Urdu-Raw-Page-654

ਤੁਧੁਆਪੇਸਿਸਟਿਸਿਰਜੀਆਆਪੇਫੁਨਿਗੋਈ॥
tuDh aapay sisat sirjee-aa aapay fun go-ee.
You Yourself created the world and You Yourself shall destroy it in the end.ਤੂੰਆਪਹੀਸ੍ਰਿਸ਼ਟੀਨੂੰਪੈਦਾਕਰਦਾਹੈਂਤੇਆਪਹੀਫਿਰਨਾਸਕਰਦਾਹੈਂ।
تُدھُ آپے سِسٹِ سِرجیِیا آپے پھُنِ گوئیِ ॥
سسٹ۔علام ۔جہاں۔دنیا۔ سرجیا۔ پیدا کیا۔ پھن گوئی ۔ مٹاتا ہے ۔
خودہی عالم پیدا کرتا ہے اور خود ہی مٹا دیتا ہے

ਸਭੁਇਕੋਸਬਦੁਵਰਤਦਾਜੋਕਰੇਸੁਹੋਈ॥
sabh iko sabad varatdaa jo karay so ho-ee.
One Divine word is pervading everywhere; whatever He does comes to pass.ਸਭਥਾਈਂ (ਹਰੀਦਾ) ਹੀਹੁਕਮਵਰਤਰਿਹਾਹੈ; ਜੋਉਹਕਰਦਾਹੈਸੋਈਹੁੰਦਾਹੈ।
سبھُ اِکو سبدُ ۄرتدا جو کرے سُ ہوئیِ ॥
سبد۔ فرمان ۔ حکم۔ سب۔ سارے ۔
ہر جگہ تیرا ہی فرمان چل رہا ہے ۔ جو تو کرتا ہے وہی ہوتا ہے جو مریدمرشدبنتا ہے ۔
ਵਡਿਆਈਗੁਰਮੁਖਿਦੇਇਪ੍ਰਭੁਹਰਿਪਾਵੈਸੋਈ॥
vadi-aa-ee gurmukhday-ay parabh har paavai so-ee.
God blesses glory to the one who follows the Guru’s teachings and then that person realizes Him. ਜੋਮਨੁੱਖਗੁਰੂਦੇਸਨਮੁਖਹੁੰਦਾਹੈ, ਉਸਨੂੰਪ੍ਰਭੂਵਡਿਆਈਬਖ਼ਸ਼ਦਾਹੈ, ਉਹਉਸਹਰੀਨੂੰਮਿਲਪੈਂਦਾਹੈ।
ۄڈِیائیِ گُرمُکھِ دےءِ پ٘ربھُ ہرِ پاۄےَ سوئیِ ॥
اسے خدا عطمت عنایت کرتا ہے اور الہٰی ملاپ حاصل کر لیتا ہے
ਗੁਰਮੁਖਿਨਾਨਕਆਰਾਧਿਆਸਭਿਆਖਹੁਧੰਨੁਧੰਨੁਧੰਨੁਗੁਰੁਸੋਈ॥੨੯॥੧॥ਸੁਧੁ

gurmukh naanak aaraaDhi-aa sabh aakhahu Dhan Dhan Dhan gur so-ee. ||29||1|| suDhu
O’ Nanak, people lovingly remember God through the Guru’s teachings; therefore we all should again and again say, blessed is that Guru.||29||1|| ਹੇਨਾਨਕ! ਗੁਰੂਦੇਸਨਮੁਖਮਨੁੱਖਹਰੀਨੂੰਸਿਮਰਦੇਹਨ, (ਹੇਭਾਈ!) ਸਾਰੇਆਖੋ, ਕਿਉਹਸਤਿਗੁਰੂ, ਧੰਨਹੈ, ਧੰਨਹੈ, ਧੰਨਹੈ॥੨੯॥੧॥ਸੁਧੁ{
گُرمُکھِ نانک آرادھِیا سبھِ آکھہُ دھنّنُ دھنّنُ دھنّنُ گُرُ سوئیِ ॥੨੯॥੧॥ سُدھُ
۔ اے نانک ۔ مریدان مرشد یاد خداکو کرتے ہیں سارے کہو شاباش مرشد شاباش۔

ਰਾਗੁਸੋਰਠਿਬਾਣੀਭਗਤਕਬੀਰਜੀਕੀਘਰੁ੧
raag sorath banee bhagat kabeer jee kee ghar 1
Raag Sorath, Thehymns of devotee Kabeer Jee, First beat:
راگُ سورٹھِ بانھیِ بھگت کبیِر جیِ کیِ گھرُ ੧
ੴਸਤਿਗੁਰਪ੍ਰਸਾਦਿ॥
ik-oNkaar satgur parsaad.
