Urdu-Page-267

ਮੁਖਿ ਅਪਿਆਉ ਬੈਠ ਕਉ ਦੈਨ 
mukh api-aa-o baith ka-o dain.
to feed you as you rest,
ਜੋ ਬੈਠੇ ਹੋਏ ਨੂੰ ਮੂੰਹ ਵਿਚ ਚੰਗੇ ਭੋਜਨ ਦੇਂਦੇ ਹਨ, (ਉਸ ਪ੍ਰਭੂ ਨੂੰ ਚੇਤੇ ਕਰ)
مُکھِ اپِیاءُ بیَٹھ کءُ دیَن
مکھ اپیاؤ۔ منہ میں اچھے کھانے ۔ بیھ کوو یدن۔ بیٹھے کو دیتے ہین

ਇਹੁ ਨਿਰਗੁਨੁ ਗੁਨੁ ਕਛੂ  ਬੂਝੈ 
ih nirgun gun kachhoo na boojhai.
O’ God, this virtueless person does not appreciate the value of any of Your favours done to him,
(ਹੇ ਪ੍ਰਭੂ!) ਇਹ ਗੁਣਹੀਣ ਜੀਵ (ਤੇਰਾਕੋਈ ਉਪਕਾਰ ਨਹੀਂ ਸਮਝਦਾ,
اِہُ نِرگُنُ گُنُ کچھۄُ ن بۄُجھے
۔ نرگن۔ بے اوصاف انسان نا شکر اکچھ نہیں سمجھتا۔

ਬਖਸਿ ਲੇਹੁ ਤਉ ਨਾਨਕ ਸੀਝੈ 
bakhas layho ta-o naanak seejhai. ||1||
O’ Nanak, If You bless him with forgiveness, only then he can succeed in achieving the Goal of human life. ||1||
ਹੇ ਨਾਨਕ! (ਆਖ) (ਜੇਤੂੰ ਆਪਿ ਮੇਹਰ ਕਰੇਂਤਾਂ (ਇਹ ਜਨਮਮਨੋਰਥ ਵਿਚਸਫਲ ਹੋਵੇ l
بخشِ لیہُ تءُ نانک سیِجھے
اے نانک۔ اگر خدا ہی عنایت و شفقت کرے تبھی سمجھے گا۔

ਜਿਹ ਪ੍ਰਸਾਦਿ ਧਰ ਊਪਰਿ ਸੁਖਿ ਬਸਹਿ 
jih parsaad Dhar oopar sukh baseh.
By whose Grace, you dwell in comfort upon the earth.
(ਹੇ ਜੀਵ!) ਜਿਸ (ਪ੍ਰਭੂਦੀ ਕ੍ਰਿਪਾ ਨਾਲ ਤੂੰ ਧਰਤੀ ਉਤੇ ਸੁਖੀ ਵੱਸਦਾ ਹੈਂ l
جِہ پ٘رسادِ دھر اۄُپرِ سُکھِ بسہِ
جیہہ پر ساد ۔ جس کی رحمت سے ۔ دھر۔ زمین۔
اے انسان جس کی رحتم و عنایت سے تو زمین پر آرام و آسائش پاتا ہے

ਸੁਤ ਭ੍ਰਾਤ ਮੀਤ ਬਨਿਤਾ ਸੰਗਿ ਹਸਹਿ 
sut bharaat meet banitaa sang haseh.
With your children, siblings, friends and spouse, you laugh and enjoy yourself.
ਪੁਤ੍ਰ ਭਰਾ ਮਿਤ੍ਰ ਇਸਤ੍ਰੀ ਨਾਲ ਹੱਸਦਾ ਹੈਂ;
سُت بھ٘رات میِت بنِتا سنّگِ ہسہِ
ست۔ بیٹے ۔ بھرات۔ بھائی ۔ میت ۔ دوست ۔ بنتا۔ عورت
۔ دوستون بھائیوں بیٹوں اور عورت سے ہنستا کھیلتا ہے

ਜਿਹ ਪ੍ਰਸਾਦਿ ਪੀਵਹਿ ਸੀਤਲ ਜਲਾ 
jih parsaad peeveh seetal jalaa.
By Whose Grace, you enjoy this soothing cool water,
ਜਿਸ ਦੀ ਮੇਹਰ ਨਾਲ ਤੂੰ ਠੰਢਾ ਪਾਣੀ ਪੀਂਦਾ ਹੈਂ,
جِہ پ٘رسادِ پیِوہِ سیِتل جلا
۔سیتل جلا۔ ٹھنڈا پانی
جس کی رحمت سے ٹھنڈآ پانی پیتا ہے

ਸੁਖਦਾਈ ਪਵਨੁ ਪਾਵਕੁ ਅਮੁਲਾ 
sukhdaa-ee pavan paavak amulaa.
along with priceless soothing air and fire.
ਸੁਖ ਦੇਣ ਵਾਲੀ ਹਵਾ ਤੇ ਅਮੋਲਕ ਅੱਗ (ਵਰਤਦਾ ਹੈਂ)
سُکھدائی پونُ پاوکُ امُلا
۔ پون۔ ہوا۔ پاوک ۔ آگ۔ املا۔ بیش قیمت۔
جس کی مہربانی سے(تمام ) آرام دیہہ ہوا اور بیش قیمت آگ استعمال کرتا ہے

