Urdu-Page-381

ਨਿੰਦਕ ਕੀ ਗਤਿ ਕਤਹੂੰ ਨਾਹੀ ਖਸਮੈ ਏਵੈ ਭਾਣਾ ॥
nindak kee gat katahooN naahee khasmai ayvai bhaanaa.
The slanderer shall never attain emancipation; this is the Will of the Lord and Master.
 نِنّدک کیِ گتِ کتہوُنّ ناہیِ کھسمےَ ایۄےَ بھانھا 
گت ۔ حالت۔ کتہوں ۔ کہیں بھی خصمے ۔ مالک۔ آقا۔ ایوے ۔ اسی طرح ۔ بھانا۔ رضا ۔ مرضی
الہٰی رضا یہی ہے کہ بد گوئی کرنے والے کو کہیں بھی بلند روحانی رتبہ حاصل نہیں ہو سکتا۔

 ਜੋ ਜੋ ਨਿੰਦ ਕਰੇ ਸੰਤਨ ਕੀ ਤਿਉ ਸੰਤਨ ਸੁਖੁ ਮਾਨਾ ॥੩॥
jo jo nind karay santan kee ti-o santan sukh maanaa. ||3||
The more the Saints are slandered, the more they dwell in peace. ||3||
 جو جو نِنّد کرے سنّتن کیِ تِءُ سنّتن سُکھُ مانا 
سنتن کی ۔ خدا رسیدہ ۔ پاکدامن (3)
جیسے جیسے کوئی آدمی خدا رسیدہ پاکدامن عارفان الہٰی کی بد گوئی کرتا ہے ۔ اس میں انہیں آرام ملتا ہے کیونکہ اس سے انہیں اپنی غلطیاں درست کرنے کے مواقعات حاصل ہوتے ہیں۔ (3)

 ਸੰਤਾ ਟੇਕ ਤੁਮਾਰੀ ਸੁਆਮੀ ਤੂੰ ਸੰਤਨ ਕਾ ਸਹਾਈ ॥
santaa tayk tumaaree su-aamee tooN santan kaa sahaa-ee.
The Saints have Your Support, O Lord and Master; You are the Saints’ Help and Support.
 سنّتا ٹیک تُماریِ سُیامیِ توُنّ سنّتن کا سہائیِ 
سہائی ۔ مددگار ۔ ٹیک ۔ آسرا۔
اے خدا خدا رسیدہ پاکدامن عافان الہٰی کا تو ہی مدد گار ہے اور تیرا ہی سہارا ہے ۔ 

 ਕਹੁ ਨਾਨਕ ਸੰਤ ਹਰਿ ਰਾਖੇ ਨਿੰਦਕ ਦੀਏ ਰੁੜਾਈ ॥੪॥੨॥੪੧॥
kaho naanak sant har raakhay nindak dee-ay rurhaa-ee. ||4||2||41||
Says Nanak, the Saints are saved by the Lord; the slanderers are drowned in the deep. ||4||2||41||
 کہُ نانک سنّت ہرِ راکھے نِنّدک دیِۓ رُڑائیِ ੪੧ 
ہراکھے ۔ خدا حافظ۔
اے نانک بتادے کہ سنتوں کو کدا ہی بچانے والا ہے اور بدگوئی کرنے والے کو بطور سزا ختم کرتا ہے

 ਆਸਾ ਮਹਲਾ ੫ ॥
aasaa mehlaa 5.
Aasaa, Fifth Mehl:
 آسا مہلا  
 ਬਾਹਰੁ ਧੋਇ ਅੰਤਰੁ ਮਨੁ ਮੈਲਾ ਦੁਇ ਠਉਰ ਅਪੁਨੇ ਖੋਏ ॥
baahar Dho-ay antar man mailaa du-ay tha-ur apunay kho-ay.
He washes outwardly, but within, his mind is filthy; thus he loses his place in both worlds.
 باہرُ دھوءِ انّترُ منُ میَلا دُءِ ٹھئُر اپُنے کھوۓ 
باہر ہوئے ۔ یعنی جسمانی صفائی ۔ انتر من میلا۔ باطن ذہن۔ سوچ ناپاک ۔ ٹھور۔ ٹھکانے ۔ اس عالم میں
بیرونی یعنی جسمانی صفائی تو کرلی مگر ذہن۔ سوچ سمجھ صفائی پاکیزگی نہیں ایسی حالت میں انسان اس جہاں اور عاقبت دونوں ٹھکانے گنوا لیتا ہے 

