Urdu-Page-173

ਵਡਭਾਗੀ ਮਿਲੁ ਰਾਮਾ 
vadbhaagee mil raamaa. ||1||
(In this way), O’ fortunate one, you will unite with God.
 ਭਾਰੇ ਨਸੀਬਾਂ ਵਾਲਿਆਂਵਿਆਪਕ ਸਾਈਂ ਨਾਲ ਜੁੜ  
وڈبھاگی   مِلُ  راما 1
اس طرح   اے  خوش قسمت  تم خدا کے ساتھ متحد ہو جاوگے.  


ਗੁਰੁ ਜੋਗੀ ਪੁਰਖੁ ਮਿਲਿਆ ਰੰਗੁ ਮਾਣੀ ਜੀਉ 
gur jogee purakh mili-aa rang maanee jee-o.
I have met the Guru, who himself is united with God, and by the Guru’s grace I am enjoying the bliss of God’s Love.
ਪ੍ਰਭੂ ਦਾ ਰੂਪ ਜੋਗੀਰੂਪ ਮਿਲ ਪਿਆ ਹੈ (ਉਸ ਦੀ ਕਿਰਪਾ ਨਾਲਮੈਂ ਆਤਮਕ ਆਨੰਦ ਮਾਣਦਾ ਹਾਂ
گُرُ  جۄگی  پُرکھُ  مِلِیا  رنّگُ  ماݨی  جیءُ 
میں نے گرو سے ملاقات کی ہے ، جو خود خدا کے ساتھ متحد ہے ، اور گرو کے فضل سے میں نے خدا کی محبت کی نعمتوں سے لطف اندوز ہوں.  


ਗੁਰੁ ਹਰਿ ਰੰਗਿ ਰਤੜਾ ਸਦਾ ਨਿਰਬਾਣੀ ਜੀਉ 
gur har rang ratrhaa sadaa nirbaanee jee-o.
The Guru is imbued with the Love of God and is forever free from the vices.
ਗੁਰੂ ਸਦਾ ਪਰਮਾਤਮਾ ਦੇ ਨਾਮਰੰਗ ਵਿਚ ਰੰਗਿਆ ਰਹਿੰਦਾ ਹੈਤੇ ਗੁਰੂ ਸਦਾ ਵਾਸਨਾਰਹਿਤ ਹੈ
گُرُ  ہرِ  رنّگِ  رتڑا  سدا  نِرباݨی  جیءُ 
گرو خدا کی محبت کے ساتھ حواریوں ہے اور ہمیش سے آزاد ہے 


ਵਡਭਾਗੀ ਮਿਲੁ ਸੁਘੜ ਸੁਜਾਣੀ ਜੀਉ 
vadbhaagee mil sugharh sujaanee jee-o.
O the fortunate one, You too should meet such an accomplished and wise Guru.
ਹੇ ਵੱਡੇ ਭਾਗਾਂ ਵਾਲੇਉਸ ਸੋਹਣੇ ਜੀਵਨ ਵਾਲੇ ਸੁਜਾਨ ਗੁਰੂ ਨੂੰ ਮਿਲ
وڈبھاگی   مِلُ  سُگھڑ  سُجاݨی  جیءُ 
.  اے خوش قسمت ، آپ کو بھی اس طرح کے ایک مکمل اور عقل مند گرو سے ملنا چاہئے.  


ਮੇਰਾ ਮਨੁ ਤਨੁ ਹਰਿ ਰੰਗਿ ਭਿੰਨਾ 
mayraa man tan har rang bhinnaa. ||2||
My mind and body are drenched in the Love of God. l2l
ਮੇਰਾ ਮਨ ਮੇਰਾ ਤਨ ਪਰਮਾਤਮਾ ਦੇ ਪ੍ਰੇਮਰੰਗ ਵਿਚ ਭਿੱਜ ਗਿਆ ਹੈ l  
میرا  منُ  تنُ  ہرِ  رنّگِ  بھِنّنا 2
میرا من اور بدن خُدا کی محبت میں بھیگا ہے  ، 


ਆਵਹੁ ਸੰਤਹੁ ਮਿਲਿ ਨਾਮੁ ਜਪਾਹਾ 
aavhu santahu mil naam japaahaa.
Come, O Saints, let us meditate on God’s Name with loving devotion.
ਹੇ ਸੰਤ ਜਨੋਆਓਅਸੀਂ ਰਲ ਕੇ ਪਰਮਾਤਮਾ ਦਾ ਨਾਮ ਜਪੀਏ
آوہُ  سنّتہُ   مِلِ  نامُ  جپاہا 
اے مقدسین ، ہمیں خُدا کے نام سے پیار عقیدت کے ساتھ مراقبہ کرنے دیں 


ਵਿਚਿ ਸੰਗਤਿ ਨਾਮੁ ਸਦਾ ਲੈ ਲਾਹਾ ਜੀਉ 
vich sangat naam sadaa lai laahaa jee-o.
In the Holy Congregation, let’s earn the lasting wealth of Naam.
ਸਾਧ ਸੰਗਤ ਵਿਚ ਮਿਲ ਕੇ ਸਦਾ ਹਰਿਨਾਮ ਦੀ ਖੱਟੀ ਖੱਟ     
وِچِ  سنّگتِ   نامُ  سدا  لےَ  لاہا  جیءُ 
   کتاب مقدس میں ، چلو نام کی دیرپا دولت کماتے ہیں.  


