Urdu-Page-139

ਸੋਭਾਸੁਰਤਿਸੁਹਾਵਣੀਜਿਨਿਹਰਿਸੇਤੀਚਿਤੁਲਾਇਆ॥੨॥
sobhaa surat suhaavanee jin har saytee chit laa-i-aa. ||2||
The intellect of the person who has attuned his mind to God becomes beautiful and he earns good reputation in the world.
ਜਿਸਮਨੁੱਖਨੇਪ੍ਰਭੂਨਾਲਚਿੱਤਜੋੜਿਆਹੈ, ਜਗਤਵਿਚਉਸਦੀਸੋਭਾਹੁੰਦੀਹੈਤੇਉਸਦੀਸੋਹਣੀਸੂਝਹੋਜਾਂਦੀਹੈ
سوبھا سُرتِ سُہاۄنھیِ جِنِ ہرِ سیتیِ چِتُ لائِیا
جس نے خدا دل میں بسائیا اسکی عقل و ہوش نیک ہو جاتی ہے (2)

ਸਲੋਕੁਮਃ੨॥
salok mehlaa 2.
Shalok, by the Second Guru:
سلوک مਃ੨॥
اس سلوک کا مقصد ہے گرو صاحب کا فرمان ہے

ਅਖੀਬਾਝਹੁਵੇਖਣਾਵਿਣੁਕੰਨਾਸੁਨਣਾ॥
akhee baajhahu vaykh-naa vin kanna sunnaa.
To see without eyes (restrain from looking at the beauty of other women with malicious intention; to hear without ears (restrain from listening to slander)
ਜੇਅੱਖਾਂਤੋਂਬਿਨਾਵੇਖੀਏ (ਭਾਵ, ਜੇਪਰਾਇਆਰੂਪਤੱਕਣਦੀਵਾਦੀਵਲੋਂਇਹਨਾਂਅੱਖਾਂਨੂੰਹਟਾਕੇਜਗਤਨੂੰਵੇਖੀਏ), ਕੰਨਾਂਤੋਂਬਿਨਾਸੁਣੀਏ (ਭਾਵ, ਜੇਨਿੰਦਾਸੁਣਨਦੀਵਾਦੀਹਟਾਕੇਇਹਕੰਨਵਰਤੀਏ),
اکھیِ باجھہُ ۄیکھنھا ۄِنھُ کنّنا سُننھا
اگر اپنے باہوش اعضٰے جسمانی کو اپنے ضبط میں رکھے اور انہیں الہٰی رضا و رغبت میں کام میں لائے تو یہ دوران حیات ہی نجات ہے ۔ جسے دوسروں کی خو ب صورتی لالچ بھری نکاہوں سے دیکھنے سے روکھ کر عالم پر نگاہ ڈالنا اور کانوں کو دوسروں کی بد گوئی سننے سے پر ہیز کرنا۔ اور دوسری باتوں کو سننا ۔

ਪੈਰਾਬਾਝਹੁਚਲਣਾਵਿਣੁਹਥਾਕਰਣਾ॥
pairaa baajhahu chalnaa vin hathaa karnaa.
To walk without feet (to restrain from going after sinful pleasure); to work without hands (desist from doing any harm to others);
ਜੇਪੈਰਾਂਤੋਂਬਿਨਾਤੁਰੀਏ (ਭਾਵ, ਜੇਮੰਦੇਪਾਸੇਵਲਦੌੜਨਤੋਂਪੈਰਾਂਨੂੰਵਰਜਰੱਖੀਏ), ਜੇਹੱਥਾਂਤੋਂਬਿਨਾਕੰਮਕਰੀਏ ( ਜੇਪਰਾਇਆਨੁਕਸਾਨਕਰਨਵਲੋਂਰੋਕਕੇਹੱਥਾਂਨੂੰਵਰਤੀਏ),
پیَرا باجھہُ چلنھا ۄِنھُ ہتھا کرنھا
اور پاؤں سے برے کاموں کی طرف نہ جانا اور جانے سے روکنا ہاتھوں سے غلط کام نہ کرنا

ਜੀਭੈਬਾਝਹੁਬੋਲਣਾਇਉਜੀਵਤਮਰਣਾ॥
jeebhai baajhahu bolnaa i-o jeevat marnaa.
To speak without a tongue (to resist from slandering others)-like this, one remains (egoistically) dead while yet alive.
ਜੇਜੀਭਤੋਂਬਿਨਾਬੋਲੀਏ, (ਭਾਵਜੇਨਿੰਦਾਕਰਨਦੀਵਾਦੀਹਟਾਕੇਜੀਭਤੋਂਬੋਲਣਦਾਕੰਮਲਈਏ), -ਇਸਤਰ੍ਹਾਂਜਿਊਂਦਿਆਂਮਰੀਦਾਹੈ।
جیِبھےَ باجھہُ بولنھا اِءُ جیِۄت مرنھا
اور زبان کو غلط لفظ نکلانے سے روکنا ایسی زندگی کے دوران ایسا کرنا گناہوں بھری زندگی کی موت اور روحانی حیات ہے ۔

