Guru Granth Sahib Translation Project

Guru Granth Sahib Urdu Page 216

Page 216

ਭਰਮ ਮੋਹ ਕਛੁ ਸੂਝਸਿ ਨਾਹੀ ਇਹ ਪੈਖਰ ਪਏ ਪੈਰਾ ॥੨॥ اس کو وہم اور لالچ کے سبب کچھ بھی دکھائی نہیں دیتا۔ دنیوی حرص کی زنجیر اس کے پیروں میں پڑی ہوئی ہے۔ 2۔
ਤਬ ਇਹੁ ਕਹਾ ਕਮਾਵਨ ਪਰਿਆ ਜਬ ਇਹੁ ਕਛੂ ਨ ਹੋਤਾ ॥ اس وقت آدمی کیا عمل کر سکتاتھا، جب کہ اس کا وجود ہی نہیں تھا؟
ਜਬ ਏਕ ਨਿਰੰਜਨ ਨਿਰੰਕਾਰ ਪ੍ਰਭ ਸਭੁ ਕਿਛੁ ਆਪਹਿ ਕਰਤਾ ॥੩॥ جب صرف بے عیب اور بے شکل رب ہی تھا، تو وہ خود ہی سب کچھ کرتا تھا۔ 3۔
ਅਪਨੇ ਕਰਤਬ ਆਪੇ ਜਾਨੈ ਜਿਨਿ ਇਹੁ ਰਚਨੁ ਰਚਾਇਆ ॥ دنیا کو بنانے والا رب خود ہی اپنی خوبیوں کو جانتا ہے۔
ਕਹੁ ਨਾਨਕ ਕਰਣਹਾਰੁ ਹੈ ਆਪੇ ਸਤਿਗੁਰਿ ਭਰਮੁ ਚੁਕਾਇਆ ॥੪॥੫॥੧੬੩॥ اے نانک! سب کچھ واہے گرو خود ہی کرنے والا ہے۔ ست گرو نے میرا شک دور کر دیا ہے۔ 4۔ 5۔ 163۔
ਗਉੜੀ ਮਾਲਾ ਮਹਲਾ ੫ ॥ گؤڑی مالا محلہ 5۔
ਹਰਿ ਬਿਨੁ ਅਵਰ ਕ੍ਰਿਆ ਬਿਰਥੇ ॥ رب کے ذکر کے سوا باقی سب فضول ہے۔
ਜਪ ਤਪ ਸੰਜਮ ਕਰਮ ਕਮਾਣੇ ਇਹਿ ਓਰੈ ਮੂਸੇ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥ زبانی و لفظی ذکر، مجاہدہ ، برداشت اور دیگر عباداتیں، سب جلد ختم ہونے والی ہیں۔ 1۔ وقفہ۔
ਬਰਤ ਨੇਮ ਸੰਜਮ ਮਹਿ ਰਹਤਾ ਤਿਨ ਕਾ ਆਢੁ ਨ ਪਾਇਆ ॥ مخلوق ورت اور صبر کے اصولوں پر عمل کرتی رہتی ہے، لیکن اسے ذرہ برابر بھی اس کا بدلہ نہیں ملتا۔
ਆਗੈ ਚਲਣੁ ਅਉਰੁ ਹੈ ਭਾਈ ਊਂਹਾ ਕਾਮਿ ਨ ਆਇਆ ॥੧॥ اے صاحب! آخرت میں مخلوق کے کام آنے والا عمل دوسرا ہے، ورت، قانون اور صبر میں سے کوئی بھی آخرت میں سود مند نہیں ۔ 1۔
ਤੀਰਥਿ ਨਾਇ ਅਰੁ ਧਰਨੀ ਭ੍ਰਮਤਾ ਆਗੈ ਠਉਰ ਨ ਪਾਵੈ ॥ جو شخص مقام زیارت میں غسل کرتا ہے اور زمین کی سیر کرتا رہتاہے، اسے بھی آخرت میں کوئی سکون کی جگہ نہیں ملتی۔
ਊਹਾ ਕਾਮਿ ਨ ਆਵੈ ਇਹ ਬਿਧਿ ਓਹੁ ਲੋਗਨ ਹੀ ਪਤੀਆਵੈ ॥੨॥ وہاں یہ طریقہ کام نہیں آتا، اس سے وہ صرف لوگوں کو ہی مذہبی ہونے کے مغالطے میں ڈالتا ہے۔ 2۔
