Urdu-Page-268

ਇਆਹੂ ਜੁਗਤਿ ਬਿਹਾਨੇ ਕਈ ਜਨਮ 
i-aahoo jugat bihaanay ka-ee janam.
So many lifetimes are wasted in these ways.
ਇਸੇ ਰਾਹੇ ਪੈ ਕੇ (ਇਸ ਦੇਕਈ ਜਨਮ ਗੁਜ਼ਾਰ ਗਏ ਹਨ
اِیاہۄُ جُگتِ بِہانے کئی جنم
۔ ایا ہوایسے ۔ بہانے ۔ گذارے ۔
اسی طریقے راہوں پر زندگی گذر گئی

ਨਾਨਕ ਰਾਖਿ ਲੇਹੁ ਆਪਨ ਕਰਿ ਕਰਮ 
naanak raakh layho aapan kar karam. ||7||
O’ God, please, show mercy and protect him from these vices, prays Nanak.||7||
ਹੇ ਨਾਨਕ! (ਇਸ ਵਿਚਾਰੇ ਜੀਵ ਵਾਸਤੇ ਪ੍ਰਭੂਦਰ ਤੇ ਅਰਦਾਸ ਕਰ ਤੇ ਆਖਆਪਣੀ ਮੇਹਰ ਕਰ ਕੇ (ਇਸ ਨੂੰਬਚਾ ਲਵੋ 
نانک راکھِ لیہُ آپن کرِ کرم
کر کرم ۔ عنایت ۔
۔ اے نانک۔ اپنی کرم وعنایت سے میری حفاظت کیجیئے ۔ 

ਤੂ ਠਾਕੁਰੁ ਤੁਮ ਪਹਿ ਅਰਦਾਸਿ 
too thaakur tum peh ardaas.
O’ God, You are the Master; to You, we offer this prayer.
(ਹੇ ਪ੍ਰਭੂ!) ਤੂੰ ਮਾਲਿਕ ਹੈਂ ਸਾਡੀ ਜੀਵਾਂ ਦੀ ਅਰਜ਼ ਤੇਰੇ ਅੱਗੇ ਹੀ ਹੈ,
تۄُ ٹھاکُرُ تُم پہِ عرداسِ
ٹھاکر ۔ مالک ۔ ارداس۔ عرض
اے کدا تو ہے میرا خالق وراز ق ہے میری تجھ پر ہے گذارش ہے

ਜੀਉ ਪਿੰਡੁ ਸਭੁ ਤੇਰੀ ਰਾਸਿ 
jee-o pind sabh tayree raas.
This body and soul are all Your blessings.
ਇਹ ਜਿੰਦ ਤੇ ਸਰੀਰ (ਜੋ ਤੂੰ ਸਾਨੂੰ ਦਿੱਤਾ ਹੈਸਭ ਤੇਰੀ ਹੀ ਬਖ਼ਸ਼ੀਸ਼ ਹੈ
جیءُ پِنّڈُ سبھُ تیری راسِ
۔ چیو پنڈ۔ روح و جسم۔ راس۔ سرمایہ
یہ روح اور جسم یہ تیری ہی دولت سر مایہ ہے تیری ہی بخشش ہے 

ਤੁਮ ਮਾਤ ਪਿਤਾ ਹਮ ਬਾਰਿਕ ਤੇਰੇ 
tum maat pitaa ham baarik tayray.
You are our mother and father; we are Your children.
ਤੂੰ ਸਾਡਾ ਮਾਂ ਪਿਉ ਹੈਂਅਸੀਂ ਤੇਰੇ ਬੱਚੇ ਹਾਂ,
تُم مات پِتا ہم بارِک تیرے
۔ مات پتا۔ ماں باپ ۔ بارک ۔ بچے
۔ تو ہی ماں اور باپ بھی تو ہے تیرے ہی بالے بچے ہیں

ਤੁਮਰੀ ਕ੍ਰਿਪਾ ਮਹਿ ਸੂਖ ਘਨੇਰੇ 
tumree kirpaa meh sookh ghanayray.
In Your Grace, there are so many joys and peace!
ਤੇਰੀ ਮੇਹਰ (ਦੀ ਨਜ਼ਰਵਿਚ ਬੇਅੰਤ ਸੁਖ ਹਨ
تُمری ک٘رِپا مہِ سۄُکھ گھنیرے
۔ کرپا ۔ مہربانی ۔ گھنیرے ۔ زیادہ
۔ تیری رحمت میں اےخدایا آرام و آسائش بہتیرے ہیں۔

ਕੋਇ  ਜਾਨੈ ਤੁਮਰਾ ਅੰਤੁ 
ko-ay na jaanai tumraa ant.
No one knows Your limits.
ਕੋਈ ਤੇਰਾ ਅੰਤ ਨਹੀਂ ਪਾ ਸਕਦਾ,
کۄءِ ن جانےَ تُمرا انّتُ
۔ انت ۔ آخیر
تیری آخر اور انت نہیں جانتا کوئی 