One eternal God, realizedby the grace of the True Guru:
ਅਕਾਲਪੁਰਖਇੱਕਹੈਅਤੇਸਤਿਗੁਰੂਦੀਕਿਰਪਾਨਾਲਮਿਲਦਾਹੈ।
ੴ ستِگُر پ٘رسادِ ॥
ایک لازوال خدا ، سچے گرو کے فضل سے محسوس ہوا
ਬੁਤਪੂਜਿਪੂਜਿਹਿੰਦੂਮੂਏਤੁਰਕਮੂਏਸਿਰੁਨਾਈ॥
but pooj pooj hindoo moo-ay turak moo-ay sir naa-ee.
The Hindus are getting spiritually ruined worshipping the idols and the Muslims by bowing their heads towards Mecca (believing that God exists only there). ਹਿੰਦੂਲੋਕਬੁਤਾਂਦੀਪੂਜਾਕਰਕਰਕੇਖ਼ੁਆਰਹੋਰਹੇਹਨ, ਮੁਸਲਮਾਨ (ਰੱਬਨੂੰਮੱਕੇਵਿਚਹੀਸਮਝਕੇਉਧਰ) ਸਿਜਦੇਕਰਰਹੇਹਨ,
بُت پوُجِ پوُجِ ہِنّدوُ موُۓ تُرک موُۓ سِرُ نائیِ ॥
سر نائی سجدہ کرتے ۔
ہندو بت پرستی کرکے ذلیل وخوار ہور رہے ہیں۔ مسلمان کعبہ میں خدا کو سمجھ کر سجدے کرتے ہیں۔
ਓਇਲੇਜਾਰੇਓਇਲੇਗਾਡੇਤੇਰੀਗਤਿਦੁਹੂਨਪਾਈ॥੧॥
o-ay lay jaaray o-ay lay gaaday tayree gatduhoo na paa-ee. ||1||
The Hindus burn their dead, while Muslims bury theirs; however, O’ God both have not understood Your true state.||1|| ਹਿੰਦੂਆਂਨੇਆਪਣੇਮੁਰਦੇਸਾੜਦਿੱਤੇਤੇਮੁਸਲਮਾਨਾਂਦੇਦੱਬਦਿੱਤੇ।ਹੇਪ੍ਰਭੂ! ਤੇਰੀਅਸਲਅਵਸਥਾਦੀਸਮਝਦੋਹਾਂਧਿਰਾਂਨੂੰਨਾਹਪਈ॥੧॥
اوءِ لے جارے اوءِ لے گاڈے تیریِ گتِ دُہوُ ن پائیِ ॥੧॥
جارے ۔ جلائے ۔ گاڑے ۔ دبائے ۔ گت ۔ حالت۔ روحانیت کی سمجھ ۔
ہندو مردے کو جلاتے ہیں مسلمان دبا دیتے ہیں۔ (مراد) آپس میں جھگڑ تے ہیں کہ سچا کون ہے ۔ مگر اے خدا تجھے یہ بھی سمجھ نہیں سکے

ਮਨਰੇਸੰਸਾਰੁਅੰਧਗਹੇਰਾ॥
man ray sansaar anDh gahayraa.
O’ my mind, because of ignorance, this world is like a deep dark pit, ਹੇਮੇਰੇਮਨ! (ਅਗਿਆਨਤਾਦੇਕਾਰਨ) ਜਗਤਇਕਹਨੇਰਾਖਾਤਾਬਣਿਆਪਿਆਹੈ,

من رے سنّسارُ انّدھ گہیرا ॥
انھ گییرا۔ اندھی گہری کھڈیا کھائی
اے دل یہ دیا ایک اندھے کوئیں کی مانند ہے
ਚਹੁਦਿਸਪਸਰਿਓਹੈਜਮਜੇਵਰਾ॥੧॥ਰਹਾਉ॥
chahu dis pasri-o hai jam jayvraa. ||1|| rahaa-o.
and the noose of death prevails everywhere.||pause|| ਅਤੇਚੌਹੀਂਪਾਸੀਂਜਮਾਂਦੀਫਾਹੀਖਿਲਰੀਪਈਹੈ॥੧॥ਰਹਾਉ॥
چہُ دِس پسرِئو ہےَ جم جیۄرا ॥੧॥ رہاءُ ॥
جم جیور۔ موت کا پھندہ۔ رہاؤ۔ کیت ۔
جہاں چاروں طرف موت کا پھندہ ہے ۔
ਕਬਿਤਪੜੇਪੜਿਕਬਿਤਾਮੂਏਕਪੜਕੇਦਾਰੈਜਾਈ॥
kabit parhay parh kabitaa moo-ay kaparh kaydaarai jaa-ee.