ਜਿਹ ਪ੍ਰਸਾਦਿ ਭੋਗਹਿ ਸਭਿ ਰਸਾ 
 jih parsaad bhogeh sabh rasaa.
By Whose Grace, you enjoy all sorts of pleasures,
ਜਿਸ ਦੀ ਕਿਰਪਾ ਨਾਲ ਸਾਰੇ ਰਸ ਭੋਗਦਾ ਹੈਂ,
جِہ پ٘رسادِ بھۄگہِ سبھِ رسا
رسا۔ لطف۔ مزے
جس کی رحمت سے ہر طرح کے لطف اور مزے لیتا ہے

ਸਗਲ ਸਮਗ੍ਰੀ ਸੰਗਿ ਸਾਥਿ ਬਸਾ 
sagal samagree sang saath basaa.
and are provided with all the necessities of life.
ਅਤੇ ਸਾਰੀਆਂ ਲੋੜੀਦੀਆਂ ਸ਼ੈਆਂ ਸਮੇਤ ਵਸਦਾ ਹੈ
سگل سمگ٘ری سنّگِ ساتھِ بسا
۔ سگل ۔ ساری ۔ سمرگری ۔ ساری نعمتیں۔
۔ اور تیرے پاس تمام نعمتیں ہیں

ਦੀਨੇ ਹਸਤ ਪਾਵ ਕਰਨ ਨੇਤ੍ਰ ਰਸਨਾ 
deenay hasat paav karan naytar rasnaa.
Who gave you hands, feet, ears, eyes and tongue,
ਜਿਸ ਨੇ ਤੈਨੂੰ ਹੱਥ ਪੈਰ ਕੰਨ ਅੱਖਾਂ ਜੀਭ ਦਿੱਤੇ ਹਨ,
دیِنے ہست پاو کرن نیت٘ر رسنا
ہست ۔ ہاتھ ۔ پاو۔ پاؤں۔ بدن۔ کان ۔ نیتر۔ آنکھیں۔ رسنا۔ زبان۔
۔ تجھے ہاتھ پاؤں کان انکھیں اور زبان عنایت فرمائی ہے

ਤਿਸਹਿ ਤਿਆਗਿ ਅਵਰ ਸੰਗਿ ਰਚਨਾ 
tiseh ti-aag avar sang rachnaa.
 yet, you forsake Him and attach yourself to others.
ਉਸ (ਪ੍ਰਭੂਨੂੰ ਵਿਸਾਰ ਕੇ (ਹੇ ਜੀਵ!) ਤੂੰ ਹੋਰਨਾਂ ਨਾਲ ਮਗਨ ਹੈਂ 
تِسہِ تِیاگِ اور سنّگِ رچنا
تیسیہہ تیاگ۔ اسے چھوڑ کر ۔ اور سنگ رچنا۔ دوسروں سے مشغول ہے ۔
۔ اس خدا کو بھلا کر دوسروں سے تال میل ہے

ਐਸੇ ਦੋਖ ਮੂੜ ਅੰਧ ਬਿਆਪੇ 
aisay dokh moorh anDh bi-aapay.
Spiritually blind fools are in the grip of such sinful mistakes;
ਮੂਰਖ ਅੰਨ੍ਹੇ ਜੀਵ ਇਹੋ ਜਿਹੇ ਔਗੁਣਾਂ ਵਿਚ ਫਸੇ ਹੋਏ ਹਨ
ایَسے دۄکھ مۄُڑ انّدھ بِیاپے
دوکھ ۔ عذاب۔ موڑھ ۔ جاہل ۔
اے جاہل اندھے انسان ایسے حالات میں عذاب آتا ہے

ਨਾਨਕ ਕਾਢਿ ਲੇਹੁ ਪ੍ਰਭ ਆਪੇ 
naanak kaadh layho parabh aapay. ||2||
O’ God, save them from these sinful mistakes, prays Nanak.||2||
ਹੇ ਨਾਨਕ! (ਇਹਨਾਂ ਜੀਵਾਂ ਵਾਸਤੇ ਅਰਦਾਸ ਕਰਤੇ ਆਖਹੇ ਪ੍ਰਭੂਇਹਨਾਂ ਨੂੰ ਆਪ ਇਹਨਾਂ ਔਗੁਣਾਂ ਵਿਚੋਂ ਕੱਢ ਲੈ l 
نانک کاڈھِ لیہُ پ٘ربھ آپے
۔ اے نانک۔ اے خدا ایسے بد اوصاف سے خو دہی بچاو۔

ਆਦਿ ਅੰਤਿ ਜੋ ਰਾਖਨਹਾਰੁ 
aad ant jo raakhanhaar.
The one who is our Protector from birth till death,
ਜੋ ਜਨਮ ਤੋਂ ਲੈ ਕੇ ਮਰਨ ਸਮੇਂ ਤਕ ਰਾਖੀ ਕਰਨ ਵਾਲਾ ਹੈ,
آدِ انّتِ جۄ راکھنہارُ
آد۔ آگاز ۔ انت۔ آکر۔
اول آخر جو بچائے ۔

ਤਿਸ ਸਿਉ ਪ੍ਰੀਤਿ  ਕਰੈ ਗਵਾਰੁ 
tis si-o pareet na karai gavaar.
yet, the ignorant person does not love Him.
ਮੂਰਖ ਮਨੁੱਖ ਉਸ ਪ੍ਰਭੂ ਨਾਲ ਪਿਆਰ ਨਹੀਂ ਕਰਦਾ
تِس سِءُ پ٘ریِتِ ن کرےَ گوارُ
پریت۔ پایر۔ گوار۔ جاہل۔
جاہل اس سے پیار نہ پائے

