Urdu-Page-339

Page 339
ਸੰਕਟਿ ਨਹੀ ਪਰੈ ਜੋਨਿ ਨਹੀ ਆਵੈ ਨਾਮੁ ਨਿਰੰਜਨ ਜਾ ਕੋ ਰੇ 
sankat nahee parai jon nahee aavai naam niranjan jaa ko ray.
He does not fall into misfortune, and He does not take birth; His Name is the Immaculate Lord.
     سنّکٹِ  نہیِ  پرےَ   جونِ  نہیِ  آۄےَ   نامُ  نِرنّجن  جا   کو  رے  
سنکت۔ عذاب ۔ مصیبت۔ نرجن۔ پاک ۔ بیداغ ۔ جون نہیں آوے ۔ پیدا نہیں ہوتا۔
اے بھائی ۔جس خدا کو نرجن پاک یا بیداغ  بتاتے ہیں وہ جنم نہین لیتا اور نہ پیدائش کا عذاب آتا ہے 


ਕਬੀਰ ਕੋ ਸੁਆਮੀ ਐਸੋ ਠਾਕੁਰੁ ਜਾ ਕੈ ਮਾਈ  ਬਾਪੋ ਰੇ ੧੯੭੦
kabeer ko su-aamee aiso thaakur jaa kai maa-ee na baapo ray. ||2||19||70||
Kabeer’s Lord is such a Lord and Master, who has no mother or father. ||2||19||70||
     کبیِر  کو  سُیامیِ   ایَسو  ٹھاکُرُ  جا   کےَ  مائیِ  ن   باپو  رے  ੨॥੧੯॥੭੦॥
۔ کبیر کا آقا ایسا ہے جس کا نہ باپ ہے نہ ماں یعنی وہ پیدا ہوتا ہے ۔ نہ اسے موت ہے وہ صدیوی اور دائمی ہے ۔ 


ਗਉੜੀ 
ga-orhee.
Gauree:
    گئُڑیِ   
ਨਿੰਦਉ ਨਿੰਦਉ ਮੋ ਕਉ ਲੋਗੁ ਨਿੰਦਉ 
ninda-o ninda-o mo ka-o log ninda-o.
Slander me, slander me – go ahead, people, and slander me.
    نِنّدءُ   نِنّدءُ  مو  کءُ   لوگُ  نِنّدءُ  
موکوؤ لوگ نیندؤ۔ لوگ خواہ میری بد گوئی کریں۔ بد نامی کریں
خواہ تمام عالم میری بد نامی اور بد گوئی کیوں نہ کرئے 


ਨਿੰਦਾ ਜਨ ਕਉ ਖਰੀ ਪਿਆਰੀ 
nindaa jan ka-o kharee pi-aaree.
Slander is pleasing to the Lord’s humble servant.
    نِنّدا   جن  کءُ  کھریِ   پِیاریِ  
۔ جن کوؤ۔ الہٰی خادم ۔ کھری ۔ نہایت زیادہ ۔
مگر خادم خدا کو بدنامی اچھی لگتی ہے 


ਨਿੰਦਾ ਬਾਪੁ ਨਿੰਦਾ ਮਹਤਾਰੀ  ਰਹਾਉ 
nindaa baap nindaa mehtaaree. ||1|| rahaa-o.
Slander is my father, slander is my mother. ||1||Pause||
    نِنّدا   باپُ  نِنّدا  مہتاریِ   ੧॥  رہاءُ  
مہتاری ۔ ماتا ۔ رہاؤ۔
کیونکہ بد نامی و بد گوئی خادم کا ماں باپ ہے۔ مراد جیسے ماں باپ اپنی اولاد  کے اچھے اوصاف دیکھنا چاہیے ہیں اسی طرح بد اوصاف  کے ظاہر ہونے پر انسان نیکی کی طرف راغب ہوتا ہے         (رہاؤ)