The poets have spiritually ruined themselves in the ego of singing poems and the ascetics in the ego of visiting holy places like Kedaar Nath. ਕਵੀਲੋਕਆਪਣੀਕਾਵਿ-ਰਚਨਾਪੜ੍ਹਨਦੇਮਾਣਵਿਚਅਤੇਹੀਕਾਪੜੀਸਾਧੂਕਿਦਾਰਨਾਥਜਾਣਦੇਮਾਣਵਿਚਮਰਗਏਹਨ i
کبِت پڑے پڑِ کبِتا موُۓ کپڑ کیدارےَ جائیِ ॥
کوسی۔ کپڑ۔ کاپڑیے بھیکھ والے ۔
مراد یہ عالم جہات اور لاعلمی کا ایک کوآں بن رہا ہے ۔ عالم فاضل شاعر اپنی شاعر کرتے کرتے اور پڑھتے پڑھتے اسی میں وقار میں محو اس جہاں سے کوچ کر گئے ۔ کاپڑی فقری جو پھٹے پرانے کپڑوں کی دلقت یا گوڈڑی پہنتے ہیں

ਜਟਾਧਾਰਿਧਾਰਿਜੋਗੀਮੂਏਤੇਰੀਗਤਿਇਨਹਿਨਪਾਈ॥੨॥
jataa Dhaar Dhaar jogee moo-ay tayree gat ineh na paa-ee. ||2||
The yogis have spiritually died growing matted hair; O’ God, even they have not understood Your ways.||2|| ਜੋਗੀਲੋਕਜਟਾਰੱਖਰੱਖਕੇਹੀਇਹਸਮਝਦੇਰਹੇਕਿਇਹੀਰਾਹਠੀਕਹੈ। (ਹੇਪ੍ਰਭੂ!) ਤੇਰੀਬਾਬਤਸੂਝਇਹਨਾਂਲੋਕਾਂਨੂੰਭੀਨਾਹਪਈ॥੨॥
جٹا دھارِ دھارِ جوگیِ موُۓ تیریِ گتِ اِنہِ ن پائیِ ॥੨॥
اور لوگ جاہل پن میں مصروف ہیں۔ رہاو۔ مگر اے خداو دونوکو حقیقت کی سمجھ نہیں آئی
ਦਰਬੁਸੰਚਿਸੰਚਿਰਾਜੇਮੂਏਗਡਿਲੇਕੰਚਨਭਾਰੀ॥
darab sanch sanch raajay moo-ay gad lay kanchan bhaaree.
The kings wasted their life and died amassing wealth and burying heavy loads of gold underground. ਰਾਜੇਧਨਜੋੜਜੋੜਕੇਉਮਰਗੰਵਾਗਏ, ਉਹਨਾਂਸੋਨੇ (ਆਦਿਕ) ਦੇਢੇਰ (ਭਾਵ, ਖ਼ਜ਼ਾਨੇ) ਧਰਤੀਵਿਚਦੱਬਰੱਖੇ,
دربُ سنّچِ سنّچِ راجے موُۓ گڈِ لے کنّچن بھاریِ ॥
درب ۔ دؤلت۔ سچ ۔ اکھٹی کرکے ۔ سگڑ کچن بھاری ۔ سوہنے کے بھاری گڑھے دباکے ۔
راجاوں حکمرانوں نے دؤلت اکھٹی کرے اور سونے وغیرہ کے انبار اکھٹے کرکے زمین میں دباتے ہیں زندگی گذار دی
ਬੇਦਪੜੇਪੜਿਪੰਡਿਤਮੂਏਰੂਪੁਦੇਖਿਦੇਖਿਨਾਰੀ॥੩॥
bayd parhay parh pandit moo-ay roop daykhdaykh naaree. ||3||
The Pandits spiritually ruin themselves in the ego of reading scriptures like Vedas and women wasting their livesgazing at their own beauty. ||3||ਪੰਡਿਤਲੋਕਵੇਦ-ਪਾਠੀਹੋਣਦੇਹੰਕਾਰਵਿਚਖਪਦੇਹਨ, ਤੇ, ਇਸਤ੍ਰੀਆਂ (ਸ਼ੀਸ਼ੇਵਿਚ) ਆਪਣੇਰੂਪਤੱਕਣਵਿਚਹੀਜ਼ਿੰਦਗੀਅਜਾਈਂਬਿਤਾ
ਰਹੀਆਂਹਨ॥੩॥
بید پڑے پڑِ پنّڈِت موُۓ روُپُ دیکھِ دیکھِ ناریِ ॥੩॥
روپ۔ خوبصورت ۔
علام فاضل پنڈتوں نے وید پڑھت پڑھتے اسی غرورمیں کوچ کر گئے ۔ اور عورتیں اپنی خوبسورتی پر ناز اور فخر کرکے زندگی ضائع کر دی

ਰਾਮਨਾਮਬਿਨੁਸਭੈਬਿਗੂਤੇਦੇਖਹੁਨਿਰਖਿਸਰੀਰਾ॥
raam naam bin sabhai bigootay daykhhu nirakh sareeraa.
