Urdu-Page-376

ਕਹੁ ਨਾਨਕ ਗੁਣ ਗਾਈਅਹਿ ਨੀਤ ॥
kaho naanak gun gaa-ee-ah neet.
Nanak Says, always sing the Praises of God.
ਨਾਨਕ ਆਖਦਾ ਹੈ– ਸਦਾ ਪਰਮਾਤਮਾ ਦੇ ਗੁਣ ਗਾਏ ਜਾਣੇ ਚਾਹੀਦੇ ਹਨ,
 کہُ نانک گُنھ گائیِئہِ نیِت 
کہ نانک۔ اے نانک بتاوے ۔ نیت ہر روز ۔
اے نانک۔ بتاوے کہ ہر روز الہٰی صفت صلاح کرؤ 

 ਮੁਖ ਊਜਲ ਹੋਇ ਨਿਰਮਲ ਚੀਤ ॥੪॥੧੯॥
mukh oojal ho-ay nirmal cheet. ||4||19||
By doing so the mind becomes pure and honor is obtained both here and hereafter. ||4||19||
ਇਸ ਉੱਦਮ ਦੀ ਬਰਕਤਿ ਨਾਲਲੋਕ ਪਰਲੋਕ ਵਿਚ ਮੁਖ ਉਜਲਾ ਹੋ ਜਾਂਦਾ ਹੈਅਤੇ ਮਨ ਪਵਿਤ੍ਰ ਹੋ ਜਾਂਦਾ ਹੈ ੧੯ 
 مُکھ اوُجل ہوءِ نِرمل چیِت ੧੯ 
نرمل چیت۔ دل پاک ہو۔
تاکہ سر خرو پاک دل ہو جائے

 ਆਸਾ ਮਹਲਾ ੫ ॥
aasaa mehlaa 5.
Raag Aasaa, Fifth Guru:
 آسا مہلا  
 ਨਉ ਨਿਧਿ ਤੇਰੈ ਸਗਲ ਨਿਧਾਨ ॥
na-o niDh tayrai sagal niDhaan.
O’ God, in Your possession are all the nine treasures of the world.
(ਹੇ ਪ੍ਰਭੂ!) ਤੇਰੇ ਘਰ ਵਿਚ (ਜਗਤ ਦੀਆਂਨੌ ਹੀ ਨਿਧੀਆਂ ਮੌਜੂਦ ਹਨ ਸਾਰੇ ਖ਼ਜ਼ਾਨੇ ਮੌਜੂਦ ਹਨ
 نءُ نِدھِ تیرےَ سگل نِدھان 
نوندھ۔ نو قسم کے آرام وآسائش کے سامان۔ ندھان۔ خزانے ۔
۔ اے خدا تیرے پاس تمام آرام و آسائش کا سامان اور تمام خزانے موجود ہیں۔ 

 ਇਛਾ ਪੂਰਕੁ ਰਖੈ ਨਿਦਾਨ ॥੧॥
ichhaa poorak rakhai nidaan. ||1||
You fulfill the desires of all the beings and save them in the end. ||1||
ਤੂੰ ਹਰੇਕ ਜੀਵ ਦੀ ਇੱਛਾ ਪੂਰੀ ਕਰਦਾ ਹੈਂ ਤੇ ਅੰਤ ਨੂੰ ਹਰੇਕ ਜੀਵ ਦੀ ਰਾਖੀ ਕਰਦਾ ਹੈ 
 اِچھا پوُرکُ رکھےَ نِدان 
اچھا پورک۔ خواہشات پوریاں کرنے والے ۔ (
1)
تجھ میں تمام خواہشات پوری کرنے کی قوت ہے اور حفاظت کرنے والا ہے ۔ (1)

 ਤੂੰ ਮੇਰੋ ਪਿਆਰੋ ਤਾ ਕੈਸੀ ਭੂਖਾ ॥
tooN mayro pi-aaro taa kaisee bhookhaa.
O’ God, If I have Your love, then I do not have any worldly desires.
ਹੇ ਪ੍ਰਭੂਜਦੋਂ ਤੂੰ ਮੇਰੇ ਨਾਲ ਪਿਆਰ ਕਰਨ ਵਾਲਾ ਹੈਂਤਾਂ ਮੈਨੂੰ ਕੋਈ ਤ੍ਰਿਸ਼ਨਾ ਨਹੀਂ ਰਹਿ ਸਕਦੀ
 توُنّ میرو پِیارو تا کیَسیِ بھوُکھا 
بھوکا ۔ خواہش باقی نہیں رہتی ۔ (
1)۔ رہاؤ۔
اے خدا جب تو میرا پیارا ہے ۔تو میری کوئی خواہش باقی نہیں رہ سکتی ۔

 ਤੂੰ ਮਨਿ ਵਸਿਆ ਲਗੈ ਨ ਦੂਖਾ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥
tooN man vasi-aa lagai na dookhaa. ||1|| rahaa-o.
When You dwell within my mind, no misery can afflict me. ||1||Pause||
ਜਦ ਤੂੰ ਮੇਰੇ ਚਿੱਤ ਅੰਦਰ ਵਸਦਾ ਹੈਂ ਕੋਈ ਭੀ ਦੁੱਖ ਮੈਨੂੰ ਪੋਹ ਨਹੀਂ ਸਕਦਾ  ਰਹਾਉ 
 توُنّ منِ ۄسِیا لگےَ ن دوُکھا  رہاءُ  
جب میرے د میں تو اور تیری یاد بس جائے تو کوئی عذاب نہیں آسکتا (
1)رہاؤ