ਊਚੇ ਤੇ ਊਚਾ ਭਗਵੰਤ 
oochay tay oochaa bhagvant.
O Highest of the High, Most Generous God,
ਤੂੰ ਸਭ ਤੋਂ ਉੱਚਾ ਭਗਵਾਨ ਹੈਂ,
اۄُچے تے اۄُچا بھگونّت
۔ بھگونت ۔ خدا۔
۔ اوچنے سے اونچا رتبہ ہے تیرا میرے مولا تو قسمت بنانے والا ہے 

ਸਗਲ ਸਮਗ੍ਰੀ ਤੁਮਰੈ ਸੂਤ੍ਰਿ ਧਾਰੀ 
sagal samagree tumrai sutir Dhaaree.
the entire universe is supported and run by Your command.
ਜਗਤ ਦੇ ਸਾਰੇ ਪਦਾਰਥਸਾਰੀ ਰਚਨਾ ਤੇਰੇ ਹੀ ਹੁਕਮ ਵਿਚ ਟਿਕੇ ਹੋਏ ਹਨ l
سگل سمگ٘ری تُمرےَ سۄُت٘رِ دھاری
سگل سمگری ۔ ساری کائنات ۔ سو تر دھاری زیر یا تابعہ نظام۔
ساری کائنات کا تو مالک 

ਤੁਮ ਤੇ ਹੋਇ ਸੁ ਆਗਿਆਕਾਰੀ 
tum tay ho-ay so aagi-aakaaree.
That which has come from You is under Your Command.
ਤੇਰੀ ਰਚੀ ਹੋਈ ਸ੍ਰਿਸ਼ਟੀ ਤੇਰੀ ਹੀ ਆਗਿਆ ਵਿਚ ਤੁਰ ਰਹੀ ਹੈ 
تُم تے ہۄءِ سُ آگِیاکاری
ساری زیر فرمان تیرے زیر نظام

ਤੁਮਰੀ ਗਤਿ ਮਿਤਿ ਤੁਮ ਹੀ ਜਾਨੀ 
tumree gat mit tum hee jaanee.
You alone know Your state and extent.
ਕਿਹੋ ਜਿਹਾ ਹੈਂ ਤੇ ਕੇਡਾ ਵੱਡਾ ਹੈਂਇਹ ਤੂੰ ਆਪ ਹੀ ਜਾਣਦਾ ਹੈਂ
تُمری گتِ مِتِ تُم ہی جانی
تیرے اپنی سہتی اور ہوند کو تو ہی جاننے والا ہے

ਨਾਨਕ ਦਾਸ ਸਦਾ ਕੁਰਬਾਨੀ 
naanak daas sadaa kurbaanee. ||8||4||
O’ God, I dedicate my life to You forever, says Nanak. ||8||4||
ਹੇ ਨਾਨਕਆਖਹੇ ਪ੍ਰਭੂਤੇਰੇ ਸੇਵਕ (ਤੈਥੋਂਸਦਾ ਸਦਕੇ ਜਾਂਦੇ ਹਨ 
نانک داس سدا قُربانی
خادم نانک تیر اہے ۔ خادم تجھ پہ ہمیشہ قربان ہے ۔ 

ਸਲੋਕੁ 
salok.
Shalok:
سلۄکُ
ਦੇਨਹਾਰੁ ਪ੍ਰਭ ਛੋਡਿ ਕੈ ਲਾਗਹਿ ਆਨ ਸੁਆਇ 
daynhaar parabh chhod kai laageh aan su-aa-ay.
One who renounces the benevolent God, and attaches himself to the worldly pleasures,
ਜੋ ਵਾਹਿਗੁਰੂ ਦਾਤਾਰ ਨੂੰ ਤਿਆਗ ਕੇ ਹੋਰਨਾ ਰਸਾਂ ਨਾਲ ਜੁੜਦਾ ਹੈ,
دینہارُ پ٘ربھ چھۄڈِ کے لاگہِ آن سُیاءِ 
دینہار ۔ دینے والے ۔ لاگیہ ہ ۔ لگتا ہے ۔ آن سوائے ۔ دوسری لذتوں اور لطفوں میں
داتار کا در چھوڑ کر غیروں سے رشتہ بناتا ہے 

ਨਾਨਕ ਕਹੂ  ਸੀਝਈ ਬਿਨੁ ਨਾਵੈ ਪਤਿ ਜਾਇ 
naanak kahoo na seejh-ee bin naavai pat jaa-ay. ||1||
O’ Nanak, such a person shall never succeed in the journey of life. Without Naam, he shall lose his honor. ||1||
ਹੇ ਨਾਨਕਇਹੋ ਜਿਹਾ ਮਨੁੱਖ ਜੀਵਨਯਾਤ੍ਰਾ ਵਿਚ ਕਦੇ ਕਾਮਯਾਬ ਨਹੀਂ ਹੁੰਦਾ (ਕਿਉਂਕਿਪ੍ਰਭੂ ਦੇ ਨਾਮ ਤੋਂ ਬਿਨਾ ਇੱਜ਼ਤ ਨਹੀਂ ਰਹਿੰਦੀ l
نانک کہۄُ ن سیِجھئی بِنُ ناوےَ پتِ جاءِ
۔ کہو ۔ کہنے سے ۔ سیجھئی ۔ نہیں سمجھ آئی ۔ بن ناوے ۔ بغیر نام یعنی حقیقت کے بغیر پت ۔ عزت۔
۔ اے نانک۔ سمجھ نہیں آتی بغیر نام خدا کے عزت گنواتا ہے ۔ 

