Urdu-Raw-Page-776

ਪੂਰਾਪੁਰਖੁਪਾਇਆਵਡਭਾਗੀਸਚਿਨਾਮਿਲਿਵਲਾਵੈ॥
pooraa purakh paa-i-aa vadbhaagee sach naam liv laavai.
Herealizes the perfect God by great good fortune; remains lovinglyattuned tothe eternal God’s Name ਉਸਨੂੰਵੱਡੀਕਿਸਮਤਨਾਲਸਾਰੇਗੁਣਾਂਨਾਲਭਰਪੂਰਪ੍ਰਭੂਮਿਲਪੈਂਦਾਹੈ, ਸਦਾ-ਥਿਰਹਰਿ-ਨਾਮਵਿਚਉਹਸੁਰਤਜੋੜੀਰੱਖਦਾਹੈ।
پوُرا پُرکھُ پائِیا ۄڈبھاگیِ سچِ نامِ لِۄ لاۄےَ ॥
پورا پرکھ ۔ کامل ہستی ۔ وڈبھاگی ۔ بلند قسمت سے ۔ سچ نام لولائے ۔ صدیوی الہٰینام سچ وحقیقت سے محبت ۔
بلند قسمتی کی وجہ سے انہیں اپنے ابدی خدا سے صدیوی الہٰینام سچ وحقیقت سے محبت ہے۔
ਮਤਿਪਰਗਾਸੁਭਈਮਨੁਮਾਨਿਆਰਾਮਨਾਮਿਵਡਿਆਈ॥
mat pargaas bha-ee man maani-aa raam naam vadi-aa-ee.
His intellect is enlightened with divine wisdom, his mind is appeased and he receives honor through Naam. ਉਸਦੀਮਤਿਵਿਚਆਤਮਕਜੀਵਨਦੀਸੂਝਦਾਚਾਨਣਹੋਜਾਂਦਾਹੈ, ਉਸਦਾਮਨਨਾਮਵਿਚਪਤੀਜਜਾਂਦਾਹੈ, ਉਸਨੂੰਨਾਮਦੀਬਰਕਤਿਨਾਲਇੱਜ਼ਤਮਿਲਜਾਂਦੀਹੈ।
متِ پرگاسُ بھئیِ منُ مانِیا رام نامِ ۄڈِیائیِ ॥
مت پرگاس۔ عقل پر نور ہوئی ۔ من مانیا۔ دل نے تسلیم کر لیا۔ رانا م وڈیائی ۔ الہٰینام سے عظمت وحشمت حاصلہوئی۔
الہٰینام سے عظمت وحشمت حاصل ہوئی جس کی وجہ سے اس کے پاس عقل سلیم ہے۔
ਨਾਨਕਪ੍ਰਭੁਪਾਇਆਸਬਦਿਮਿਲਾਇਆਜੋਤੀਜੋਤਿਮਿਲਾਈ॥੪॥੧॥੪॥
naanak parabh paa-i-aa sabad milaa-i-aa jotee jot milaa-ee. ||4||1||4||
O’ Nanak, one who attunes to the Guru’s word, realizes God and his soul remains united with the Prime soul. ||4||1||4|| ਹੇਨਾਨਕ! ਜਿਹੜਾਮਨੁੱਖਗੁਰੂਦੇਸ਼ਬਦਵਿਚਜੁੜਦਾਹੈਉਸਨੂੰਪ੍ਰਭੂਮਿਲਪੈਂਦਾਹੈ, ਉਸਦੀਜਿੰਦਪ੍ਰਭੂਦੀਜੋਤਿਵਿਚਇਕ-ਮਿਕਹੋਈਰਹਿੰਦੀਹੈ॥੪॥੧॥੪॥
نانک پ٘ربھُ پائِیا سبدِ مِلائِیا جوتیِ جوتِ مِلائیِ ॥੪॥੧॥੪॥
پربھ پائیا۔ الہٰی ملاپ حاصل ہوا۔ سبد ۔لائیا۔ سبد کے وسیلے سے ملاپ ہوا۔ جوتی جوت ملائی۔ انسانی نور کا الہٰی نور سے ملاپ ہوا۔ واصل بحق ہوئے
اے نانک۔ مرشد کے وسیلے سے خدا سے ملاپ ہوگا اور تمہیں روحانی سکون حاصل ہو گا۔
ਸੂਹੀਮਹਲਾ੪ਘਰੁ੫
soohee mehlaa 4 ghar 5
Raag Soohee, Fourth Guru, Fifth Beat:
سوُہیِ مہلا ੪ گھرُ ੫
ੴਸਤਿਗੁਰਪ੍ਰਸਾਦਿ॥
ik-oNkaar satgur parsaad.