 ਜੋ ਤੂੰ ਕਰਹਿ ਸੋਈ ਪਰਵਾਣੁ ॥
jo tooN karahi so-ee parvaan.
O’ God, whatever You do, is acceptable to me.
ਹੇ ਪ੍ਰਭੂਜੋ ਕੁੱਛ ਤੂੰ ਕਰਦਾ ਹੈਮੈਨੂੰ ਉਹੀ ਮਨਜੂਰ ਹੈ
 جو توُنّ کرہِ سوئیِ پرۄانھُ 
پروان۔ منظور ۔ فرمان حکم۔ (
2)
اے خدا جو تو کرتا ہے وہی سب کو منظور ہوتا ہے ۔ 

 ਸਾਚੇ ਸਾਹਿਬ ਤੇਰਾ ਸਚੁ ਫੁਰਮਾਣੁ ॥੨॥
saachay saahib tayraa sach furmaan. ||2||
O’ the eternal Master, eternal is Your command. ||2||
ਹੇ ਸਦਾ ਕਾਇਮ ਰਹਿਣ ਵਾਲੇ ਮਾਲਕਤੇਰਾ ਹੁਕਮ ਭੀ ਅਟੱਲ ਹੈ 
 ساچے ساحِب تیرا سچُ پھُرمانھُ  
اے سچے مالک تیرا فرمان سچا اور صدیوی ہے ۔ (
2)۔ 

 ਜਾ ਤੁਧੁ ਭਾਵੈ ਤਾ ਹਰਿ ਗੁਣ ਗਾਉ ॥
jaa tuDh bhaavai taa har gun gaa-o.
O’ God, when it pleases You, I sing Your praises.
ਹੇ ਪ੍ਰਭੂਜਦੋਂ ਤੈਨੂੰ ਮਨਜ਼ੂਰ ਹੁੰਦਾ ਹੈ ਤਦੋਂ ਹੀ ਮੈਂ ਤੇਰੀ ਸਿਫ਼ਤਿਸਾਲਾਹ ਦੇ ਗੀਤ ਗਾ ਸਕਦਾ ਹਾਂ
 جا تُدھُ بھاۄےَ تا ہرِ گُنھ گاءُ 
بھاوے ۔چاتا ہے ۔
تیری رضا و رغبت ہی تیری صفت صلاح ہو سکتی ہے ۔ 

 ਤੇਰੈ ਘਰਿ ਸਦਾ ਸਦਾ ਹੈ ਨਿਆਉ ॥੩॥
tayrai ghar sadaa sadaa hai ni-aa-o. ||3||
In Your court, there is justice, forever and ever. ||3||
ਤੇਰੇ ਘਰ ਵਿਚ ਸਦਾ ਹੀ ਇਨਸਾਫ਼ ਹੈਸਦਾ ਹੀ ਇਨਸਾਫ਼ ਹੈ 
 تیرےَ گھرِ سدا سدا ہےَ نِیاءُ 
نیاو۔ انصاف ۔ (
3)
تو ایک منصف آہے اور انصاف کرتا ہے ۔ (3)

 ਸਾਚੇ ਸਾਹਿਬ ਅਲਖ ਅਭੇਵ ॥
saachay saahib alakh abhayv.
O’ my eternal Master-God, You are unfathomable and incomprehensible.
ਹੇ ਸਦਾ ਕਾਇਮ ਰਹਿਣ ਵਾਲੇ ਮਾਲਕਹੇ ਅਲੱਖ ਤੇ ਅਭੇਵ!
 ساچے ساہِب الکھ ابھیۄ 
الکھ ۔ ناقابل بیان ۔ ابھیو جس کا راز معلوم نہ ہو سکے ۔
اے سچے مالک تو بیان نہیں ہو سکتا نہ تیرا کوئی اندازہ ہو سکتا ہے نہ تیرا کوئی راز دان ہے 

 ਨਾਨਕ ਲਾਇਆ ਲਾਗਾ ਸੇਵ ॥੪॥੨੦॥
naanak laa-i-aa laagaa sayv. ||4||20||
O’ Nanak, one can engage in devotional worship only when inspired by You. ||4||20||
ਹੇ ਨਾਨਕ! (ਆਖ-) ਤੇਰਾ ਪ੍ਰੇਰਿਆ ਹੋਇਆ ਹੀ ਜੀਵ ਤੇਰੀ ਸੇਵਾਭਗਤੀ ਵਿਚ ਲੱਗ ਸਕਦਾ ਹੈ ੨੦ 
 نانک لائِیا لاگا سیۄ ੨੦ 
اے نانک: بتادے تیرا لگایئیا ہوا آہی تیری خدمت کر سکتا ہے اور عبادت و ریاضت کرتا ہے

 ਆਸਾ ਮਹਲਾ ੫ ॥
aasaa mehlaa 5.
Raag Aasaa, Fifth Guru:
 آسا مہلا  
 ਨਿਕਟਿ ਜੀਅ ਕੈ ਸਦ ਹੀ ਸੰਗਾ ॥
nikat jee-a kai sad hee sangaa.
God is always near at hand in the company of His beings.
ਹੇ ਭਾਈ! ਪਰਮਾਤਮਾ ਸਭ ਜੀਵਾਂ ਦੇ ਨੇੜੇ ਵੱਸਦਾ ਹੈ ਸਦਾ ਸਭਨਾਂ ਦੇ ਅੰਗਸੰਗ ਰਹਿੰਦਾ ਹੈ,
 نِکٹِ جیِء کےَ سد ہیِ سنّگا 
نکٹ۔ نزدیک۔ سنگا۔ ساتھ۔ قدرت۔ قوت الہٰی ۔
وہ ہمارا مالک اور آقا ہے ۔ رہاؤ۔خدا سب کے ساتھ ہے۔ 