ਨਾਨਕਹੁਕਮੁਪਛਾਣਿਕੈਤਉਖਸਮੈਮਿਲਣਾ॥੧॥
naanak hukam pachhaan kai ta-o khasmai milnaa. ||1||
O’ Nanak, we realize God by understanding and following His command.
ਹੇਨਾਨਕ! ਖਸਮਪ੍ਰਭੂਦਾਹੁਕਮਪਛਾਣੀਏਤਾਂਉਸਨੂੰਮਿਲੀਦਾਹੈ l
نانک ہُکمُ پچھانھِ کےَ تءُ کھسمےَ مِلنھا
اور اے نانک:- الہٰی فرمان کی پہچان سے خدا کا ملاپ ہوتا ہے

ਦਿਸੈਸੁਣੀਐਜਾਣੀਐਸਾਉਨਪਾਇਆਜਾਇ
disai sunee-ai jaanee-ai saa-o na paa-i-aa jaa-ay.
God is visible, heard and recognized through his creation, but still the pleasure of his presence can not be realized.
ਪਰਮਾਤਮਾਕੁਦਰਤਿਵਿਚਦਿੱਸਰਿਹਾਹੈ, ਉਸਦੀਜੀਵਨ-ਰੌਸਾਰੀਰਚਨਾਵਿਚਸੁਣੀਜਾਰਹੀਹੈ, ਜਾਪਰਿਹਾਹੈਕਿਉਹਕੁਦਰਤਿਵਿਚਮੌਜੂਦਹੈ, ਫਿਰਭੀਉਸਦੇਮਿਲਾਪਦਾਸੁਆਦਜੀਵਨੂੰਹਾਸਲਨਹੀਂਹੁੰਦਾ।
دِسےَ سُنھیِئےَ جانھیِئےَ ساءُ ن پائِیا جاءِ
ساؤ ۔ لطف۔ رہلا ۔ لولا۔ بغیر پاؤں ۔ یا پاؤں سے ناکارہ
دکھائی دے رہا ہے ۔ سن رہے ہیں سمجھ رہے ہیں ۔ مگر لطف نہیں پا رہے ۔ کیونکہ پاؤں چلنے کے لئے خدا کے پاس پہنچنے کے لئے پاؤں نہیں

ਰੁਹਲਾਟੁੰਡਾਅੰਧੁਲਾਕਿਉਗਲਿਲਗੈਧਾਇ॥
ruhlaa tundaa anDhulaa ki-o gal lagai Dhaa-ay.
How can a spiritually lame, armless and blind soul run to embrace Him?
ਜੀਵਦੇਨਾਹਪੈਰਹਨ, ਨਾਹਹੱਥਹਨਤੇਨਾਹਅੱਖਾਂਹਨਫਿਰਇਹਕਿਵੇਂਭੱਜਕੇਪ੍ਰਭੂਦੇਗਲਜਾਲੱਗੇ?
رُہلا ٹُنّڈا انّدھُلا کِءُ گلِ لگےَ دھاءِ
۔ ٹنڈا ۔ ہاتھوں سے بیکار ۔ اندھلا۔ نابینا۔ گل لگے دھائے ۔ کیسے دوڑ کر گلے مل سکتا ہے ۔ اے انسان ۔
نہ دیدار کے لئے آنکھیں ہیں۔ نہ ہاتھ تب بھاگ کر الہٰی ملاپ کیسے حاصل ہو۔

ਭੈਕੇਚਰਣਕਰਭਾਵਕੇਲੋਇਣਸੁਰਤਿਕਰੇਇ॥
bhai kay charan kar bhaav kay lo-in surat karay-i.
Let the Fear of God be your feet, and let His Love be your hands; let His Understanding be your eyes.
ਜੇਜੀਵਪ੍ਰਭੂਦੇਡਰਵਿਚਤੁਰਨਨੂੰਆਪਣੇਪੈਰਬਣਾਏ, ਪਿਆਰਦੇਹੱਥਬਣਾਏਤੇਪ੍ਰਭੂਦੀਯਾਦਵਿਚਜੁੜਨਨੂੰਅੱਖਾਂਬਣਾਏ,
بھےَ کے چرنھ کر بھاۄ کے لوئِنھ سُرتِ کرےءِ
بھے ۔ خوف۔ بھاؤ۔ پیار۔ لوین۔ آنکھیں ۔ سسرت۔ ہوش۔ سمجھ ۔
اگر چلنے کے لئے الہٰی خوف کو تو پاؤں بناے ۔ الہٰی محبت کے ہاتھ ہوں۔ ہوش و عقل تیری آنکھیں ہو