O’ my friends, look into your own minds and find out for yourselves that everyone is getting spiritually ruined without meditating on God’s Name. ਆਪੋ-ਆਪਣੇਅੰਦਰਝਾਤਮਾਰਕੇਵੇਖਲਵੋ, ਪਰਮਾਤਮਾਦੇਨਾਮਦਾਸਿਮਰਨਕਰਨਤੋਂਬਿਨਾਸਭਜੀਵਖ਼ੁਆਰਹੋਰਹੇਹਨ।
رام نام بِنُ سبھےَ بِگوُتے دیکھہُ نِرکھِ سریِرا ॥
وگوئے ۔ خوآر ہوئے ۔ نرخ۔ نتیجہ ناکل کر۔
اے میرے پیارے دوست زرا اپنے اندر تو دیکھو اور اپنے آپ کو تلاش کرو ہر کوئی مگر الہٰی بندگی کے بغیر سارے ذلیل و خوآر ہوئے ۔
ਹਰਿਕੇਨਾਮਬਿਨੁਕਿਨਿਗਤਿਪਾਈਕਹਿਉਪਦੇਸੁਕਬੀਰਾ॥੪॥੧॥
har kay naam bin kin gat paa-ee kahi updays kabeeraa. ||4||1||
Kabir utters this sermon that no one finds righteous way of living and freedom from vices without meditating on God’s Name. ||4||1|| ਕਬੀਰਸਿੱਖਿਆਦੀਗੱਲਆਖਦਾਹੈਕਿਪਰਮਾਤਮਾਦੇਨਾਮਤੋਂਬਿਨਾਕਿਸੇਨੂੰ (ਜੀਵਨਦੀ) ਸਹੀਸੂਝਨਹੀਂਪੈਂਦੀ॥੪॥੧॥
ہرِ کے نام بِنُ کِنِ گتِ پائیِ کہِ اُپدیسُ کبیِرا
اپدیسش ۔ واعظ ۔نصیحت۔
اس کا نتیجہ نکال کر دیکھ لو۔ کہ الہٰی عبادت و بندگی کے بغیر کس نے روحانی زندگی بسر کی اے کبیر یہ سبق بتا۔
ਜਬਜਰੀਐਤਬਹੋਇਭਸਮਤਨੁਰਹੈਕਿਰਮਦਲਖਾਈ॥
jab jaree-ai tab ho-ay bhasam tan rahai kiram dal khaa-ee.
If dead body is cremated, it becomes ashes; if buried it is eaten by the army of worms. ਮਰਨਪਿਛੋਂਜੇਸਰੀਰਸਾੜਿਆਜਾਏਤਾਂਇਹਸੁਆਹਹੋਜਾਂਦਾਹੈ, ਜੇਕਬਰਵਿਚਟਿਕਿਆਰਹੇਤਾਂਕੀੜਿਆਂਦਾਦਲਇਸਨੂੰਖਾਜਾਂਦਾਹੈ।
جب جریِئےَ تب ہوءِ بھسم تنُ رہےَ کِرم دل کھائیِ ॥
جرلئے ۔جلتا ہے ۔ بھسم۔ راکھ ۔ کرم۔ کیڑے ۔
جب جسم جلائیا جائے تو راکھ ہو جاتا ہے ۔ قبر میں کیڑے کھا جاتے ہیں۔
ਕਾਚੀਗਾਗਰਿਨੀਰੁਪਰਤੁਹੈਇਆਤਨਕੀਇਹੈਬਡਾਈ॥੧॥
kaachee gaagar neer parat hai i-aa tan kee ihai badaa-ee. ||1||
When water is poured into an unbaked clay pitcher, it dissolves and and looses its importance as pitcher; similar is the short lived glory of human body. ||1||ਜਿਵੇਂਕੱਚੇਘੜੇਵਿਚਪਾਣੀਪੈਣਨਾਲਘੜਾਛੇਤੀਗਲਜਾਂਦਾਹੈਤੇਉਹਦੇਘੜਾਹੋਣਦੀਵਡਿਆਈਨਹੀਂਰਹਿੰਦੀ, ਇਕੁਰਹੀਸਰੀਰਦਾਹਾਲਹੈ, ਇਸਦੀਵਡਿਆਈਭੀਥੋੜ੍ਹਾਚਿਰਹੀਹੈ॥੧॥
کاچیِ گاگرِ نیِرُ پرتُ ہےَ اِیا تن کیِ اِہےَ بڈائیِ ॥੧॥
کاچی گاگر ۔ کچا گھڑا ۔ نیر۔ پانی ۔ وڈائی ۔ عظمت (!)
جیسے کچے گھڑے میں پانی ڈالاجائے یہی حالت اس جسم کی ہے ۔ اتنا ہی مان یا وقار اس جسم کا ہے
ਕਾਹੇਭਈਆਫਿਰਤੌਫੂਲਿਆਫੂਲਿਆ॥
kaahay bha-ee-aa firtou fooli-aa fooli-aa.