 ਈਹਾ ਕਾਮਿ ਕ੍ਰੋਧਿ ਮੋਹਿ ਵਿਆਪਿਆ ਆਗੈ ਮੁਸਿ ਮੁਸਿ ਰੋਏ ॥੧॥
eehaa kaam kroDh mohi vi-aapi-aa aagai mus mus ro-ay. ||1||
Here, he is engrossed in sexual desire, anger and emotional attachment; hereafter, he shall sigh and weep. ||1||
 ایِہا کامِ ک٘رودھِ موہِ ۄِیاپِیا آگےَ مُسِ مُسِ روۓ 
کام ۔ شہوت۔ کرؤدھ ۔ غسہ ۔ موہ ۔ غیروں سے محبت پرئیا۔ عشق ۔ ویاپیا۔ پیدا ہوا۔ مس مس۔ پھوت پھوٹ ۔ (1)
اس عالم میں شہوت غصہ اور عشق میں گرفتار رہتا ہے ۔ اور بوقت یوم حساب پھوٹ پھوٹ کر روتا ہے ۔ (1)

 ਗੋਵਿੰਦ ਭਜਨ ਕੀ ਮਤਿ ਹੈ ਹੋਰਾ ॥
govind bhajan kee mat hai horaa.
The way to vibrate and meditate on the Lord of the Universe is different.
 گوۄِنّد بھجن کیِ متِ ہےَ ہورا 
گوبند بھجن۔ عشق الہٰی یاد الہٰی۔ مت ۔ سمجھ ۔ ہورا۔ دیگر دوسری
الہٰی ریاض و عشق الہٰی کی سمجھ اور ہوتی ہے جو شخص الہٰی نام یعنی سچ اور حقیقت کو نہیں سنتا اور سچ اور حقیقت سے بہرہ رہتا ہے بیرونی رسموں رواجات ایسے ہیں 

 ਵਰਮੀ ਮਾਰੀ ਸਾਪੁ ਨ ਮਰਈ ਨਾਮੁ ਨ ਸੁਨਈ ਡੋਰਾ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥
varmee maaree saap na mar-ee naam na sun-ee doraa. ||1|| rahaa-o.
Destroying the snake-hole, the snake is not killed; the deaf person does not hear the Lord’s Name. ||1||Pause||
 ۄرمیِ ماریِ ساپُ ن مرئیِ نامُ ن سُنئیِ ڈورا  رہاءُ 
ورمی ۔ سانپ کابل ۔ ڈورا۔ بہرہ(1) رہاؤ۔
جیسے سانپ کی بل تو موندنے کی کوشش کریں۔ مگر اس سے سانپ نہیں مرتا۔ اسی طرح بیرونی یا جسمانی پاکیزگی سے قلب پاک نہیں ہوتا۔ یعنی ذہنی برائیاں موجود رہتی ہیں جبکہ الہٰی ریاض قلب کی صفائی ہے (1)۔ رہاؤ۔

 ਮਾਇਆ ਕੀ ਕਿਰਤਿ ਛੋਡਿ ਗਵਾਈ ਭਗਤੀ ਸਾਰ ਨ ਜਾਨੈ ॥
maa-i-aa kee kirat chhod gavaa-ee bhagtee saar na jaanai.
He renounces the affairs of Maya, but he does not appreciate the value of devotional worship.
 مائِیا کیِ کِرتِ چھوڈِ گۄائیِ بھگتیِ سار ن جانےَ 
کرت۔ محنت۔ سار ۔ قدروقیمت۔
جوشخص ریاضت کے لئے ترک سمجھ کر روزی روٹی کی خاطر محنت مشقت چھوڑ دیتا ہے اسے الہٰی عشق ۔ بھگتی کی قدرو قیمت نہیں سمجھتا۔ 