ਨਾਨਕੁਕਹੈਸਿਆਣੀਏਇਵਕੰਤਮਿਲਾਵਾਹੋਇ॥੨
naanak kahai si-aanee-ay iv kant milaavaa ho-ay. ||2||
Says Nanak, in this way, O’ the wise soul-bride, you shall be united with your Master-God.
ਨਾਨਕਆਖਦਾਹੈ- ਹੇਸਿਆਣੀ (ਜੀਵ-ਇਸਤ੍ਰੀਏ)! ਇਸਤਰ੍ਹਾਂਖਸਮ-ਪ੍ਰਭੂਨਾਲਮੇਲਹੁੰਦਾਹੈ
نانک کہےَ سِیانھیِۓ اِۄ کنّت مِلاۄا ہوءِ
نانک بوید۔ کہ اس طرح الہٰی ملاپ حآصل ہوتا ہے (2)

ਪਉੜੀ॥
pa-orhee.
Pauree:
پئُڑیِ ॥

ਸਦਾਸਦਾਤੂੰਏਕੁਹੈਤੁਧੁਦੂਜਾਖੇਲੁਰਚਾਇਆ॥
sadaa sadaa tooN ayk hai tuDhdoojaa khayl rachaa-i-aa.
Forever and ever, You are the only One; You set the play of duality in motion.
(ਹੇਪ੍ਰਭੂ!)ਤੂੰਸਦਾਹੀਇਕ (ਆਪਹੀਆਪ) ਹੈਂ, ਇਹ (ਤੈਥੋਂਵੱਖਰਾਦਿੱਸਦਾਤਮਾਸ਼ਾਤੂੰਆਪਹੀਰਚਿਆਹੈ।
سدا سدا توُنّ ایکُ ہےَ تُدھُ دوُجا کھیلُ رچائِیا
اے خدا:- تو ہمیشہ واحدا ہے یہ دوسرا کھیل یعنی یہ عالم تیرا پیدا کیا ہوا ہے

ਹਉਮੈਗਰਬੁਉਪਾਇਕੈਲੋਭੁਅੰਤਰਿਜੰਤਾਪਾਇਆ॥
ha-umai garab upaa-ay kai lobh antar jantaa paa-i-aa.
You created egotism and arrogant pride, and You placed greed within Your beings.
(ਤੂੰਹੀਜੀਵਾਂਦੇਅੰਦਰ) ਹਉਮੈਅਹੰਕਾਰਪੈਦਾਕਰਕੇਜੀਵਾਂਦੇਅੰਦਰਲੋਭ (ਭੀ) ਪਾਦਿੱਤਾਹੈ।
ہئُمےَ گربُ اُپاءِ کےَ لوبھُ انّترِ جنّتا پائِیا
۔ خودی تکبر اور لالچ انسانوں میں تیرا ہی پیدا کیا ہوا ہے ۔ اے خدا جیسے تیری رضا ہے

ਜਿਉਭਾਵੈਤਿਉਰਖੁਤੂਸਭਕਰੇਤੇਰਾਕਰਾਇਆ॥
ji-o bhaavai ti-o rakhtoo sabh karay tayraa karaa-i-aa.
Keep them as it pleases Your Will; everyone acts as You cause them to act.
ਸਾਰੇਜੀਵਤੇਰੇਹੀਪ੍ਰੇਰੇਹੋਏਕਾਰਕਰਰਹੇਹਨ।ਜਿਵੇਂਤੈਨੂੰਭਾਵੇਤਿਵੇਂਇਹਨਾਂਦੀਰੱਖਿਆਕਰ।
جِءُ بھاۄےَ تِءُ رکھُ توُ سبھ کرے تیرا کرائِیا
اسی طرح ان کی حفاظت کر سارے تیرا ہی گرائیا کر رہے ہیں ۔

ਇਕਨਾਬਖਸਹਿਮੇਲਿਲੈਹਿਗੁਰਮਤੀਤੁਧੈਲਾਇਆ॥
iknaa bakhsahi mayl laihi gurmatee tuDhai laa-i-aa.
On some, You bestow Your grace and attune them to the Guru’s teachings and then unite them with Yourself.
ਕਈਜੀਵਾਂਨੂੰਤੂੰਬਖ਼ਸ਼ਦਾਹੈਂਤੇਵਿਚਜੋੜਲੈਂਦਾਹੈਂ, ਗੁਰੂਦੀਸਿੱਖਿਆਵਿਚਤੂੰਆਪਹੀਉਹਨਾਂਨੂੰਲਾਇਆਹੈ।
اِکنا بکھسہِ میلِ لیَہِ گُرمتیِ تُدھےَ لائِیا
۔ گرمتی ۔ سبق مرشد۔ چاکری ۔ نوکری
ایک کو اپنی کرم و عنایت سے ملا لیتا ہے ۔ اور سبق مرشدپر عمل کراتا ہے اور ایک تیری ریاض و عبادت کر رہے ہیں ۔