ਨਿੰਦਾ ਹੋਇ  ਬੈਕੁੰਠਿ ਜਾਈਐ 
nindaa ho-ay ta baikunth jaa-ee-ai.
If I am slandered, I go to heaven;
    نِنّدا   ہوءِ  ت  بیَکُنّٹھِ   جائیِئےَ  
بیکنٹھ۔ جنت ۔ بہشت ۔
بد اوصاف کے ظاہر ہونے پر انسان بد اوصاف چھوڑ کر نیکیوں کی طرف رحجان کرتا ہے ۔ جس سے انسان کو بہشت نصبب ہوتا ہے 


ਨਾਮੁ ਪਦਾਰਥੁ ਮਨਹਿ ਬਸਾਈਐ 
naam padaarath maneh basaa-ee-ai.
the wealth of the Naam, the Name of the Lord, abides within my mind.
    نامُ   پدارتھُ  منہِ  بسائیِئےَ   
نام پدارتھ۔ سچ یا نام کی نعمت۔
۔ اگر انسان کا دامن پاک ہونے کے باوجود بدنامی ہو 


ਰਿਦੈ ਸੁਧ ਜਉ ਨਿੰਦਾ ਹੋਇ 
ridai suDh ja-o nindaa ho-ay.
If my heart is pure, and I am slandered,
    رِدےَ   سُدھ  جءُ  نِنّدا   ہوءِ  
ردے سدھ۔ ۔ صاف دل۔
اور ہم صاف دل سے اپنی بد گوئی سنیں 


ਹਮਰੇ ਕਪਰੇ ਨਿੰਦਕੁ ਧੋਇ 
hamray kapray nindak Dho-ay. ||1||
then the slanderer washes my clothes. ||1||
    ہمرے   کپرے  نِنّدکُ  دھوءِ  ੧॥
ہمرے کپرے نندک دھوئے ۔ گناہوں اور بد کاریؤں کی ناپاکیزگی دور کرتاہے ۔
تو بد گوئی کرنے والا ہمیں پاک ہونے میں مدد گار ہوتا ہے ۔


ਨਿੰਦਾ ਕਰੈ ਸੁ ਹਮਰਾ ਮੀਤੁ 
nindaa karai so hamraa meet.
One who slanders me is my friend;
    نِنّدا   کرےَ  سُ  ہمرا   میِتُ  
میت۔ دوست۔
جو ہماری بد نامی کرتا ہے وہ ہمارا دوست ہے 


ਨਿੰਦਕ ਮਾਹਿ ਹਮਾਰਾ ਚੀਤੁ 
nindak maahi hamaaraa cheet.
the slanderer is in my thoughts.
    نِنّدک   ماہِ  ہمارا  چیِتُ  
چیت۔ دل ۔ ہوش۔ خبرداری
کیونکہ ہمارے ہوش بد گوئی کرنے والےکی طرف رجوع کرتی ہے اور ہم اس کی بات غور سے سنتے ہیں 


ਨਿੰਦਕੁ ਸੋ ਜੋ ਨਿੰਦਾ ਹੋਰੈ 
nindak so jo nindaa horai.
The slanderer is the one who prevents me from being slandered.
    نِنّدکُ   سو  جو  نِنّدا   ہورےَ  
نندک سو۔ بد گوئی  کرنے والا وہ ہے ۔ نندا ہووے ۔ جو بد گوئی کرنے سے روکتا ہے ۔
دراصل ہماری برائی کرنے والا وہ انسان ہے جو ہمارے عیب ظاہر ہونے سے روکتا ہے 


ਹਮਰਾ ਜੀਵਨੁ ਨਿੰਦਕੁ ਲੋਰੈ 
hamraa jeevan nindak lorai. ||2||
The slanderer wishes me long life. ||2||
    ہمرا   جیِۄنُ  نِنّدکُ  لورےَ  ੨॥
نندک ۔ برائی کرنے والا۔
۔ ہمارے عیب ظاہر کرنے والا تو چاہتا ہے کہ ہماری زندگی نیک ہو جائے ۔ (2)v


