاتا ہے 
رحمت مرشد سے ریاض اس کی ہوتی ہے 
 

 ਸਾਧਸੰਗਿ ਮਨ ਸੋਵਤ ਜਾਗੇ ॥
saaDhsang man sovat jaagay.
In the Saadh Sangat, the Company of the Holy, the sleeping mind awakens.
سادھسنّگِ من سوۄت جاگے 
من سووت۔ غفلت کی نیند سے بیدار ہوتا ہے ۔ سادہ سنگ۔ پاکدامن عارف کی صحبت و قربت سے 
۔ صحبت و قربت میں پاکدامن عارف سے غفلت کی نیند سے بیدار آتی ہے 

 ਤਬ ਪ੍ਰਭ ਨਾਨਕ ਮੀਠੇ ਲਾਗੇ ॥੪॥੧੨॥੬੩॥
tab parabh naanak meethay laagay. ||4||12||63||
Then, O Nanak, God seems sweet. ||4||12||63||
تب پ٘ربھ نانک میِٹھے لاگے
اے نانک۔ تب پیار وہ جاتا ہے خدا س کو روحانی سکون پہچان عنایت کرتا ہے ۔ 

 ਆਸਾ ਮਹਲਾ ੫ ॥
aasaa mehlaa 5.
Aasaa, Fifth Mehl:
 ਏਕੋ ਏਕੀ ਨੈਨ ਨਿਹਾਰਉ ॥
ayko aykee nain nihaara-o.
With my eyes, I behold the One and Only Lord.
 ایکو ایکیِ نیَن نِہارءُ 
ایک ایکی ۔ واحد خدا ہی ۔ نین نہارؤ ۔ آنکھوں سے دیکھو 
 
واحد خدا آنکھوں سے ہر جگہ بستا دکھائی دیتا ہے  
 

 ਸਦਾ ਸਦਾ ਹਰਿ ਨਾਮੁ ਸਮ੍ਹ੍ਹਾਰਉ ॥੧॥ 
sadaa sadaa har naam samHaara-o. ||1||
Forever and ever, I contemplate the Naam, the Name of the Lord. ||1||
سدا سدا ہرِ نامُ سم٘ہ٘ہارءُ 
۔ سمارؤ۔ بساو 
اور ہمیشہ الہٰی نام دل میں بساؤ