One eternal God, realized by the grace of the True Guru: ਅਕਾਲਪੁਰਖਇੱਕਹੈਅਤੇਸਤਿਗੁਰੂਦੀਕਿਰਪਾਨਾਲਮਿਲਦਾਹੈ।
ایک اونکار ستِگُر پ٘رسادِ ॥
ایک ابدی خدا جو گرو کے فضل سے معلوم ہوا
ਗੁਰੁਸੰਤਜਨੋਪਿਆਰਾਮੈਮਿਲਿਆਮੇਰੀਤ੍ਰਿਸਨਾਬੁਝਿਗਈਆਸੇ॥
gur sant jano pi-aaraa mai mili-aa mayree tarisnaa bujh ga-ee-aasay.
O’ saintly persons, I have met the beloved Guru and now all my yearning for worldly riches and power is quenched. ਹੇਸੰਤਜਨੋ! ਮੈਨੂੰਪਿਆਰਾਗੁਰੂਮਿਲਪਿਆਹੈਮੇਰੀਮਾਇਆਦੀਤ੍ਰਿਸ਼ਨਾਮਿਟਗਈਹੈ।
گُرُ سنّت جنو پِیارا مےَ مِلِیا میریِ ت٘رِسنا بُجھِ گئیِیاسے ॥
گر۔ مرشد ۔ سنت جنو۔ روحانی رہبرو۔ مس ملیا۔ مجھے مل گیا۔ پیارا۔ محوب۔ ترسنا۔ پیاس۔ بجھ گئی ۔ مٹ گئی۔
اے مرشد اور روحانی رہبرو مجھے میرا محبوب مل گیا ہے ۔ اسلئے میری امیدیں ا ور دنیاویدولت کی خواہشات کی پیاس بجھ گئی ہے ۔
ਹਉਮਨੁਤਨੁਦੇਵਾਸਤਿਗੁਰੈਮੈਮੇਲੇਪ੍ਰਭਗੁਣਤਾਸੇ॥
ha-o man tan dayvaa satigurai mai maylay parabh guntaasay.
I surrender my mind and body to the true Guru so that he may unite me with God, the treasure of virtues.
ਮੈਂਆਪਣਾਮਨਆਪਣਾਤਨਗੁਰੂਦੇਅੱਗੇਭੇਟਧਰਦਾਹਾਂ।ਤਾਂਜੋਉਹਮੈਨੂੰਗੁਣਾਂਦੇਖ਼ਜ਼ਾਨੇਪਰਮਾਤਮਾਨਾਲਮਿਲਾਦੇਣ।
ہءُ منُ تنُ دیۄا ستِگُرےَ مےَ میلے پ٘ربھ گُنھتاسے ॥
من تن ۔ دل و جان ۔ ستگر ے ۔ سچے مرشد کو ۔ پربھ گن تاسے ۔ اوصافکے خزانے خدا کو ۔
میں اپنا دل وجان سچے مرشدکو بھینٹ کردوں وہمرا ملاپ اوصاف کے خزانے خدا سے کرا دے ۔
ਧਨੁਧੰਨੁਗੁਰੂਵਡਪੁਰਖੁਹੈਮੈਦਸੇਹਰਿਸਾਬਾਸੇ॥
Dhan Dhan guroo vad purakh hai mai dasay har saabaasay.
Extremely praiseworthy is the supreme Guru; I applaud the Guru who makes me aware about God. ਗੁਰੂਸਲਾਹੁਣ-ਜੋਗਹੈ, ਗੁਰੂਮਹਾਪੁਰਖਹੈ, ਗੁਰੂਨੂੰਸ਼ਾਬਾਸ਼।ਗੁਰੂਮੈਨੂੰਪਰਮਾਤਮਾਦੀਦੱਸਪਾਰਿਹਾਹੈ।
دھنُ دھنّنُ گُروُ ۄڈ پُرکھُ ہےَ مےَ دسے ہرِ ساباسے ॥
دھن دھن۔ ساباس۔ وڈپرکھ ۔ بلند عظمت۔ دسے ہرساباسے ۔ وہ خدا کا پتہ بتاتاہے ۔
شاباش ہے کہ مرشد ایک بلند عظمت ہستی ہے جو مجھے خدا کا پتہ بتاتاہے ۔
ਵਡਭਾਗੀਹਰਿਪਾਇਆਜਨਨਾਨਕਨਾਮਿਵਿਗਾਸੇ॥੧॥
vadbhaagee har paa-i-aa jan naanak naam vigaasay. ||1||
O’ Nanak, those who realize God through great good fortune, attuned to Naam, they become extremely delighted. ||1|| ਹੇਦਾਸਨਾਨਕ! ਜਿਨ੍ਹਾਂਨੂੰਵੱਡੇਭਾਗਾਂਨਾਲਪ੍ਰਭੂਮਿਲਪੈਂਦਾਹੈ, ਉਹਨਾਮਵਿਚਜੁੜਕੇਆਤਮਕਆਨੰਦਨਾਲਭਰਪੂਰਹੋਜਾਂਦੇਹਨ॥੧॥
ۄڈبھاگیِ ہرِ پائِیا جن نانک نامِ ۄِگاسے ॥੧॥
وڈبھاگی ۔ بلند قسمت سے ۔ جن نانک ۔خادم نانک۔ نام وگاسے ۔ الہٰی نام سچ وحقیقت سے خوشباش ہوتاہے ۔
اے نانک جن کو بلند قیمت الہٰی وصل و ملاپ حاصل ہوجاتاہے الہٰی نام سچ وحقیقت سے روحانی وزنی سکون کی خوشباشی پاتے ہیں۔
ਗੁਰੁਸਜਣੁਪਿਆਰਾਮੈਮਿਲਿਆਹਰਿਮਾਰਗੁਪੰਥੁਦਸਾਹਾ॥
gur sajan pi-aaraa mai mili-aa har maarag panth dasaahaa. Since the time I have met my beloved friend Guru, I keep asking him the way to realize God.