ਕਰਿ ਸੇਵਾ ਸੰਤਾ ਅੰਮ੍ਰਿਤੁ ਮੁਖਿ ਪਾਹਾ ਜੀਉ 
kar sayvaa santaa amrit mukh paahaa jee-o.
Let’s follow the Guru’s teachings, and partake the Ambrosial Nectar of Naam.
(ਆਓਸਾਧ ਸੰਗਤ ਵਿਚਗੁਰਮੁਖਾਂ ਦੀ ਸੇਵਾ ਕਰ ਕੇ ਆਪਣੇ ਮੂੰਹ ਵਿਚ ਆਤਮਕ ਜੀਵਨ ਦੇਣ ਵਾਲਾ ਨਾਮਭੋਜਨ ਪਾਈਏ
کرِ  سیوا  سنّتا   انّم٘رِتُ  مُکھِ  پاہا  جیءُ 
آئیں گرو کی تعلیمات پر عمل کریں ، اور نام کی مہکنا امرت میں حصہ لیں ۔  


ਮਿਲੁ ਪੂਰਬਿ ਲਿਖਿਅੜੇ ਧੁਰਿ ਕਰਮਾ 
mil poorab likhi-arhay Dhur karmaa. ||3||
As per your pre ordained destiny unite with God .||3||
(ਹੇ ਜਿੰਦੇ!) ਮਿਲ ਪ੍ਰਭੂ ਨੂੰਪ੍ਰਭੂ ਦੀ ਦਰਗਾਹ ਤੋਂ ਉਸ ਦੀ ਬਖ਼ਸ਼ਸ਼ ਦੇ ਪੂਰਬਲੇ ਸਮੇ ਦੇ ਲੇਖ ਜਾਗ ਪਏ ਹਨ
مِلُ  پۄُربِ  لِکھِئڑے  دھُرِ  کرما 3
آپ کے مقرر کردہ تقدیر کے مطابق خدا کے ساتھ اتحاد کریں


ਸਾਵਣਿ ਵਰਸੁ ਅੰਮ੍ਰਿਤਿ ਜਗੁ ਛਾਇਆ ਜੀਉ  ਮਨੁ ਮੋਰੁ ਕੁਹੁਕਿਅੜਾ ਸਬਦੁ ਮੁਖਿ ਪਾਇਆ 
saavan varas amrit jag chhaa-i-aa jee-o. man mor kuhuki-arhaa sabad mukh paa-i-aa.
As in the month of Saawan (rainy season), the rain water falls everywhere and the peacock chirps and dances, similarly when the elixir of the Guru’s word rains down in me, I feel as if my mind is dancing and singing the praises of God.
ਜਿਵੇਂ ਸਾਵਣ ਦੇ ਮਹੀਨੇ ਵਿਚ ਬੱਦਲ ਵਰ੍ਹਦਾ ਹੈ ਤੇ ਧਰਤੀ ਨੂੰ ਜਲ ਨਾਲ ਭਰਪੂਰ ਕਰ ਦੇਂਦਾ ਹੈਉਸ ਬੱਦਲ ਨੂੰ ਵੇਖ ਵੇਖ ਕੇ ਮੋਰ ਆਪਣੀ ਮਿੱਠੀ ਬੋਲੀ ਬੋਲਦਾ ਹੈ ਤਿਵੇਂ ਗੁਰੂ ਨਾਮਅੰਮ੍ਰਿਤ ਨਾਲ ਜਗਤ ਨੂੰ ਪ੍ਰਭਾਵਿਤ ਕਰਦਾ ਹੈ ਤੇ ਮਨ ਉਛਾਲੇ ਮਾਰਦਾ ਹੈ ਉਹ ਮਨੁੱਖ ਗੁਰੂ ਦੇ ਸ਼ਬਦ ਨੂੰ ਆਪਣੇ ਮੂੰਹ ਵਿਚ ਪਾਂਦਾ ਹੈ 
ساوݨِ  ورسُ   انّم٘رِتِ  جگُ  چھائِیا  جیءُ  منُ  مۄرُ  کُہُکِئڑا   سبدُ  مُکھِ  پائِیا 
ساون کے مہینے میں ، بارش کا پانی ہر طرف گرتا ہے اور مور چھلکتا ہے اور ناچتا ہے ، اسی طرح جب مجھ میں گورو کے کلام کا بارش برستا ہے تو مجھے ایسا لگتا ہے جیسے میرا دماغ ناچ رہا ہے اور خدا کی تمجیدیں گا رہا ہے۔ .