ਜਾ ਕੀ ਸੇਵਾ ਨਵ ਨਿਧਿ ਪਾਵੈ 
jaa kee sayvaa nav niDh paavai.
Serving Whom by meditating on Naam is like the nine treasures of the world.
ਜਿਸ ਦੀ ਸੇਵਾ ਕੀਤਿਆਂ ਸ੍ਰਿਸ਼ਟੀ ਦੇ ਨੌ ਹੀ ਖ਼ਜ਼ਾਨੇ ਮਿਲ ਜਾਂਦੇ ਹਨ,
جا کی سیوا نو نِدھِ پاوےَ
سیوا۔ کدمت۔ نوندھ ۔ نو خزانے ۔
خدمت سے جس کی نو خزانے ملتے ہیں۔

ਤਾ ਸਿਉ ਮੂੜਾ ਮਨੁ ਨਹੀ ਲਾਵੈ 
taa si-o moorhaa man nahee laavai.
yet, the foolish person does not attune his minds to Him.
ਮੂਰਖ ਜੀਵ ਉਸ ਪ੍ਰਭੂ ਨਾਲ ਚਿੱਤ ਨਹੀਂ ਜੋੜਦਾ
تا سِءُ مۄُڑا منُ نہی لاوےَ
موڑھا۔ مورکھ ۔ جاہل۔
جاہل اسے دل نہ لگائے ۔

ਜੋ ਠਾਕੁਰੁ ਸਦ ਸਦਾ ਹਜੂਰੇ 
jo thaakur sad sadaa hajooray.
That God who is always present within and around us,
ਜੋ ਸੁਆਮੀ ਸਦੀਵ ਸਦੀਵ ਹੀ ਅੰਗਸੰਗ ਹੈ,
جۄ ٹھاکُرُ سد سدا حضۄُرے
حضورے ۔ حاضر ناظر۔ ساتھ۔
جو مالک ہمیشہ ساتھی ہے او رنسگی ہے

ਤਾ ਕਉ ਅੰਧਾ ਜਾਨਤ ਦੂਰੇ 
taa ka-o anDhaa jaanat dooray.
the spiritually blind believes that He is far away.
ਅੰਨ੍ਹਾ ਮਨੁੱਖ ਉਸ ਠਾਕੁਰ ਨੂੰ (ਕਿਤੇਦੂਰ (ਬੈਠਾਸਮਝਦਾ ਹੈ
تا کءُ انّدھا جانت دۄُرے
دورے ۔ دور۔
۔ اندھا جو نہ سمجھے اس کے لئے دوری ہے ۔

ਜਾ ਕੀ ਟਹਲ ਪਾਵੈ ਦਰਗਹ ਮਾਨੁ 
jaa kee tahal paavai dargeh maan.
In Whose service by meditation, one receives honor in God’s court,
ਜਿਸ ਦੀ ਟਹਲ ਕੀਤਿਆਂ ਪ੍ਰਭੂ ਦੀ ਦਰਗਾਹ ਵਿਚ ਆਦਰ ਮਿਲਦਾ ਹੈ,
جا کی ٹہل پاوےَ درگہ مانُ
ٹہل۔ خدمت۔ درگہ ۔ کچہری ۔ دربار۔ مان۔ عزت۔ وقار۔
خدمت سے جس کی دربار میں عزت ملتی ہے 

ਤਿਸਹਿ ਬਿਸਾਰੈ ਮੁਗਧੁ ਅਜਾਨੁ 
tiseh bisaarai mugaDh ajaan.
yet, the spiritually ignorant fool forgets Him.
ਮੂਰਖ ਤੇ ਅੰਞਾਣ ਜੀਵ ਉਸ ਪ੍ਰਭੂ ਨੂੰ ਵਿਸਾਰ ਬੈਠਦਾ ਹੈ
تِسہِ بِسارےَ مُگدھُ اجانُ
وسارے ۔ بھلائے ۔ مگدھ ۔ جاہل۔ اجان۔ نا سمجھ ۔
۔ نا سمجھ اور جاہل اسے بھلاتا ہے ۔ ہمیشہ غفلت کرتا ہے ۔ 

ਸਦਾ ਸਦਾ ਇਹੁ ਭੂਲਨਹਾਰੁ 
sadaa sadaa ih bhoolanhaar.
Forever and ever, this person makes mistakes;
ਇਹ ਜੀਵ (ਤਾਂਸਦਾ ਹੀ ਭੁੱਲਾਂ ਕਰਦਾ ਰਹਿੰਦਾ ਹੈ;
سدا سدا اِہُ بھۄُلنہارُ
بھولنہار۔ بھولنے والا۔
اور بھول میں ہر دم رہتا ہے 

ਨਾਨਕ ਰਾਖਨਹਾਰੁ ਅਪਾਰੁ 
naanak raakhanhaar apaar. ||3||
O’ Nanak, the infinite God is our Savior. ||3||
ਹੇ ਨਾਨਕਰੱਖਿਆ ਕਰਨ ਵਾਲਾ ਪ੍ਰਭੂ ਬੇਅੰਤ ਹੈ l
نانک راکھنہارُ اپارُ
رکھنہار۔ بچانے والا۔ حفاظتی ۔ اپار۔ بیشمار۔
۔ اے نانک وہ شمار سے باہر جو سب کا رکھوالا ہے ۔ 