 ਬੇਦ ਸਾਸਤ੍ਰ ਕਉ ਤਰਕਨਿ ਲਾਗਾ ਤਤੁ ਜੋਗੁ ਨ ਪਛਾਨੈ ॥੨॥
bayd saastar ka-o tarkan laagaa tat jog na pachhaanai. ||2||
He finds fault with the Vedas and the Shaastras, and does not know the essence of Yoga. ||2||
 بید ساست٘ر کءُ ترکنِ لاگا تتُ جوگُ ن پچھانےَ 
ترکن ۔ ترک ۔ چھوڑنا۔ تت ۔ حقیقت ۔ اصلیت۔ جوگ ۔ الہٰی رسائی ۔ ـ(2)
جو شخص ویدوں شاشتروں کو محض بحث مباحثہ میں استعمال کرنا ہی خیال کرتا ہے مگر زندگی کا مقصد اور حقیقت نہیں سمجھتا اسے الہٰی ملاپ کی بھی سمجھ نہیں۔ (2) 

 ਉਘਰਿ ਗਇਆ ਜੈਸਾ ਖੋਟਾ ਢਬੂਆ ਨਦਰਿ ਸਰਾਫਾ ਆਇਆ ॥
ughar ga-i-aa jaisaa khotaa dhaboo-aa nadar saraafaa aa-i-aa.
He stands exposed, like a counterfeit coin, when inspected by the Lord, the Assayer.
 اُگھرِ گئِیا جیَسا کھوٹا ڈھبوُیا ندرِ سراپھا آئِیا 
اگھر۔ ظاہر ۔ کھوٹا ڈ بھؤآ۔ چاندی کا نقلی سکہ ۔ ندر۔ نگاہ۔ صرافا ۔ سونے کا بیوپاری یا کاریگر۔ زر گر۔ جن کا سونا چاندی کا کاروبار ہے ۔
جیسے کھوٹا سکہ جب صراف کی دکان پر جاتا ہے تو اس کی پہچان ہو جاتی ہے اسی طرح بد کردار کی بد کرداری بیرونی دکھاوے ۔ خدا سے چھپائے نہیں جا سکتے ۔ 

 ਅੰਤਰਜਾਮੀ ਸਭੁ ਕਿਛੁ ਜਾਨੈ ਉਸ ਤੇ ਕਹਾ ਛਪਾਇਆ ॥੩॥
antarjaamee sabh kichh jaanai us tay kahaa chhapaa-i-aa. ||3||
The Inner-knower, the Searcher of hearts, knows everything; how can we hide anything from Him? ||3||
 انّترجامیِ سبھُ کِچھُ جانےَ اُس تے کہا چھپائِیا  
راز دلی جاننے والا خدا سب کچھ جانتا ہے ۔ انسان کوئی رازاس سے چھپا نہیں سکتا۔ (3)

 ਕੂੜਿ ਕਪਟਿ ਬੰਚਿ ਨਿੰਮੁਨੀਆਦਾ ਬਿਨਸਿ ਗਇਆ ਤਤਕਾਲੇ ॥
koorh kapat banch nimmunee-aadaa binas ga-i-aa tatkaalay.
Through falsehood, fraud and deceit, the mortal collapses in an instant – he has no foundation at all.
 کوُڑِ کپٹِ بنّچِ نِنّمُنیِیادا بِنسِ گئِیا تتکالے 
کوڑ۔ جھوٹھ ۔ کپٹ فریب ۔ تمنیاد۔ جس کی بنیاد نہ ہو۔ ونس۔ مٹ گیا۔ تتکال۔ فورا۔ بنچ۔ دھوکا دہی ۔
جھوٹ ۔ فریب ۔ دھوکا بازی سے انسان روحانی زندگی فورا ختم ہو جاتی ہے ۔ 

 ਸਤਿ ਸਤਿ ਸਤਿ ਨਾਨਕਿ ਕਹਿਆ ਅਪਨੈ ਹਿਰਦੈ ਦੇਖੁ ਸਮਾਲੇ ॥੪॥੩॥੪੨॥
sat sat sat naanak kahi-aa apnai hirdai daykh samaalay. ||4||3||42||
Truly, truly, truly, Nanak speaks; look within your own heart, and realize this. ||4||3||42||
੪੨
 ستِ ستِ ستِ نانکِ کہِیا اپنےَ ہِردےَ دیکھُ سمالے
ست سچ۔ ہر دے ۔ دل ۔ دیکھ خیال آرائی ۔ سمجھو ۔ سمائے ۔ بسا کر۔ ٹکا کر
نانک یہ بالکل سچ اور صدیوی سچ بتیئیا ہے کہ دل میں سچ اور صدیوی سچ بسانے سہی ہی دیدارو ملاپ الہٰی ہو سکتا ہے جو زندگی کا حقیقی اور اصلی مقصد و مدعا ہے ۔