ਇਕਿਖੜੇਕਰਹਿਤੇਰੀਚਾਕਰੀਵਿਣੁਨਾਵੈਹੋਰੁਨਭਾਇਆ॥
ikkharhay karahi tayree chaakree vin naavai hor na bhaa-i-aa.
Some are always attentively meditating on You, except Your Name, nothing else pleases them.
ਕਈਜੀਵਸੁਚੇਤਹੋਕੇਤੇਰੀਬੰਦਗੀਕਰਰਹੇਹਨ।ਤੇਰੇਨਾਮਤੋਂਬਿਨਾਕੋਈਹੋਰਕੰਮਉਹਨਾਂਨੂੰਭਾਉਂਦਾਨਹੀਂ
اِکِ کھڑے کرہِ تیریِ چاکریِ ۄِنھُ ناۄےَ ہورُ ن بھائِیا
۔ بن ناوے ۔ نام کے بغیر ۔ نہ بھائیا۔ پیارا نہ لگا۔ بیکار۔ بےفائدہ نرملے ۔پاک ۔
اورکچھ تیری ریاض و عبادت میں لگے ہیں کوئی دوسرا کام اچھا نہیں لگتا۔

ਹੋਰੁਕਾਰਵੇਕਾਰਹੈਇਕਿਸਚੀਕਾਰੈਲਾਇਆ॥
hor kaar vaykaar hai ik sachee kaarai laa-i-aa.
Any other task would be worthless to them-You have enjoined them to Your True Service (meditation on Your Name).
ਜਿਨ੍ਹਾਂਐਸੇਬੰਦਿਆਂਤੂੰਇਸਸੱਚੀਕਾਰਵਿਚਲਾਇਆਹੈ, ਉਹਨਾਂਨੂੰਕੋਈਹੋਰਕੰਮਕਰਨਾਮੰਦਾਲੱਗਦਾਹੈ।
ہورُ کار ۄیکار ہےَ اِکِ سچیِ کارےَ لائِیا
علاوہ ازیں دوسرے کام بیفائدہ ہیں جنہیں تو نے سچے کام میں لگائیا ہے ۔

ਪੁਤੁਕਲਤੁਕੁਟੰਬੁਹੈਇਕਿਅਲਿਪਤੁਰਹੇਜੋਤੁਧੁਭਾਇਆ॥
put kalat kutamb hai ik alipat rahay jo tuDhbhaa-i-aa.
In the midst of children, spouse and relations, some still remain detached from them; they are pleasing to You.
ਇਹਜੋਪੁਤ੍ਰਇਸਤ੍ਰੀਤੇਪਰਵਾਰਹੈ, ਜੋਬੰਦੇਤੈਨੂੰਪਿਆਰੇਲੱਗਦੇਹਨ, ਉਹਇਹਨਾਂਤੋਂਨਿਰਮੋਹਰਹਿੰਦੇਹਨ;
پُتُ کلتُ کُٹنّبُ ہےَ اِکِ الِپتُ رہے جو تُدھُ بھائِیا
السپت۔ بیلاگ (3)
یہ عورت ۔ بیٹے اورقبیلہ جسکا انسان کو پیارا ہے ۔ اس سے بیلاگ ہیں وہ اندرونی اور بیرونی طور پر پاک ہیں

ਓਹਿਅੰਦਰਹੁਬਾਹਰਹੁਨਿਰਮਲੇਸਚੈਨਾਇਸਮਾਇਆ॥੩॥
ohi andrahu baahrahu nirmalay sachai naa-ay samaa-i-aa. ||3||
Inwardly and outwardly, they are pure, and they are absorbed in the True Name.
ਤੇਰੇਸਦਾਕਾਇਮਰਹਿਣਵਾਲੇਨਾਮਵਿਚਜੁੜੇਹੋਏਉਹਬੰਦੇਅੰਦਰੋਂਬਾਹਰੋਂਸੁੱਚੇਰਹਿੰਦੇਹਨ
اوہِ انّدرہُ باہرہُ نِرملے سچےَ ناءِ سمائِیا
اور سچے نام سچ حق و حقیقت میں جڑے ہوئے ہیں (3