ਅਸਟਪਦੀ 
asatpadee.
Ashtapadee:
اسٹپدی
ਦਸ ਬਸਤੂ ਲੇ ਪਾਛੈ ਪਾਵੈ 
 das bastoo lay paachhai paavai.
The mortal receives many amenities from God, and puts them behind him;
ਮਨੁੱਖ ਪ੍ਰਭੂ ਤੋਂ ਦਸ ਚੀਜ਼ਾਂ ਲੈ ਕੇ ਪਿਛੇ ਰੱਖ ਲੈਦਾ ਹੈ (ਸਾਂਭ ਲੈਂਦਾ ਹੈ),
دس بستۄُ لے پاچھےَ پاوےَ
وستو ۔ اشیا۔ پاچھے پاوے ۔ حاصل کرئے ۔
انسان دس اشیا تو پالیتا ہے 

ਏਕ ਬਸਤੁ ਕਾਰਨਿ ਬਿਖੋਟਿ ਗਵਾਵੈ 
ayk basat kaaran bikhot gavaavai.
for the sake of one thing withheld by God, he forfeits his faith.
ਇਕ ਚੀਜ਼ ਦੀ ਖ਼ਾਤਰ ਆਪਣਾ ਇਤਬਾਰ ਗਵਾ ਲੈਂਦਾ ਹੈ l
ایک بستُ کارنِ بِکھۄٹِ گواوےَ
بکھوٹ گواوے ۔ اعتبار یقین کھو دیتا ہے
مگر ایک لئے اپنا یقین اور اعتبار کھو دیتا ہے 

ਏਕ ਭੀ  ਦੇਇ ਦਸ ਭੀ ਹਿਰਿ ਲੇਇ 
ayk bhee na day-ay das bhee hir lay-ay.
But what if God takes all those gifts back and does not give the one he was complaining about,
(ਜੇ ਪ੍ਰਭੂਇਕ ਚੀਜ਼ ਭੀ ਨਾਹ ਦੇਵੇਤੇਦਸ ਦਿੱਤੀਆਂ ਹੋਈਆਂ ਭੀ ਖੋਹ ਲਏ,
ایک بھی ن دےء دس بھی ہِرِ لےءِ
۔ ہر لئے ۔ کھن لے ۔ واپس لے لے
اے بیوقوف اگر وہ دس بھی واپس لے لے لے اور ایک بھی نہ دے تو تو کیا کرسکتا ہے

ਤਉ ਮੂੜਾ ਕਹੁ ਕਹਾ ਕਰੇਇ 
ta-o moorhaa kaho kahaa karay-i.
Then, what could the fool say or do?
ਤਾਂਦੱਸੋਇਹ ਮੂਰਖ ਕੀਹ ਕਰ ਸਕਦਾ ਹੈ?
تءُ مۄُڑا کہُ کہا کرےءِ
۔ کہو ۔ بتا ۔ کہا کرئے ۔ کیا کر ئیگا۔
تجھ میں کونسی توفیق ہے ۔ 

ਜਿਸੁ ਠਾਕੁਰ ਸਿਉ ਨਾਹੀ ਚਾਰਾ 
jis thaakur si-o naahee chaaraa.
The Master with whom, force is of no avail,
ਜਿਸ ਮਾਲਕ ਦੇ ਮੂਹਰੇ ਜੋਰ ਨਹੀਂ ਚਲਦਾ, 
جِسُ ٹھاکُر سِءُ ناہی چارا
چارا۔ پیش ۔ علاج ۔
جس مالک کے ہماری کوئی پیش نہیں جاتی

ਤਾ ਕਉ ਕੀਜੈ ਸਦ ਨਮਸਕਾਰਾ 
taa ka-o keejai sad namaskaaraa.
Unto Him, bow forever in adoration and accept His Will.
ਉਸ ਦੇ ਅੱਗੇ ਸਦਾ ਸਿਰ ਨਿਵਾਉਣਾ ਹੀ ਚਾਹੀਦਾ ਹੈ,
تا کءُ کیِجےَ سد نمسکارا
طاقت۔ زور۔ نمسکار۔ سلام 
تو اس کے آگے سجدہ کرنا ہی درکار ہے اچھا ہے 

ਜਾ ਕੈ ਮਨਿ ਲਾਗਾ ਪ੍ਰਭੁ ਮੀਠਾ 
jaa kai man laagaa parabh meethaa.
The person to whose heart, God is dear,
ਜਿਸ ਮਨੁੱਖ ਦੇ ਮਨ ਵਿਚ ਪ੍ਰਭੂ ਪਿਆਰਾ ਲੱਗਦਾ ਹੈ,
جا کےَ منِ لاگا پ٘ربھُ میِٹھا
۔ اور بھلا ہے جسے خدا سے پیار ہے دل میں پیار بسا ہوا ہے