ਚਤੁਰ ਬੇਦ ਮੁਖ ਬਚਨੀ ਉਚਰੈ ਆਗੈ ਮਹਲੁ ਨ ਪਾਈਐ ॥ چاروں ہی ویدوں کو صرف زبانی پڑھ لینے سے انسان رب کے دربار میں نہیں پہنچ سکتا۔
ਬੂਝੈ ਨਾਹੀ ਏਕੁ ਸੁਧਾਖਰੁ ਓਹੁ ਸਗਲੀ ਝਾਖ ਝਖਾਈਐ ॥੩॥ جو شخص رب کے پاک نام کی معرفت حاصل نہیں کرتا، وہ سب فضول کی بکواس کرتا ہے۔ 3۔
ਨਾਨਕੁ ਕਹਤੋ ਇਹੁ ਬੀਚਾਰਾ ਜਿ ਕਮਾਵੈ ਸੁ ਪਾਰ ਗਰਾਮੀ ॥ نانک ایک شعور کی بات بیان کرتا ہے، جو اس بات پر چلتا ہے، وہ دنیوی سمندر کو پار کرلیتا ہے۔
ਗੁਰੁ ਸੇਵਹੁ ਅਰੁ ਨਾਮੁ ਧਿਆਵਹੁ ਤਿਆਗਹੁ ਮਨਹੁ ਗੁਮਾਨੀ ॥੪॥੬॥੧੬੪॥ وہ بات یہ ہے کہ گرو کی خدمت کرو ، رب کے نام کا دھیان کرو اور اپنے نفس کا غرور ختم کرو۔ 4۔ 6۔164۔
ਗਉੜੀ ਮਾਲਾ ੫ ॥ گؤڑی مالا محلہ 5۔
ਮਾਧਉ ਹਰਿ ਹਰਿ ਹਰਿ ਮੁਖਿ ਕਹੀਐ ॥ اے مادھو! اے ہری رب! ایسی مہربانی کیجیے کہ ہم اپنی زبان سے تیرا ہری نام ہی لیتے رہیں۔
ਹਮ ਤੇ ਕਛੂ ਨ ਹੋਵੈ ਸੁਆਮੀ ਜਿਉ ਰਾਖਹੁ ਤਿਉ ਰਹੀਐ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥ اے کائنات کے مالک! ہم کچھ بھی نہیں کرسکتے۔ جیسے آپ ہمیں رکھتے ہیں، ہم ویسے ہی رہتے ہیں۔ 1۔ وقفہ
ਕਿਆ ਕਿਛੁ ਕਰੈ ਕਿ ਕਰਣੈਹਾਰਾ ਕਿਆ ਇਸੁ ਹਾਥਿ ਬਿਚਾਰੇ ॥ بے چاری مخلوق کیا کر سکتی ہے؟وہ کیا کرنے کے لائق ہے اور اس بےبس مخلوق کے اختیار میں کیا ہے؟
ਜਿਤੁ ਤੁਮ ਲਾਵਹੁ ਤਿਤ ਹੀ ਲਾਗਾ ਪੂਰਨ ਖਸਮ ਹਮਾਰੇ ॥੧॥ اے ہمارے ہر جگہ موجود رہنے والے مالک! انسان اسی میں لگا رہتا ہے، جس میں آپ اسے لگا دیتے ہیں۔ 1۔
ਕਰਹੁ ਕ੍ਰਿਪਾ ਸਰਬ ਕੇ ਦਾਤੇ ਏਕ ਰੂਪ ਲਿਵ ਲਾਵਹੁ ॥ اے تمام ذی روحوں کے داتا ! مجھ پر رحم کیجیے اور صرف اپنی ہی ذات میں میرا دل لگائے رکھیے۔
ਨਾਨਕ ਕੀ ਬੇਨੰਤੀ ਹਰਿ ਪਹਿ ਅਪੁਨਾ ਨਾਮੁ ਜਪਾਵਹੁ ॥੨॥੭॥੧੬੫॥ مجھ نانک کی رب کے دربار میں یہی التجا ہے کہ اے رب! مجھے اپنے نام کے ذکر کی توفیق دیجیے۔ 2۔ 7۔ 165۔
ਰਾਗੁ ਗਉੜੀ ਮਾਝ ਮਹਲਾ ੫ راگو گؤڑی ماجھ محلہ 5
ੴ ਸਤਿਗੁਰ ਪ੍ਰਸਾਦਿ ॥ واہے گرو ایک ہے، جس کاوصال ست گرو کی مہربانی سے حاصل کیا جا سکتا ہے۔
ਦੀਨ ਦਇਆਲ ਦਮੋਦਰ ਰਾਇਆ ਜੀਉ ॥ اے غریب پرور ! اے عبادت کے لائق دمودر!