ਸਲੋਕੁਮਃ੧॥
salok mehlaa 1.
Shalok, by the First Guru:
سلوکُ مਃ੧॥

ਸੁਇਨੇਕੈਪਰਬਤਿਗੁਫਾਕਰੀਕੈਪਾਣੀਪਇਆਲਿ॥
su-inay kai parbat gufaa karee kai paanee pa-i-aal.
I may make a cave, in a mountain of gold, or in the water of the nether regions;
ਮੈਂਚਾਹੇਸੋਨੇਦੇਸੁਮੇਰਪਰਬਤਉੱਤੇਗੁਫਾਬਣਾਲਵਾਂ, ਭਾਵੇਂਹੇਠਾਂਪਾਣੀਵਿਚਜਾਰਹਾਂ;
سُئِنے کےَ پربتِ گُپھا کریِ کےَ پانھیِ پئِیالِ
گپھا۔ غا ر۔ پیال ۔ پاتال
خواہ سونے کے پہار میں غار ہو خواہ پاتال کے پانی میں

ਕੈਵਿਚਿਧਰਤੀਕੈਆਕਾਸੀਉਰਧਿਰਹਾਸਿਰਿਭਾਰਿ॥
kai vich Dhartee kai aakaasee uraDh rahaa sir bhaar.
I may remain standing on my head, upside-down, on the earth or up in the sky;
ਚਾਹੇਧਰਤੀਵਿਚਰਹਾਂ, ਚਾਹੇਆਕਾਸ਼ਵਿਚਪੁੱਠਾਸਿਰਭਾਰਖਲੋਤਾਰਹਾਂ,
کےَ ۄِچِ دھرتیِ کےَ آکاسیِ اُردھِ رہا سِرِ بھارِ ॥
۔ اردھ۔ اُلٹا ۔ بر بھار۔ سرکے بھار۔ پٹھا
خواہ زمین میں خواہ آسمان میں اور ہر خواہ سیر کے بھار الٹا کھڑے چاہیے

ਪੁਰੁਕਰਿਕਾਇਆਕਪੜੁਪਹਿਰਾਧੋਵਾਸਦਾਕਾਰਿ॥
pur kar kaa-i-aa kaparh pahiraa Dhovaa sadaa kaar.
I may totally cover my body with clothes, and wash my body continually;
ਸਰੀਰਨੂੰਪੂਰੇਤੌਰਤੇਕਪੜਾਪਹਿਨਾਲਵਾਂ, ਚਾਹੇਸਰੀਰਨੂੰਸਦਾਹੀਧੋਂਦਾਰਹਾਂ,
پُرُ کرِ کائِیا کپڑُ پہِرا دھوۄا سدا کارِ
جسم کو مکمل طور پر کپڑے سے ڈھانپے اور چاہے ہر دوت جسم کو دھوتار ہے

ਬਗਾਰਤਾਪੀਅਲਾਕਾਲਾਬੇਦਾਕਰੀਪੁਕਾਰ॥
bagaa rataa pee-alaa kaalaa baydaa karee pukaar.
I may loudly recite the four vedas, wearing white, red, yellow or black attires.
ਭਾਵੇਂਮੈਂਚਿੱਟੇਲਾਲਪੀਲੇਜਾਂਕਾਲੇਕਪੜੇਪਾਕੇ (ਚਾਰ) ਵੇਦਾਂਦਾਉਚਾਰਨਕਰਾਂ,
بگا رتا پیِئلا کالا بیدا کریِ پُکار
۔ خواہ سفید ۔ لال پیلے ۔ کالے کپڑے پہن کر کرویدوں کو پڑھے

ਹੋਇਕੁਚੀਲੁਰਹਾਮਲੁਧਾਰੀਦੁਰਮਤਿਮਤਿਵਿਕਾਰ॥
ho-ay kucheel rahaa mal Dhaaree durmat mat vikaar.
I may even live in dirt and filth. And yet, this is just a product of evil mindedness, all these are bad deeds of evil intellect.
ਚਾਹੇ (ਸਰੇਵੜਿਆਂਵਾਂਗ) ਗੰਦਾਤੇਮੈਲਾਰਹਾਂ-ਇਹਸਾਰੇਭੈੜੀਮਤਿਦੇਮੰਦੇਕਰਮਹੀਹਨ।
ہوءِ کُچیِلُ رہا ملُ دھاریِ دُرمتِ متِ ۄِکار
۔ کچیل۔ گندہ ۔ مل دھاری ۔ میلا۔ ناپاک۔ درمت ۔ بدعقلی ۔ نالائیقی۔
خواہ گندہ اور ناپاک رہے یہ سارے کم عقلی بے سمجھی اور بے کام ہیں