ਨਿੰਦਾ ਹਮਰੀ ਪ੍ਰੇਮ ਪਿਆਰੁ 
nindaa hamree paraym pi-aar.
I have love and affection for the slanderer.
    نِنّدا   ہمریِ  پ٘ریم  پِیارُ   
نندا ہمری پریم پیار۔ بد نامی سے خدا سے پریم پیار بڑھتا ہے ۔
جیسے جیسے ہماری بد گوئی ہوتی ہے ہم خدا کے نزدیک ہوتے جاتے ہیں


ਨਿੰਦਾ ਹਮਰਾ ਕਰੈ ਉਧਾਰੁ 
nindaa hamraa karai uDhaar.
Slander is my salvation.
    نِنّدا   ہمرا  کرےَ  اُدھارُ   
ادھار ۔ بچاؤ ۔
۔ اور پریم پیار میں اضافہ ہوتا جاتا ہے   کیونکہ اس سے ہمارا بد اوساف ۔ بد کردار اور گناہوں سے بچاؤ ہوتا ہے ۔ 


ਜਨ ਕਬੀਰ ਕਉ ਨਿੰਦਾ ਸਾਰੁ 
jan kabeer ka-o nindaa saar.
Slander is the best thing for servant Kabeer.
    جن   کبیِر  کءُ  نِنّدا   سارُ  
سارمول بنیاد۔
لہذا  خادم کبیر کے لئے تو عیب جوئی اور عیبوں کی نمائش سب سے بڑھیا ہے 


ਨਿੰਦਕੁ ਡੂਬਾ ਹਮ ਉਤਰੇ ਪਾਰਿ ੨੦੭੧
nindak doobaa ham utray paar. ||3||20||71||
The slanderer is drowned, while I am carried across. ||3||20||71||
    نِنّدکُ   ڈوُبا  ہم  اُترے   پارِ  ੩॥੨੦॥੭੧॥
اور عیب جو دوسروں کے عیب ظاہر کرکے خود عیبوں میں مستغرق ہو جاتا ہے اور خادم عیبوں کے ظاہر ہونے سے عیبوں سے بچ جاتا ہے ۔


ਰਾਜਾ ਰਾਮ ਤੂੰ ਐਸਾ ਨਿਰਭਉ ਤਰਨ ਤਾਰਨ ਰਾਮ ਰਾਇਆ  ਰਹਾਉ 
raajaa raam tooN aisaa nirbha-o taran taaran raam raa-i-aa. ||1|| rahaa-o.
O my Sovereign Lord King, You are Fearless; You are the Carrier to carry us across, O my Lord King. ||1||Pause||
     راجا  رام  توُنّ   ایَسا  نِربھءُ  ترن   تارن  رام  رائِیا   ੧॥  رہاءُ  
نربھؤ۔ بے خوف۔ ترن تارن۔ پار لنگھانے والا۔ کامیابی عنایت کرنے والا۔ رام رائیا۔ خداوند کریم ۔
اے خداوند کریم بے خوف حکمران عالم۔ عالم کو کامیابیان عنیات فرمانے والے ۔ رہاو۔ 


ਜਬ ਹਮ ਹੋਤੇ ਤਬ ਤੁਮ ਨਾਹੀ ਅਬ ਤੁਮ ਹਹੁ ਹਮ ਨਾਹੀ 
jab ham hotay tab tum naahee ab tum hahu ham naahee.
When I was, then You were not; now that You are, I am not.
     جب  ہم  ہوتے   تب  تُم  ناہیِ   اب  تُم  ہہُ   ہم  ناہیِ  
جب ہم ہوتے ۔ جہاں خودی ہے خود پسندی ہے ۔تب خدا کا ادب ایمان اور یقین اور بھروسا نہیں۔ اب تم ہو۔ اے خدا جہاں تو بستا ہے وہاں خودی مت جاتی ہے
جہاں خودی ہے وہاں تو نہیں بستا۔ جہاں تو ہے وہاں خودی نہیں۔ 