ਸਰਬ ਸੂਖ ਤਾਹੂ ਮਨਿ ਵੂਠਾ 
sarab sookh taahoo man voothaa.
all peace and pleasures come to dwell in his mind.
ਸਾਰੇ ਸੁਖ ਉਸੇ ਦੇ ਹਿਰਦੇ ਵਿਚ  ਵੱਸਦੇ ਹਨ
سرب سۄُکھ تاہۄُ منِ وۄُٹھا
۔ سرب۔ تمام۔ سوکھ ۔ آرام۔ تاہو من۔ اس کے دل میں۔ دوٹھا۔ بس جاتے ہین 
تمام آرام و آسائش اس کے دل میں بس جاتے ہیں

ਜਿਸੁ ਜਨ ਅਪਨਾ ਹੁਕਮੁ ਮਨਾਇਆ 
jis jan apnaa hukam manaa-i-aa.
The person, whom God empowers to accept His Will,
ਜਿਸ ਮਨੁੱਖ ਤੋਂ ਪ੍ਰਭੂ ਆਪਣਾ ਹੁਕਮ ਮਨਾਉਂਦਾ ਹੈ,
جِسُ جن اپنا حُکمُ منائِیا
۔ جن ۔ خادم۔ انسان 
۔ اے نانک۔ جس انسان پر الہٰی فرمان ہے 

ਸਰਬ ਥੋਕ ਨਾਨਕ ਤਿਨਿ ਪਾਇਆ 
sarab thok naanak tin paa-i-aa. ||1||
O’ Nanak, feels like he has received all the amenities of the world. ll1ll
ਹੇ ਨਾਨਕਦੁਨੀਆ ਦੇ ਸਾਰੇ ਪਦਾਰਥ ਮਾਨੋ ਉਸ ਨੇ ਲੱਭ ਲਏ ਹਨ l
سرب تھۄک نانک تِنِ پائِیا
۔ سرب تھوک ۔ تمام نعمتیں ۔ 
اسے تمام عالم کی نعمتیں میسر ہیں۔

ਅਗਨਤ ਸਾਹੁ ਅਪਨੀ ਦੇ ਰਾਸਿ 
agnat saahu apnee day raas.
God, the Banker, gives endless capital of gifts to the mortal,
ਸ਼ਾਹਪ੍ਰਭੂ ਅਣਗਿਣਤ ਪਦਾਰਥਾਂ ਦੀ ਪੂੰਜੀ ਜੀਵ ਵਣਜਾਰੇ ਨੂੰ ਦੇਂਦਾ ਹੈ,
اگنت ساہُ اپنی دے راسِ
اگنت۔ بیشمار۔ راس۔ سرمایہ ۔ دولت۔ پونجی ۔ ساہ ۔ ساہوکار۔ دھنی ۔ مراد خدا۔
( شاہو کار) مراد خدا انسان کو اپنی بیشمار نعمتوں سے سر فراز کرتا ہے

ਖਾਤ ਪੀਤ ਬਰਤੈ ਅਨਦ ਉਲਾਸਿ 
khaat peet bartai anad ulaas.
who uses this capital with pleasure and joy.
(ਜੀਵਖਾਂਦਾ ਪੀਂਦਾ ਚਾਉ ਤੇ ਖ਼ੁਸ਼ੀ ਨਾਲ (ਇਹਨਾਂ ਪਦਾਰਥਾਂ ਨੂੰਵਰਤਦਾ ਹੈ
کھات پیِت برتےَ اند اُلاسِ
کھات پیت ۔ کھاتا اور پیتا ہے ۔ انند۔ سکون ۔ الاس۔ خوشی ۔
انسان انہیں استعمال کرتا ہے کھاتا ہے پیتا ہے ۔ استعمال کرتا ہے ۔

ਅਪੁਨੀ ਅਮਾਨ ਕਛੁ ਬਹੁਰਿ ਸਾਹੁ ਲੇਇ 
apunee amaan kachh bahur saahu lay-ay.
If some of this capital is later taken back by the Banker (God),
ਜੇਕਰ ਸ਼ਾਹਪ੍ਰਭੂ , ਮਗਰੋਂ ਆਪਣੀ ਅਮਾਨਤ ਵਿਚੋਂ ਕੁਝ ਕੁ ਵਾਪਸ ਲੈ ਲਵੇ,
اپُنی امان کچھُ بہُرِ ساہُ لےءِ
امان۔ امانت۔ بہور ساہ لئے ۔ دوبارہ لے لے ۔
۔ اور خوش ہے سے لئے ہوئے ادھار دولت سے اگر خدا یا شووکار اس امانت سے کچھ واپس لے لیتا ہے