 ਆਸਾ ਮਹਲਾ ੫ ॥
aasaa mehlaa 5.
Aasaa, Fifth Mehl:
 آسا مہلا  
 ਉਦਮੁ ਕਰਤ ਹੋਵੈ ਮਨੁ ਨਿਰਮਲੁ ਨਾਚੈ ਆਪੁ ਨਿਵਾਰੇ ॥
udam karat hovai man nirmal naachai aap nivaaray.
Making the effort, the mind becomes pure; in this dance, the self is silenced.
 اُدمُ کرت ہوۄےَ منُ نِرملُ ناچےَ آپُ نِۄارے 
اُوم۔ جہد۔ کوشش۔ نرمل۔ پاک ۔ آپ ۔ خودی ۔ خؤیشتا۔
کوشش و کواش سے جب دل پاک ہو جاتا ہے تو خود کتم کرکے خوش ہوتا ہے 

 ਪੰਚ ਜਨਾ ਲੇ ਵਸਗਤਿ ਰਾਖੈ ਮਨ ਮਹਿ ਏਕੰਕਾਰੇ ॥੧॥
panch janaa lay vasgat raakhai man meh aykankaaray. ||1||
The five passions are kept under control, and the One Lord dwells in the mind. ||1||
 پنّچ جنا لے ۄسگتِ راکھےَ من مہِ ایکنّکارے 
پنچ جنا۔ مراد پانچ انسانی خواہشات ہدا۔ وسگت۔ قابو۔ زیر ایکنکار وحدت ۔
وہ دل میں خدا کو بساتا ہے ۔ پانچوں احساسات بد پر قابو پاکر دل میں واحد خدا کو یاد کرتا ہے ۔ (1) 

 ਤੇਰਾ ਜਨੁ ਨਿਰਤਿ ਕਰੇ ਗੁਨ ਗਾਵੈ ॥
tayraa jan nirat karay gun gaavai.
Your humble servant dances and sings Your Glorious Praises.
 تیرا جنُ نِرتِ کرے گُن گاۄےَ 
نرت۔ ناچ۔ خوشیاں۔ گن گاوے ۔ الہٰی اوصاف کی مد ح سرائی صفت صلاح
اے خدا تیرا خادم تیری صفت صلاح خوشی خوشی روحانی انداز اور خوشی بھری لہروں سے کرتا ہے 

 ਰਬਾਬੁ ਪਖਾਵਜ ਤਾਲ ਘੁੰਘਰੂ ਅਨਹਦ ਸਬਦੁ ਵਜਾਵੈ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥
rabaab pakhaavaj taal ghunghroo anhad sabad vajaavai. ||1|| rahaa-o.
He plays upon the guitar, tambourine and cymbals, and the unstruck sound current of the Shabad resounds. ||1||Pause||
 ربابُ پکھاۄج تال گھُنّگھروُ انہد سبدُ ۄجاۄےَ  رہاءُ 
پکھاوج۔ جوڑی طبلہ ۔ تال ۔ چھینے ۔ انحد ۔ لگاتار (1)رہاؤ
تیرا پریمی تیری صفت صلاح کا ساز مراد کلام الہٰی لگاتا بلار کے بجاتا ہے یہی نہیں اس کے لئے رباب ۔ طلبہ ۔ چھسنے اور گھنگھر و(1) رہاؤ

 ਪ੍ਰਥਮੇ ਮਨੁ ਪਰਬੋਧੈ ਅਪਨਾ ਪਾਛੈ ਅਵਰ ਰੀਝਾਵੈ ॥
parathmay man parboDhai apnaa paachhai avar reejhaavai.
First, he instructs his own mind, and then, he leads others.
 پ٘رتھمے منُ پربودھےَ اپنا پاچھےَ اۄر ریِجھاۄےَ 
پرتھمے ۔ پہلے ۔ پر بوھے ۔ سمجھائے ۔ بیدار کئے ۔ پاک بنائے ۔ پاچھے ۔ بعد میں ۔ اور دوسروں ۔ یجھاوے ۔ خوش کرئے ۔ آمادہ کرئے ۔
اس سے پشیتر کہ دوسروں کو سمجھائے اور ان کے دل میں الہٰی صفت صلاح کے لئے خواہش پیدا کئے اپنے دل کو بیدار کرئے 