O’ my brother, why are you roaming around so puffed up with ego?. ਹੇਭਾਈ! ਤੂੰਕਿਸਗੱਲੇਹੰਕਾਰਵਿਚਆਫਰਿਆਫਿਰਦਾਹੈਂ?
کاہے بھئیِیا پھِرتوَ پھوُلِیا پھوُلِیا ॥
(1) اے انسان فخر یا غرروکس بات کا کرتا ہے ۔
ਜਬਦਸਮਾਸਉਰਧਮੁਖਰਹਤਾਸੋਦਿਨੁਕੈਸੇਭੂਲਿਆ॥੧॥ਰਹਾਉ॥
jab das maas uraDh mukh rahtaa so din kaisay bhooli-aa. ||1|| rahaa-o.
Why have you forgotten those days, when for ten months you remained hanging upside down in the mother’s womb?||1||pause|| ਤੈਨੂੰਉਹਸਮਾਕਿਉਂਭੁਲਗਿਆਹੈਜਦੋਂਤੂੰ (ਮਾਂਦੇਪੇਟਵਿਚ) ਦਸਮਹੀਨੇਉਲਟਾਟਿਕਿਆਰਿਹਾਸੈਂ? ॥੧॥ਰਹਾਉ॥
جب دس ماس اُردھ مُکھ رہتا سو دِنُ کیَسے بھوُلِیا ॥੧॥ رہاءُ ॥
دس ماس ۔ دس مہینے ۔ ادھ مکھ ۔ الٹے منہ () ہاؤ۔
وہ دن کیوں بھول گیا جبکہ دس مہینے پیٹ میں الٹا لٹک رہا تھا ۔ رہاؤ۔
ਜਿਉਮਧੁਮਾਖੀਤਿਉਸਠੋਰਿਰਸੁਜੋਰਿਜੋਰਿਧਨੁਕੀਆ॥
ji-o maDh maakhee ti-o sathor ras jor jor Dhan kee-aa.
Just as the bee collects honey for others, similarly the foolish person amasses wealth which belongs to other after death. ਜਿਵੇਂਮੱਖੀ (ਫੁੱਲਾਂਦਾ)ਰਸਜੋੜਜੋੜਕੇਸ਼ਹਿਦਇਕੱਠਾਕਰਦੀਹੈ, ਤਿਵੇਂਮੂਰਖਬੰਦੇਨੇਸਰਫ਼ੇਕਰਕਰਕੇਧਨਜੋੜਿਆ l
جِءُ مدھُ ماکھیِ تِءُ سٹھورِ رسُ جورِ جورِ دھنُ کیِیا ॥
مدھ ماکھی ۔ شہد کی مکھی ۔ سٹھور رس۔ شہد اکھٹ اکرتی ہے ۔
جیسے شہد کی مکھی شہدکا رس اکھٹا کرتی ہے ۔ ایسے ہی دولت اکھٹی کی ۔
ਮਰਤੀਬਾਰਲੇਹੁਲੇਹੁਕਰੀਐਭੂਤੁਰਹਨਕਿਉਦੀਆ॥੨॥
martee baar layho layho karee-ai bhoot rahan ki-o dee-aa. ||2||
At the time of death, all say: take this body for disposal immediately, why should this ghost like dead body be allowed to remain here?||2|| ਮੌਤਆਈ, ਤਾਂਸਭਇਹੀਆਖਦੇਹਨ-ਲੈਚੱਲੋ, ਲੈਚੱਲੋ, ਹੁਣਇਹਬੀਤਚੁਕਿਆਹੈ, ਬਹੁਤਾਚਿਰਘਰਰੱਖਣਦਾਕੋਈਲਾਭਨਹੀਂ॥੨॥
مرتیِ بار لیہُ لیہُ کریِئےَ بھوُتُ رہن کِءُ دیِیا ॥੨॥
مرتی بار۔ بوقت ۔موت ۔ لیہو لیہو کر ییئے ۔ اے جاؤ۔ جا ؤ کرتے ہیں۔ بھوت۔ بدروح (2)
مگر بوقت موت سب لےجاؤ لے جاؤ کہتے ہیں اس بد روح کو کیوں رکھا ہے
ਦੇਹੁਰੀਲਉਬਰੀਨਾਰਿਸੰਗਿਭਈਆਗੈਸਜਨਸੁਹੇਲਾ॥
dayhuree la-o baree naar sang bha-ee aagai sajan suhaylaa.