ਅਬ ਹਮ ਤੁਮ ਏਕ ਭਏ ਹਹਿ ਏਕੈ ਦੇਖਤ ਮਨੁ ਪਤੀਆਹੀ 
ab ham tum ayk bha-ay heh aykai daykhat man patee-aahee. ||1||
Now, You and I have become one; seeing this, my mind is content. ||1||
     اب  ہم  تُم   ایک  بھۓ  ہہِ   ایکےَ  دیکھت  منُ   پتیِیاہیِ  ੧॥
اب ہم تم ایک بھیئے ہے۔ اب خادم اور ٓاقا یکسو   ایک دوسرے میں مجذوب ہوگئے  ہیں۔ ابکے دیکھت من پیتیاہی ۔ اس یکسوئی اور ایکتا دیکھ کر دل کو بھروسا اور یقین ہو گیا ۔ جب اور جہاں دنیاوی دانشمندی ہے ۔ وہاں وہاں روحانی برکت و قوت نہیں
اب میں اور تو ایک دوسرے میں مجذوب یکسو ہوگئے ہیں۔ اس یکسوئی اور ایکتا کو دیکھ کر دل میں بھروسا اور یقین ہو گیا ورنہ تیرے بغیر ناچیز ہوں۔۔


ਜਬ ਬੁਧਿ ਹੋਤੀ ਤਬ ਬਲੁ ਕੈਸਾ ਅਬ ਬੁਧਿ ਬਲੁ  ਖਟਾਈ 
jab buDh hotee tab bal kaisaa ab buDh bal na khataa-ee.
When there was wisdom, how could there be strength? Now that there is wisdom, strength cannot prevail.
     جب  بُدھِ  ہوتیِ   تب  بلُ  کیَسا   اب  بُدھِ  بلُ   ن  کھٹائیِ  
۔ جب بدھ ہوتی تو بل گیا۔ اب بدھ۔ اب روحانی قوت و برکت اور دانشمندی ہے ۔ بل نہ گھٹائی ۔ تب دنیاوی طاقت اور دانمشندی نہیں۔
جب خودی والی عقل و دانش تو روحانی برکت و طاقت و دانشمندی نہیں تھی 


ਕਹਿ ਕਬੀਰ ਬੁਧਿ ਹਰਿ ਲਈ ਮੇਰੀ ਬੁਧਿ ਬਦਲੀ ਸਿਧਿ ਪਾਈ ੨੧੭੨
kahi kabeer buDh har la-ee mayree buDh badlee siDh paa-ee. ||2||21||72||
Says Kabeer, the Lord has taken away my wisdom, and I have attained spiritual perfection. ||2||21||72||
     کہِ  کبیِر  بُدھِ   ہرِ  لئیِ  میریِ   بُدھِ  بدلیِ  سِدھِ   پائیِ  ੨॥੨੧॥੭੨
بدھ ہرگئی ۔ میری عقل و دانش دنیاوی ختم ہو گئی ۔ مگر بدھ بدتی سدھ پائی ۔ عقل و دانش و سوچ سمجھ بدلنے سے سدھی اور کامیابی ملی ۔ یعنی پاکیزگی
اے کبیر بتا دے کہ اب میری ہوش و سوچ بدلنے سے کامیابی اور پاکیزگی ملتی ہے ۔


ਗਉੜੀ 
ga-orhee.
Gauree:
     گئُڑیِ  
ਖਟ ਨੇਮ ਕਰਿ ਕੋਠੜੀ ਬਾਂਧੀ ਬਸਤੁ ਅਨੂਪੁ ਬੀਚ ਪਾਈ 
khat naym kar kothrhee baaNDhee basat anoop beech paa-ee.
He fashioned the body chamber with six rings, and placed within it the incomparable thing.
     کھٹ  نیم  کرِ   کوٹھڑیِ  باںدھیِ  بستُ   انوُپُ  بیِچ  پائیِ  
گھٹ۔ چھ۔ نیم چکر۔ کوٹھڑی ۔ جسم ۔ انوپ۔ انوکھی۔ نرالی۔ باندھی ۔ بنائی
خدا نے پانچ اعضائے ہوش و عقل بہ شمول من یا قلب کو اکھٹا کرکے ایک جسم یا گھر بنایئیا ۔اس میں ایک انوکھی نرالی ایک اشیائ مراد روح پھونکی 