ਹਰਿ ਅੰਮ੍ਰਿਤੁ ਵੁਠੜਾ ਮਿਲਿਆ ਹਰਿ ਰਾਇਆ ਜੀਉ 
har amrit vuthrhaa mili-aa har raa-i-aa jee-o.
The elixir of Naam rains down in the mind, and the union with the Almighty God is obtained.
ਨਾਮ ਅੰਮ੍ਰਿਤ ਵਰਸਦਾ ਹੈ ਅਤੇ ਵਾਹਿਗੁਰੂ ਪਾਤਸ਼ਾਹ  ਮਿਲਦਾ ਹੈ   

ہرِ  انّم٘رِتُ  وُٹھڑا   مِلِیا  ہرِ  رائِیا  جیءُ 

نام کی امتیاز ذہن میں اترتی ہے ، اور خداتعالیٰ کا اتحاد مل جاتا ہے


ਜਨ ਨਾਨਕ ਪ੍ਰੇਮਿ ਰਤੰਨਾ ੨੭੬੫
jan naanak paraym ratannaa. ||4||1||27||65||
Devotee Nanak is imbued with the Love of God. |4|1|27|65|
ਦਾਸ ਨਾਨਕਪ੍ਰਭੂਪ੍ਰੇਮ ਵਿਚ ਰੰਗਿਆ ਗਿਆ ਹੈ l  
جن  نانک   پ٘ریمِ  رتنّنا 41 27  65    
عقیدت مند نانک خدا کی محبت میں رنگین ہیں


ਗਉੜੀ ਮਾਝ ਮਹਲਾ  
ga-orhee maajh mehlaa 4.
Raag Gauree Maajh, Fourth Guru:
گئُڑی  ماجھ  محلا 4
ਆਉ ਸਖੀ ਗੁਣ ਕਾਮਣ ਕਰੀਹਾ ਜੀਉ 
aa-o sakhee gun kaaman kareehaa jee-o.
O’ my friend Come, let us make God’s virtues as our charms to entice Him.
ਹੇ  ਸਹੇਲੀਏਅਸੀਂ ਪ੍ਰਭੂ ਦੇ ਗੁਣਾਂ ਦੇ ਟੂਣੇਜਾਦੂ ਤਿਆਰ ਕਰੀਏ (ਤੇ ਪ੍ਰਭੂਪਤੀ ਨੂੰ ਵੱਸ ਕਰੀਏ),
آءُ  سکھی   گُݨ  کامݨ  کریِہا  جیءُ 
اے میرے دوست آؤ ، آئیے ہم خدا کی خوبیوں کو اپنے دلانے کے لئےاس کو آمادہ کریں


ਮਿਲਿ ਸੰਤ ਜਨਾ ਰੰਗੁ ਮਾਣਿਹ ਰਲੀਆ ਜੀਉ 
mil sant janaa rang maanih ralee-aa jee-o.
Let’s join the Saints in the holy congregation, and enjoy the bliss of God’s Love.
ਸੰਤ ਜਨਾਂ ਨੂੰ ਮਿਲ ਕੇ ਪ੍ਰਭੂ ਦੇ ਮਿਲਾਪ ਦਾ ਆਨੰਦ ਮਾਣੀਏ
مِلِ  سنّت  جنا   رنّگُ  ماݨِہ  رلیِیا  جیءُ 
آئیے مقدس جماعت میں اولیاء کے ساتھ شامل ہوں ، اور خدا کی محبت کے لطف سے لطف اٹھائیں


ਗੁਰ ਦੀਪਕੁ ਗਿਆਨੁ ਸਦਾ ਮਨਿ ਬਲੀਆ ਜੀਉ 
gur deepak gi-aan sadaa man balee-aa jee-o.
Let us always light the lamp of Guru’s wisdom in our mind
(ਹੇ ਸਹੇਲੀਏਅਸੀਂ ਆਪਣੇਮਨ ਵਿਚ ਗੁਰੂ ਦਾ ਦਿੱਤਾ ਗਿਆਨਦੀਵਾ ਬਾਲੀਏ,
گُر  دیِپکُ  گِیانُ   سدا  منِ  بلیِیا  جیءُ 
آئیے ہم ہمیشہ اپنے دماغ میں گرو کی حکمت کا چراغ روشن کرتے ہیں