ਰਤਨੁ ਤਿਆਗਿ ਕਉਡੀ ਸੰਗਿ ਰਚੈ 
ratan ti-aag ka-udee sang rachai.
Forsaking the priceless Naam, one is engrossed with worldly wealth.
ਜੀਵ ਨਾਮ– ਰਤਨ ਛੱਡ ਕੇ (ਮਾਇਆਰੂਪਕਉਡੀ ਨਾਲ ਖ਼ੁਸ਼ ਫਿਰਦਾ ਹੈ
رتنُ تِیاگِ کئُڈی سنّگِ رچےَ
رتن۔ ہیر ا ۔ قیمتی اشیا۔ جواہرات۔ کوڈی ۔ ایسی چیز جس کی کوئی قیمت نہیں بیکار۔ رچے ۔ محبت کرتا ہے
چھوڑ کے لعل جواہروں کو بیکاروں سے پایر بڑھاتا ہے ۔ 

ਸਾਚੁ ਛੋਡਿ ਝੂਠ ਸੰਗਿ ਮਚੈ 
saach chhod jhooth sang machai.
He renounces Truth and embraces the falsehood.
ਸੱਚੇ (ਪ੍ਰਭੂਨੂੰ ਛੱਡ ਕੇ ਨਾਸਵੰਤ (ਪਦਾਰਥਾਂਨਾਲ ਭੂਹੇ ਹੁੰਦਾ ਹੈ
ساچُ چھۄڈِ جھۄُٹھ سنّگِ مچ
۔ مچے ۔ ملاپ
چھوڑ کے سچ حقیقت کو کفر سے پیار بناتا ہے 

ਜੋ ਛਡਨਾ ਸੁ ਅਸਥਿਰੁ ਕਰਿ ਮਾਨੈ 
jo chhadnaa so asthir kar maanai.
That thing which must ultimately be abandoned he believes it to be everlasting,
ਜੋ (ਮਾਇਆਛੱਡ ਜਾਣੀ ਹੈਉਸ ਨੂੰ ਸਦਾ ਅਟੱਲ ਸਮਝਦਾ ਹੈ;
جۄ چھڈنا سُ استھِرُ کرِ مانےَ
۔ استھر۔ دائمی ۔
۔ جس نے ختم ہوجانا ہے ۔ دائمی اسے وہ مانتا ہے 

ਜੋ ਹੋਵਨੁ ਸੋ ਦੂਰਿ ਪਰਾਨੈ 
jo hovan so door paraanai.
That (death) which is imminent, he believes to be far off.
ਜੋ (ਮੌਤਜ਼ਰੂਰ ਵਾਪਰਨੀ ਹੈਉਸ ਨੂੰ (ਕਿਤੇਦੂਰ (ਬੈਠੀਖ਼ਿਆਲ ਕਰਦਾ ਹੈ 
جۄ ہۄونُ سۄ دۄُرِ پرانےَ
ہوون۔ ہونے والا۔ پرانے ۔ پرے ہٹاتا ہے ۔ دور کرتاہے
اور دائمی سے دوری بناتا ہے 

ਛੋਡਿ ਜਾਇ ਤਿਸ ਕਾ ਸ੍ਰਮੁ ਕਰੈ 
chhod jaa-ay tis kaa saram karai.
He struggles for worldly wealth, which he must eventually leave behind.
ਉਸ ਧਨ ਪਦਾਰਥ ਦੀ ਖ਼ਾਤਰ ਖੇਚਲ ਕਰਦਾ ਹੈ ਜੋ ਅੰਤ ਛੱਡ ਜਾਣੀ ਹੈ;
چھۄڈِ جاءِ تِس کا س٘رمُ کرےَ
۔ سرم۔ محنت۔ مشقت۔ جہد ۔ کوشش
۔ محبت اور مشقت ہے کرتا 

ਸੰਗਿ ਸਹਾਈ ਤਿਸੁ ਪਰਹਰੈ 
sang sahaa-ee tis parharai.
He turns away from God, who is always with him.
ਉਹ ਉਸ ਸਹਾਇਕ ਪ੍ਰਭੂ ਨੂੰ ਤਿਆਗਦਾ ਹੈਜੋ ਹਮੇਸ਼ਾਂ ਉਸ ਦੇ ਨਾਲ ਹੈ 
سنّگِ سہائی تِسُ پرہرےَ
۔ پر ہرے ۔ چھوڑے ۔
۔ جس نے ختم ہوجاتا ہے اس سنگی اور ساتھی سے ردے اپنی وہ دوری بناتا ہے

ਚੰਦਨ ਲੇਪੁ ਉਤਾਰੈ ਧੋਇ  ਗਰਧਬ ਪ੍ਰੀਤਿ ਭਸਮ ਸੰਗਿ ਹੋਇ 
chandan layp utaarai Dho-ay. garDhab pareet bhasam sang ho-ay.
He is being like a donkey,who even if anointed with sandal, would wash it off because it’s love is with ashes only.
ਜਿਵੇਂ ਖੋਤਾਚੰਦਨ ਦਾ ਲੇਪ ਧੋ ਕੇ ਲਾਹ ਦੇਂਦਾ ਹੈ,ਖੋਤੇ ਦਾ ਪਿਆਰ (ਸਦਾਸੁਆਹ ਨਾਲ (ਹੀਹੁੰਦਾ ਹੈ 
چنّدن لیپُ اُتارےَ دھۄءِ گردھب پ٘ریِتِ بھسم سنّگِ ہۄءِ
چندن۔ خوشبو دینے والی لکڑی ۔ گر ھب۔ گدھے ۔ بھسم۔ سواہ۔ راکھ ۔ مٹی
۔ ۔ گدھے کی مستی کی مانند دہول سے پریت لگاتا ہے 