ਕੁੰਜੀ ਕੁਲਫੁ ਪ੍ਰਾਨ ਕਰਿ ਰਾਖੇ ਕਰਤੇ ਬਾਰ  ਲਾਈ 
kunjee kulaf paraan kar raakhay kartay baar na laa-ee. ||1||
He made the breath of life the watchman, with lock and key to protect it; the Creator did this in no time at all. ||1||
     کُنّجیِ  کُلپھُ  پ٘ران   کرِ  راکھے  کرتے   بار  ن  لائیِ  ੧॥
۔ کنجی ۔ چابی۔ کلف۔ جندرا۔ پران مانس کرتے ۔ کرتار۔ خدا ۔ باردروازہ
اور سانس کو اس کا قفل اور کنجی بردار مقرر کر دیا اور اس مین رتی بھر تامل نہ کیا ۔  


ਅਬ ਮਨ ਜਾਗਤ ਰਹੁ ਰੇ ਭਾਈ 
ab man jaagat rahu ray bhaa-ee.
Keep your mind awake and aware now, O Sibling of Destiny.
     اب  من  جاگت   رہُ  رے  بھائیِ   
۔ جاگت۔ بیدار۔ غافل غفلت کرنے والا۔ لا پرواہ ۔ جنم ۔ زندگی
اے دل اب ہوشیار رہ 


ਗਾਫਲੁ ਹੋਇ ਕੈ ਜਨਮੁ ਗਵਾਇਓ ਚੋਰੁ ਮੁਸੈ ਘਰੁ ਜਾਈ  ਰਹਾਉ 
gaafal ho-ay kai janam gavaa-i-o chor musai ghar jaa-ee. ||1|| rahaa-o.
You were careless, and you have wasted your life; your home is being plundered by thieves. ||1||Pause||
     گاپھلُ  ہوءِ  کےَ   جنمُ  گۄائِئو  چورُ   مُسےَ  گھرُ  جائیِ  ੧॥  رہاءُ  
چورمسے ۔ چور چوری کرتا ہے ۔ لوٹتا ہے ۔ رہاؤ
غفلت اور لا پرواہی میں زندگی نہ گنوا۔ چور کہیں تیرا گھر نہ لوٹ لیں ۔ رہاؤ


ਪੰਚ ਪਹਰੂਆ ਦਰ ਮਹਿ ਰਹਤੇ ਤਿਨ ਕਾ ਨਹੀ ਪਤੀਆਰਾ 
panch pahroo-aa dar meh rahtay tin kaa nahee patee-aaraa.
The five senses stand as guards at the gate, but now can they be trusted?
     پنّچ  پہروُیا  در   مہِ  رہتے  تِن   کا  نہیِ  پتیِیارا   
۔ پیچ پہروآ ۔ پنچ گیان اندرے ۔ پہروآ۔ پہر یدار ۔ پتیارا۔ اعتبار یقین
پانچ پہریدار تیرے در پر ہیں۔ یعنی پانچ اعضائے علوم۔ مگر وہ قابل اعتبار نہیں


ਚੇਤਿ ਸੁਚੇਤ ਚਿਤ ਹੋਇ ਰਹੁ ਤਉ ਲੈ ਪਰਗਾਸੁ ਉਜਾਰਾ 
chayt suchayt chit ho-ay rahu ta-o lai pargaas ujaaraa. ||2||
When you are conscious in your consciousness, you shall be enlightened and illuminated. ||2||
     چیتِ  سُچیت  چِت   ہوءِ  رہُ  تءُ   لےَ  پرگاسُ  اُجارا   ੨॥
۔ چیت یاد کر سچیت چت ہوئے رہو۔ یاد رکھو۔ ہوشیار دل و دماغ سے رہو اپر گاس۔ روشنی ۔ اُجالا ۔
۔ جب تک ہوشیار اور بیدار رہے گا تو ذہنی اور روحانی طور پر روشن خیال اور نورانی رہے گا(2)