ਨਾਹਉਨਾਮੈਨਾਹਉਹੋਵਾਨਾਨਕਸਬਦੁਵੀਚਾਰਿ॥੧॥
naa ha-o naa mai naa ha-o hovaa naanak sabad veechaar. ||1||
O’ Nanak, I ponder over only the Name of God, without which neither I was nor I am and nor I shall be worth anything. (means, my ego should be completely erased)
ਹੇਨਾਨਕ! ਮੈਂਕੇਵਲਹਰੀਦੇਨਾਮਦਾਚਿੰਤਨਕਰਦਾਹਾਂ, ਜਿਸਦੇਬਗੈਰਕਿਸੇਮੁੱਲਦਾਨਾਂਮੈਂਸੀ, ਨਾਂਮੈਂਹਾਂਤੇਨਾਂਹੀਮੈਂਹੋਵਾਂਗਾ
نا ہءُ نا مےَ نا ہءُ ہوۄا نانک سبدُ ۄیِچارِ
اے نانک نہ خودی ہو نہ تکبر ہو میں چاہتا ہوں کہ کلام مرشدی یا سبق مرشدی سے اس کی سمجھ سے خودی مٹ جاتی ہے ۔

ਮਃ੧॥
mehlaa 1.
shalok, by the First Guru:
مਃ੧॥

ਵਸਤ੍ਰਪਖਾਲਿਪਖਾਲੇਕਾਇਆਆਪੇਸੰਜਮਿਹੋਵੈ॥
vastar pakhaal pakhaalay kaa-i-aa aapay sanjam hovai.
The one who, daily washes his clothes and bathe his body, and considers himself as ascetic.
ਜੋਮਨੁੱਖਸਿਰਫ਼ਕਪੜੇਤੇਸਰੀਰਸੁੱਚੇਰੱਖਣਨਾਲਹੀ, ਆਪਣੇਵੱਲੋਂਤਪਸ੍ਵੀਬਣਬੈਠਦਾਹੈ,
ۄست٘ر پکھالِ پکھالے کائِیا آپے سنّجمِ ہوۄےَ
وستر۔ کپڑے ۔ پکھاے ۔ وھونا۔ کائیا ۔ جسم۔ سنجم۔ برائیوں پر ضبط۔
انسان صاف کپڑوں اور بدن کی صفائی کرکے ہی اپنے آپ تپسوی ، پرہیزگار بن جاتا ہے ۔

ਅੰਤਰਿਮੈਲੁਲਗੀਨਹੀਜਾਣੈਬਾਹਰਹੁਮਲਿਮਲਿਧੋਵੈ॥
antar mail lagee nahee jaanai baahrahu mal mal Dhovai.
He is not aware of the filth of evil thoughts staining his mind, while he repeatedly tries to wash off the outer dirt.
ਮਨਵਿਚਲੱਗੀਹੋਈਮੈਲਦੀਉਸਨੂੰਖ਼ਬਰਹੀਨਹੀਂ, (ਸਦਾਸਰੀਰਨੂੰ) ਬਾਹਰੋਂਹੀਮਲਮਲਕੇਧੋਂਦਾਹੈ,
انّترِ میَلُ لگیِ نہیِ جانھےَ باہرہُ ملِ ملِ دھوۄےَ
انتر میل۔ دل ناپاک
قلب کی میل ناپاکیزگی نہیں سمجھتا بیرونی صفائی پر زور دیتا ہے

ਅੰਧਾਭੂਲਿਪਇਆਜਮਜਾਲੇ॥
anDhaabhool pa-i-aa jam jaalay.
Being entangled in the fear of death, the spiritually blind goes astray,
(ਉਹ) ਅੰਨ੍ਹਾਮਨੁੱਖ (ਸਿੱਧੇਰਾਹਤੋਂ) ਖੁੰਝਕੇਮੌਤਦਾਡਰਪੈਦਾਕਰਨਵਾਲੇਜਾਲਵਿਚਫਸਿਆਹੋਇਆਹੈ,
انّدھا بھوُلِ پئِیا جم جالے
۔ اندھا۔ بیوقوف۔ جسم جاے ۔ موت کے پھندے میں
۔ عقل کا اندھا صراط مستقیم چھوڑ کر روحانی موت کے پھندے میں پھنستا ہے ۔

ਵਸਤੁਪਰਾਈਅਪੁਨੀਕਰਿਜਾਨੈਹਉਮੈਵਿਚਿਦੁਖੁਘਾਲੇ॥
vasat paraa-ee apunee kar jaanai ha-umai vich dukhghaalay.
He considers other’s property as his own, and in egotism, he suffer in pain.
ਹਉਮੈਵਿਚਦੁੱਖਸਹਾਰਦਾਹੈਕਿਉਂਕਿਪਰਾਈਵਸਤਨੂੰਆਪਣੀਸਮਝਬੈਠਦਾਹੈ।
ۄستُ پرائیِ اپُنیِ کرِ جانےَ ہئُمےَ ۄِچِ دُکھُ گھالے
۔ دست پرائی ۔ بیگانی چیروں۔ دکھ ۔ عذاب۔ گھاے ۔ اُٹھاتا ہے ۔ ہونمے تٹلے۔ خودی مٹی (2)
دوسروں کی چیزوں اور اشیا کو اپنی سمجھتا ہے اور خودی اور تکبر میں عذاب پاتا ہے ۔