ਅੰਧ ਕੂਪ ਮਹਿ ਪਤਿਤ ਬਿਕਰਾਲ 
anDh koop meh patit bikraal.
He has fallen into the deep, dark pit of vices.
ਜੀਵ ਭਿਆਨਕ ਅਨ੍ਹੇਰੇ ਖੂਹ ਵਿੱਚ ਡਿੱਗਿਆ ਪਿਆ ਹੈ
انّدھ کۄُپ مہِ پتِت بِکرال
۔ اندھ کو پ ۔ اندھ کنوان۔ پتت۔ انسانیت سے اور اکلاق سے گرا ہوا۔ بد اخلاق ۔ بکرال۔ خوفناک
وہ وسوسوں کے گہرے اور تاریک گڑھے میں پڑ گیا ہے ۔ 

ਨਾਨਕ ਕਾਢਿ ਲੇਹੁ ਪ੍ਰਭ ਦਇਆਲ 
naanak kaadh layho parabh da-i-aal. ||4||
O’ Nanak, pray and say, O’ Merciful God, save him from drowning in the ocean of vices. ||4||
ਹੇ ਨਾਨਕਅਰਦਾਸ ਕਰ ਤੇ ਆਖਹੇ ਦਿਆਲ ਪ੍ਰਭੂਉਸ ਨੂੰ ਆਪ ਇਸ ਖੂਹ ਵਿਚੋਂ ਕੱਢ ਲੈ 
نانک کاڈھِ لیہُ پ٘ربھ دئِیال
۔ پربھ دیال ۔ رحمان الرحیم ۔
اے نانک ، دعا مانگو اور کہو ، اے رحیم خدا ، اس کو برائیوں کے سمندر میں ڈوبنے سے بچا

ਕਰਤੂਤਿ ਪਸੂ ਕੀ ਮਾਨਸ ਜਾਤਿ 
kartoot pasoo kee maanas jaat.
He belongs to the human species, but he acts like animals.
ਜਾਤਿ ਮਨੁੱਖ ਦੀ ਹੈ (ਭਾਵਮਨੁੱਖਸ਼੍ਰੇਣੀ ਵਿਚੋਂ ਜੰਮਿਆ ਹੈਪਰ ਕੰਮ ਪਸ਼ੂਆਂ ਵਾਲੇ ਹਨ,
کرتۄُتِ پسۄُ کی مانس زاتِ
مانس۔ انسان ۔ کرتوت ۔ اعمال۔ پسو۔ حیوان۔
عمل کرئے حیوانوں جیسے جبکہ نسل ہے انسانوں کی 

ਲੋਕ ਪਚਾਰਾ ਕਰੈ ਦਿਨੁ ਰਾਤਿ 
lok pachaaraa karai din raat.
Day and Night, he is busy showing off (his wealth and wisdom) to others.
(ਉਂਞਦਿਨ ਰਾਤ ਲੋਕਾਂ ਵਾਸਤੇ ਵਿਖਾਵਾ ਕਰ ਰਿਹਾ ਹੈ
لۄک پچارا کرےَ دِنُ راتِ
پچارا۔ دکھاوا۔ لوک ۔ بچارا۔ لوک دکھاوا
لوگوں کو روز و شب و کھلا وا کرتاہے ۔ پہراوا ہے 

ਬਾਹਰਿ ਭੇਖ ਅੰਤਰਿ ਮਲੁ ਮਾਇਆ 
baahar bhaykh antar mal maa-i-aa.
Outwardly, he wears religious robes, but within is the filth of Maya.
ਬਾਹਰ (ਸਰੀਰ ਉਤੇਧਾਰਮਿਕ ਪੁਸ਼ਾਕ ਹੈ ਪਰ ਮਨ ਵਿਚ ਮਾਇਆ ਦੀ ਮੈਲ ਹੈ,
باہرِ بھیکھ انّترِ ملُ مائِیا
۔ بھیکھ ۔ لباس۔ پہراوا ۔ انتر۔ اندر۔ دلمیں۔ مل۔ میل۔ ناپاکیزگی ۔ مائیا۔ دنیاوی دولت۔
۔ عارف انسانوں کا دل ناپاک ہے دنیاوی دولت سے 

ਛਪਸਿ ਨਾਹਿ ਕਛੁ ਕਰੈ ਛਪਾਇਆ 
chhapas naahi kachh karai chhapaa-i-aa.
He cannot conceal this, no matter how hard he tries.
ਜਿੰਨਾ ਜੀ ਕਰੇ ਭਾਵੇਂ ਉਹ ਲੁਕਾਵੇਪਰ ਉਹ ਆਪਣੀ ਅਸਲੀਅਤ ਨੂੰ ਲੁਕਾ ਨਹੀਂ ਸਕਦਾ
چھپسِ ناہِ کچھُ کرےَ چھپائِیا
چھپس ناہے ۔ چھپتی نہیں
۔ چھپائے چھپتے ہیں اعمال کہاں لاکہہ پوشیدہ رکھنے سے 

ਬਾਹਰਿ ਗਿਆਨ ਧਿਆਨ ਇਸਨਾਨ 
baahar gi-aan Dhi-aan isnaan.
Outwardly, he displays knowledge, meditation and purification,
ਬਾਹਰ (ਵਿਖਾਵੇ ਵਾਸਤੇ) (ਤੀਰਥਇਸ਼ਨਾਨ ਤੇ ਗਿਆਨ ਦੀਆਂ ਗੱਲਾਂ ਕਰਦਾ ਹੈਸਮਾਧੀਆਂ ਭੀ ਲਾਉਂਦਾ ਹੈ,
باہرِ گِیان دھِیان اِسنان
۔ باہر۔ بیرونی طور پر ۔ گیان۔ علم وہنر۔ دھیان۔ توجہی ۔ اشنان۔ پاکیزگی
۔ علم وہنر کماتا ہے اور دھیان لگاتا ہے زیارت پر بھی جاتا ہے 