His wife accompanies the dead body to the threshold and the friends and other relatives beyond the threshold.ਘਰਦੀ (ਬਾਹਰਲੀ) ਦਲੀਜ਼ਤਕਵਹੁਟੀ (ਉਸਮੁਰਦੇਦੇ) ਨਾਲਜਾਂਦੀਹੈ, ਅਗਾਂਹਸੱਜਣਮਿੱਤਰਚੁੱਕਲੈਂਦੇਹਨ,
دیہُریِ لءُ بریِ نارِ سنّگِ بھئیِ آگےَ سجن سُہیلا ॥
دیہری لیسو بری نار۔ گھر کے دہلیز تک شادی شدہ عورت ۔ سنگ ۔ ساتھ۔ سجن سہیلا۔ دوست رشتہ دار۔
گھر کی دہلیز تک جس کے شادی ہوئی ہے ساتھ جاتی ہے ۔ آگے دوست اور رشتہ دار جاتے ہیں ۔
ਮਰਘਟਲਉਸਭੁਲੋਗੁਕੁਟੰਬੁਭਇਓਆਗੈਹੰਸੁਅਕੇਲਾ॥੩॥
marghat la-o sabh log kutamb bha-i-o aagai hans akaylaa. ||3||
The family and friends accompany the dead body to the disposal ground, but the soul goes on all alone. ||3||ਮਸਾਣਾਂਤਕਪਰਵਾਰਦੇਬੰਦੇਤੇਹੋਰਲੋਕਜਾਂਦੇਹਨ, ਪਰਪਰਲੋਕਵਿਚਤਾਂਜੀਵ-ਆਤਮਾਇਕੱਲਾਹੀਜਾਂਦਾਹੈ॥੩॥
مرگھٹ لءُ سبھُ لوگُ کُٹنّبُ بھئِئو آگےَ ہنّسُ اکیلا ॥੩॥
مرگھٹ۔ شمشان گھاٹ یا قبرستان ۔ہنس۔ جیو (3)
مرگھٹ شمشان گھاٹ یا قبرستا تک سارے لوگ قبیلے ک لوگ جاتے ہیں۔ مگر آگے روح اکیلی جاتی ہے (3)
ਕਹਤੁਕਬੀਰਸੁਨਹੁਰੇਪ੍ਰਾਨੀਪਰੇਕਾਲਗ੍ਰਸਕੂਆ॥
kahat kabeer sunhu ray paraanee paray kaal garas koo-aa.
Kabeer says, listen, O’ human beings: you have been seized by death, as if you have fallen into a well which is surrounded by death. ਕਬੀਰਆਖਦਾਹੈ-ਹੇਬੰਦੇ! ਸੁਣ, ਤੂੰਉਸਖੂਹਵਿਚਡਿੱਗਾਪਿਆਹੈਂਜਿਸਨੂੰਮੌਤਨੇਘੇਰਿਆਹੋਇਆਹੈ (ਭਾਵ, ਮੌਤਅਵੱਸ਼ਆਉਂਦੀਹੈ)।
کہتُ کبیِر سُنہُ رے پ٘رانیِ پرے کال گ٘رس کوُیا ॥
پرے کاس گرس کوآں۔موتکی گرف تمیں گوئیں میں ہو۔
کبیر صاحب جی فرماتے یہں۔ اے لوگو سنہو ۔ تم اس کوئیں میں گرے ہوئے ہو جسے موت نے گھر رکھا ہے
ਝੂਠੀਮਾਇਆਆਪੁਬੰਧਾਇਆਜਿਉਨਲਨੀਭ੍ਰਮਿਸੂਆ॥੪॥੨॥
jhoothee maa-i-aa aap banDhaa-i-aa ji-o nalnee bharam soo-aa. ||4||2||
You have entangled yourself in the false worldly wealth, like a parrot caught in the trap. ||4||2||ਤੂੰਆਪਣੇਆਪਨੂੰਇਸਮਾਇਆਨਾਲਬੰਨ੍ਹਰੱਖਿਆਹੈਜਿਸਨਾਲਸਾਥਨਹੀਂਨਿਭਣਾ, ਜਿਵੇਂਤੋਤਾਮੌਤਦੇਡਰਤੋਂਆਪਣੇਆਪਨੂੰਨਲਨੀਨਾਲਚੰਬੋੜਰੱਖਦਾਹੈ॥੪॥੨॥
جھوُٹھیِ مائِیا آپُ بنّدھائِیا جِءُ نلنیِ بھ٘رمِ سوُیا
جھوٹھی مائیا آپ بندھائیا۔ اپنے آپ کو جھوتی دنیاوی دولت کی گرفت میں بندھا رکھا ہے ۔ جیسے نلنی بھرم سوا۔ جیسے نلکی کے شبہ میں طوطا بندھا ہوتا ہے ۔
جھوٹی دنیاوی دولت کی گرفتمیں اپنے آپ کو اسطرح بندھا رکھا ہے جیسے موت کے خوف سے طوطا اپنے اپ کو نلکی س بندھا جاتا ہے ۔
کلام کا مدعا ومقصد:
دیاوی دولت کا فخر جھوٹا ہے جو کبھی ساتھ نہیں دیتی ۔بکہ روحانی موت کا سبب بنتی ہے جیسے طوطاموت کے خوف سے قید ہوجاتا ہے ۔
ਬੇਦਪੁਰਾਨਸਭੈਮਤਸੁਨਿਕੈਕਰੀਕਰਮਕੀਆਸਾ॥
bayd puraan sabhai mat sun kai karee karam kee aasaa.