ਹਰਿ ਤੁਠੈ ਢੁਲਿ ਢੁਲਿ ਮਿਲੀਆ ਜੀਉ 
har tuthai dhul dhul milee-aa jee-o. ||1||
If God become gracious upon us, we may meet Him with gratitude.||1||
ਜੇ ਪ੍ਰਭੂ ਤ੍ਰੁਠ ਪਏ ਤਾਂ ਸ਼ੁਕਰ ਸ਼ੁਕਰ ਵਿਚ  ਕੇ (ਉਸ ਦੇ ਚਰਨਾਂ ਵਿਚਮਿਲ ਜਾਈਏ 
ہرِ  تُٹھےَ   ڈھُلِ  ڈھُلِ  مِلیِیا  جیءُ 1
اگر خدا ہم پر مہربان ہوجاتا ہے ، تو ہم اس کا شکر گذار ہوسکتے ہیں


ਮੇਰੈ ਮਨਿ ਤਨਿ ਪ੍ਰੇਮੁ ਲਗਾ ਹਰਿ ਢੋਲੇ ਜੀਉ 
mayrai man tan paraym lagaa har dholay jee-o.
My mind and body are attuned to the love of my beloved God.
ਮੇਰੇ ਮਨ ਵਿਚ ਮੇਰੇ ਹਿਰਦੇ ਵਿਚ ਹਰਿਮਿਤ੍ਰ ਦਾ ਪਿਆਰ ਪੈਦਾ ਹੋ ਚੁਕਾ ਹੈ
میرےَ  منِ  تنِ   پ٘ریمُ  لگا  ہرِ  ڈھۄلے  جیءُ 
میرا دماغ اور جسم میرے پیارے خدا کی محبت میں ڈھل گیا ہے


ਮੈ ਮੇਲੇ ਮਿਤ੍ਰੁ ਸਤਿਗੁਰੁ ਵੇਚੋਲੇ ਜੀਉ 
mai maylay mitar satgur vaycholay jee-o.
I wish that the true Guru, my mediator, may unite me with my Friend-God.
(ਮੇਰੇ ਅੰਦਰ ਤਾਂਘ ਹੈ ਕਿਵਿਚੋਲਾ ਗੁਰੂ ਮੈਨੂੰ ਉਹ ਮਿਤ੍ਰਪ੍ਰਭੂ ਮਿਲਾ ਦੇਵੇ
مےَ  میلے  مِت٘رُ  ستِگُرُ  ویچۄلے  جیءُ 
میری خواہش ہے کہ سچو گرو ، میرا ثالث ، مجھے اپنے دوست خدا کے ساتھ جوڑ دے


ਮਨੁ ਦੇਵਾਂ ਸੰਤਾ ਮੇਰਾ ਪ੍ਰਭੁ ਮੇਲੇ ਜੀਉ 
man dayvaaN santaa mayraa parabh maylay jee-o.
I will surrender my mind to the devotees who can unite me with my God.
ਮੈਂ ਆਪਣਾ ਮਨ ਉਨ੍ਹਾਂ ਗੁਰਮੁਖਾਂ ਦੇ ਹਵਾਲੇ ਕਰ ਦਿਆਂਜੇਹੜੇ ਮੈਨੂੰ ਮੇਰਾ ਪ੍ਰਭੂ ਮਿਲਾ ਦੇਣ
منُ  دیواں  سنّتا   میرا  پ٘ربھُ  میلے  جیءُ 
میں اپنا عقیدہ ان عقیدت مندوں کے حوالے کروں گا جو مجھے اپنے خدا کے ساتھ جوڑ سکتے ہیں



ਹਰਿ ਵਿਟੜਿਅਹੁ ਸਦਾ ਘੋਲੇ ਜੀਉ 
har vitrhi-ahu sadaa gholay jee-o. ||2||
I forever dedicate myself to God.
ਮੈਂ ਹਰਿਪ੍ਰਭੂ ਤੋਂ ਸਦਾ ਕੁਰਬਾਨ ਜਾਂਦੀ ਹਾਂ
ہرِ  وِٹڑِئہُ   سدا  گھۄلے  جیءُ 2
میں ہمیشہ کے لئے اپنے آپ کو خدا کے لئے وقف کرتا ہوں


ਵਸੁ ਮੇਰੇ ਪਿਆਰਿਆ ਵਸੁ ਮੇਰੇ ਗੋਵਿਦਾ ਹਰਿ ਕਰਿ ਕਿਰਪਾ ਮਨਿ ਵਸੁ ਜੀਉ 
vas mayray pi-aari-aa vas mayray govidaa har kar kirpaa man vas jee-o.
O my Beloved, Master of the Universe; show mercy and come to dwell within my mind.
ਹੇ ਮੇਰੇ ਪਿਆਰੇ ਗੋਵਿੰਦਮਿਹਰ ਕਰ ਕੇ ਮੇਰੇ ਮਨ ਵਿਚ  ਵੱਸ
وسُ  میرے  پِیارِیا  وسُ  میرے  گۄوِدا  ہرِ  کرِ  کِرپا  منِ  وسُ  جیءُ 
اے میرے پیارے ، کائنات کے مالک ، رحم کرو اور میرے ذہن میں سکونت اختیار کرو


