Guru Granth Sahib Translation Project

guru-granth-sahib-urdu-page-69

Page 69

ਸਿਰੀਰਾਗੁ ਮਹਲਾ ੩ ॥ شری راگومحلہ3 ۔
ਸਤਿਗੁਰਿ ਮਿਲਿਐ ਫੇਰੁ ਨ ਪਵੈ ਜਨਮ ਮਰਣ ਦੁਖੁ ਜਾਇ ॥ اگر ستگرو مل جائے تو انسان پیدائش اور موت کے چکر سے آزادی حاصل كرليتا ہے۔ اس کی پیدائش اور موت کا تکلیف ختم ہو جاتی ہے۔
ਪੂਰੈ ਸਬਦਿ ਸਭ ਸੋਝੀ ਹੋਈ ਹਰਿ ਨਾਮੈ ਰਹੈ ਸਮਾਇ ॥੧॥ كامل گرو کی تعليمات كے ذريعے سارى سمجھ آجاتى ہے اور انسان خالق کے نام میں مگن رہتا ہے۔1
ਮਨ ਮੇਰੇ ਸਤਿਗੁਰ ਸਿਉ ਚਿਤੁ ਲਾਇ ॥ اے میرے من! اپنا دل گرو کے ساتھ لگاؤ۔
ਨਿਰਮਲੁ ਨਾਮੁ ਸਦ ਨਵਤਨੋ ਆਪਿ ਵਸੈ ਮਨਿ ਆਇ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥ ہری کا ابدى نیا اور پاكيزه نام خود بخود سادهو کے من میں ٹک جاتا ہے۔ 1 وقفہ
ਹਰਿ ਜੀਉ ਰਾਖਹੁ ਅਪੁਨੀ ਸਰਣਾਈ ਜਿਉ ਰਾਖਹਿ ਤਿਉ ਰਹਣਾ ॥ اے میرے رب ! مجھے اپنی پناہ میں رکھو آپ مجھے جيسے رکھوگے مجھے اسی حالت میں رہنا ہے ۔
ਗੁਰ ਕੈ ਸਬਦਿ ਜੀਵਤੁ ਮਰੈ ਗੁਰਮੁਖਿ ਭਵਜਲੁ ਤਰਣਾ ॥੨॥ گرو کے ذریعے دنيا سے پار تبهی ہوا جا سکتا ہے، جب گرو کے کلام کے ذریعے كبر کو مار کر زندگی گزاری جائے۔
ਵਡੈ ਭਾਗਿ ਨਾਉ ਪਾਈਐ ਗੁਰਮਤਿ ਸਬਦਿ ਸੁਹਾਈ ॥ رب کا نام بڑی قسمت سے ملتا ہے۔ گرو کی مرضی پر چل کر نام کا ذکر کرنے سے زندگی خوبصورت بن جاتی ہے۔
ਆਪੇ ਮਨਿ ਵਸਿਆ ਪ੍ਰਭੁ ਕਰਤਾ ਸਹਜੇ ਰਹਿਆ ਸਮਾਈ ॥੩॥ دنيا کا خالق رب خود ہی انسان کے دل میں آکر بستا ہے۔ پھر انسان آسانى سے ہی رب میں مگن رہتا ہے۔ 3
ਇਕਨਾ ਮਨਮੁਖਿ ਸਬਦੁ ਨ ਭਾਵੈ ਬੰਧਨਿ ਬੰਧਿ ਭਵਾਇਆ ॥ كئى من مرضی کرنے والے انسانوں کو رب کا نام اچھا نہیں لگتا۔ ایسے من مرضی کرنے والے انسان جہالت کے بندھن میں بندھے چوراسی لاکھ اندام نہانی میں بھٹکتے پھرتے ہیں۔
ਲਖ ਚਉਰਾਸੀਹ ਫਿਰਿ ਫਿਰਿ ਆਵੈ ਬਿਰਥਾ ਜਨਮੁ ਗਵਾਇਆ ॥੪॥ وه چوراسی لاکھ اندام نہانی کے اندر بار بار بھٹکتے ہیں اور اپنی انمول زندگی بیکار گنواں دیتے ہیں۔4
ਭਗਤਾ ਮਨਿ ਆਨੰਦੁ ਹੈ ਸਚੈ ਸਬਦਿ ਰੰਗਿ ਰਾਤੇ ॥ رب کے عقیدت مندوں کے من میں لطف بنا رہتا ہے۔ کیوں کہ وہ سچے لفظ میں مگن رہتے ہیں۔
ਅਨਦਿਨੁ ਗੁਣ ਗਾਵਹਿ ਸਦ ਨਿਰਮਲ ਸਹਜੇ ਨਾਮਿ ਸਮਾਤੇ ॥੫॥ وہ ہمیشہ ہی رات دن رب کی پاکیزہ تسبیح گاتے ہیں اور آسانی سے نام میں مگن رہتے ہیں 5۔
ਗੁਰਮੁਖਿ ਅੰਮ੍ਰਿਤ ਬਾਣੀ ਬੋਲਹਿ ਸਭ ਆਤਮ ਰਾਮੁ ਪਛਾਣੀ ॥ گرومکھ ہمیشہ امرت جیسی میٹھى بات بولتے ہیں،کیوں کہ وہ تمام انسانوں کے اندر رب کا حصہ روح کی مشابہت کو پہچانتے ہیں۔