ਅਗਿਆਨੀ ਮਨਿ ਰੋਸੁ ਕਰੇਇ 
agi-aanee man ros karay-i.
the ignorant person feels aggrieved and complains.
ਤਾਂ (ਇਹਅਗਿਆਨੀ ਮਨ ਵਿਚ ਗੁੱਸਾ ਕਰਦਾ ਹੈ;
اگِیانی منِ رۄسُ کرےءِ
اگیانی ۔ نادان۔ لا علم ۔ روس ۔ غصہ ۔
ہے تو لا عم جاہل من اسکا غصہ کرتا ہے

ਅਪਨੀ ਪਰਤੀਤਿ ਆਪ ਹੀ ਖੋਵੈ 
apnee parteet aap hee khovai.
By doing so, he himself destroys his own credibility,
(ਇਸ ਤਰ੍ਹਾਂਆਪਣਾ ਇਤਬਾਰ ਆਪ ਹੀ ਗਵਾ ਲੈਂਦਾ ਹੈ,
اپنی پرتیِتِ آپ ہی کھۄوےَ
پرتت ۔ اعتبار۔ کھودے ۔ گنواتا ہے
۔ اور اپنا یقین اور اعتبار گنوالیتا ہے

ਬਹੁਰਿ ਉਸ ਕਾ ਬਿਸ੍ਵਾਸੁ  ਹੋਵੈ 
bahur us kaa bisvaas na hovai.
resulting in not to be trusted again.
ਤੇ ਮੁੜ ਇਸ ਦਾ ਵਿਸਾਹ ਨਹੀਂ ਕੀਤਾ ਜਾਂਦਾ
بہُرِ اُس کا بِس٘واسُ ن ہۄوےَ
بسواس ۔ یقین اعتبار
اور دوبارہ اعتبار اور یقین ختم ہو جاتا ہے

ਜਿਸ ਕੀ ਬਸਤੁ ਤਿਸੁ ਆਗੈ ਰਾਖੈ 
 jis kee basat tis aagai raakhai.
Someone who offers to God what belongs to Him anyway,
(ਜੇਜਿਸ ਪ੍ਰਭੂ ਦੀ (ਬਖ਼ਸ਼ੀ ਹੋਈਚੀਜ਼ ਹੈ ਉਸ ਦੇ ਅੱਗੇ (ਆਪ ਹੀ ਖ਼ੁਸ਼ੀ ਨਾਲਰੱਖ ਦਏ,
جِس کی بستُ تِسُ آگےَ راکھے
۔ بست۔ اشیا۔ نعمت۔
۔ انسان کا فرض ہے جو کسی چیز کا ملاک ہے اسکا اسے پیش کردے

ਪ੍ਰਭ ਕੀ ਆਗਿਆ ਮਾਨੈ ਮਾਥੈ 
parabh kee aagi-aa maanai maathai.
and willingly abides by God’s Will,
پ٘ربھ کی آگِیا مانےَ ماتھےَ
آگیا۔ فرمان۔ حکم۔ مانے ماتھے ۔ بخوشی تمام۔
اور الہٰی فرمان بخوشی تمام ہو بہو اس پر عمل کرے 

ਉਸ ਤੇ ਚਉਗੁਨ ਕਰੈ ਨਿਹਾਲੁ 
us tay cha-ugun karai nihaal.
gets blessed many times more by Him.
ਤਾਂ (ਪ੍ਰਭੂ ਉਸ ਨੂੰਅੱਗੇ ਨਾਲੋਂ ਚਉਗੁਣਾ ਨਿਹਾਲ ਕਰਦਾ ਹੈ 
اُس تے چئُگُن کرےَ نِہالُ
چوگن۔ زیادہ ۔ نہال۔ خوش
تب اس سے چار گنا زیادہ خدا اسے خوشیاں عنایت کریگا۔

ਨਾਨਕ ਸਾਹਿਬੁ ਸਦਾ ਦਇਆਲੁ 
naanak saahib sadaa da-i-aal. ||2||
O’ Nanak, our Master (God) is merciful forever. ||2||
ਹੇ ਨਾਨਕਮਾਲਕ ਸਦਾ ਮੇਹਰ ਕਰਨ ਵਾਲਾ ਹੈ 
نانک صاحِبُ سدا دئِیالُ
۔ دیال ۔ مہربان ۔
اے نانک۔ خدا ہمیشہ مہربان ہے ۔

ਅਨਿਕ ਭਾਤਿ ਮਾਇਆ ਕੇ ਹੇਤ  ਸਰਪਰ ਹੋਵਤ ਜਾਨੁ ਅਨੇਤ 
anik bhaat maa-i-aa kay hayt. sarpar hovat jaan anayt.
Understand that, the many forms of worldly attachments are transitory and surely these shall pass away.
ਸਮਝ ਲੈ ਕਿ ਅਨੇਕਾਂ ਤਰ੍ਹਾਂ ਦੀਆਂ ਸੰਸਾਰੀ ਲਗਨਾਂਆਰਜੀ ਹਨ ਅਤੇ ਇਹ ਨਿਸਚਿਤ ਹੀ ਨਾਸ ਹੋ ਜਾਣਗੀਆਂ 
انِک بھاتِ مائِیا کے ہیت سرپر ہۄوت جانُ انیت
انک بھات ۔ بیشمار طریقوں سے ۔ مائیا کے ہیت ۔ دولت کے لئے ۔سر پر ۔ ضرور۔ انیت۔ ہمیشہ نہ رہنے والی 
دنیاوی دولت کی محبت بہت طرح کی ہے مگر یہ صدیوی نہیں