ਮਨਿ ਚਿੰਦਿਅੜਾ ਫਲੁ ਪਾਇਆ ਮੇਰੇ ਗੋਵਿੰਦਾ ਗੁਰੁ ਪੂਰਾ ਵੇਖਿ ਵਿਗਸੁ ਜੀਉ 
man chindi-arhaa fal paa-i-aa mayray govindaa gur pooraa vaykh vigas jee-o.
O’ my Master of the Universe, beholding the Perfect Guru, the desires of my mind have been fulfilled and I am totally delighted.
ਹੇ ਮੇਰੇ ਗੋਵਿੰਦਪੂਰੇ ਗੁਰੂ ਦਾ ਦਰਸਨ ਕਰ ਕੇ ਮੈਂ ਆਪਣੇ ਚਿੱਤ ਚਾਹੁੰਦੀਆਂ ਮੁਰਾਦਾ ਪਾ ਲਈਆਂ ਹਨ ਅਤੇ ਪਰਮਪ੍ਰੰਸਨ ਹੋ ਗਿਆ ਹਾਂ 
منِ  چِنّدِئڑا  پھلُ  پائِیا  میرے  گۄوِنّدا   گُرُ  پۄُرا  ویکھِ  وِگسُ  جیءُ 
اے میرے کائنات کے مالک ، کامل گرو کو دیکھ کر ، میرے دماغ کی خواہشات پوری ہوگئیں اور میں پوری طرح خوش ہوں۔


ਹਰਿ ਨਾਮੁ ਮਿਲਿਆ ਸੋਹਾਗਣੀ ਮੇਰੇ ਗੋਵਿੰਦਾ ਮਨਿ ਅਨਦਿਨੁ ਅਨਦੁ ਰਹਸੁ ਜੀਉ 
har naam mili-aa sohaaganee mayray govindaa man an-din anad rahas jee-o.
O’ my God, the fortunate soul-bride who realizes God’s Name, is always blissful and happy.
ਹੇ ਮੇਰੇ ਗੋਵਿੰਦਜਿਸ ਸੋਹਾਗਣ ਜੀਵਇਸਤ੍ਰੀ ਨੂੰ ਹਰਿਨਾਮ ਮਿਲ ਜਾਂਦਾ ਹੈਉਸ ਦੇ ਮਨ ਵਿਚ ਹਰ ਵੇਲੇ ਆਨੰਦ ਬਣਿਆ ਰਹਿੰਦਾ ਹੈ ਚਾਉ ਬਣਿਆ ਰਹਿੰਦਾ ਹੈ l
ہرِ  نامُ  مِلِیا  سۄہاگݨی  میرے  گۄوِنّدا   منِ  اندِنُ  اندُ  رہسُ  جیءُ 
اے میرے خدا ، خوش قسمت روح کی دلہن جو خدا کے نام کا احساس کرتی ہے ، ہمیشہ خوش کن اور خوش رہتی ہے


ਹਰਿ ਪਾਇਅੜਾ ਵਡਭਾਗੀਈ ਮੇਰੇ ਗੋਵਿੰਦਾ ਨਿਤ ਲੈ ਲਾਹਾ ਮਨਿ ਹਸੁ ਜੀਉ 
har paaiarhaa vadbhagi– mayray govindaa nit lai laahaa man has jee-o. ||3||
O’ my God, the fortunate soul-brides who have realized You by reaping the wealth of Naam, they are continually enjoying the spiritual bliss.||3||
ਹੇ ਮੇਰੇ ਗੋਵਿੰਦਜਿਨ੍ਹਾਂ ਭਾਗਾਂ ਵਾਲੀਆਂ ਜੀਵਇਸਤ੍ਰੀਆਂ ਨੇ ਹਰੀ ਦਾ ਮਿਲਾਪ ਹਾਸਲ ਕਰ ਲਿਆ ਹੈਉਹ ਹਰਿਨਾਮ ਦੀ ਖੱਟੀ ਖੱਟ ਕੇ ਮਨ ਵਿਚ ਨਿੱਤ ਆਤਮਕ ਆਨੰਦ ਮਾਣਦੀਆਂ ਹਨ
ہرِ  پائِئڑا  وڈبھاگیِئی  میرے  گۄوِنّدا   نِت  لےَ  لاہا  منِ  ہسُ  جیءُ 3
اے میرے خدا ، خوش نصیب دلہنیں جنہوں نے نام کی دولت کاٹ کر آپ کو پہچان لیا ، وہ مستقل طور پر روحانی لطف سے لطف اندوز ہو رہے ہیں