 ਕੁਦਰਤਿ ਵਰਤੈ ਰੂਪ ਅਰੁ ਰੰਗਾ ॥੧॥
kudrat vartai roop ar rangaa. ||1||
His creative power is pervading, in all forms and colors. ||1||
ਉਸੇ ਦੀ ਹੀ ਕਲਾ (ਤਾਕਤਸਭ ਰੂਪਾਂ ਵਿਚ ਸਭ ਰੰਗਾਂ ਵਿਚ ਕੰਮ ਕਰ ਰਹੀ ਹੈ 
 کُدرتِ ۄرتےَ روُپ ارُ رنّگا 
روپ رنگا۔ شکل و صورت
اسی کی قوت سب شکلوں اور صورت میں کام کر رہی ہے ۔ (
1)

 ਕਰ੍ਹੈ ਨ ਝੁਰੈ ਨਾ ਮਨੁ ਰੋਵਨਹਾਰਾ ॥
karHai na jhurai naa man rovanhaaraa.
The mind of that person never agonizes nor cries out in pain or fear,
ਉਸ ਮਨੁੱਖ ਦਾ ਮਨ ਕਦੇ ਖਿੱਝਦਾ ਨਹੀਂ ਕਦੇ ਝੁਰਦਾ ਨਹੀਂ ਕਦੇ ਗਿਲੇ ਗੁਜ਼ਾਰੀਆਂ ਨਹੀਂ ਕਰਦਾ,
 کر٘ہےَ ن جھُرےَ نا منُ روۄنہارا 
(
1)کرہے ۔ کڑھدا۔ دلی جلن ذہنی غصہ ۔ جھرے ۔ تاسف یا افسوس نہیں کرتا۔
نہ اس کے دل میں تشویش پیدا ہوتی ہے نہ افسوس اور غمگینی اور نہ گلے شکوے پیدا ہوتے ہیں

 ਅਵਿਨਾਸੀ ਅਵਿਗਤੁ ਅਗੋਚਰੁ ਸਦਾ ਸਲਾਮਤਿ ਖਸਮੁ ਹਮਾਰਾ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥
avinaasee avigat agochar sadaa salaamat khasam hamaaraa. ||1|| rahaa-o.
who develops this faith that our Master-God is imperishable, invisible, incomprehensible, and forever secure and safe. ||1||Pause||
ਜਿਸ ਨੂੰ ਇਹ ਨਿਸਚਾ ਹੋ ਜਾਂਦਾ ਹੈ ਕਿ ਅਬਿਨਾਸੀ ਅਦ੍ਰਿਸ਼ ਤੇ ਅਪਹੁੰਚ ਪਰਮਾਤਮਾ ਸਾਡੇ ਸਿਰ ਉਤੇ ਸਦਾਕਾਇਮ ਰਹਿਣ ਵਾਲਾ ਖਸਮ ਕਾਇਮ ਹੈ  ਰਹਾਉ  
 اۄِناسیِ اۄِگتُ اگوچرُ سدا سلامتِ کھسمُ ہمارا  رہاءُ 
اوناسی ۔ لا فناہ اوگت ۔ جس کی حالت بیان کی نہ جا سکے ۔ اگو چر۔ نا قابل بیان۔ سلامت۔ زندہ ۔ قائم۔ خصم ۔ خاوند۔ آقا۔ مالک ۔(
1) رہاؤ۔
جس انسان کو یہ یقین اور بھرؤسا ہو جاتا ہے لافناہ ۔ نا قابل بیان جو انسانی رسائی اور طاقت سے بلند اور صدیوی ہے ۔

 ਤੇਰੇ ਦਾਸਰੇ ਕਉ ਕਿਸ ਕੀ ਕਾਣਿ ॥
tayray daasray ka-o kis kee kaan.
O’ God, Your humble devotee does not remain subservience to anyone,
ਹੇ ਪ੍ਰਭੂਤੇਰੇ ਸੇਵਕ ਨੂੰ ਕਿਸੇ ਦੀ ਮੁਥਾਜੀ ਨਹੀਂ ਰਹਿੰਦੀ
 تیرے داسرے کءُ کِس کیِ کانھِ 
داسرا۔ خادم۔ کان ۔ محتاجی ۔ دست نگر۔
اےخدا تیرے خدمتگار کو کس کی محتاجی ہے 

 ਜਿਸ ਕੀ ਮੀਰਾ ਰਾਖੈ ਆਣਿ ॥੨॥
jis kee meeraa raakhai aan. ||2||
because You, the sovereign God protects his honor Yourself. ||2||
ਜਿਸ ਸੇਵਕ ਦੀ ਇੱਜ਼ਤ ਪ੍ਰਭੂਪਾਤਿਸ਼ਾਹ ਆਪ ਰੱਖੇ 
 جِس کیِ میِرا راکھےَ آنھِ 
میرا بادشاہ ۔ آن عزت ۔ (
2)
جس کا تو اے میرے شنہشاہ خدا تو محافظ اور عزت کا رکھوالا ہو۔ 