ਅੰਤਰਿ ਬਿਆਪੈ ਲੋਭੁ ਸੁਆਨੁ 
antar bi-aapai lobh su-aan.
but within clings the dog-like greed.
ਪਰ ਮਨ ਵਿਚ ਲੋਭ (-ਰੂਪਕੁੱਤਾ ਜ਼ੋਰ ਪਾ ਰਿਹਾ ਹੈ
انّترِ بِیاپےَ لۄبھُ سُیانُ
۔ لوبھ ۔ لالچ ۔ سوآن۔ کتا۔ انتر ۔ آگن۔ دل میں آگ جل رہی ہے ۔ خواہشات کی آگ
دل میں ہے لالچ کا کتا اور دل للچاتا ہے 

ਅੰਤਰਿ ਅਗਨਿ ਬਾਹਰਿ ਤਨੁ ਸੁਆਹ 
 antar agan baahar tan su-aah.
The fire of desire rages within; but outwardly he applies ashes to the body. (to appear as a Yogi who has renounced all worldly desires)
ਮਨ ਵਿਚ ਤ੍ਰਿਸ਼ਨਾ ਦੀ ਅੱਗ ਹੈਬਾਹਰ ਸਰੀਰ ਸੁਆਹ ਨਾਲ ਲਿਬੇੜਿਆ ਹੋਇਆ ਹੈ l
انّترِ اگنِ باہرِ تنُ سُیاہ
۔ با ہر تن سوآہ ۔ بدن پر راکھ کی مالش ۔
۔ دل میں حرض و طمع کی آگ ہے باہر فقیرون کا بھیس بناتا ہے ۔ 

ਗਲਿ ਪਾਥਰ ਕੈਸੇ ਤਰੈ ਅਥਾਹ 
gal paathar kaisay tarai athaah.
With load of worldly desires and sins like stones around the neck, how can one swim across the Unfathomable ocean of vices?
(ਜੇਗਲ ਵਿਚ (ਵਿਕਾਰਾਂ ਦੇਪੱਥਰ (ਹੋਣ ਤਾਂਅਥਾਹ (ਸੰਸਾਰਸਮੁੰਦਰ ਨੂੰ ਜੀਵਕਿਵੇਂ ਤਰੇ?
گلِ پاتھر کیَسے ترےَ اتھاہ
گل پاتھر ۔ گلے پتھر ۔ بندھا ہوا ہے ۔ گناہوں کا ۔ جبکہ زندگی ایک گہرے سمندر کی مانند ہے
گہرا ہے دنیاوی سمند ر۔ گلے میں پتھر کی سیل لٹکائی ہے 

ਜਾ ਕੈ ਅੰਤਰਿ ਬਸੈ ਪ੍ਰਭੁ ਆਪਿ 
jaa kai antar basai parabh aap.
The one within whose heart God Himself dwells,
ਜਿਸ ਮਨੁੱਖ ਦੇ ਹਿਰਦੇ ਵਿਚ ਪ੍ਰਭੂ  ਵੱਸਦਾ ਹੈ,
جا کےَ انّترِ بسےَ پ٘ربھُ آپِ
۔ انتر ۔ دل میں۔
۔ جس کے دل میں خدا خود بستا ہے سکون ہے 

ਨਾਨਕ ਤੇ ਜਨ ਸਹਜਿ ਸਮਾਤਿ 
naanak tay jan sahj samaat. ||5||
O’ Nanak, that person intuitively gets imbued in the love of God. ||5||
ਹੇ ਨਾਨਕਉਹੀ ਅਡੋਲ ਅਵਸਥਾ ਵਿਚ ਸਮਾ ਜਾਂਦਾ ਹੈ
نانک تے جن سہجِ سماتِ
سہج ۔ سکون ۔ سمات ۔ سماتا ہے ۔
اس انسان کے دل میں نانک سکون روحانی پائیا ہے

ਸੁਨਿ ਅੰਧਾ ਕੈਸੇ ਮਾਰਗੁ ਪਾਵੈ 
sun anDhaa kaisay maarag paavai.
Just by listening, how can the blind find the path?
ਅੰਨ੍ਹਾ ਮਨੁੱਖ (ਨਿਰਾਸੁਣ ਕੇ ਕਿਵੇਂ ਰਾਹ ਲੱਭ ਲਏ?
سُنِ انّدھا کیَسے مارگُ پاوےَ
مارگ ۔ راستہ ۔
اندھا انسان سنکر کیسے راستہ پائیگا ۔

ਕਰੁ ਗਹਿ ਲੇਹੁ ਓੜਿ ਨਿਬਹਾਵੈ 
kar geh layho orh nibhaavai.
If someone holds his hand, then he can reach his destination.
ਉਸ ਦਾ ਹੱਥ ਫੜ ਲਓ ਅਤੇ ਉਹ ਟਿਕਾਣੇ ਤੇ ਪੁੱਜ ਜਾਏਗਾ
کرُ گہِ لیہُ اۄڑِ نِبہاوےَ
کر ۔ ہاتھ۔ گیہہ۔ پکڑ کر ۔ اوڑ۔ آکر۔ نیہارے ۔ ساتھ دئے
ہاتھ پکڑنے سے اکر تک گذارا ہوگا