ਹਰਿ ਆਪਿ ਉਪਾਏ ਹਰਿ ਆਪੇ ਵੇਖੈ ਹਰਿ ਆਪੇ ਕਾਰੈ ਲਾਇਆ ਜੀਉ 
har aap upaa-ay har aapay vaykhai har aapay kaarai laa-i-aa jee-o.
O my friends, God Himself creates all beings, He Himself looks after them, and He Himself assigns them to different tasks.
ਹੇ ਸਹੇਲੀਏਪ੍ਰਭੂ ਆਪ ਹੀ ਜੀਵਾਂ ਨੂੰ ਪੈਦਾ ਕਰਦਾ ਹੈਆਪ ਹੀ (ਸਭ ਦੀਸੰਭਾਲ ਕਰਦਾ ਹੈ ਤੇ ਆਪ ਹੀ (ਸਭ ਨੂੰਕਾਰ ਵਿਚ ਲਾਂਦਾ ਹੈ
ہرِ  آپِ  اُپاۓ   ہرِ  آپے  ویکھےَ   ہرِ  آپے  کارےَ  لائِیا  جیءُ 
اے میرے دوستو ، خدا خود تمام مخلوقات کو پیدا کرتا ہے ، وہ خود ان کی دیکھ بھال کرتا ہے ، اور خود ان کو مختلف کاموں میں تفویض کرتا ہے


ਇਕਿ ਖਾਵਹਿ ਬਖਸ ਤੋਟਿ  ਆਵੈ ਇਕਨਾ ਫਕਾ ਪਾਇਆ ਜੀਉ 
ik khaaveh bakhas tot na aavai iknaa fakaa paa-i-aa jee-o.
Some are blessed with the unlimited bounties which never runs out, while others    receive only a handful.
ਕਈ ਉਸ ਦੇ ਬਖ਼ਸ਼ੇ ਹੋਏ ਪਦਾਰਥ ਵਰਤਦੇ ਰਹਿੰਦੇ ਹਨ , ਜਿਨ੍ਹਾਂ ਵਿੱਚ ਕਦੇ ਕਮੀ ਨਹੀਂ ਵਾਪਰਦੀ ਅਤੇ ਕਈਆਂ ਨੂੰ ਕੇਵਲ ਦਾਣਿਆਂ ਦੀ ਮੁੱਠੀ ਹੀ ਮਿਲਦੀ ਹੈ 
اِکِ  کھاوہِ  بخش  تۄٹِ  ن  آوےَ   اِکنا  فقا  پائِیا  جیءُ 
کچھ کو لامحدود فضلات نصیب ہوتے ہیں جو کبھی ختم نہیں ہوتے ہیں ، جبکہ دوسروں کو صرف ایک مٹھی بھر ملتے ہیں


ਇਕਿ ਰਾਜੇ ਤਖਤਿ ਬਹਹਿ ਨਿਤ ਸੁਖੀਏ ਇਕਨਾ ਭਿਖ ਮੰਗਾਇਆ ਜੀਉ 
ik raajay takhat baheh nit sukhee-ay iknaa bhikh mangaa-i-aa jee-o.
Many by His grace sit upon thrones as kings and enjoy constant pleasures, while there are others whom He makes to beg.
ਅਨੇਕਾਂ ਉਸ ਦੀ ਮਿਹਰ ਨਾਲ ਰਾਜੇ ਬਣ ਕੇ ਤਖ਼ਤ ਤੇ ਬੈਠਦੇ ਹਨ ਤੇ ਸਦਾ ਸੁਖੀ ਰਹਿੰਦੇ ਹਨਅਨੇਕਾਂ ਐਸੇ ਹਨ ਜਿਨ੍ਹਾਂ ਪਾਸੋਂ ਭੀਖ ਮੰਗਾਂਦਾ ਹੈ 
اِکِ  راجے   تختِ  بہہِ  نِت  سُکھیِۓ  اِکنا   بھِکھ  منّگائِیا  جیءُ 
بہت سے لوگ اس کے فضل سے بادشاہ بن کر تخت پر بیٹھے ہیں اور مستقل خوشیوں سے لطف اندوز ہوتے ہیں ، جبکہ کچھ اور بھی ہیں جن سے وہ بھیک مانگتا ہے۔


ਸਭੁ ਇਕੋ ਸਬਦੁ ਵਰਤਦਾ ਮੇਰੇ ਗੋਵਿਦਾ ਜਨ ਨਾਨਕ ਨਾਮੁ ਧਿਆਇਆ ਜੀਉ ੨੮੬੬ sabh iko sabad varatdaa mayray govidaa jan naanak naam Dhi-aa-i-aa jee-o. ||4||2||28||66||
O’ my Master of the Universe; only His command prevails everywhere, and the humble devotee Nanak meditates on Your Name. ||4||2||28||66||
ਮੇਰੇ ਜਗਤ ਦੇ ਮਾਲਕ ਹਰਿ ਥਾ ਕੇਵਲ ਤੇਰਾ ਹੁਕਮ ਹੀ ਪਰਬਲ ਹੈ ਨੋਕਰ ਨਾਨਕਤੇਰੇ ਨਾਮ ਦਾ ਅਰਾਧਨ ਕਰਦਾ ਹੈ 
سبھُ  اِکۄ  سبدُ  ورتدا  میرے  گۄوِدا  جن  نانک  نامُ  دھِیائِیا  جیءُ 42 28  66 
میرے آقا کائنات؛ صرف اس کا حکم ہر جگہ غالب ہے ، اور عاجز عقیدت مند نانک تیرے نام پر غور کرتے ہیں