 ਰਾਮ ਨਾਮ ਜਪੁ ਹਿਰਦੈ ਜਾਪੈ ਮੁਖ ਤੇ ਸਗਲ ਸੁਨਾਵੈ ॥੨॥
raam naam jap hirdai jaapai mukh tay sagal sunaavai. ||2||
He chants the Lord’s Name and meditates on it in his heart; with his mouth, he announces it to all. ||2||
 رام نام جپُ ہِردےَ جاپےَ مُکھ تے سگل سُناۄےَ 
رام نام جپ۔ ریاض الہٰی ۔ ہر دے ۔ دل میں ۔ جاپے ۔ سمجھے ۔ مکھ ۔ زبان۔ سگل ۔سارا سناوے ۔ سنائے ۔ (2)
اور الہٰی نام یعنی حقیقت کی ریاض کرئے اور پھر دوسروں کو زبان سے سنائے ۔ (2)

 ਕਰ ਸੰਗਿ ਸਾਧੂ ਚਰਨ ਪਖਾਰੈ ਸੰਤ ਧੂਰਿ ਤਨਿ ਲਾਵੈ ॥
kar sang saaDhoo charan pakhaarai sant Dhoor tan laavai.
He joins the Saadh Sangat, the Company of the Holy, and washes their feet; he applies the dust of the Saints to his body
 کر سنّگِ سادھوُ چرن پکھارےَ سنّت دھوُرِ تنِ لاۄےَ 
سگ سادہو۔ صحبت پاکدامن ۔ چرن پکھارے ۔ پاوں دہوئے جھاڑے ۔ سنت دہور۔ خدا رسیدہ کے پاؤں کی دھول۔ تن جسم لاوے لائے ۔
ہاتھوں سے پائے پاکدامن دھوئے اور کاک پا جسم پر لگائے اور 

 ਮਨੁ ਤਨੁ ਅਰਪਿ ਧਰੇ ਗੁਰ ਆਗੈ ਸਤਿ ਪਦਾਰਥੁ ਪਾਵੈ ॥੩॥
man tan arap Dharay gur aagai sat padaarath paavai. ||3||
He surrenders his mind and body, and places them before the Guru; thus, he obtains the true wealth. ||3||
 منُ تنُ ارپِ دھرے گُر آگےَ ستِ پدارتھُ پاۄےَ 
من تن ارپ۔ دل و جان پیش کرئے ۔ قربان کرئے ۔ ست پدارتھ ۔ سچی نعمت ۔ پاوے ۔ پائے
دل وجان اس کے حوالے کر دے اس سے سچی مراد اور نعمت ملتی ہے ۔ (3)

 ਜੋ ਜੋ ਸੁਨੈ ਪੇਖੈ ਲਾਇ ਸਰਧਾ ਤਾ ਕਾ ਜਨਮ ਮਰਨ ਦੁਖੁ ਭਾਗੈ ॥
jo jo sunai paykhai laa-ay sarDhaa taa kaa janam maran dukh bhaagai.
Whoever listens to, and beholds the Guru with faith, shall see his pains of birth and death taken away.
 جو جو سُنےَ پیکھےَ لاءِ سردھا تا کا جنم مرن دُکھُ بھاگےَ 
پیکھے۔ دیکھے ۔ سردھا۔ یقین جنم مرن۔ تناسخ۔ دکہہ۔ عذاب ۔
جو شخص یقین واثق سےسنتا اور دیدار کرتا ہے اس کا تناسخ ختم ہو جاتا ہے اور عذاب موت و پیدائش ختم ہو جاتا ہے 