ਜਦੋਂਦਾਪਿਆਰਾਗੁਰੂਸੱਜਣਮੈਨੂੰਮਿਲਿਆਹੈ, ਮੈਂਉਸਪਾਸੋਂਪਰਮਾਤਮਾਦੇਮਿਲਾਪਦਾਰਸਤਾਪੁੱਛਦੀਰਹਿੰਦੀਹਾਂ,
گُرُ سجنھُ پِیارا مےَ مِلِیا ہرِ مارگُ پنّتھُ دساہا
ہر مارگ پنتھ وساہا۔ الہٰی راہیں بتانے والا۔
جب سے دوست مرشد کا ملاپ حاصل ہوا ہے وہ مجھے الہٰی ملاپ کے راستے بتاتا ہے ۔
ਘਰਿਆਵਹੁਚਿਰੀਵਿਛੁੰਨਿਆਮਿਲੁਸਬਦਿਗੁਰੂਪ੍ਰਭਨਾਹਾ॥
ghar aavhu chiree vichhunni-aa mil sabad guroo parabh naahaa.
O’ my Master-God, I have been separated from You for so long, let me realize You in my heart through the Guru’s divine word. ਹੇਪ੍ਰਭੂਪਤੀ!ਗੁਰੂਦੇਸ਼ਬਦਦੀਰਾਹੀਂਮੈਨੂੰਚਿਰਾਂਦੀਵਿੱਛੁੜੀਹੋਈਨੂੰਆਮਿਲ, ਮੇਰੇ (ਹਿਰਦੇ-) ਘਰਵਿਚਆਵੱਸ।
گھرِ آۄہُ چِریِ ۄِچھُنّنِیا مِلُ سبدِ گُروُ پ٘ربھ ناہا ॥
گھر آدہو ۔ دلمیں بسو۔ چری وچھونیا۔ دیرینہ جدا ہوئے ۔ مل سبد گرو۔ مرشد کلام کے ذریعے ۔ پربھ ناہا۔ پیارے خدا ۔
اے دیرنہ جدائی پا ئے ہوئے خدا دلمیں بسو اور مرشد کلام کے وسیلے سے بسو ۔
ਹਉਤੁਝੁਬਾਝਹੁਖਰੀਉਡੀਣੀਆਜਿਉਜਲਬਿਨੁਮੀਨੁਮਰਾਹਾ॥
ha-o tujh baajhahu kharee udeenee-aa ji-o jal bin meen maraahaa.
O’ God! just as fish dies without water, similarly I remain very sad without You. ਹੇਪ੍ਰਭੂ! ਜਿਵੇਂਪਾਣੀਤੋਂਬਿਨਾਮੱਛੀ (ਤੜਪ) ਮਰਦੀਹੈ, (ਤਿਵੇਂ) ਤੈਥੋਂਬਿਨਾਮੈਂਬਹੁਤਉਦਾਸਰਹਿੰਦੀਹਾਂ।
ہءُ تُجھُ باجھہُ کھریِ اُڈیِنھیِیا جِءُ جل بِنُ میِنُ مراہا ॥
کھری ۔نہایت۔ اڈبنیا۔ اداس۔ غمگین ۔ مین۔ مچھلی ۔ مراہا۔ مرجاتی ہے ۔
میں تیرے بغیر اس طرح سے غمگین ہوں جس طرح سے مچھلی بغیر پانی مرجاتی ہے
ਵਡਭਾਗੀਹਰਿਧਿਆਇਆਜਨਨਾਨਕਨਾਮਿਸਮਾਹਾ॥੨॥vadbhaagee har Dhi-aa-i-aa jan naanak naam samaahaa. ||2||
O’ Nanak, those very fortunate people who remembered God with adoration, merged into Him. ||2|| ਹੇਦਾਸਨਾਨਕ! ਜਿਹੜੇਮਨੁੱਖਾਂਨੇਵੱਡੇਭਾਗਾਂਨਾਲਪਰਮਾਤਮਾਦਾਸਿਮਰਨਕੀਤਾ, ਉਹਪਰਮਾਤਮਾਦੇਨਾਮਵਿਚ (ਹੀ) ਲੀਨਹੋਗਏ॥੨॥
ۄڈبھاگیِ ہرِ دھِیائِیا جن نانک نامِ سماہا ॥੨॥
ہر دھیائیا۔ خدامیں دھیان لگایا ۔ نام سماہا۔ الہٰی نام سچ وحقیقت میں محو ہوا۔
اے خدمتگار نانک ۔ اپنا دھیان خدا میں لگائیا اور الہٰی نام سچ وحقیقت میں محؤ ومجذوب ہوا۔
ਮਨੁਦਹਦਿਸਿਚਲਿਚਲਿਭਰਮਿਆਮਨਮੁਖੁਭਰਮਿਭੁਲਾਇਆ॥
mandah dis chal chal bharmi-aa manmukhbharam bhulaa-i-aa.