ਬਿਰਖ ਕੀ ਛਾਇਆ ਸਿਉ ਰੰਗੁ ਲਾਵੈ 
birakh kee chhaa-i-aa si-o rang laavai.
A person falls in love with the shade of the tree,
(ਜੇ ਕੋਈ ਮਨੁੱਖਰੁੱਖ ਦੀ ਛਾਂ ਨਾਲ ਪਿਆਰ ਪਾ ਬੈਠੇ,
بِرکھ کی چھائِیا سِءُ رنّگُ لاوےَ
۔ برکھ ۔ شجر ۔ درتک۔ چھائیا۔ سایہ ۔ رنگ۔ پریم۔
جو انسان شجر کے سایہ سے پیا رکرتا ہے 

ਓਹ ਬਿਨਸੈ ਉਹੁ ਮਨਿ ਪਛੁਤਾਵੈ 
oh binsai uho man pachhutaavai.
and when it disappears, he feel regret in his mind.
ਉਹ ਛਾਂ ਨਾਸ ਹੋ ਜਾਂਦੀ ਹੈਤੇਉਹ ਮਨੁੱਖ ਮਨ ਵਿਚ ਪਛੁਤਾਂਦਾ ਹੈ
اۄہ بِنسےَ اُہُ منِ پچھُتاوےَ
ونسے ۔ ختم ہوجاوے ۔ من پچھتاوے ۔ دلمین افسوس کرتاہے
۔ جب ختم ہوجاتا ہے تو افسو س کرتا ہے اور پچھتا تا ہے 

ਜੋ ਦੀਸੈ ਸੋ ਚਾਲਨਹਾਰੁ 
jo deesai so chaalanhaar.
Whatever is seen, is transitory ( ;
(ਇਹ ਸਾਰਾ ਜਗਤਜੋ ਦਿੱਸ ਰਿਹਾ ਹੈ ਨਾਸਵੰਤ ਹੈ,
جۄ دیِسےَ سۄ چالنہارُ
۔ دیسے ۔ دکھائی دیتا ہے ۔ ظاہر۔ چالنہار۔ مٹ جانے والا۔ ختم ہوجانے والا ۔
جو بھی نظر آرہا ہے ۔ یہ ختم ہونے والا ہے 

ਲਪਟਿ ਰਹਿਓ ਤਹ ਅੰਧ ਅੰਧਾਰੁ 
lapat rahi-o tah anDh anDhaar.
 yet, the blindest of the blind clings to it.
ਇਸ (ਜਗਤਨਾਲ ਇਹ ਅੰਨ੍ਹਿਆਂ ਦਾ ਅੰਨ੍ਹਾ (ਜੀਵਜੱਫਾ ਪਾਈ ਬੈਠਾ ਹੈ 
لپٹِ رہِئۄ تہ انّدھ انّدھارُ
لپٹ رہیو۔ ملوث ہو رہے ہو ۔ تیہہ۔ اس سے ۔ اندھ اندھار۔ نہایت زیادہ ۔ اندھے ۔ ناہیت ۔ جاہل
۔ مگر جاہل انسان اس سے ملوث ہور ہا ہے ۔

ਬਟਾਊ ਸਿਉ ਜੋ ਲਾਵੈ ਨੇਹ 
bataa-oo si-o jo laavai nayh.
Anyone who falls in love with a passerby,
ਜੋ (ਭੀਮਨੁੱਖ (ਕਿਸੇਰਾਹੀ ਨਾਲ ਪਿਆਰ ਪਾ ਲੈਂਦਾ ਹੈ,
بٹائۄُ سِءُ جۄ لاوےَ نیہ
۔ بٹاؤ۔ مسافر۔ راہگیر ۔ نیہہ۔ محبت۔ پیار
راہ گیر سے جو بھی پیار کرتاہے ۔ 

ਤਾ ਕਉ ਹਾਥਿ  ਆਵੈ ਕੇਹ 
taa ka-o haath na aavai kayh.
obtains nothing from the relationship.
ਉਸ ਦੇ ਹੱਥ ਪੱਲੇ ਕੁਛ ਨਹੀਂ ਪੈਦਾ
تا کءُ ہاتھِ ن آوےَ کیہ
۔ کیہہ ۔کچھ بھی ۔
اسے کچھ حاصل نہیں ہوتا 