 ਜੋ ਲਉਡਾ ਪ੍ਰਭਿ ਕੀਆ ਅਜਾਤਿ ॥
jo la-udaa parabh kee-aa ajaat.
The humble servant, whom God has released from the bonds of social status,
ਜਿਸ ਸੇਵਕ ਨੂੰ ਪਰਮਾਤਮਾ ਨੇ ਉੱਚੀ ਜਾਤਿ ਆਦਿਕ ਦੇ ਅਹੰਕਾਰ ਤੋਂ ਰਹਿਤ ਕਰ ਦਿੱਤਾ,
 جو لئُڈا پ٘ربھِ کیِیا اجاتِ 
لؤڈا۔ خادم ۔ خدمتگار ۔ اجات ذات سے بلند۔ بے بلا ذات۔
جس خادم کو خدا ذات ۔ کی غلامی سے اوپر اُٹھالیا ۔ 

 ਤਿਸੁ ਲਉਡੇ ਕਉ ਕਿਸ ਕੀ ਤਾਤਿ ॥੩॥
tis la-uday ka-o kis kee taat. ||3||
that devotee does not feel jealous of anyone’s higher status. ||3||
ਉਹ ਸੇਵਕ ਕਿਸੇ ਨਾਲ ਈਰਖਾ ਨਹੀਂ ਕਰਦਾ 
 تِسُ لئُڈے کءُ کِس کیِ تاتِ 
تات۔ حسد۔ محتاجی ۔
تب اس خادم کا کسی کے حسد سے کیا واسطہ (
2)

 ਵੇਮੁਹਤਾਜਾ ਵੇਪਰਵਾਹੁ ॥ 
vaymuhtaajaa vayparvaahu.
God is not dependent upon anyone and He is free of all worries.
ਪਰਮਾਤਮਾ ਬੇਪਰਵਾਹ ਹੈ ਉਸ ਨੂੰ ਕਿਸੇ ਦੀ ਮੁਥਾਜੀ ਨਹੀਂ 
 ۄیمُہتاجا ۄیپرۄاہُ 
 خدا کو جسے نہ کوئی پرواہ ہے نہ محتاجی ہے 

 ਨਾਨਕ ਦਾਸ ਕਹਹੁ ਗੁਰ ਵਾਹੁ ॥੪॥੨੧॥
 naanak daas kahhu gur vaahu. ||4||21||
O’ Nanak, recite praises of the supreme God.||4||21||
ਹੇ ਨਾਨਕਉਸ ਸਭ ਤੋਂ ਵੱਡੇ ਪਰਮਾਤਮਾ ਨੂੰ ਹੀ ਧੰਨ ਧੰਨ ਖਦੇ ਰਹੋ ੨੧ 
 نانک داس کہہُ گُر ۄاہُ ੨੧ 
اے خادم نانک اس مرشد کو شاباش کہوں

 ਆਸਾ ਮਹਲਾ ੫ ॥
aasaa mehlaa 5.
 Raag Aasaa, Fifth Guru:
 آسا مہلا  
 ਹਰਿ ਰਸੁ ਛੋਡਿ ਹੋਛੈ ਰਸਿ ਮਾਤਾ ॥
har ras chhod hochhai ras maataa.
Forsaking the sublime nectar of God’s Name, human being is engrossed in the worthless and perishable worldly pleasures.
ਮਨੁੱਖ ਪਰਾਮਤਮਾ ਦਾ ਨਾਮਰਸ ਛੱਡ ਕੇ (ਦੁਨੀਆ ਦੇ ਪਦਾਰਥਾਂ ਦੇਰਸ ਵਿਚ ਮਸਤ ਰਹਿੰਦਾ ਹੈ ਜੋ ਮੁੱਕ ਭੀ ਛੇਤੀ ਹੀ ਜਾਂਦਾ ਹੈ
 ہرِ رسُ چھوڈِ ہوچھےَ رسِ ماتا 
ہوچھے ۔ بیکار۔ غلط۔ رس۔ لطف۔ مزے ۔ ماتا۔ 
الہٰی نام یا سچائی کے لطف چھوڑ کر دنیاوی بدیوں میں مصروف ہے ۔ 

 ਘਰ ਮਹਿ ਵਸਤੁ ਬਾਹਰਿ ਉਠਿ ਜਾਤਾ ॥੧॥
ghar meh vasat baahar uth jaataa. ||1||
The wealth of Naam is present in one’s heart, but he runs out to find it. ||1||
ਨਾਮਵਸਤ (ਇਸਦੇਹਿਰਦੇਘਰ ਵਿਚ ਮੌਜੂਦ ਹੈਪਰ ਉਹ ਇਸ ਨੂੰ ਭਾਲਣ ਲਈ ਬਾਹਰ ਉਠ ਦੌੜਦਾ ਹੈ  
 گھر مہِ ۄستُ باہرِ اُٹھِ جاتا 
مست۔ سچ ۔
الہٰی نام جو دل میں بستا ہے اسے باہر تلاش کرتا ہے ۔ (
1)

 ਸੁਨੀ ਨ ਜਾਈ ਸਚੁ ਅੰਮ੍ਰਿਤ ਕਾਥਾ ॥
sunee na jaa-ee sach amrit kaathaa.
He doesn’t like to listen to the ambrosial divine words of God’s praises.
ਉਹ ਪ੍ਰਭੂ ਦੀਆਂ ਆਤਮਕ ਜੀਵਨ ਦੇਣ ਵਾਲੀਆਂ ਸਿਫ਼ਤਿਸਾਲਾਹ ਦੀਆਂ ਗੱਲਾਂ ਸੁਣਨੀਆਂ ਪਸੰਦ ਨਹੀਂ ਕਰਦਾ
 سُنیِ ن جائیِ سچُ انّم٘رِت کاتھا 
انمرت ۔ کاتھا۔ سچی زندگی کے لئے آب حیات کی کہانی ۔ رہاؤ۔
سچی آب حیات جیسی نصیحتوں کہانیوں جس سے زندگی کو راستی اور صراط مستقیم حاصل ہوتا ہے سننا پسند نہیں کرتا۔ 