Deluded by doubt, the mind of a self willed person wanders around everywhere. ਆਪਣੇਮਨਦੇਪਿੱਛੇਤੁਰਨਵਾਲੇਮਨੁੱਖਦਾਮਨਭਟਕਣਾਵਿਚਕੁਰਾਹੇਪੈਕੇਦਸੀਂਪਾਸੀਂਦੌੜਦੌੜਕੇਭਟਕਦਾਰਹਿੰਦਾਹੈ।
منُ دہ دِسِ چلِ چلِ بھرمِیا منمُکھُ بھرمِ بھُلائِیا ॥
دیہہ دس۔ دس اطراف۔ بھرمیا۔ بھٹکیا ۔ منمکھ ۔ خودی پسند۔۔ بھرم۔ وہم وگمان ۔ بھلائیا ۔ گمراہ ہوا
خودی پسند مرید من وہم وگمان کی بھٹکن میں گمراہ ہوکر ہر طرف بھٹکتا پھرتا ہے
ਨਿਤਆਸਾਮਨਿਚਿਤਵੈਮਨਤ੍ਰਿਸਨਾਭੁਖਲਗਾਇਆ॥
nit aasaa man chitvai man tarisnaa bhukh lagaa-i-aa.
He always entertains hopes for more and more worldly wealth, because his mind is afflicted with yearning for worldly riches and power ਉਹਆਪਣੇਮਨਵਿਚਸਦਾਮਾਇਆਦੀਆਂਆਸਾਂਚਿਤਾਰਦਾਰਹਿੰਦਾਹੈ, ਉਸਦੇਮਨਨੂੰਮਾਇਆਦੀਤ੍ਰਿਸ਼ਨਾਭੁੱਖਚੰਬੜੀਰਹਿੰਦੀਹੈ।
نِت آسا منِ چِتۄےَ من ت٘رِسنا بھُکھ لگائِیا ॥
۔ نت آسا۔ ہر روز اُمیدیں ۔ جتوئے ۔ باندھا ہے ۔ دلمیں سوچتا ہے ۔ من دل ۔ ترسنا۔ پیاس ۔
ہر نئے روز دلمیں نئی امیدیں باندھتا اور لگاتا ہے ۔ دلمیں خواہشات کی بھوک اور پیاس ہے ۔
ਅਨਤਾਧਨੁਧਰਿਦਬਿਆਫਿਰਿਬਿਖੁਭਾਲਣਗਇਆ॥
antaa Dhan Dhar dabi-aa fir bikhbhaalan ga-i-aa.
Even though he has hoarded unaccountable wealth, still he goes out searching for worldly riches which is nothing but poison for the spiritual life. ਬੇਅੰਤਧਨਧਰਤੀਵਿਚਦੱਬਰੱਖਦਾਹੈ, ਫਿਰਭੀਆਤਮਕਮੌਤਲਿਆਉਣਵਾਲੀਹੋਰਮਾਇਆ-ਜ਼ਹਿਰਦੀਭਾਲਕਰਦਾਫਿਰਦਾਹੈ।
انتا دھنُ دھرِ دبِیا پھِرِ بِکھُ بھالنھ گئِیا ॥
انتا دھن۔ بیشمار دولت۔ دکھ ۔ بھالن گییا۔ دنیایو دولت کی تلاش میں جو روحانی زندگی کے لئے ایک زہر کی مانند ہی نہیں زیر قاتل بھی ہے
بیشمار دولت زمین میں دبا رکھی ہے تاہم بھ مزید دولت کی تالش میں انسان کے اخلاق کے لئے زہر قاتل ہے تگ و دور جاری ہے
ਜਨਨਾਨਕਨਾਮੁਸਲਾਹਿਤੂਬਿਨੁਨਾਵੈਪਚਿਪਚਿਮੁਇਆ॥੩॥
jan naanak naam salaahi too bin naavai pach pach mu-i-aa. ||3||
O’ Nanak, keep remembering God with loving devotion, because without it one is consumed in the fierce worldly desires and remains spiritually dead. ||3|| ਹੇਦਾਸਨਾਨਕ! ਤੂੰਪਰਮਾਤਮਾਦਾਨਾਮਜਪਦਾਰਿਹਾਕਰ।ਨਾਮਤੋਂਖੁੰਝਕੇਮਨੁੱਖ (ਤ੍ਰਿਸ਼ਨਾਦੀਅੱਗਵਿਚ) ਸੜਸੜਕੇਆਤਮਕਮੌਤਹੀਸਹੇੜੀਰੱਖਦਾਹੈ॥੩॥
جن نانک نامُ سلاہِ توُ بِنُ ناۄےَ پچِ پچِ مُئِیا ॥੩॥
بن ناوے پچ موئیا ۔ سچ وحقیقت الہٰی نام کے بغیر انسان ذلیل وخوار ہوتا ہے
اے خادم نانک۔ تو الہٰینام سچ وحقیقت ستائش اور صفت صلاح کر بغیر الہٰی نام سچ وحقیقت ذلیل خوار ہوکر روحانی موت مرتا ہے ۔
ਗੁਰੁਸੁੰਦਰੁਮੋਹਨੁਪਾਇਕਰੇਹਰਿਪ੍ਰੇਮਬਾਣੀਮਨੁਮਾਰਿਆ॥
gur sundar mohan paa-ay karay har paraym banee man maari-aa.