All those who, upon listening to the philosophies of Vedas and Puranas, hoped to obtain salvation by doing some ritualistic deeds, ਜਿਨ੍ਹਾਂਸਿਆਣੇਬੰਦਿਆਂਨੇਵੇਦਪੁਰਾਨਆਦਿਕਾਂਦੇਸਾਰੇਮਤਸੁਣਕੇਇਹਆਸਰੱਖੀਕਿਕਰਮ-ਕਾਂਡਨਾਲਜੀਵਨਸੌਰੇਗਾ,
بید پُران سبھےَ مت سُنِ کےَ کریِ کرم کیِ آسا ॥
مت۔ سدھانت ۔ فلسفہ ۔ کرم۔ اعمال۔ آسا۔ اُمید ۔
اے دل تو نے الہٰی عبادت نہیںکی تو ایک کام بھی نہیں کر سکتا۔ رہاؤ۔ جن دانشمند نے ویدوں پرانوں کا فلسفہ سن کر یہ اُمید رکھ کہ اس فلسلے پر چل کر زندگی کا چلن یا طرز زندگی راہ راست پر آجائیگی

ਕਾਲਗ੍ਰਸਤਸਭਲੋਗਸਿਆਨੇਉਠਿਪੰਡਿਤਪੈਚਲੇਨਿਰਾਸਾ॥੧॥
kaal garsat sabh log si-aanay uth pandit pai chalay niraasaa. ||1||
all such wise people were caught in the fear of death; even the pundits departed from this world in a state of despair. ||1|| ਉਹਸਾਰੇ (ਆਤਮਕ) ਮੌਤਵਿਚਹੀਗ੍ਰਸੇਰਹੇ।ਪੰਡਿਤਲੋਕਭੀਆਸਪੂਰੀਹੋਣਤੋਂਬਿਨਾਹੀਉੱਠਕੇਚਲੇਗਏ (ਜਗਤਤਿਆਗਗਏ) ॥੧॥
کال گ٘رست سبھ لوگ سِیانے اُٹھِ پنّڈِت پےَ چلے نِراسا ॥੧॥
کال گرست۔ موت کی گرفتمیں ۔ نراسا۔ نا اُمید۔ مایوس (1)
وہ تو روحانی موت میں گرفتار ہو گئے ۔ اور پنڈت بھی مایوس ہوکر نا اُمیدی میں دنیا سے رخصت ہوگئے
ਮਨਰੇਸਰਿਓਨਏਕੈਕਾਜਾ॥
man ray sari-o na aykai kaajaa.
O mind, you have not completed the only task you were given;ਹੇਮਨ! ਤੂੰਆਪਣਾਇਹਇੱਕਕੰਮਭੀਸਿਰੇਨਾਹਚੜ੍ਹਿਆ।
من رے سرِئو ن ایکےَ کاجا ॥
کاجا۔ کام ۔
اے میرے دل تمہں جو کام سونپا گیا تھا وہ تم نے مکمل نا کیا۔
ਭਜਿਓ ਨ ਰਘੁਪਤਿ ਰਾਜਾ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥

bhaji-o na raghoopat raajaa. ||1|| rahaa-o.
because you have not meditated on God, the sovereign king. ||1||Pause||
ਤੂੰਪ੍ਰਕਾਸ਼-ਰੂਪਪਰਮਾਤਮਾਦਾਭਜਨਨਹੀਂਕੀਤਾ॥੧॥ਰਹਾਉ॥
بھجِئو ن رگھُپتِ راجا ॥੧॥ رہاءُ ॥
رگہپت راجہ ۔ خدا (1) رہاؤ
کیو ں کہ تم نےخدا کےبرابر نہیں کھڑے ہو سکتے۔

ਬਨਖੰਡਜਾਇਜੋਗੁਤਪੁਕੀਨੋਕੰਦਮੂਲੁਚੁਨਿਖਾਇਆ॥
ban khand jaa-ay jog tap keeno kand mool chun khaa-i-aa.