ਮਨ ਹਰਿ ਕੇ ਨਾਮ ਕੀ ਪ੍ਰੀਤਿ ਸੁਖਦਾਈ 
man har kay naam kee pareet sukhdaa-ee.
O’ mind, only love with God’s Name bestows peace.
ਹੇ ਮਨਪ੍ਰਭੂ ਦੇ ਨਾਮ ਦਾ ਪਿਆਰ (ਹੀਸੁਖ ਦੇਣ ਵਾਲਾ ਹੈ;
من ہرِ کے نام کی پ٘ریِتِ سُکھدائی
پریت ۔ پیار۔
۔ اے دل الہٰی نام کا پیار ہی سکھ آرام پہچانے والا ہے ۔
 

ਕਰਿ ਕਿਰਪਾ ਨਾਨਕ ਆਪਿ ਲਏ ਲਾਈ 
kar kirpaa naanak aap la-ay laa-ee. ||3||
O’ Nanak, His love is received by only those whom He Himself blesses with it. (3)
ਹੇ ਨਾਨਕ! (ਇਹ ਪਿਆਰ ਉਸ ਮਨੁੱਖ ਨੂੰ ਨਸੀਬ ਹੁੰਦਾ ਹੈਜਿਸ ਨੂੰਪ੍ਰਭੂ ਮੇਹਰ ਕਰ ਕੇ ਆਪ ਲਾਉਂਦਾ ਹੈ l
کرِ کِرپا نانک آپِ لۓ لائی
کیر پا۔ مہربانی ۔
اے نانک الہٰی نام کی محبت اسے نصیب ہوتی ہے جسے اور جس پر خدا خود کر م و عنایت کرتا ہے ۔ 

ਮਿਥਿਆ ਤਨੁ ਧਨੁ ਕੁਟੰਬੁ ਸਬਾਇਆ 
mithi-aa tan Dhan kutamb sabaa-i-aa.
False (perishable) are body, wealth, and all relations.
ਸਰੀਰਧਨ ਤੇ ਸਾਰਾ ਪਰਵਾਰ ਨਾਸਵੰਤ ਹੈ,
مِتھِیا تنُ دھنُ کُٹنّبُ سبائِیا
متھیا۔ مٹ جانے والا۔ جوبن۔ جوانی ۔ تن۔ جسم۔ کٹنب۔ قبیلہ ۔ سبائیا سارا۔
فانی ہے یہ تن بھی دولت اور قیبلہ فانی ہے

ਮਿਥਿਆ ਹਉਮੈ ਮਮਤਾ ਮਾਇਆ 
mithi-aa ha-umai mamtaa maa-i-aa.
False are ego, possessiveness and Maya.
ਨਾਸਵੰਤ ਹਨ ਹੰਕਾਰਅਪਣੱਤ ਅਤੇ ਸੰਸਾਰੀ ਪਦਾਰਥ 
مِتھِیا ہئُمےَ ممتا مائِیا
ہونمے ۔ خوید ۔ ممتا۔ ملکیت کا خیال ( میری )
خودی اور تکبر والے دولت کی خواہش فانی ہے

ਮਿਥਿਆ ਰਾਜ ਜੋਬਨ ਧਨ ਮਾਲ 
mithi-aa raaj joban Dhan maal.
False (temporary) are power, youth, wealth and property.
ਰਾਜ ਜੁਆਨੀ ਤੇ ਧਨ ਮਾਲ ਸਭ ਨਾਸਵੰਤ ਹਨ,
مِتھِیا راج جۄبن دھن مال
۔ حکومت اور جو ش جوانی دولت اور ملکیت فانی ہے

ਮਿਥਿਆ ਕਾਮ ਕ੍ਰੋਧ ਬਿਕਰਾਲ 
 mithi-aa kaam kroDh bikraal.
False are lust and wild anger.
ਕਾਮ (ਦੀ ਲਹਰਤੇ ਭਿਆਨਕ ਕ੍ਰੋਧ ਇਹ ਭੀ ਵਿਅਰਥ ਹਨ
مِتھِیا کام ک٘رۄدھ بِکرال
وکرال۔ خوفناک ہستی ۔ ہاتھی ۔ سب۔ گھوڑے ۔ بسہ ۔ کپڑے ۔
مٹ جائیگی شہوت اور خوفناک غصہ مٹ جائیگا ۔

ਮਿਥਿਆ ਰਥ ਹਸਤੀ ਅਸ੍ਵ ਬਸਤ੍ਰਾ 
mithi-aa rath hastee asav bastaraa.
False (transitory) are chariots, elephants, horses and expensive clothes.
ਨਾਸਵੰਤ ਹਨ ਸੁੰਦਰ ਗੱਡੀਆਂਹਾਥੀਘੋੜੇ ਅਤੇ ਪੁਸ਼ਾਕਾਂ
مِتھِیا رتھ ہستی اس٘و بست٘را
رنگ سنگ۔ پیار سے ۔
ہاتھی گھوڑے ۔ رتھ اور کپڑے سب مٹ جائینگے