ਨਉ ਘਰ ਦੇਖਿ ਜੁ ਕਾਮਨਿ ਭੂਲੀ ਬਸਤੁ ਅਨੂਪ  ਪਾਈ 
na-o ghar daykh jo kaaman bhoolee basat anoop na paa-ee.
Seeing the nine openings of the body, the soul-bride is led astray; she does not obtain that incomparable thing.
     نءُ  گھر  دیکھِ   جُ  کامنِ  بھوُلیِ   بستُ  انوُپ  ن   پائیِ  
۔ نؤوے ۔ تب حقیقت نظر ۔آئے گی۔
ان نوگھرؤن کو دیکھ کر انسان حقیقت بھول گیا جس کی وجہ سے لاثانی نرالی اور ناکھی توری روح نام خدا کا حاصل نہیں ہوتا۔ اور انسانی رحجان اپنے اند ر بستے خدا کی طرف الہٰی نور کی طرف نہیں جاتا۔


ਕਹਤੁ ਕਬੀਰ ਨਵੈ ਘਰ ਮੂਸੇ ਦਸਵੈਂ ਤਤੁ ਸਮਾਈ ੨੨੭੩
kahat kabeer navai ghar moosay dasvaiN tat samaa-ee. ||3||22||73||
Says Kabeer, the nine openings of the body are being plundered; rise up to the Tenth Gate, and discover the true essence. ||3||22||73||
     کہتُ  کبیِر  نۄےَ   گھر  موُسے  دسۄیَں   تتُ  سمائیِ  ੩॥੨੨॥੭੩॥
نوؤ گھر۔ دوکان۔ دو آنکھیں دو ناک کے سوراخ ۔ منہہ۔ گدا۔ اندری یا لنگ۔ ان میں انسان نے انسانیت کو بھلا دیا۔ کامن بھولی ۔ اس جسم و ذہن وہ نرالی انوکھی اشیانہ ڈالی ۔ دست انوپ نہ پائی ۔ توے گھر مو سے ۔ جب نو گھر فریب میں آگئے ۔ دسویں۔ ذہن ۔ دماغ ۔ تت۔ اصلیت۔ حقیقت روحانی نور۔
کبیر جی فرماتے ہیں کہ نو گھر انسان کے زیر ہو جاتے ہیں تب الہٰی نور ذہن نشین ہو جاتا ہے ۔ 


ਗਉੜੀ 
ga-orhee.
Gauree:
     گئُڑیِ  
ਮਾਈ ਮੋਹਿ ਅਵਰੁ  ਜਾਨਿਓ ਆਨਾਨਾਂ 
maa-ee mohi avar na jaani-o aanaanaaN.
O mother, I do not know any other, except Him.
     مائیِ  موہِ  اۄرُ   ن  جانِئو  آناناں   
مائی ۔ اے ماتا۔ موہ ۔ میں۔ اور ۔ دوسرا۔ نہ جانیؤ۔ نہیں جانتا
اے ماتا میں کسی دوسرے کو زندگی کا سہارا نہیں بنایئیا 


ਸਿਵ ਸਨਕਾਦਿ ਜਾਸੁ ਗੁਨ ਗਾਵਹਿ ਤਾਸੁ ਬਸਹਿ ਮੋਰੇ ਪ੍ਰਾਨਾਨਾਂ  ਰਹਾਉ 
siv sankaad jaas gun gaavahi taas baseh moray paraanaanaaN. rahaa-o.
My breath of life resides in Him, whose praises are sung by Shiva and Sanak and so many others. ||Pause||
     سِۄ  سنکادِ  جاسُ   گُن  گاۄہِ  تاسُ   بسہِ  مورے  پ٘راناناں     رہاءُ  
۔ سو سنکاد۔ جس کا برہما کے چاروں بیٹے ۔ جس ۔ صفت صلاح ۔ تاس وہ بیسہہ۔ بستا ہے ۔ مورے ۔ میرے پرانا نا۔ سانس سانس ۔ زندگی میں۔ ۔ رہاؤ
کیونکہ میرے سانس خدا بستا ہے جس کے اوصاف اور صفت صلاح برہما کے چاروں فرزند کرتے ہیں ۔ رہاؤ۔ 