On meeting the beautiful and fascinating Guru, I have conquered my mind with his loving divine words of God’s praises. ਸੋਹਣੇਅਤੇਮਨ-ਮੋਹਣੇਗੁਰੂਨੂੰਮਿਲਕੇਮੈਂਪ੍ਰਭੂਦੇਪਿਆਰਨੂੰਰਮਾਉਣਵਾਲੀਗੁਰਬਾਣੀਦੇਨਾਲਆਪਣੇਮਨਨੂੰਵਸਵਿੱਚਕੀਤਾਹੈ।
گُرُ سُنّدرُ موہنُ پاءِ کرے ہرِ پ٘ریم بانھیِ منُ مارِیا ॥
گر سند موہن ۔ خوبصور دل کشن مرشد ۔ ہر پریم بانی الہٰیپریم پیار بھرے بول وکلام سے ۔ من ماریا۔ دل جیت لیا۔
خوبصورت دلربا دلکش مرشد کے وصل وملاپ نے الہٰی پریم پیار بھری بانی میرے دل کومجروح ہی نہیں جیت لیا
ਮੇਰੈਹਿਰਦੈਸੁਧਿਬੁਧਿਵਿਸਰਿਗਈਮਨਆਸਾਚਿੰਤਵਿਸਾਰਿਆ॥
mayrai hirdai suDh buDh visar ga-ee man aasaa chint visaari-aa.
My heart has forgotten its understanding and intellect; I have renounced all hopes and worries of my mind. ਆਸਾਚਿੰਤਾਵਾਲੀਸੂਝ-ਬੂਝਮੇਰੇਹਿਰਦੇਵਿਚੋਂਭੁੱਲਗਈਹੈ, ਮੈਂਆਪਣੇਮਨਦੀਆਸਾਤੇਚਿੰਤਾਵਿਸਾਰਚੁਕਾਹਾਂ।
میرےَ ہِردےَ سُدھِ بُدھِ ۄِسرِ گئیِ من آسا چِنّت ۄِسارِیا ॥
سدھ بدھ۔ عقل وہوش۔ وسرگئی ۔ گم ہوگئی۔ من آسا چنت وساریا۔ دلی تشویش اور امیدیں بھول گئیں۔
امیدوں اور تشیوشوں سے بھری عقل وہشو ختم ہوگئی دل کی امیدیں اور فکر جاتے رہے ۔
ਮੈਅੰਤਰਿਵੇਦਨਪ੍ਰੇਮਕੀਗੁਰਦੇਖਤਮਨੁਸਾਧਾਰਿਆ॥
mai antar vaydan paraym kee gur daykhat man saaDhaari-aa.