ਕਹਾ ਬੁਝਾਰਤਿ ਬੂਝੈ ਡੋਰਾ 
kahaa bujhaarat boojhai doraa.
How can a riddle be understood by the deaf?
ਬੋਲਾ ਮਨੁੱਖ (ਨਿਰੀਸੈਨਤ ਨੂੰ ਕੀਹ ਸਮਝੇ?
کہا بُجھارتِ بۄُجھےَ ڈۄرا
۔ بجھارت۔ بوجہنے یا سمجھنے والی چھوٹی کہانی ۔ ڈور ۔ بولا
۔ کانوں سے بہر ہ صرف اشارہ ہی سمجھے گا

ਨਿਸਿ ਕਹੀਐ ਤਉ ਸਮਝੈ ਭੋਰਾ 
nis kahee-ai ta-o samjhai bhoraa.
Say ‘night’, and he thinks you said ‘day’.
(ਸੈਨਤ ਨਾਲ ਜੇਆਖੀਏ (ਇਹਰਾਤ ਹੈ ਤਾਂ ਉਹ ਸਮਝ ਲੈਂਦਾ ਹੈ (ਇਹਦਿਨ (ਹੈ)
نِسِ کہیِۓَ تءُ سمجھےَ بھۄرا
۔ تس۔ رات۔ بھورا ۔ دن ۔
۔ مگر اگر رات کہو تو دن سمجھیگا ۔ 

ਕਹਾ ਬਿਸਨਪਦ ਗਾਵੈ ਗੁੰਗ 
kahaa bisanpad gaavai gung.
How can the mute sing the devotional Songs?
ਗੂੰਗਾ ਕਿਵੇਂ ਬਿਸ਼ਨਪਦੇ ਗਾ ਸਕੇ?
کہا بِسن پد گاوےَ گُنّگ
بسن پد ۔ گانے ۔ اچھے راگ ۔ گنگ ۔ گونگا ۔
گونگا کیسے راگ الاچے گا۔ 

ਜਤਨ ਕਰੈ ਤਉ ਭੀ ਸੁਰ ਭੰਗ 
jatan karai ta-o bhee sur bhang.
He may try, but his voice will fail him.
ਜਤਨ ਕਰੇ ਤਾਂ ਭੀ ਉਸ ਦੀ ਸੁਰ ਟੁੱਟੀ ਰਹਿੰਦੀ ਹੈ
جتن کرےَ تءُ بھی سُر بھنّگ
میں ۔ کوشش۔ سر ۔ طز۔ بھنگ ۔ لوٹ جاتی ہے
خواہ کوشش کرے تو بھی نہ گا سکے گا 

ਕਹ ਪਿੰਗੁਲ ਪਰਬਤ ਪਰ ਭਵਨ 
kah pingul parbat par bhavan.
How can the cripple climb up the mountain?
ਲੂਲ੍ਹਾ ਕਿਥੇ ਪਹਾੜਾਂ ਤੇ ਭਉਂ ਸਕਦਾ ਹੈ?
کہ پِنّگُل پربت پر بھون
۔ پنگل ۔ پنگلا۔ لولا۔ لنگڑا ۔ پربت۔ پہاڑ۔ پربھون ۔ سیر کرنا۔
لولہا لنگڑا پہاڑوں کی سیر کیسے کر یگا 

ਨਹੀ ਹੋਤ ਊਹਾ ਉਸੁ ਗਵਨ 
nahee hot oohaa us gavan.
He simply cannot go there.
ਓਥੇ ਉਸ ਦੀ ਪਹੁੰਚ ਨਹੀਂ ਹੋ ਸਕਦੀ 
نہی ہۄت اۄُہا اُسُ گون
ھومنا۔ گون ۔ رسائی ۔ پہنچ ۔ گھومنا۔ اوہا۔ وہان۔
وہ چہل پہل نہیں کر سکتا 

ਕਰਤਾਰ ਕਰੁਣਾ ਮੈ ਦੀਨੁ ਬੇਨਤੀ ਕਰੈ 
kartaar karunaa mai deen bayntee karai.
O’ creator, O’ merciful God, Your humble servant prays.
ਹੇ ਕਰਤਾਰਹੇ ਦਇਆ ਦੇ ਸਾਗਰ! (ਇਹਨਿਮਾਣਾ ਦਾਸ ਬੇਨਤੀ ਕਰਦਾ ਹੈ,
کرتار کرُݨا مےَ دیِنُ بینتی کرےَ
کرنا میئے ۔ میربان ترس کرنے والا۔ رحمان الرحیم۔ دین۔ عاجز ۔ مسکین ۔ بنتی ۔ عرض ۔ ارداس۔ گذارش
۔ ایسے صورت و حالات میں صرف خدا سے عرض و گذارش ہی ہو سکتی ہے 

ਨਾਨਕ ਤੁਮਰੀ ਕਿਰਪਾ ਤਰੈ 
naanak tumree kirpaa tarai. ||6||
O’ Nanak, only Your kindness can save a mortal from world-ocean of vices. (6)
ਹੇ ਨਾਨਕਤੇਰੀ ਮੇਹਰ ਨਾਲ (ਹੀਤਰ ਸਕਦਾ ਹੈ
نانک تُمری کِرپا ترےَ
۔ تمری ۔ تری ۔ کرپا۔ مہربانی ۔
کہ اے خدا مہربانی فرما کر میں عنایت و شفقت سے منزل و مقصد پا سکوں ۔ 