ਗਉੜੀ ਮਾਝ ਮਹਲਾ  
ga-orhee maajh mehlaa 4.
Raag Gauree Maajh, Fourth Guru:
گئُڑی  ماجھ  محلا 4

ਮਨ ਮਾਹੀ ਮਨ ਮਾਹੀ ਮੇਰੇ ਗੋਵਿੰਦਾ ਹਰਿ ਰੰਗਿ ਰਤਾ ਮਨ ਮਾਹੀ ਜੀਉ 
man maahee man maahee mayray govindaa har rang rataa man maahee jee-o.
O’ my God, the one who is blessed with Your gr realizes that You are dwelling in his mind and his mind remains imbued with Your love.
ਹੇ ਮੇਰੇ ਗੋਵਿੰਦਜਿਸ ਉਤੇ ਤੇਰੀ ਮਿਹਰ ਹੁੰਦੀ ਹੈਉਹ ਮਨੁੱਖ ਆਪਣੇ ਮਨ ਵਿਚ ਹੀਹਰਿਨਾਮ ਦੇ ਰੰਗ ਵਿਚ ਰੰਗਿਆ ਰਹਿੰਦਾ ਹੈ     
من  ماہی   من  ماہی  میرے  گۄوِنّدا   ہرِ  رنّگِ  رتا  من  ماہی  جیءُ 
جس کو آپ کے جی کی برکت ہے وہ سمجھتا ہے کہ آپ اس کے دماغ میں بس رہے ہیں اور اس کا ذہن آپ کی محبت میں رنگا ہوا ہے


ਹਰਿ ਰੰਗੁ ਨਾਲਿ  ਲਖੀਐ ਮੇਰੇ ਗੋਵਿਦਾ ਗੁਰੁ ਪੂਰਾ ਅਲਖੁ ਲਖਾਹੀ ਜੀਉ 
har rang naal na lakhee-ai mayray govidaa gur pooraa alakh lakhaahee jee-o.
O’ my loving God, You are always with us, but we cannot realize this. It is only the perfect Guru who helps us to know You, the unknowable God.
ਹੇ ਮੇਰੇ ਗੋਵਿੰਦਹਰਿਨਾਮ ਦਾ ਆਨੰਦ ਹਰੇਕ ਜੀਵ ਦੇ   ਅੰਦਰ ਮੌਜੂਦ ਹੈਪਰ ਇਹ ਆਨੰਦ ਹਰੇਕ ਜੀਵ ਪਾਸੋਂ ਮਾਣਿਆ ਨਹੀਂ ਜਾ ਸਕਦਾ ਜਿਨ੍ਹਾਂ ਮਨੁੱਖਾਂ ਨੂੰ ਪੂਰਾ ਗੁਰੂ ਮਿਲ ਪੈਂਦਾ ਹੈ ਉਹ ਉਸ ਅਦ੍ਰਿਸ਼ਟ ਪਰਮਾਤਮਾ ਨੂੰ ਲੱਭ ਲੈਂਦੇ ਹਨ 
ہرِ  رنّگُ  نالِ  ن  لکھیِۓَ  میرے  گۄوِدا   گُرُ  پۄُرا  الکھُ  لکھاہی  جیءُ 
آپ ہمیشہ ہمارے ساتھ ہیں ، لیکن ہم اس کا ادراک نہیں کرسکتے ہیں۔ یہ صرف کامل گرو ہی ہے جو آپ کو ، انجان خدا کو جاننے میں ہماری مدد کرتا ہے


ਹਰਿ ਹਰਿ ਨਾਮੁ ਪਰਗਾਸਿਆ ਮੇਰੇ ਗੋਵਿੰਦਾ ਸਭ ਦਾਲਦ ਦੁਖ ਲਹਿ ਜਾਹੀ ਜੀਉ 
har har naam pargaasi-aa mayray govindaa sabh daalad dukh leh jaahee jee-o. O’ my Master of the Universe, those in whose mind Your Name is illuminated, all their misery and sorrow is removed.
ਹੇ ਮੇਰੇ ਗੋਵਿੰਦਜਿਨ੍ਹਾਂ ਦੇ ਅੰਦਰ ਤੂੰ ਹਰਿਨਾਮ ਦਾ ਪਰਕਾਸ਼ ਕਰਦਾ ਹੈਂਉਹਨਾਂ ਦੇ ਸਾਰੇ ਦੁੱਖ ਦਲਿੱਦਰ ਦੂਰ ਹੋ ਜਾਂਦੇ ਹਨ 
ہرِ  ہرِ  نامُ  پرگاسِیا  میرے  گۄوِنّدا   سبھ  دالد  دُکھ  لہِ  جاہی  جیءُ 
اے میرے آقا کائنات ، وہ لوگ جن کے ذہن میں آپ کا نام روشن ہے ، ان کا سارا دکھ اور غم دور ہو گیا ہے۔