Beholding the Guru, my mind has become spiritually secured and within me are the pangs of divine love. (ਹੁਣ) ਮੇਰੇਅੰਦਰਪ੍ਰੇਮਦੀਚੋਭਟਿਕੀਰਹਿੰਦੀਹੈ, ਗੁਰੂਦਾਦਰਸ਼ਨਕਰਕੇਮੇਰਾਮਨਧੀਰਜਵਾਲਾਹੋਗਿਆਹੈ।
مےَ انّترِ ۄیدن پ٘ریم کیِ گُر دیکھت منُ سادھارِیا ॥
انتر ویدن پریم ۔ دلمیں محبت کا درد۔ گروبکھت من سادھاریا ۔ دیدار مرشد سے دل کی تسلی ہوی تسکین ملا ۔
دلمیں پریم پیار کا درد ہجر ہے اور دیدار ووصل مرشد سے دل کو تسکین حاصل ہویئی۔
ਵਡਭਾਗੀਪ੍ਰਭਆਇਮਿਲੁਜਨੁਨਾਨਕੁਖਿਨੁਖਿਨੁਵਾਰਿਆ॥੪॥੧॥੫॥
vadbhaagee parabh aa-ay mil jan naanak khin khin vaari-aa. ||4||1||5||
O’ God, it would be my good fortune if You make me realize You; Your devotee Nanak is forever dedicated to You. ||4||1||5||
ਹੇਪ੍ਰਭੂ! ਮੇਰੇਚੰਗੇਭਾਗਾਂਨੂੰ,ਤੂੰਮੈਠੂੰਆਕੇਮਿਲ, ਦਾਸਨਾਨਕਤੈਥੋਂਹਰਵੇਲੇਸਦਕੇਜਾਂਦਾਹੈ॥੪॥੧॥੫॥
ۄڈبھاگیِ پ٘ربھ آءِ مِلُ جنُ نانکُ کھِنُ کھِنُ ۄارِیا ॥੪॥੧॥੫॥
کھن کھن ۔ پل پل۔ باربار۔
اے خدمتگار نانک۔ بلند قسمت سے اے خدا ملاپ عنایت کرہر پل ہر گھڑی قربان و فریفتہ ہوں تجھ پر۔
ਸੂਹੀਛੰਤਮਹਲਾ੪॥
soohee chhant mehlaa 4.
Raag Soohee, Chhant, Fourth Guru:
سوُہیِ چھنّت مہلا ੪॥
ਮਾਰੇਹਿਸੁਵੇਜਨਹਉਮੈਬਿਖਿਆਜਿਨਿਹਰਿਪ੍ਰਭਮਿਲਣਨਦਿਤੀਆ॥
maarayhis vay jan ha-umai bikhi-aa jin har parabh milan na ditee-aa.
O’ mortal, destroy this ego and the love for the poisonous worldly riches and power which has not let you realize God. ਹੇਭਾਈ! ਜਿਸਹਉਮੈਅਤੇਮਾਇਆਨੇਜੀਵਨੂੰਕਦੇਪਰਮਾਤਮਾਨਾਲਮਿਲਣਨਹੀਂਦਿੱਤਾ, ਇਸਹਉਮੈਨੂੰਇਸਮਾਇਆਨੂੰਮਾਰਮੁਕਾਓ।
ماریہِسُ ۄے جن ہئُمےَ بِکھِیا جِنِ ہرِ پ٘ربھ مِلنھ ن دِتیِیا ॥
ہس ۔ ہونمے۔ خودی ۔ ہونمے وکھیا۔ خودی کی زہر ۔ ہر پربھ ۔ الہٰی خدا ۔ دیہہ۔ جسم ۔
اس خودی کو ختم کرؤ ۔ جس خودی کی زہر الہٰی ملاپ میں مائل ہے ۔
ਦੇਹਕੰਚਨਵੇਵੰਨੀਆਇਨਿਹਉਮੈਮਾਰਿਵਿਗੁਤੀਆ॥
dayh kanchan vay vannee-aa in ha-umai maar vigutee-aa.
Your body is valuable and beautiful like gold, but this ego has destroyed it. ਇਹਸਰੀਰਸੋਨੇਦੇਰੰਗਵਰਗਾਸੋਹਣਾਹੁੰਦਾਹੈ, ਪਰਇਸਹਉਮੈਨੇਸਰੀਰਨੂੰਮਾਰਕੇਖ਼ੁਆਰਕਰਦਿੱਤਾ।
دیہ کنّچن ۄے ۄنّنیِیا اِنِ ہئُمےَ مارِ ۄِگُتیِیا ॥
کنچن۔ سونے ۔ دنیا ۔ جیسی ۔ ان ہونمے ۔ اس خودی نے ۔ وگوتیا۔ ذلیل وخار کی ۔
اس سونے جیسے جسم کو اس خودی زلیل وخؤار کرتی ہے
ਮੋਹੁਮਾਇਆਵੇਸਭਕਾਲਖਾਇਨਿਮਨਮੁਖਿਮੂੜਿਸਜੁਤੀਆ॥
moh maa-i-aa vay sabh kaalkhaa in manmukh moorh sajutee-aa.