ਹਿਰਦੇ ਪ੍ਰਗਾਸੁ ਗਿਆਨ ਗੁਰ ਗੰਮਿਤ ਗਗਨ ਮੰਡਲ ਮਹਿ ਧਿਆਨਾਨਾਂ 
hirday pargaas gi-aan gur gammit gagan mandal meh Dhi-aanaanaaN.
My heart is illuminated by spiritual wisdom; meeting the Guru, I meditate in the Sky of the Tenth Gate.
     ہِردے  پ٘رگاسُ  گِیان   گُر  گنّمِت  گگن   منّڈل  مہِ  دھِیاناناں   
۔(مرشد کے پاس جانے سے )ہردے ۔ پرگاس۔ دل روشن ہو گیا۔ گیان گرگمت ۔ مرشد کی رسائی اور سبق مرشد۔ گگن منڈل میہہ دھیانانا۔ میری توجہ اور دھیان ذہن نشین ہو گیا۔
جب سے مرشد نے روحانی عقل و ہوش سے سرفراز کیاہے میرا دل الہٰی نور سے منور ہو گیا اور میرا دھیان روحانی آسمانوں مین لگ گیا ۔ مراد میں ذہن نشین ہو گیا ہوں


ਬਿਖੈ ਰੋਗ ਭੈ ਬੰਧਨ ਭਾਗੇ ਮਨ ਨਿਜ ਘਰਿ ਸੁਖੁ ਜਾਨਾਨਾ 
bikhai rog bhai banDhan bhaagay man nij ghar sukh jaanaanaa. ||1||
The diseases of corruption, fear and bondage have run away; my mind has come to know peace in its own true home. ||1||
     بِکھےَ  روگ  بھےَ   بنّدھن  بھاگے  من   نِج  گھرِ  سُکھُ   جانانا  ੧॥
وکھے روگ ۔ بدیؤں  کی بیماری ۔ بھے ۔ خوف۔ بندھن۔ غلامی ۔ بھاگے ۔ متے ۔ نج گھر ۔ اپنے اندر۔ سکھ جانانا۔ سکھ سمجھا۔
۔ بدکاریوں بدیون گناہگاریوں روحانی یا اخلاقی بیماریوں سے نجات مل گئی ہے فکر وتشویش ختم ہو کر مکمل سکون مل گیا ہے۔


ਏਕ ਸੁਮਤਿ ਰਤਿ ਜਾਨਿ ਮਾਨਿ ਪ੍ਰਭ ਦੂਸਰ ਮਨਹਿ  ਆਨਾਨਾ 
ayk sumat rat jaan maan parabh doosar maneh na aanaanaa.
Imbued with a balanced single-mindedness, I know and obey God; nothing else enters my mind.
     ایک  سُمتِ  رتِ   جانِ  مانِ  پ٘ربھ   دوُسر  منہِ  ن   آنانا  
۔ایکس ایک مت رت۔ عقل ۔ میں محو و مجذوب ۔ جان سمجھ کر مان پربھ۔ خدا پر ایمان لاکر۔ دوسرا۔ دوسرا مہینہ  نہ آنانا۔ نہیں آئیا ۔
میری عقل و ہوش نے واحد خدا اور وحدت سے پیار اور پریم بنا لیا ہے اب کوئی دوسرا میرے دل و دماغ مین نہیں ہے۔ 