ਨਾਨਕਗੁਰਮੁਖਿਹਉਮੈਤੁਟੈਤਾਹਰਿਹਰਿਨਾਮੁਧਿਆਵੈ॥
naanak gurmukh ha-umai tutai taa har har naam Dhi-aavai.
O’ Nanak, when the egotism of the Guru’s follower is erased, then he meditates on God’s Name with loving devotion.
ਹੇਨਾਨਕ! (ਜਦੋਂ) ਗੁਰੂਦੇਸਨਮੁਖਹੋਕੇ (ਮਨੁੱਖਦੀ) ਹਉਮੈਦੂਰਹੁੰਦੀਹੈ, ਤਦੋਂਉਹਪ੍ਰਭੂਦਾਨਾਮਸਿਮਰਦਾਹੈ,
نانک گُرمُکھِ ہئُمےَ تُٹےَ تا ہرِ ہرِ نامُ دھِیاۄےَ
اے نانک: سبق مرشد سے خودی ختم ہوتی ہے تب الہٰی نام کی ریاض کرتا ہے

ਨਾਮੁਜਪੇਨਾਮੋਆਰਾਧੇਨਾਮੇਸੁਖਿਸਮਾਵੈ॥੨॥
naam japay naamo aaraaDhay naamay sukh samaavai. ||2||
He obtains peace by meditating on God’s name with love and devotion.
ਨਾਮਜਪਦਾਹੈ, ਨਾਮਹੀਯਾਦਕਰਦਾਹੈਤੇਨਾਮਦੀਹੀਬਰਕਤਿਨਾਲਸੁਖਵਿਚਟਿਕਿਆਰਹਿੰਦਾਹੈ l
نامُ جپے نامو آرادھے نامے سُکھِ سماۄےَ
اور نام کی برکات سے سکھ پاتا ہے (2)

ਪਵੜੀ॥
pavrhee.
Pauree:
پۄڑیِ ॥

ਕਾਇਆਹੰਸਿਸੰਜੋਗੁਮੇਲਿਮਿਲਾਇਆ॥
kaa-i-aa hans sanjog mayl milaa-i-aa.
Destiny has brought together and united the body and the soul.
ਪਰਮਾਤਮਾਨੇਸਰੀਰਤੇਆਤਮਾਦਾਸੰਜੋਗਮਿਥਕੇਇਹਨਾਂਨੂੰਮਨੁੱਖਾ-ਜਨਮਵਿਚਇਕੱਠਾਕਰਦਿੱਤਾਹੈ।
کائِیا ہنّسِ سنّجوگُ میلِ مِلائِیا
کائیا۔ جسم۔ ہنس ۔ روح۔ جان ۔ سنجوگ۔ ملاپ ۔
خدا نے جسم اور روح یا سانس کے ملا پ سے انسان پیدا کیا

ਤਿਨਹੀਕੀਆਵਿਜੋਗੁਜਿਨਿਉਪਾਇਆ॥
tin hee kee-aa vijog jin upaa-i-aa.
He who created them, also separates them.
ਜਿਸਪ੍ਰਭੂਨੇਸਰੀਰਤੇਜੀਵਨੂੰਪੈਦਾਕੀਤਾਹੈਉਸਨੇਹੀਇਹਨਾਂਲਈਵਿਛੋੜਾਭੀਬਣਾਰੱਖਿਆਹੈ।
تِن ہیِ کیِیا ۄِجوگُ جِنِ اُپائِیا
وجوگ۔ جدائی ۔ اُپائیا۔ پیدا کیا۔ مورکھ ۔ نادان ۔ سبائیا۔ زیادہ ۔
اور اسی نے جس نے پیدا کیا جدائی بھی بنائی ۔

ਮੂਰਖੁਭੋਗੇਭੋਗੁਦੁਖਸਬਾਇਆ॥
moorakhbhogay bhog dukh sabaa-i-aa
Forsaking God, the fool enjoys the pleasures, which is the root cause of all pains.
ਪ੍ਰਭੂਨੂੰਭੁਲਾਕੇਮੂਰਖ (ਜੀਵ) ਭੋਗਭੋਗਦਾਰਹਿੰਦਾਹੈ (ਜੋ) ਸਾਰੇਦੁੱਖਾਂਦਾ (ਮੂਲਬਣਦਾ) ਹੈ।
موُرکھُ بھوگے بھوگُ دُکھ سبائِیا
نادان اسکے نتائج برداشت کرتا ہے