The love for worldly riches and power brings total disgrace, but this foolish, self-willed person is attached to it. ਮਾਇਆਦਾਮੋਹਨਿਰੀਕਾਲਖਹੈ, ਪਰਆਪਣੇਮਨਦੇਮੁਰੀਦਇਸਮੂਰਖਮਨੁੱਖਨੇ (ਆਪਣੇਆਪਨੂੰਇਸਕਾਲਖਨਾਲਹੀ) ਜੋੜਰੱਖਿਆਹੈ।
موہُ مائِیا ۄے سبھ کالکھا اِنِ منمُکھِ موُڑِ سجُتیِیا ॥
موہ مائیا۔ دولت کی محبت۔ کالخا۔ سباہی ۔ داغدار۔ موڑھ ۔ بیوقوف ۔ جاہل۔ سجتیا ۔ اس سے اپنے آپ کو جوڑ رکھا ہے ۔ گورمکھ ابھرے مرید مرشد بچنے ہیں ۔
دولت کی محبت ایک سیاہی یا درکھ ہے ۔ مگر مرید من نے اس سے اپنی اشتراکیت بنا رکھی ہے ۔
ਜਨਨਾਨਕਗੁਰਮੁਖਿਉਬਰੇਗੁਰਸਬਦੀਹਉਮੈਛੁਟੀਆ॥੧॥
jan naanak gurmukh ubray gur sabdee ha-umai chhutee-aa. ||1||
O’ devotee Nanak, the Guru’s followers are saved and liberated from the ego through the Guru’s divine word. ||1||ਹੇਦਾਸਨਾਨਕ! (ਆਖ-ਹੇਭਾਈ!) ਗੁਰੂਦੇਮਨਮੁਖਰਹਿਣਵਾਲੇਮਨੁੱਖ (ਇਸਹਉਮੈਤੋਂ) ਬਚਜਾਂਦੇਹਨ, ਗੁਰੂਦੇਸ਼ਬਦਦੀਬਰਕਤਿਨਾਲਉਹਨਾਂਨੂੰਹਉਮੈਤੋਂਖ਼ਲਾਸੀਮਿਲਜਾਂਦੀਹੈ॥੧॥
جن نانک گُرمُکھِ اُبرے گُر سبدیِ ہئُمےَ چھُٹیِیا ॥੧॥
گر سبدی ۔ مرشد کے سبق و کلام سے ۔ ہونمے چھٹیئے ۔ خودی سے نجات ملتی ہے ۔
اے خادم نانک مریدان مرشد اس سے بچتے ہیں سبق وکلام مرشد کی برکت و عنایت سے خودی سے نجات پاتے ہیں۔
ਵਸਿਆਣਿਹੁਵੇਜਨਇਸੁਮਨਕਉਮਨੁਬਾਸੇਜਿਉਨਿਤਭਉਦਿਆ॥
vas aanihu vay jan is man ka-o man baasay ji-o nitbha-udi-aa.
O’ mortal, bring your mind under control, which keeps on wandering in search of worldly wealth like a falcon. ਹੇਭਾਈ! (ਆਪਣੇ) ਇਸਮਨਨੂੰ (ਸਦਾਆਪਣੇ) ਵੱਸਵਿਚਰੱਖੋ।(ਮਨੁੱਖਦਾਇਹ) ਮਨਸਦਾ (ਸ਼ਿਕਾਰੀਪੰਛੀ) ਬਾਸ਼ੇਵਾਂਗਭਟਕਦਾਹੈ।
ۄسِ آنھِہُ ۄے جن اِسُ من کءُ منُ باسے جِءُ نِت بھئُدِیا ॥
وس آنہو۔ اس دل کو اپنے قابو یا ضبط میں لاو۔ من باسے ۔ من میں ٹھہراؤ یا تسکین ہو۔ جیؤ نیت۔ جیسے لہرروز ۔ بھودیا ۔ بھٹکا ہے ۔
اے انسانوں اس دلا کو اپنی زیر اور قابو رکھو تاکہ یہ بھٹکن کی بجائے ٹھاکنے رہے رات عذاب میں گذرتی ہے ۔
ਦੁਖਿਰੈਣਿਵੇਵਿਹਾਣੀਆਨਿਤਆਸਾਆਸਕਰੇਦਿਆ॥
dukh rain vay vihaanee-aa nit aasaa aas karaydi-aa.
Every day hoping for more wealth, the entire night of human life passes in pain. ਸਦਾਆਸਾਂਹੀਆਸਾਂਬਣਾਂਦਿਆਂ(ਮਨੁੱਖਦੀਸਾਰੀਜ਼ਿੰਦਗੀਦੀ) ਰਾਤਦੁੱਖਵਿਚਹੀਬੀਤਦੀਹੈ।
دُکھِ ریَنھِ ۄے ۄِہانھیِیا نِت آسا آس کریدِیا ॥
دکھ رین دے ۔ وہانیا۔ رات عذاب میں گذرتی ہے ۔ نت آسا آس کریدیا ۔ ہر روز امیدوںکی امید کرنے میں۔
ہر دن زیادہ دولت کی امید میں ، انسانی زندگی کی پوری رات درد میں گزری ۔
ਗੁਰੁਪਾਇਆਵੇਸੰਤਜਨੋਮਨਿਆਸਪੂਰੀਹਰਿਚਉਦਿਆ॥
gur paa-i-aa vay sant jano man aas pooree har cha-udi-aa.