ਹਰਿ ਪਦੁ ਊਤਮੁ ਪਾਇਆ ਮੇਰੇ ਗੋਵਿੰਦਾ ਵਡਭਾਗੀ ਨਾਮਿ ਸਮਾਹੀ ਜੀਉ 
har pad ootam paa-i-aa mayray govindaa vadbhagi naam samaahee jee-o. ||1||
O’ my Master of the Universe, those who by good fortune obtain the supreme spiritual state of union With God, remain merged in Naam. ||1||
ਹੇ ਮੇਰੇ ਗੋਵਿੰਦਜਿਨ੍ਹਾਂ ਮਨੁੱਖਾਂ ਨੂੰ ਹਰਿਮਿਲਾਪ ਦੀ ਉੱਚੀ ਅਵਸਥਾ ਪ੍ਰਾਪਤ ਹੋ ਜਾਂਦੀ ਹੈਉਹ ਵਡਭਾਗੀ ਮਨੁੱਖ ਹਰਿਨਾਮ ਵਿਚ ਲੀਨ ਰਹਿੰਦੇ ਹਨ l
ہرِ  پدُ  اۄُتمُ  پائِیا  میرے  گۄوِنّدا   وڈبھاگی  نامِ  سماہی  جیءُ 1
او ’میرے آقا کائنات ،جو لوگ خوش قسمتی سے خدا کی ذات کے ساتھ روحانی اتحاد کو حاصل کرتے ہیں ، وہ نام میں ضم ہوجاتے ہیں


ਨੈਣੀ ਮੇਰੇ ਪਿਆਰਿਆ ਨੈਣੀ ਮੇਰੇ ਗੋਵਿਦਾ ਕਿਨੈ ਹਰਿ ਪ੍ਰਭੁ ਡਿਠੜਾ ਨੈਣੀ ਜੀਉ 
nainee mayray pi-aari-aa nainee mayray govidaa kinai har parabh dithrhaa nainee jee-o.
O’ my beloved Master of the Universe, has anyone ever seen You with his eyes? ਹੇ ਮੇਰੇ ਪਿਆਰੇ ਗੋਵਿੰਦਕੀ ਕਿਸੇ ਨੇ ਆਪਣੀਆਂ ਅੱਖਾਂ ਨਾਲ ਵਾਹਿਗੁਰੂ ਸੁਆਮੀ ਨੂੰ ਵੇਖਿਆਂ ਹੈ?    
نیَݨی  میرے  پِیارِیا  نیَݨی  میرے  گۄوِدا  کِنےَ   ہرِ  پ٘ربھُ  ڈِٹھڑا  نیَݨی  جیءُ 
میرے پیارے آقا کائنات ، کیا کبھی کسی نے آپ کو اپنی آنکھوں سے دیکھا ہے؟


ਮੇਰਾ ਮਨੁ ਤਨੁ ਬਹੁਤੁ ਬੈਰਾਗਿਆ ਮੇਰੇ ਗੋਵਿੰਦਾ ਹਰਿ ਬਾਝਹੁ ਧਨ ਕੁਮਲੈਣੀ ਜੀਉ 
mayraa man tan bahut bairaagi-aa mayray govindaa har baajhahu Dhan kumlainee jee-o.
O’ my master of the Universe, without You I am feeling the pains of separation,and I am withering away like a separated young bride.
ਹੇ ਮੇਰੇ ਗੋਵਿੰਦਵਿਛੋੜੇ ਵਿਚ ਮੇਰਾ ਮਨ ਮੇਰਾ ਹਿਰਦਾ ਬਹੁਤ ਵੈਰਾਗਵਾਨ ਹੋ ਰਿਹਾ ਹੈ ਤੈਥੋਂ ਬਿਨਾ ਮੈਂ ਜੀਵਇਸਤ੍ਰੀ ਕੁਮਲਾਈ ਪਈ ਹਾਂ
میرا  منُ  تنُ  بہُتُ  بیَراگِیا  میرے  گۄوِنّدا  ہرِ  باجھہُ  دھن  کُملیَݨی  جیءُ    
اے  میرے آقا کائنات ، تیرے بغیر میں جدائی کے درد کو محسوس کر رہا ہوں ، اور میں الگ الگ دلہن کی طرح مرجھا رہا ہوں۔