ਮਿਥਿਆ ਰੰਗ ਸੰਗਿ ਮਾਇਆ ਪੇਖਿ ਹਸਤਾ 
mithi-aa rang sang maa-i-aa paykh hastaa.
False is the love of gathering wealth, and reveling in the sight of it.
ਮਾਇਆ ਨੂੰ ਪਿਆਰ ਨਾਲ ਵੇਖ ਕੇ (ਜੀਵਹੱਸਦਾ ਹੈ, (ਪਰ ਇਹ ਹਾਸਾ ਤੇ ਮਾਣ ਭੀਵਿਅਰਥ ਹੈ
مِتھِیا رنّگ سنّگِ مائِیا پیکھِ ہستا
۔ پیکھ ۔ دیکھ کے
۔ زر کے عاشق اور ہنسے والے ساتھی سب مٹ جائینگے

ਮਿਥਿਆ ਧ੍ਰੋਹ ਮੋਹ ਅਭਿਮਾਨੁ 
mithi-aa Dharoh moh abhimaan.
False are deception, emotional attachment and egotistical pride.
ਦਗ਼ਾਮੋਹ ਤੇ ਅਹੰਕਾਰ-(ਇਹ ਸਾਰੇ ਹੀ ਮਨ ਦੇਵਿਅਰਥ (ਤਰੰਗਹਨ;
مِتھِیا دھ٘رۄہ مۄہ ابھِمانُ
دھر وہ ۔ دہوکا۔ گمان۔ابیمان۔ تکبر۔ غرور۔
۔ دھوکہ عشق تکبر اور نحووت سب مٹ جائینگے 

ਮਿਥਿਆ ਆਪਸ ਊਪਰਿ ਕਰਤ ਗੁਮਾਨੁ 
mithi-aa aapas oopar karat gumaan.
False is the self-pride with ego.
ਆਪਣੇ ਉਤੇ ਮਾਣ ਕਰਨਾ ਭੀ ਝੂਠ ਹੈ
مِتھِیا آپس اۄُپرِ کرت گُمانُ
اپنے آپ پر مغرور ی کرنا اور شوکت سب مٹ جائینگے

ਅਸਥਿਰੁ ਭਗਤਿ ਸਾਧ ਕੀ ਸਰਨ 
asthir bhagat saaDh kee saran.
Only the devotional worship of God is imperishable, performed under the protection of the Guru.
ਸਦਾ ਕਾਇਮ ਰਹਿਣ ਵਾਲੀ (ਪ੍ਰਭੂ ਦੀਭਗਤੀ (ਹੀ ਹੈ ਜੋਗੁਰੂ ਦੀ ਸਰਣ ਪੈ ਕੇ (ਕੀਤੀ ਜਾਏ) 
استھِرُ بھگتِ سادھ کی سرن
استھر۔ مستقل ۔ دیریا ۔ بھگت ۔ عبادت بندگی ۔ سادھ کی سرن۔ صحبت و قربت پاکدمن ۔ پناہ ۔
پاک دامنون کی صحبت و قربت میں عبادت اور بندگی دائمی ہے ۔ 

ਨਾਨਕ ਜਪਿ ਜਪਿ ਜੀਵੈ ਹਰਿ ਕੇ ਚਰਨ 
naanak jap jap jeevai har kay charan. ||4||
O’ Nanak, one can live a true life only by meditating on Naam.||4||
ਹੇ ਨਾਨਕਪ੍ਰਭੂ ਦੇ ਚਰਣ (ਹੀਸਦਾ ਜਪ ਕੇ (ਮਨੁੱਖਅਸਲੀ ਜੀਵਨ ਜੀਊਂਦਾ ਹੈ l
نانک جپِ جپِ جیِوےَ ہرِ کے چرن
اے نانک ، کوئی بھی صرف نام پر غور کرنے سے ہی سچی زندگی گزار سکتا ہے

ਮਿਥਿਆ ਸ੍ਰਵਨ ਪਰ ਨਿੰਦਾ ਸੁਨਹਿ 
 mithi-aa sarvan par nindaa suneh.
Useless are the ears which listen to the slander of others.
ਕੰਨ ਵਿਅਰਥ ਹਨ (ਜੇ ਉਹਪਰਾਈ ਬਖ਼ੀਲੀ ਸੁਣਦੇ ਹਨ l
مِتھِیا س٘رون پر نِنّدا سُنہِ
۔ سرون ۔ کان ۔ پر نند۔ دوسروں کی برائی بدگوئی۔ سنیہہ۔ سنتے ہین۔
وہ کان مٹ جائینگے جو برائی دوسروں کی سنتے ہیں

ਮਿਥਿਆ ਹਸਤ ਪਰ ਦਰਬ ਕਉ ਹਿਰਹਿ 
mithi-aa hasat par darab ka-o hireh.
Useless are the hands which steal the wealth of others.
ਹੱਥ ਵਿਅਰਥ ਹਨ (ਜੇ ਇਹਪਰਾਏ ਧਨ ਨੂੰ ਚੁਰਾਉਂਦੇ ਹਨ;
مِتھِیا ہست پر درب کءُ ہِرہِ
بست ۔ ہاتھ ۔ پر دھرب۔ پرائی دولت۔
مٹ جائیں گے وہ ہاتھ جو دوسروں کی دولت چراتے ہیں