ਸੁਖਹੁਉਠੇਰੋਗਪਾਪਕਮਾਇਆ॥
sukhhu uthay rog paap kamaa-i-aa.
From pleasures, arise diseases and the commission of sins.
ਪਾਪਕਮਾਣਦੇਕਾਰਨ (ਭੋਗਾਂਦੇ) ਸੁਖਤੋਂਰੋਗਪੈਦਾਹੁੰਦੇਹਨ।
سُکھہُ اُٹھے روگ پاپ کمائِیا
اور عذاب پاتا ہے ۔ آرام و آسائش سے بیماریاں پیدا ہوتی ہے ۔

ਹਰਖਹੁਸੋਗੁਵਿਜੋਗੁਉਪਾਇਖਪਾਇਆ॥
harkhahu sog vijog upaa-ay khapaa-i-aa.
From sinful pleasures come sorrow, separation and cycles of birth and death.
(ਭੋਗਾਂਦੀਖ਼ੁਸ਼ੀਤੋਂਚਿੰਤਾ (ਤੇਅੰਤਨੂੰ) ਵਿਛੋੜਾਪੈਦਾਹੁੰਦਾਹੈਅਤੇਜਨਮਮਰਨਦਾਗੇੜਪੈਜਾਂਦਾਹੈ।
ہرکھہُ سوگُ ۄِجوگُ اُپاءِ کھپائِیا
ہر کھ ۔خؤشی ۔ سوگ ۔ رنج۔ افسوس
اور گناہوں سے آرام ملتا ہے ۔ اور اسی سے خوشی ، رنج وغم اور جدائی پیدا ہوتی ہے ۔

ਮੂਰਖਗਣਤਗਣਾਇਝਗੜਾਪਾਇਆ॥
moorakh ganat ganaa-ay jhagrhaa paa-i-aa.
The fools try to account for their misdeeds, and argue uselessly.
ਮੂਰਖਾਂਵਾਲੇਕੰਮਕਰਕੇਜਨਮਮਰਨਦਾਲੰਮਾਝੰਬੇਲਾਸਹੇੜਲੈਂਦਾਹੈ।
موُرکھ گنھت گنھاءِ جھگڑا پائِیا ॥
گنت گنائے ۔ حساب کرکے
اور نادان اعمال کے حساب ( میں ) کے جھنجٹ میں پھنس جاتا ہے

ਸਤਿਗੁਰਹਥਿਨਿਬੇੜੁਝਗੜੁਚੁਕਾਇਆ॥
satgur hath nibayrhjhagarh chukaa-i-aa.
The judgement (for the strife of births and deaths) is in the Hands of the True Guru, who puts an end to the argument.
ਜਨਮਮਰਨਦੇਗੇੜਨੂੰਮੁਕਾਣਦੀਤਾਕਤਸਤਿਗੁਰੂਦੇਹੱਥਵਿਚਹੈ, ਜਿਸਨੂੰਗੁਰੂਖਤਮਕਰਦਿੰਦੇਹਨ।
ستِگُر ہتھِ نِبیڑُ جھگڑُ چُکائِیا
۔ نبیڑ ۔ فیصلہ ۔
۔ فیصلہ سچے مرشد کے اختیار ہے جسکا مرشد سے ملاپ ہے اسکا یہ مخمسہ حل ہو جاتا ہے ۔

ਕਰਤਾਕਰੇਸੁਹੋਗੁਨਚਲੈਚਲਾਇਆ॥੪॥
kartaa karay so hog na chalai chalaa-i-aa. ||4||
Whatever the Creator does, comes to pass. It cannot be changed by anyone’s efforts.
(ਜੀਵਾਂਦੀਕੋਈ) ਆਪਣੀਚਲਾਈਸਿਆਣਪਚੱਲਨਹੀਂਸਕਦੀ, ਜੋਕਰਤਾਰਕਰਦਾਹੈਉਹੀਹੁੰਦਾਹੈ l
کرتا کرے سُ ہوگُ ن چلےَ چلائِیا
۔ اور تناسخ پاتا ہے انسانی ہوشمندی یا دانائی کام نہیں آتی وہی ہوتا ہے جو خدا کرتا ہے (4)

ਸਲੋਕੁਮਃ੧॥
salok mehlaa 1.
Shalok, by the First Guru:
سلوک مਃ੧॥

ਕੂੜੁਬੋਲਿਮੁਰਦਾਰੁਖਾਇ॥
koorh bol murdaar khaa-ay.
The one who seizes the rights of others by deceit, is like an animal that eats dead corpse
(ਜੋਮਨੁੱਖ) ਝੂਠਬੋਲਕੇ (ਆਪਤਾਂ) ਦੂਜਿਆਂਦਾਹੱਕਖਾਂਦਾਹੈ,
کوُڑُ بولِ مُردارُ کھاءِ ॥
مردار ۔ پرائیاحق
جو انسان جھوٹ بول کر دوسروں کا حق کھاتا ہے اور دوسروں کو سمجھاتا ہے