ਸੰਗਿ ਸਹਾਈ ਸੁ ਆਵੈ  ਚੀਤਿ 
sang sahaa-ee so aavai na cheet.
God, who is always with him as support, the mortal does not remember Him,
ਜੋ ਪ੍ਰਭੂ (ਇਸ ਮੂਰਖ ਦਾਸੰਗੀ ਸਾਥੀ ਹੈਉਸ ਨੂੰ (ਇਹਚੇਤੇ ਨਹੀਂ ਕਰਦਾ,
سنّگِ سہائی سُ آوےَ ن چیِتِ
سنگ سہائی۔ ساتھی و مددگار۔ چیت ۔ دل ۔
نہیں یاد تجھے جو ستھی ہے مددگار بھی ہے

ਜੋ ਬੈਰਾਈ ਤਾ ਸਿਉ ਪ੍ਰੀਤਿ 
jo bairaa-ee taa si-o pareet.
instead, shows love to his enemy, Maya.
(ਪਰਜੋ ਵੈਰੀ ਹੈ ਉਸ ਨਾਲ ਪਿਆਰ ਕਰ ਰਿਹਾ ਹੈ
جۄ بیَرائی تا سِءُ پ٘ریِتِ
بیرائی ۔ دشمن۔
جو دشمن ہے بیگانہ ہے تو اس سے پیار بڑھاتا ہے 

ਬਲੂਆ ਕੇ ਗ੍ਰਿਹ ਭੀਤਰਿ ਬਸੈ 
baloo-aa kay garih bheetar basai.
The mortal lives in the body which is like a castle of sand, crumbling down.
ਉਹ ਰੇਤ ਦੇ ਘਰ ਵਿੰਚ ਰਹਿੰਦਾ ਹੈ (ਭਾਵ ਰੇਤ ਦੇ ਕਿਣਕਿਆਂ ਵਾਂਗ ਉਮਰ ਛਿਨ ਛਿਨ ਕਰ ਕੇ ਕਿਰ ਰਹੀ ਹੈ),
بلۄُیا کے گ٘رِہ بھیِترِ بسےَ
بلوا۔ ریت ۔ گریہہ۔ گھر ۔ بھیتر
یاتوریت کے گھر میں رہتا ہے 

ਅਨਦ ਕੇਲ ਮਾਇਆ ਰੰਗਿ ਰਸੈ 
anad kayl maa-i-aa rang rasai.
 enjoys the games of worldly pleasures and the tastes of Maya.
ਮਾਇਆ ਦੀ ਮਸਤੀ ਵਿਚ ਆਨੰਦ ਮੌਜਾਂ ਮਾਣ ਰਿਹਾ ਹੈ 
اند کیل مائِیا رنّگِ رسےَ
اندر ۔ مین ۔ رنگ ۔ پریم ۔ کیل ۔ کھیل۔
دنیاوی دولت کی مستی مین کھیل تماشے کرتا ہے ۔

ਦ੍ਰਿੜੁ ਕਰਿ ਮਾਨੈ ਮਨਹਿ ਪ੍ਰਤੀਤਿ 
darirh kar maanai maneh parteet.
He strongly believes that his stay in this world and the worldly pleasures are all permanent.
ਉਹ ਆਪਣੇ ਆਪ ਨੂੰ ਅਮਰ ਤੇ ਇਨ੍ਹਾਂ ਰੰਗਰਲੀਆਂ ਨੂੰ ਮੁਸਤਕਿਲ ਸਮਝੀ ਬੈਠਾ ਹੈਮਨ ਵਿਚ ਇਹੀ ਯਕੀਨ ਬਣਿਆ ਹੋਇਆ ਹੈ;
د٘رِڑُ کرِ مانےَ منہِ پ٘رتیِتِ
درڑ۔ پختہ طور پر ۔ پرتیت ۔ یقین ۔ بھروسہ
دل سے پریم پیاراس سے کرتا ہے ۔ 

ਕਾਲੁ  ਆਵੈ ਮੂੜੇ ਚੀਤਿ 
kaal na aavai moorhay cheet.
The thought of death does not even come to the mind for the fool.
ਮੂਰਖ ਦੇ ਚਿਤ ਵਿਚ (ਕਦੇਮੌਤ (ਦਾ ਖ਼ਿਆਲ ਭੀਨਹੀਂ ਆਉਂਦਾ
کالُ ن آوےَ مۄُڑے چیِتِ
۔ موڑھے ۔ بیوقوف ۔ کام ۔ شہوت۔
دل سے موت بھلائی ہے

ਬੈਰ ਬਿਰੋਧ ਕਾਮ ਕ੍ਰੋਧ ਮੋਹ 
bair biroDh kaam kroDh moh.
Hate, conflict, lust, anger, emotional attachment,
ਵੈਰ ਵਿਰੋਧਕਾਮਗੁੱਸਾਮੋਹ,
بیَر بِرۄدھ کام ک٘رۄدھ مۄہ
کرودھ غصہ ۔
۔ دشمنی ۔ جھگڑا۔ اور غسہ ۔ جھٹ۔ 

ਝੂਠ ਬਿਕਾਰ ਮਹਾ ਲੋਭ ਧ੍ਰੋਹ 
jhooth bikaar mahaa lobh Dharoh.
falsehood, sins, immense greed and deceit:
ਝੂਠਮੰਦੇ ਕਰਮਭਾਰੀ ਲਾਲਚ ਤੇ ਦਗ਼ਾ– ਠੱਗੀ
جھۄُٹھ بِکار مہا لۄبھ دھ٘رۄہ
بکار ۔ بدالاں ۔ یہان لوبھ ۔ بھاری لالچ ۔ دھروہ ۔ دہوکا 
جھوٹ بداعمال دھوکا اور لالچ سے محبت ہے