 ਰਾਰਿ ਕਰਤ ਝੂਠੀ ਲਗਿ ਗਾਥਾ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥
raar karat jhoothee lag gaathaa. ||1|| rahaa-o.
But gladly enters into big arguments and contentions after listening to false scriptures. ||1||Pause||
ਪਰ ਝੂਠੀ ਕਿਸੇ ਕੰਮ ਨਾਹ ਆਉਣ ਵਾਲੀ ਕਥਾਕਹਾਣੀ ਵਿਚ ਲੱਗ ਕੇ ਹੋਰਨਾਂ ਨਾਲ ਝਗੜਾਬਖੇੜਾ ਕਰਦਾ ਰਹਿੰਦਾ ਹੈ  ਰਹਾਉ 
 رارِ کرت جھوُٹھیِ لگِ گاتھا  رہاءُ 
جھگڑا رار گاتھا۔ کہاوت (
1) رہاؤ۔
انسان جھوٹی کہانیوں اور کہاوتوں کے زیر اثر جھگڑے کرتا رہتا ہے

 ਵਜਹੁ ਸਾਹਿਬ ਕਾ ਸੇਵ ਬਿਰਾਨੀ ॥
vajahu saahib kaa sayv biraanee.
He takes his sustenance from God, but serves another.
ਉਹ ਖਾਂਦਾ ਤਾਂ ਹੈ ਮਾਲਕਪ੍ਰਭੂ ਦਾ ਦਿੱਤਾ ਹੋਇਆਪਰ ਸੇਵਾ ਕਰਦਾ ਹੈ ਬਿਗਾਨੀ l 
 ۄجہُ ساہِب کا سیۄ بِرانیِ 
وجہو۔ اُجرت۔ تنخواہ ۔ برانی ۔ بیگانی ۔
انسان صرف خدادا نعمتیں کرتا ہے مگر خدمت دوسروں کی کرتا ہے ۔ (
2)

 ਐਸੇ ਗੁਨਹ ਅਛਾਦਿਓ ਪ੍ਰਾਨੀ ॥੨॥
aisay gunah achhaadi-o paraanee. ||2||
Such are the kind of sins in which the mortal is engrossed. ||2||
ਅਜਿਹੇ ਪਾਪਾਂ ਹੇਠ ਮਨੁੱਖ ਦਬਿਆ ਰਹਿੰਦਾ ਹੈ 
 ایَسے گُنہ اچھادِئو پ٘رانیِ 
اچھا دیؤ۔ چھپاتے ہو۔ پرانی اے انسان

 ਤਿਸੁ ਸਿਉ ਲੂਕ ਜੋ ਸਦ ਹੀ ਸੰਗੀ ॥
tis si-o look jo sad hee sangee.
He tries to hide from God who is always his companion.
ਜੇਹੜਾ ਪਰਮਾਤਮਾ ਸਦਾ ਹੀ (ਜੀਵ ਦੇ ਨਾਲਸਾਥੀ ਹੈ ਉਸ ਤੋਂ ਓਹਲਾ ਕਰਦਾ ਹੈ,
 تِسُ سِءُ لوُک جو سد ہیِ سنّگیِ 
(
2)لوگ۔ چھپانا ۔ (3)
س سے چھپاتا ہے ۔ جو ہمیشہ ساتھ ہے ۔ 

 ਕਾਮਿ ਨ ਆਵੈ ਸੋ ਫਿਰਿ ਫਿਰਿ ਮੰਗੀ ॥੩॥
kaam na aavai so fir fir mangee. ||3||
He keeps begging the worldly wealth which is of no use in the end. ||3||
ਜੇਹੜੀ ਚੀਜ਼ (ਆਖ਼ਿਰ ਕਿਸੇਕੰਮ ਨਹੀਂ ਆਉਣੀਉਹੀ ਮੁੜ ਮੁੜ ਮੰਗਦਾ ਰਹਿੰਦਾ ਹੈ
 کامِ ن آۄےَ سو پھِرِ پھِرِ منّگیِ  
جو چیز کام نہیں آتی بار بار مانگتا ہے ۔ (
3)

 ਕਹੁ ਨਾਨਕ ਪ੍ਰਭ ਦੀਨ ਦਇਆਲਾ ॥
kaho naanak parabh deen da-i-aalaa.
Nanak says, O’ the merciful God of the meek,
ਨਾਨਕ ਆਖਦਾ ਹੈ– ਹੇ ਦੀਨਾਂ ਉਤੇ ਦਇਆ ਕਰਨ ਵਾਲੇ ਪ੍ਰਭੂ!
 کہُ نانک پ٘ربھ دیِن دئِیالا 
دین دیالا۔ غربیوں پر مہربان رحمان الرحیم۔ پرتپالا۔ پرورش کرنے والا ۔
اے نانک بتادے کہ خدا غریبوں پر مہربانی کرنے والا ہے