ਕੋਟਿ ਜਨਾ ਕਰਿ ਸੇਵ ਲਗਾਇਆ ਜੀਉ ॥ آپ نے اپنی عبادت و خدمت میں کروڑوں لوگوں کو لگا رکھا ہے۔
ਭਗਤ ਵਛਲੁ ਤੇਰਾ ਬਿਰਦੁ ਰਖਾਇਆ ਜੀਉ ॥ تیرا خوب صورت نام بھگتوں پر فضل کرنے والا ہے یعنی آپ اپنے معتقدین کے محبوب ہیں اور یہی خوبصورت نام آپ نے اختیار کیاہوا ہے۔
ਪੂਰਨ ਸਭਨੀ ਜਾਈ ਜੀਉ ॥੧॥ اے رب ! آپ ہمہ گیر ہیں۔ 1۔
ਕਿਉ ਪੇਖਾ ਪ੍ਰੀਤਮੁ ਕਵਣ ਸੁਕਰਣੀ ਜੀਉ ॥ اپنے محبوب کو میں کیسے دیکھوں گی؟ وہ نیک عمل کونسا ہے؟
ਸੰਤਾ ਦਾਸੀ ਸੇਵਾ ਚਰਣੀ ਜੀਉ ॥ سنتوں کی باندی بن کر ان کے قدموں کی خدمت کر۔
ਇਹੁ ਜੀਉ ਵਤਾਈ ਬਲਿ ਬਲਿ ਜਾਈ ਜੀਉ ॥ میں اپنی یہ روح ان پر قربان کرتی ہوں اور دل و جان سے ان پر قربان جاتی ہوں۔
ਤਿਸੁ ਨਿਵਿ ਨਿਵਿ ਲਾਗਉ ਪਾਈ ਜੀਉ ॥੨॥ میں جھک جھک کر ان کے قدم چھوتی ہوں۔ 2۔
ਪੋਥੀ ਪੰਡਿਤ ਬੇਦ ਖੋਜੰਤਾ ਜੀਉ ॥ پنڈت صحیفوں اور ویدوں کا مطالعہ کرتا ہے۔
ਹੋਇ ਬੈਰਾਗੀ ਤੀਰਥਿ ਨਾਵੰਤਾ ਜੀਉ ॥ کوئی شخص راہب بن کر مقام زیارت پر غسل کرتا ہے۔
ਗੀਤ ਨਾਦ ਕੀਰਤਨੁ ਗਾਵੰਤਾ ਜੀਉ ॥ کوئی گیت اور سریلے آواز میں بھجن گاتے ہیں۔
ਹਰਿ ਨਿਰਭਉ ਨਾਮੁ ਧਿਆਈ ਜੀਉ ॥੩॥ مگر میں بے خوف ہری کے نام کا ہی دھیان کرتی ہوں۔ 3۔
ਭਏ ਕ੍ਰਿਪਾਲ ਸੁਆਮੀ ਮੇਰੇ ਜੀਉ ॥ میرا رب مجھ پر مہربان ہوگیاہے۔
ਪਤਿਤ ਪਵਿਤ ਲਗਿ ਗੁਰ ਕੇ ਪੈਰੇ ਜੀਉ ॥ گرو جی کے قدم چھونے کی وجہ سے میں ناپاک سے پاک ہو گئی ہوں۔
error: Content is protected !!
Scroll to Top
https://ijwem.ulm.ac.id/pages/demo/ slot gacor https://andong-butuh.purworejokab.go.id/resources/demo/ https://triwarno-banyuurip.purworejokab.go.id/assets/files/demo/ https://bppkad.mamberamorayakab.go.id/wp-content/modemo/ http://mesin-dev.ft.unesa.ac.id/mesin/demo-slot/ http://gsgs.lingkungan.ft.unand.ac.id/includes/demo/ https://kemahasiswaan.unand.ac.id/plugins/actionlog/
https://jackpot-1131.com/ https://mainjp1131.com/ https://triwarno-banyuurip.purworejokab.go.id/template-surat/kk/kaka-sbobet/
https://ijwem.ulm.ac.id/pages/demo/ slot gacor https://andong-butuh.purworejokab.go.id/resources/demo/ https://triwarno-banyuurip.purworejokab.go.id/assets/files/demo/ https://bppkad.mamberamorayakab.go.id/wp-content/modemo/ http://mesin-dev.ft.unesa.ac.id/mesin/demo-slot/ http://gsgs.lingkungan.ft.unand.ac.id/includes/demo/ https://kemahasiswaan.unand.ac.id/plugins/actionlog/
https://jackpot-1131.com/ https://mainjp1131.com/ https://triwarno-banyuurip.purworejokab.go.id/template-surat/kk/kaka-sbobet/