 ਐਸੀ ਨਿਰਤਿ ਨਰਕ ਨਿਵਾਰੈ ਨਾਨਕ ਗੁਰਮੁਖਿ ਜਾਗੈ ॥੪॥੪॥੪੩॥
aisee nirat narak nivaarai naanak gurmukh jaagai. ||4||4||43||
Such a dance eliminates hell; O Nanak, the Gurmukh remains wakeful. ||4||4||43||
 ایَسیِ نِرتِ نرک نِۄارےَ نانک گُرمُکھِ جاگےَ ੪੩ 
نرت۔ ناچ۔ خوشی ۔ نرک۔ دوزخ۔ نوارے ۔ بچاتا ہے ۔ گور مکھ ۔وسیلہ مرشد سے
 اے نانک ایسی خوش اسلوبی دوزخ سے بچاتی ہے جو مرشد کے وسیلے سے بیدار رہتا ہے ۔ 

 ਆਸਾ ਮਹਲਾ ੫ ॥
aasaa mehlaa 5.
Aasaa, Fifth Mehl:
 آسا مہلا  
 ਅਧਮ ਚੰਡਾਲੀ ਭਈ ਬ੍ਰਹਮਣੀ ਸੂਦੀ ਤੇ ਸ੍ਰੇਸਟਾਈ ਰੇ ॥
aDham chandaalee bha-ee barahmanee soodee tay sarestaa-ee ray.
The lowly outcaste becomes a Brahmin, and the untouchable sweeper becomes pure and sublime.
 ادھم چنّڈالیِ بھئیِ ب٘رہمنھیِ سوُدیِ تے س٘ریسٹائیِ رے 
ادھم۔ نیچ ۔ کمینی ۔ چنڈالی ۔ بدکار۔ سودی ۔ نیچ ذات والی ۔ سر یسٹائی ۔ بلند عظمت ۔
الہٰی نام کی توفیق سے اور سبق مرشد سے نہیات برابد کار خیالت سے بلند خیال جو پہلے بد تھے اب
 روحانی اور اخلاقی طور پر بلند ہو گئے ۔

 ਪਾਤਾਲੀ ਆਕਾਸੀ ਸਖਨੀ ਲਹਬਰ ਬੂਝੀ ਖਾਈ ਰੇ ॥੧॥
paataalee aakaasee sakhnee lahbar boojhee khaa-ee ray. ||1||
The burning desire of the nether regions and the etheric realms is finally quenched and extinguished. ||1||
 پاتالیِ آکاسیِ سکھنیِ لہبر بوُجھیِ کھائیِ رے 
سکھنی ۔ کالی ۔ لہیر ۔ خواہشات کی ۔ آگ کی لاٹ۔ جو زمین آسمان کی سب چیزوں کو کھا جاتی ہے
خواہشات کی آگ پاتال سے لیکر آسمان تک کے دنیاوی نعمتوں کو پاکر بھی سیر نہ ہوتی تھی ۔ اب تمام کواہشات پر قابو پالیا اور صابر ہو گیا خواہشات مٹ گئیں۔ (1)

 ਘਰ ਕੀ ਬਿਲਾਈ ਅਵਰ ਸਿਖਾਈ ਮੂਸਾ ਦੇਖਿ ਡਰਾਈ ਰੇ ॥
ghar kee bilaa-ee avar sikhaa-ee moosaa daykh daraa-ee ray.
The house-cat has been taught otherwise, and is terrified upon seeing the mouse.
 گھر کیِ بِلائیِ اۄر سِکھائیِ موُسا دیکھِ ڈرائیِ رے 
بلائی ۔ بلی ۔ برتی ۔ عادت ۔ اور دوسروں طرح ۔ سکھائی بدھائی ۔ موسا۔ چوہا۔ مراد ۔ مال غنیمت ۔
بے صبری کا خیال اب سبق ونصیحت پا کر دنیاوی نعمتوں کا لالچ چھور کر اس پر کرنے کا عادی ہو گیا ہے اور صابر ہو گیا ہے اور

 ਅਜ ਕੈ ਵਸਿ ਗੁਰਿ ਕੀਨੋ ਕੇਹਰਿ ਕੂਕਰ ਤਿਨਹਿ ਲਗਾਈ ਰੇ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥
aj kai vas gur keeno kayhar kookar tineh lagaa-ee ray. ||1|| rahaa-o.
The Guru has put the tiger under the control of the sheep, and now, the dog eats grass. ||1||Pause||
 اج کےَ ۄسِ گُرِ کیِنو کیہرِ کوُکر تِنہِ لگائیِ رے  رہاءُ 
اج بکری ۔ مراد ۔ انکساری ۔ عاجزی ۔ کیہر۔ شیر۔ تکبر کوکر۔ کتا ۔ لالچ (1)رہاؤ۔
غرور و تکبر چھوڑ کر اب انکساری و عاجزی اختیار کر لی ہے ۔ لالچ کو چھوڑ کر جو کچھ ملتا ہے اسی پر صبر کرنا سکھا دیا۔ مرشد نے اور اس کے سبق سے سیکھ لیا ہے ۔(1) رہاؤ