 ਜਿਉ ਭਾਵੈ ਤਿਉ ਕਰਿ ਪ੍ਰਤਿਪਾਲਾ ॥੪॥੨੨॥
ji-o bhaavai ti-o kar partipaalaa. ||4||22||
please save human beings from these vices in whatever way it pleases You. ||4||22||
 ਜਿਸ ਤਰ੍ਹਾਂ ਤੈਨੂੰ ਚੰਗਾ ਲੱਗਦਾ ਹੈਉਸੇ ਤਰ੍ਹਾਂ ਹੀ (ਵਿਕਾਰਾਂ ਅਤੇ ਮਾਇਆ ਦੇ ਮੋਹ ਦੇ ਦਬਾਉ ਤੋਂਜੀਵਾਂ ਦੀ ਰਾਖੀ ਕਰ ੨੨
 جِءُ بھاۄےَ تِءُ کرِ پ٘رتِپالا ੨੨ 
جیسے چاہتا ہے پرورش کرتا ہے ۔ (
4)

 ਆਸਾ ਮਹਲਾ ੫ ॥
aasaa mehlaa 5.
Raag Aasaa, Fifth Guru:
 آسا مہلا  
 ਜੀਅ ਪ੍ਰਾਨ ਧਨੁ ਹਰਿ ਕੋ ਨਾਮੁ ॥
jee-a paraan Dhan har ko naam.
God’s Name is the true wealth for life and soul.
ਜਿੰਦ ਵਾਸਤੇ ਪ੍ਰਾਣਾਂ ਵਾਸਤੇ ਪਰਮਾਤਮਾ ਦਾ ਨਾਮ (ਹੀ ਅਸਲਧਨ ਹੈ,
 جیِء پ٘ران دھنُ ہرِ کو نامُ 
جیئہ پران ۔ انسانی زندگی کے لئے ۔ دن ۔ سرمایہ ۔ ہو کو نام۔ الہٰی نام ہے ۔
زندگی کے لئے زندہ رہنے کے لئے الہٰی نام ہی حقیقی دولت ہے ۔

 ਈਹਾ ਊਹਾਂ ਉਨ ਸੰਗਿ ਕਾਮੁ ॥੧॥
eehaa oohaaN un sang kaam. ||1||
This wealth is of use both here and hereafter. ||1||
(ਇਹ ਧਨਇਸ ਲੋਕ ਵਿਚ ਭੀ ਤੇ ਪਰਲੋਕ ਵਿਚ ਭੀ ਪ੍ਰਾਣਾਂ ਦੇ ਨਾਲ ਕੰਮ (ਦੇਂਦਾ ਹੈ) 
 ایِہا اوُہاں اُن سنّگِ کامُ 
ایہا۔ یہاں۔ اوہا۔ وہاں
ہر دو عالموں میں یہی کام آیا ہے ۔

 ਬਿਨੁ ਹਰਿ ਨਾਮ ਅਵਰੁ ਸਭੁ ਥੋਰਾ ॥
bin har naam avar sabh thoraa.
Without God’s Name, all the worldly wealth is insufficient and useless.
ਪਰਮਾਤਮਾ ਦੇ ਨਾਮ ਤੋਂ ਬਿਨਾ ਹੋਰ ਸਾਰਾ (ਧਨ ਪਦਾਰਥਥੋੜ੍ਹਾ ਹੀ ਹੈ
 بِنُ ہرِ نام اۄرُ سبھُ تھورا  
تھوراکم۔
الہٰی نام کے بغیر یسنی سچ کے بغیر تمام اشیا اس سے کم تریا گھٹیا ہیں۔

 ਤ੍ਰਿਪਤਿ ਅਘਾਵੈ ਹਰਿ ਦਰਸਨਿ ਮਨੁ ਮੋਰਾ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥
taripat aghaavai har darsan man moraa. ||1|| rahaa-o.
It is only with the realizationof God that my mind is totally satiated. ||1||Pause||
(ਹੇ ਭਾਈ!) ਮੇਰਾ ਮਨ ਪਰਮਾਤਮਾ ਦੇ ਦਰਸ਼ਨ ਦੀ ਬਰਕਤਿ ਨਾਲ (ਦੁਨੀਆ ਦੇ ਧਨ ਪਦਾਰਥ ਵਲੋਂਰੱਜ ਗਿਆ ਹੈ  ਰਹਾਉ  
 ت٘رِپتِ اگھاۄےَ ہرِ درسنِ منُ مورا  رہاءُ 
ترپت اکھاوے ۔ خواہشات مٹاتا ہے پوری کرتاہے (1)رہاؤ۔
میرا دل الہٰی دیدار سےدنیا کے تمام نعمتوں سے بے نیاز اور سیر ہو گیا ۔(1) رہاؤ۔ 

 ਭਗਤਿ ਭੰਡਾਰ ਗੁਰਬਾਣੀ ਲਾਲ ॥
bhagat bhandaar gurbaanee laal.
The devotional worship through the Guru’s word is the most precious wealth.
ਪਰਮਾਤਮਾ ਦੀ ਭਗਤੀ ਸਤਿਗੁਰੂ ਦੀ ਬਾਣੀ (ਮਾਨੋਲਾਲਾਂ ਦੇ ਖ਼ਜ਼ਾਨੇ ਹਨ
 بھگتِ بھنّڈار گُربانھیِ لال 
بھگت ۔ عبادت۔ بھنڈار۔ خزانے ۔ ذخیرے ۔ گربانی کلام مرشد۔
الہٰی عشق کلام مرشد لعل و جواہرات کے خزانے ہیں۔ 