ਏਕੋ ਸੇਵਨਿ ਏਕੁ ਅਰਾਧਹਿ ਗੁਰਮੁਖਿ ਅਕਥ ਕਹਾਣੀ ॥੬॥ گرومکھوں کی کہانی ان کہی ہے۔ وہ ایک رب کی خدمت اور عبادت کرتے ہیں۔
ਸਚਾ ਸਾਹਿਬੁ ਸੇਵੀਐ ਗੁਰਮੁਖਿ ਵਸੈ ਮਨਿ ਆਇ ॥ گرومکھ سچے رب کی عبادت کرتے ہیں اور رب گرومکھ کے من میں آکر بستا ہے۔
ਸਦਾ ਰੰਗਿ ਰਾਤੇ ਸਚ ਸਿਉ ਅਪੁਨੀ ਕਿਰਪਾ ਕਰੇ ਮਿਲਾਇ ॥੭॥ جو ہمیشہ ہی رب کی محبت میں مگن رہتے ہیں، انہیں رب اپنی مہربانی کرکے اپنے ساتھ ملا لیتا ہے۔7
ਆਪੇ ਕਰੇ ਕਰਾਏ ਆਪੇ ਇਕਨਾ ਸੁਤਿਆ ਦੇਇ ਜਗਾਇ ॥ رب خود ہی کرتا ہے اور خود ہی کرواتا ہے۔ وہ ممتا کی نیند سے بھی انسانوں کو جگا دیتا ہے۔
ਆਪੇ ਮੇਲਿ ਮਿਲਾਇਦਾ ਨਾਨਕ ਸਬਦਿ ਸਮਾਇ ॥੮॥੭॥੨੪॥ اے نانک! گرو کے لفظ میں مل کر وہ خود ہی عقیدت مندوں کو اپنے ساتھ میں ملا لیتا ہے۔ 8۔7۔24
ਸਿਰੀਰਾਗੁ ਮਹਲਾ ੩ ॥ شرى راگومحلہ3۔
ਸਤਿਗੁਰਿ ਸੇਵਿਐ ਮਨੁ ਨਿਰਮਲਾ ਭਏ ਪਵਿਤੁ ਸਰੀਰ ॥ ستگرو کی خدمت کرنے سے انسان کا من صاف اور جسم پاک ہو جاتا ہے۔
ਮਨਿ ਆਨੰਦੁ ਸਦਾ ਸੁਖੁ ਪਾਇਆ ਭੇਟਿਆ ਗਹਿਰ ਗੰਭੀਰੁ ॥ سمندر جیسے گہرے اور سنجیدہ رب کو پاکر من پرلطف ہو جاتا ہے اور اعلی سكون حاصل کرتا ہے۔
ਸਚੀ ਸੰਗਤਿ ਬੈਸਣਾ ਸਚਿ ਨਾਮਿ ਮਨੁ ਧੀਰ ॥੧॥ مراقبے کی اعلی حالت میں بیٹھنے والا خواہش مند سچ نام کے راز کو جان کر من میں صبر حاصل کرتا ہے۔1
ਮਨ ਰੇ ਸਤਿਗੁਰੁ ਸੇਵਿ ਨਿਸੰਗੁ ॥ اے میرے من! تو بغیر شک کے ہو کر اپنے ستگرو کی خدمت کر۔
ਸਤਿਗੁਰੁ ਸੇਵਿਐ ਹਰਿ ਮਨਿ ਵਸੈ ਲਗੈ ਨ ਮੈਲੁ ਪਤੰਗੁ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥ ستگرو کی عقیدت کے ساتھ خدمت کرنے سے من میں رب کا بود و باش ہوتا ہے اور تجھے ممتا کی محبت جیسی گندگی نہیں لگتی مگر ذہن بالکل پاک ہو جاتا ہے۔1 وقفہ
ਸਚੈ ਸਬਦਿ ਪਤਿ ਊਪਜੈ ਸਚੇ ਸਚਾ ਨਾਉ ॥ سچ نام کے ذریعے انسان کو دنیا اور آخرت میں بڑی شان حاصل ہوتی ہے۔ سچى ذات مالک كا نام سچ ہے۔
ਜਿਨੀ ਹਉਮੈ ਮਾਰਿ ਪਛਾਣਿਆ ਹਉ ਤਿਨ ਬਲਿਹਾਰੈ ਜਾਉ ॥ میں ان انسانوں پر قربان جاتا ہوں، جنہوں نے اپنے کبر کے احساس کا خاتمہ کرکے سچ کو پہچان لیا ہے۔
ਮਨਮੁਖ ਸਚੁ ਨ ਜਾਣਨੀ ਤਿਨ ਠਉਰ ਨ ਕਤਹੂ ਥਾਉ ॥੨॥ من مرضی کرنے والے انسان اس سچ کو نہیں پاسکتے،ان کو کہیں بھی پناہ یا ٹھکانا حاصل نہیں ہوتا۔2
ਸਚੁ ਖਾਣਾ ਸਚੁ ਪੈਨਣਾ ਸਚੇ ਹੀ ਵਿਚਿ ਵਾਸੁ ॥ گرومکھ کا کھانا، پہننا اور رہنا سب سچ ہی ہے۔
ਸਦਾ ਸਚਾ ਸਾਲਾਹਣਾ ਸਚੈ ਸਬਦਿ ਨਿਵਾਸੁ ॥ وہ ہمیشہ سچے مالک کی تعریف کرتے ہیں اور سچ نام کے اندر ان کا بود و باش ہے۔