ਚੰਦਨ ਬਾਸੁ ਭਏ ਮਨ ਬਾਸਨ ਤਿਆਗਿ ਘਟਿਓ ਅਭਿਮਾਨਾਨਾ 
chandan baas bha-ay man baasan ti-aag ghati-o abhimaanaanaa. ||2||
My mind has become fragrant with the scent of sandalwood; I have renounced egotistical selfishness and conceit. ||2||
     چنّدن  باسُ  بھۓ   من  باسن  تِیاگِ   گھٹِئو  ابھِمانانا  ੨॥
چندن باس۔ چندن کی خوشبؤ ۔ من باس تیاگ ۔ دلی خواہشات ۔ چھوڑ دیں۔ گھٹیو۔ بھیما نانا ۔ تکبر و غرور کم ہوآ۔(2)
دل کی خواہشات چھوڑ کر میرے دل میں چندن کی مانند خوشبوہو گئی ہے۔ تکبر اورغرور مٹ گیا ہے۔


ਜੋ ਜਨ ਗਾਇ ਧਿਆਇ ਜਸੁ ਠਾਕੁਰ ਤਾਸੁ ਪ੍ਰਭੂ ਹੈ ਥਾਨਾਨਾਂ 
jo jan gaa-ay Dhi-aa-ay jas thaakur taas parabhoo hai thaanaanaaN.
That humble being, who sings and meditates on the Praises of his Lord and Master, is the dwelling-place of God.
     جو  جن  گاءِ   دھِیاءِ  جسُ  ٹھاکُر   تاسُ  پ٘ربھوُ  ہےَ   تھاناناں  
گائے دھیائے ۔ صفت صلاح اور توجہ دیتا ہے ۔ دھیان لگاتا ہے ۔ تاس اس میں اس کے دل میں۔ پربھ۔ ہے تھانانا۔ اس کے دل میں خدا بستا ہے خدا کا مقام ہے ٹھکانہ ہے
جو انسان الہٰی عبادت و ریاض وصفت صلاح کرتا ہے خدا اس کے دل میں بس جاتا ہے 


ਤਿਹ ਬਡ ਭਾਗ ਬਸਿਓ ਮਨਿ ਜਾ ਕੈ ਕਰਮ ਪ੍ਰਧਾਨ ਮਥਾਨਾਨਾ 
tih bad bhaag basi-o man jaa kai karam parDhaan mathaanaanaa. ||3||
He is blessed with great good fortune; the Lord abides in his mind. Good karma radiates from his forehead. ||3||
     تِہ  بڈ  بھاگ   بسِئو  منِ  جا   کےَ  کرم  پ٘ردھان   متھانانا  ੩॥
۔ تیہہ ۔ وہ ودبھاگ ۔ بلند قسمت۔ متھاناناں۔ اس کا متھا۔ پیشانی ۔ بسیو من جاکے جس کے دل میں بستا ہے ۔ کرم پر دھان۔ اعلٰی اعمال
جس کے دل میں خدا بس جائے وہ بلند قسمت ہے خندہ پیشانی ہو جاتی ہے اور اعمالنامے میں درج نیک اعمال ظاہر ہو جاتے ہیں۔


ਕਾਟਿ ਸਕਤਿ ਸਿਵ ਸਹਜੁ ਪ੍ਰਗਾਸਿਓ ਏਕੈ ਏਕ ਸਮਾਨਾਨਾ 
kaat sakat siv sahj pargaasi-o aykai ayk samaanaanaa.
I have broken the bonds of Maya; the intuitive peace and poise of Shiva has dawned within me, and I am merged in oneness with the One.
     کاٹِ  سکتِ  سِۄ   سہجُ  پ٘رگاسِئو  ایکےَ   ایک  سمانانا  
۔ کاٹ سکت۔ دنیاوی دولت کے اثرات مٹا کر۔ سوہج پر گاسیؤ۔ روحانی سکون علمبردار ہوا۔ ایکے ایک ۔ واحد خدا میں سمانانا۔ مجذوب ہوا
دنیاوی دولت کے اثرات ختم ہونے پر جب الہٰی نور روشن ہوتا ہے تو واحد خدا میں دل و مجذوب محو ہو جاتا ہے ۔