O’ saintly people, one who is united with the Guru, the desire of his mind gets fulfilled by remembering God with loving devotion. ਹੇਸੰਤਜਨੋ! ਜਿਸਮਨੁੱਖਨੂੰਗੁਰੂਮਿਲਪਿਆਪਰਮਾਤਮਾਦਾਨਾਮਜਪਦਿਆਂਉਸਦੇਮਨਦੀਆਸਪੂਰੀਹੋਜਾਂਦੀਹੈ।
گُرُ پائِیا ۄے سنّت جنو منِ آس پوُریِ ہرِ چئُدِیا ॥
گر پائیا وے سنت جنو۔ اے روحانی رہبرور مرشدمل گیا ۔ من آس پوری ۔ دل کی امیدپوری ۔ ہرچودیا۔ الہٰی یاد کرنے سے ۔
اے روحانی رہنماؤ رہبرور مرشد ملنے پر امید پوری ہوئی (الہٰی نام ) یا الہٰی یاد کرتے ہوئے ۔
ਜਨਨਾਨਕਪ੍ਰਭਦੇਹੁਮਤੀਛਡਿਆਸਾਨਿਤਸੁਖਿਸਉਦਿਆ॥੨॥
jan naanak parabhdayh matee chhad aasaa nit sukh sa-udi-aa. ||2||
O’ God! bless devotee Nanak with such wisdom, that he may renounce his desire for worldly riches and may always dwell in celestial peace. ||2|| ਹੇਪ੍ਰਭੂ! ਦਾਸਨਾਨਕਨੂੰਸੂਝਬਖ਼ਸ਼ਕਿਉਹਦੁਨੀਆਵਾਲੀਆਂਆਸਾਂਛੱਡਕੇਆਤਮਕਆਨੰਦਵਿਚਲੀਨਰਹੇ॥੨॥
جن نانک پ٘ربھ دیہُ متیِ چھڈِ آسا نِت سُکھِ سئُدِیا ॥੨॥
جن نانک۔خادم نانک کو۔ پربھ دیہہ متی ۔ اے خدا عقل عنایت کر ۔ چھڈآسا۔ امید رکھنی چھوڑ ۔ نت۔ ہر روز۔ سکھ سودیا۔ آرام میں سونے کی
اے خادم نانک خداسے دعا مانگ کر مجھے ایسی سمجھ عطا کر میں امیدیں باندھنی چھوڑ کر روحانی و ذہنی سکونمیں خوابیدہ رہوں۔
ਸਾਧਨਆਸਾਚਿਤਿਕਰੇਰਾਮਰਾਜਿਆਹਰਿਪ੍ਰਭਸੇਜੜੀਐਆਈ॥
saa Dhan aasaa chit karay raam raaji-aa har parabh sayjrhee-ai aa-ee.
The soul bride hopes in her mind and says: O’ God, the Sovereign king! please manifest in my heart. ਜੀਵ-ਇਸਤ੍ਰੀਆਪਣੇਚਿੱਤਵਿਚਆਸਕਰਦੀਰਹਿੰਦੀਹੈਤੇਆਖਦੀਹੈ, ਹੇਪ੍ਰਭੂ-ਪਾਤਿਸ਼ਾਹ! ਹੇਹਰੀ! ਹੇਪ੍ਰਭੂ! (ਮੇਰੇਹਿਰਦੇਦੀ) ਸੋਹਣੀਸੇਜਉੱਤੇਆਵੱਸ।
سا دھن آسا چِتِ کرے رام راجِیا ہرِ پ٘ربھ سیجڑیِئےَ آئیِ ॥
سادھن۔ وہ انسان۔ آساچت کرے ۔ دلمیں امیدیں باندھتا ہے ۔ پہر پربھ ۔ خدا ۔ سیجڑئے آئی ۔ خدا دل بسے ۔
جو انسان دلمیں یہ امید کرتا ہے کہ خدا اس کے دل میں بسے
ਮੇਰਾਠਾਕੁਰੁਅਗਮਦਇਆਲੁਹੈਰਾਮਰਾਜਿਆਕਰਿਕਿਰਪਾਲੇਹੁਮਿਲਾਈ॥
mayraa thaakur agam da-i-aal hai raam raaji-aa kar kirpaa layho milaa-ee.
O’ God, the sovereign king! You are my compassionate and inaccessible Master, please bestow mercy and unite me with Yourself. ਹੇਪ੍ਰਭੂ-ਪਾਤਿਸ਼ਾਹ! ਤੂੰਮੇਰਾਮਾਲਕਹੈਂ, ਦਇਆਦਾਸੋਮਾਹੈਂ, ਅਪਹੁੰਚਹੈਂਤੂੰਆਪਹੀਮਿਹਰਕਰਕੇਮੈਨੂੰਆਪਣੇਚਰਨਾਂਵਿਚਮਿਲਾਲੈ।
میرا ٹھاکُرُ اگم دئِیالُ ہےَ رام راجِیا کرِ کِرپا لیہُ مِلائیِ ॥
اگم دیال ۔ انسانی رسائی ہوش و عقل سے بلند ترین مہربان۔ کر کرپا لیہ لائی۔ اپنیکرم وعنیات سے ملاؤ۔
خدا انسانی عقل و ہوش سے بلند ترین ہستی ہے اپنی کرم وعنایت سے مجھے ملا ۔