 ਬਾਝੁ ਥੂਨੀਆ ਛਪਰਾ ਥਾਮ੍ਹ੍ਹਿਆ ਨੀਘਰਿਆ ਘਰੁ ਪਾਇਆ ਰੇ ॥
baajh thoonee-aa chhapraa thaamiH-aa neeghari-aa ghar paa-i-aa ray.
Without pillars, the roof is supported, and the homeless have found a home.
 باجھُ تھوُنیِیا چھپرا تھام٘ہ٘ہِیا نیِگھرِیا گھرُ پائِیا رے 
تھؤنیا۔ تھم۔ چھیرا۔ جھونپڑی ۔ بنگھر یا۔ بے گھروں کا گھر ۔
دنیاوی نعمتوں کا لالچ جو زمین سے آسمان تک کا تھا ان امیدوں کو بغیر سہارے سہارا مل گیا اور بھٹکتا من نے سکون پالیا 

 ਬਿਨੁ ਜੜੀਏ ਲੈ ਜੜਿਓ ਜੜਾਵਾ ਥੇਵਾ ਅਚਰਜੁ ਲਾਇਆ ਰੇ ॥੨॥
bin jarhee-ay lai jarhi-i jarhaavaa thayvaa achraj laa-i-aa ray. ||2||
Without the jeweller, the jewel has been set, and the wonderful stone shines forth. ||2||
 بِنُ جڑیِۓ لےَ جڑِئو جڑاۄا تھیۄا اچرجُ لائِیا رے 
بن جڑیئے ۔ بغیر زر گر۔ جڑااو۔ جڑ او زیور ۔ تھیوا۔ نگینہ ۔ (2)
اور بغیر زرگر کے اب دل ایک خوبصورت زیور کی مانند ایک سندرہیرے جڑا زیور جیسا سند ہو گیا۔

 ਦਾਦੀ ਦਾਦਿ ਨ ਪਹੁਚਨਹਾਰਾ ਚੂਪੀ ਨਿਰਨਉ ਪਾਇਆ ਰੇ ॥
daadee daad na pahuchanhaaraa choopee nirna-o paa-i-aa ray.
The claimant does not succeed by placing his claim, but by keeping silent, he obtains justice.
 دادیِ دادِ ن پہُچنہارا چوُپیِ نِرنءُ پائِیا رے 
دادی ۔ فریادی ۔ داد۔ انصاف ۔ پہچنہار۔ حاصل کرسکنا۔ چوبی ۔ خاموشی ۔ نرنؤ۔ نتیجہ حقیقت کا پتہ
فریادی جو گلے شکوے کرتا ہے کبھی خواہش کے مطابق انصاف نہیں پا سکتا مگر اب خاموش پر سکون کو انصاف ملنے لگا ہے

 ਮਾਲਿ ਦੁਲੀਚੈ ਬੈਠੀ ਲੇ ਮਿਰਤਕੁ ਨੈਨ ਦਿਖਾਲਨੁ ਧਾਇਆ ਰੇ ॥੩॥
maal duleechai baithee lay mirtak nain dikhaalan Dhaa-i-aa ray. ||3||
The dead sit on costly carpets, and what is seen with the eyes shall vanish. ||3||
 مالِ دُلیِچےَ بیَٹھیِ لے مِرتکُ نیَن دِکھالنُ دھائِیا رے 
مال۔ قابض دیچے ۔ نرم گدیلے ۔ مرتک ۔ مردہ ۔ نین ۔آنکھیں۔ (3)
نام یعنی سچ اور حقیقت پرستی ورضائے الہٰی پر عمل کرنے سے عیش و عشرت غرور و تکبر بھری عادات اب روحانی واخلاقی موت دکھائی دینے لگتی ہے ۔ (3)