 ਗਾਵਤ ਸੁਨਤ ਕਮਾਵਤ ਨਿਹਾਲ ॥੨॥
gaavat sunat kamaavat nihaal. ||2||
By singing, listening and acting upon it, the mind remains delighted. ||2||
(ਗੁਰਬਾਣੀਗਾਂਦਿਆਂ ਸੁਣਦਿਆਂ ਤੇ ਕਮਾਂਦਿਆਂ ਮਨ ਸਦਾ ਖਿੜਿਆ ਰਹਿੰਦਾ ਹੈ 
 گاۄت سُنت کماۄت نِہال 
گاوت۔ گانے ۔ کماوت عمل کرنے ۔ نہال ۔ خوشی ـ(2)
گانے یعنی صفت صلاح اور سننے اور اس پر عمل کرنے سے خوشی ملتی ہے ۔ (2)

 ਚਰਣ ਕਮਲ ਸਿਉ ਲਾਗੋ ਮਾਨੁ ॥
charan kamal si-o laago maan.
The mind of that person remains attuned to God’s Love.,
(ਹੇ ਭਾਈ!) ਉਸ ਮਨੁੱਖ ਦਾ ਮਨ ਪਰਮਾਤਮਾ ਦੇ ਸੋਹਣੇ ਚਰਨਾਂ ਨਾਲ ਜੁੜ ਗਿਆ
 چرنھ کمل سِءُ لاگو مانُ 
مان ۔ عزت ۔وقار۔
وہ الہٰی یاد میں محو ہو گیا۔ (3)

 ਸਤਿਗੁਰਿ ਤੂਠੈ ਕੀਨੋ ਦਾਨੁ ॥੩॥
satgur toothai keeno daan. ||3||
whom the true Guru, in his pleasure, blessed the gift of Naam. ||3||
ਜਿਸ ਨੂੰ ਦਇਆਵਾਨ ਹੋਏ ਸਤਿਗੁਰੂ ਨੇ ਪਰਮਾਤਮਾ ਦੇ ਨਾਮਧਨ ਦੀ ਦਾਤਿ ਦੇ ਦਿੱਤੀ  
 ستِگُرِ توُٹھےَ کیِنو دانُ 
اتھٹے ۔ خوشباش ۔ (3)
سچے مرشد نے کرم وعنایت و رحمت سے اور خوش ہوکر جسے الہٰی نام کی دؤلت عنایت فرمائی ہے ۔

 ਨਾਨਕ ਕਉ ਗੁਰਿ ਦੀਖਿਆ ਦੀਨ੍ਹ੍ਹ ॥
naanak ka-o gur deekhi-aa deenH.
O’ Nanak, whom the Guru blessed with such a teaching,
ਹੇ ਨਾਨਕਜਿਸ ਮਨੁੱਖ ਨੂੰ ਗੁਰੂ ਨੇ ਸਿੱਖਿਆ ਦਿੱਤੀ,
 نانک کءُ گُرِ دیِکھِیا دیِن٘ہ٘ہ 
دیکھیا۔ سبق۔ نصیحت ۔
اے نانک جسے مرشد نے سبق دیا 

 ਪ੍ਰਭ ਅਬਿਨਾਸੀ ਘਟਿ ਘਟਿ ਚੀਨ੍ਹ੍ਹ ॥੪॥੨੩॥
parabh abhinaasee ghat ghat cheenH. ||4||23||
he saw the eternal God in each and every heart. ||4||23||
ਉਸ ਨੇ ਅਬਿਨਾਸ਼ੀ ਪਰਮਾਤਮਾ ਨੂੰ ਹਰੇਕ ਹਿਰਦੇ ਵਿਚ (ਵੱਸਦਾਵੇਖ ਲਿਆ ੨੩
 پ٘ربھ ابِناسیِ گھٹِ گھٹِ چیِن٘ہ٘ہ ੨੩ 
اوناسی۔ لافناہ۔ گھٹ گھٹ ۔ ہر دل میں۔ چین ۔ دیکھیا۔
اس نے خدا کو ہر دل میں بستا دیکھ لیا

 ਆਸਾ ਮਹਲਾ ੫ ॥
aasaa mehlaa 5.
Raag Aasaa, Fifth Guru:
 آسا مہلا  
 ਅਨਦ ਬਿਨੋਦ ਭਰੇਪੁਰਿ ਧਾਰਿਆ ॥
anad binod bharaypur Dhaari-aa.
All these plays and joyful scenes are established by the all pervading God,
ਜਗਤ ਦੇ ਸਾਰੇ ਕੌਤਕਤਮਾਸ਼ੇ ਉਸ ਸਰਬਵਿਆਪਕ ਪਰਮਾਤਮਾ ਦੇ ਹੀ ਰਚੇ ਹੋਏ ਹਨ,
 اند بِنود بھریپُرِ دھارِیا 
اند۔ خوشیاں۔ ونود۔ تماشے ۔ بھرے پر۔ مکمل۔ کامل کارج کام۔
اس عالم کے تمام خوشیاں اور تمام تماشے ہر جائی خدا کی ہی پیدا کروہ ہیں۔ 

 ਅਪੁਨਾ ਕਾਰਜੁ ਆਪਿ ਸਵਾਰਿਆ ॥੧॥
 apunaa kaaraj aap savaari-aa. ||1||
He Himself has embellished His creation with joyful scenes and plays. ||1||
ਆਪਣੇ ਰਚੇ ਹੋਏ ਸੰਸਾਰ ਨੂੰ ਉਸ ਨੇ ਆਪ ਹੀ (ਇਹਨਾਂ ਕੌਤਕਤਮਾਸ਼ਿਆਂ ਨਾਲਸੋਹਣਾ ਬਣਾਇਆ ਹੈ l
 اپُنا کارجُ آپِ سۄارِیا 
سواریا۔ درست ۔ کیا
جو خود کامل ہے اور اپنی پیدا کروہ عالم کو خود ہی سجاتا سنوارتا ہے (
1)