ਸਭੁ ਆਤਮ ਰਾਮੁ ਪਛਾਣਿਆ ਗੁਰਮਤੀ ਨਿਜ ਘਰਿ ਵਾਸੁ ॥੩॥ وہ تمام انسانوں کو برہمن شکل سے ہی پہچانتے ہیں اور خود بھی ہمیشہ گرو کی تعلیمات کے مطابق اپنى روحانى ذات میں رہتے ہیں۔3
ਸਚੁ ਵੇਖਣੁ ਸਚੁ ਬੋਲਣਾ ਤਨੁ ਮਨੁ ਸਚਾ ਹੋਇ ॥ وہ سچ دیکھتے ہیں اور سچ ہی بولتے ہیں اور ان کے من اور بدن کے اندر وہ سچ ہی ہوتا ہے۔
ਸਚੀ ਸਾਖੀ ਉਪਦੇਸੁ ਸਚੁ ਸਚੇ ਸਚੀ ਸੋਇ ॥ ایسے معتقد لوگ رب کا محسوس کردہ سچ دوسروں پر ظاہر کرتے ہیں، حتمی سچ کا پیغام دیتے ہیں، اسی سے دنیا میں ان كى سچی شان ہوتی ہے۔
ਜਿੰਨੀ ਸਚੁ ਵਿਸਾਰਿਆ ਸੇ ਦੁਖੀਏ ਚਲੇ ਰੋਇ ॥੪॥ جنہوں نے سچ کو فراموش کر دیا ہے، وہ ہمیشہ دکھی رہتے ہیں اور ماتم کرتے ہوئے ناکام زندگی کی وجہ سے چلے جاتے ہیں۔4
ਸਤਿਗੁਰੁ ਜਿਨੀ ਨ ਸੇਵਿਓ ਸੇ ਕਿਤੁ ਆਏ ਸੰਸਾਰਿ ॥ جنہوں نے ستگرو کی خدمت نہیں کی، وہ دنیا میں کیوں آئے ہیں؟
ਜਮ ਦਰਿ ਬਧੇ ਮਾਰੀਅਹਿ ਕੂਕ ਨ ਸੁਣੈ ਪੂਕਾਰ ॥ زمانہ (موت) کے دروازے پر ایسے انسانوں کو باندھ کر پیٹا جاتا ہے اور کوئی بھی ان کی چلاہٹ اور فریاد نہیں سنتا۔
ਬਿਰਥਾ ਜਨਮੁ ਗਵਾਇਆ ਮਰਿ ਜੰਮਹਿ ਵਾਰੋ ਵਾਰ ॥੫॥ وہ اپنی زندگی بیکار ہی گنواں لیتے ہیں اور بار بار مرتے اور پیدا ہوتے رہتے ہیں یعنی انہیں نجات نہیں ملتی۔ 5
error: Content is protected !!
Scroll to Top
https://ijwem.ulm.ac.id/pages/demo/ slot gacor https://andong-butuh.purworejokab.go.id/resources/demo/ https://triwarno-banyuurip.purworejokab.go.id/assets/files/demo/ https://bppkad.mamberamorayakab.go.id/wp-content/modemo/ http://mesin-dev.ft.unesa.ac.id/mesin/demo-slot/ http://gsgs.lingkungan.ft.unand.ac.id/includes/demo/ https://kemahasiswaan.unand.ac.id/plugins/actionlog/
https://jackpot-1131.com/ https://mainjp1131.com/ https://triwarno-banyuurip.purworejokab.go.id/template-surat/kk/kaka-sbobet/
https://ijwem.ulm.ac.id/pages/demo/ slot gacor https://andong-butuh.purworejokab.go.id/resources/demo/ https://triwarno-banyuurip.purworejokab.go.id/assets/files/demo/ https://bppkad.mamberamorayakab.go.id/wp-content/modemo/ http://mesin-dev.ft.unesa.ac.id/mesin/demo-slot/ http://gsgs.lingkungan.ft.unand.ac.id/includes/demo/ https://kemahasiswaan.unand.ac.id/plugins/actionlog/
https://jackpot-1131.com/ https://mainjp1131.com/ https://triwarno-banyuurip.purworejokab.go.id/template-surat/kk/kaka-sbobet/