Many people went to forests and other places, performed all kinds of yogas and penances and survived only on fruits and roots; ਕਈਲੋਕਾਂਨੇਜੰਗਲਾਂਵਿਚਜਾਕੇਜੋਗਸਾਧੇ, ਤਪਕੀਤੇ, ਗਾਜਰ-ਮੂਲੀਆਦਿਕਚੁਣਖਾਕੇਗੁਜ਼ਾਰਾਕੀਤਾ;
بن کھنّڈ جاءِ جوگُ تپُ کیِنو کنّد موُلُ چُنِ کھائِیا ॥
۔ بن کھنڈ۔جنگل۔ کند مول۔ جنگلی پھل۔
بہت سے جنگلوں میں جا کر تپسیا کی جنگلی پھل کھا کر گذارا ہ کیا
ਨਾਦੀਬੇਦੀਸਬਦੀਮੋਨੀਜਮਕੇਪਟੈਲਿਖਾਇਆ॥੨॥
naadee baydee sabdee monee jam kay patai likhaa-i-aa. ||2||
the yogi, the Vedic scholars, the chanters of one word for God and the men of silence, all of them remained in the record of demon of death. ||2||ਜੋਗੀ, ਕਰਮ-ਕਾਂਡੀ, ‘ਅਲੱਖ’ ਆਖਣਵਾਲੇਜੋਗੀ, ਮੋਨਧਾਰੀ-ਇਹਸਾਰੇਜਮਦੇਲੇਖੇਵਿਚਹੀਲਿਖੇਗਏ॥੨॥
نادیِ بیدیِ سبدیِ مونیِ جم کے پٹےَ لِکھائِیا ॥੨॥
نادی ۔ جوگی ۔ بیدی ۔ دید کے مطابق چلنے والے ۔ سبدی ۔ اواز ۔ الکھ وغیرہ کہنے والے ۔ مونی ۔ خاومش رہنے والے ۔جم کے پٹے ۔موت کے حساب میں (2)
جوگی ہندو شرع پر چلنے والے (الکھ ) کہنے والے مون دھاری ۔ خاموش رہنے والے یہ تمام موت کے خوف سے بچ نہیں سکے (2)
ਭਗਤਿਨਾਰਦੀਰਿਦੈਨਆਈਕਾਛਿਕੂਛਿਤਨੁਦੀਨਾ॥
bhagat naardee ridai na aa-ee kaachh koochhtan deenaa.
Loving devotional worship did not enter the heart, and you handed over your body decorated with different marks to the demon of death.
ਪ੍ਰੇਮਾ-ਭਗਤੀਰਿਦੇਵਿੱਚਨਾਵਸੀ, ਐਵੇਂਚਿੰਨ੍ਹਆਦਿਨਾਲਬਣਾਸਵਾਰਕੇਸਰੀਰਨੂੰਜਮਾਂਦੇਹਵਾਲੇਕਰਦਿੱਤਾ
بھگتِ ناردیِ رِدےَ ن آئیِ کاچھِ کوُچھِ تنُ دیِنا ॥
بھگت ناردی ۔ الہٰی عشق ۔ نادر کے ۔ سدھانت یا فلسفے کی مطابق الہٰی پریم۔ کا چھ کوچ۔ ساز سنوار۔ تن۔جسم۔
جنہوں نے مذہبی نشانات تو لائے مگر دل میں الہٰی عشق پیدا نہ ہوا
ਰਾਗਰਾਗਨੀਡਿੰਭਹੋਇਬੈਠਾਉਨਿਹਰਿਪਹਿਕਿਆਲੀਨਾ॥੩॥
raag raagnee dinbh ho-ay baithaa un har peh ki-aa leenaa. ||3||
A person who has established a kind of hypocritical shop for singing songs in different musical measures, what can he receive from God?.||3|| ਜੋਰਾਗਰਾਗਨੀਆਂਤਾਂਗਾਉਂਦਾਹੈਪਰਨਿਰਾਪਖੰਡ-ਮੂਰਤੀਹੀਬਣਬੈਠਾਹੈ, ਅਜਿਹੇਮਨੁੱਖਨੂੰਪਰਮਾਤਮਾਪਾਸੋਂਕੁਝਨਹੀਂਮਿਲਦਾ॥੩॥
راگ راگنیِ ڈِنّبھ ہوءِ بیَٹھا اُنِ ہرِ پہِ کِیا لیِنا
ڈینھ ۔پاکھنڈ۔ فریب (3
جنہوں نے شاعرانہ بحر سے تو گائیا اور صرف دکھاوا کیا ایسے انسان خدا سے کچھ حاصل نہیں کرسکتے ۔ (3)
ਪਰਿਓਕਾਲੁਸਭੈਜਗਊਪਰਮਾਹਿਲਿਖੇਭ੍ਰਮਗਿਆਨੀ॥
pari-o kaal sabhai jag oopar maahi likhay bharam gi-aanee.
Death is hovering on the entire world; the so called religious scholars are also included in the list of the demon of death. ਸਾਰੇਜਗਤਉੱਤੇਕਾਲਦਾਸਹਿਮਪਿਆਹੋਇਆਹੈ, ਭਰਮੀਗਿਆਨੀਭੀਉਸੇਹੀਲੇਖੇਵਿਚਲਿਖੇਗਏਹਨl
پرِئو کالُ سبھےَ جگ اوُپر ماہِ لِکھے بھ٘رم گِیانیِ ॥
پر یو کال ۔ موت سب کو ہے ۔ بھرم گیانی ۔ اس میں شکی گیانی فرہشت میں شامل ہیں۔
اے انسانوں موت کا سایہ سب پر کھڑآ ہے اور تمام شک و شبہ والے عالم اس حسا ب میں تحریر ہیں ۔