 ਪੂਰ ਸਮਗ੍ਰੀ ਪੂਰੇ ਠਾਕੁਰ ਕੀ ॥
poor samagree pooray thaakur kee.
Perfect are the bounties of the Perfect God,
ਇਹ ਸਾਰੇ ਜਗਤਪਦਾਰਥ ਉਸ ਅਭੁੱਲ ਪਰਮਾਤਮਾ ਦੇ ਹੀ ਬਣਾਏ ਹੋਏ ਹਨ,
 پوُر سمگ٘ریِ پوُرے ٹھاکُر کیِ 
پورسمگری۔ مکمل نعمتیں۔ پورے ٹھاکر۔ کامل مالک 
کامل مرشد مکے منصوبے بھی مکمل ہوتے ہیں

 ਭਰਿਪੁਰਿ ਧਾਰਿ ਰਹੀ ਸੋਭ ਜਾ ਕੀ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥
bharipur Dhaar rahee sobh jaa kee. ||1|| rahaa-o.
His glory is fully pervading everywhere. ||1||Pause||
ਪਰਮਾਤਮਾ ਦੀ ਸੋਭਾਵਡਿਆਈ (ਸਾਰੇ ਸੰਸਾਰ ਵਿਚਹਰ ਥਾਂ ਖਿੱਲਰ ਰਹੀ ਹੈ  ਰਹਾਉ 
 بھرِپُرِ دھارِ رہیِ سوبھ جا کیِ  رہاءُ 
سوبھ۔ شہرت ۔ سہاونی(
1) رہاؤ۔
جس خدا کی عظمت و حشمت کی ہر جا شہرت ہے دنیا کی نعمتیں اس کی پیدا کی ہوئی ہے(1) رہاؤ

 ਨਾਮੁ ਨਿਧਾਨੁ ਜਾ ਕੀ ਨਿਰਮਲ ਸੋਇ ॥
naam niDhaan jaa kee nirmal so-ay.
He whose Name is the treasure of all virtues and singing whose praises people’s life become immaculate,
ਜਿਸ ਦੀ ਕੀਤੀ ਹੋਈ ਸਿਫ਼ਤਿਸਾਲਾਹ ਸਾਰੇ ਜੀਵਾਂ ਨੂੰ ਪਵਿਤ੍ਰ ਜੀਵਨ ਵਾਲਾ ਬਣਾ ਦੇਂਦੀ ਹੈਜਿਸ ਦਾ ਨਾਮ ਸਾਰੇ ਜੀਵਾਂ ਵਾਸਤੇ ਖ਼ਜ਼ਾਨਾ ਹੈ, 
 نامُ نِدھانُ جا کیِ نِرمل سوءِ 
نرمل۔ پاک سوئے ۔ شہرت ۔ (
2)
زندگی کے لئے نام یعنی سچ اور حقیقت ہی اصلی دؤلت ہے نام ایک کزانہ ہے جس کی شہرت پاک ہے جو انسان کی زندگی پاک بنا دینے والی ہے

 ਆਪੇ ਕਰਤਾ ਅਵਰੁ ਨ ਕੋਇ ॥੨॥
aapay kartaa avar na ko-ay. ||2||
that God Himself is the creator of the entire universe and none other. ||2||
ਉਹ ਪਰਮਾਤਮਾ ਆਪ ਹੀ ਸਭ ਦੇ ਪੈਦਾ ਕਰਨ ਵਾਲਾ ਹੈਉਸ ਦੇ ਬਰਾਬਰ ਦਾ ਹੋਰ ਕੋਈ ਨਹੀਂ 
 آپے کرتا اۄرُ ن کوءِ  
وہ خود ہی سب کو پیدا کرنے والا ہے ۔ اس کا کوئی ثانی نہیں۔ (
2) 

 ਜੀਅ ਜੰਤ ਸਭਿ ਤਾ ਕੈ ਹਾਥਿ ॥
jee-a jant sabh taa kai haath.
All beings and creatures are under His control.
(ਹੇ ਭਾਈਜਗਤ ਦੇਸਾਰੇ ਜੀਅ ਜੰਤ ਉਸ ਪਰਮਾਤਮਾ ਦੇ ਹੀ ਹੱਥ ਵਿਚ ਹਨ,
 جیِء جنّت سبھِ تا کےَ ہاتھِ 
جیئہ جنت۔ کل مخلوقات ۔ تاکے ہاتھ ۔ منصوبہ پلان۔
دنیا کی تمام مخلوقات اس کے زیر فرمان ہے

 ਰਵਿ ਰਹਿਆ ਪ੍ਰਭੁ ਸਭ ਕੈ ਸਾਥਿ ॥੩॥
rav rahi-aa parabh sabh kai saath. ||3||
that God is pervading in all and is always with them. ||3||
ਉਹ ਪਰਮਾਤਮਾ ਸਭ ਥਾਈਂ ਵੱਸ ਰਿਹਾ ਹੈਹਰੇਕ ਜੀਵ ਦੇ ਅੰਗਸੰਗ ਵੱਸਦਾ ਹੈ  
 رۄِ رہِیا پ٘ربھُ سبھ کےَ ساتھِ  
وہ ہرجائی ہے اور ہر ایک کے ساتھ بستا ہے ۔