Urdu-Raw-Page-343

ਬਾਵਨ ਅਖਰ ਜੋਰੇ ਆਨਿ ॥
baavan akhar joray aan.
The fifty-two letters have been joined together.
باۄن اکھر جورے آنِ ॥
باون اکھر۔ بونجا حرف۔ جورے آن۔ کوجوڑ کر کتابیں لکھیں جاتی ہیں۔ اور حرفوں ہی سے لکھا بولا جاتا ہے ۔ مگر ست کا ایک حرف جوخدا کے لئے استعمال ہے پہچان نہ ہوئی ۔ جو الہٰی صفت صلاح کا حرف کبیر کہتا ہے ۔ پنڈت ۔ عالم ۔علم جاننے والا۔
اس عالم میں عالموں نے نونجا حرف استعمال کرکے بیشمار کتابیں تو تحریر کردیں۔

ਸਕਿਆ ਨ ਅਖਰੁ ਏਕੁ ਪਛਾਨਿ ॥
saki-aa na akhar ayk pachhaan.
But people cannot recognize the One Word of God.
سکِیا ن اکھرُ ایکُ پچھانِ ॥
ان بھے ۔ بے خوف۔ بیوبار۔ کاروبار۔
مگر خدا کی پہچان نہیں کر سکے ۔

ਸਤ ਕਾ ਸਬਦੁ ਕਬੀਰਾ ਕਹੈ ॥
sat kaa sabad kabeeraa kahai.
Kabeer speaks the Shabad, the Word of Truth.
ست کا سبدُ کبیِرا کہےَ ॥
جو لافناہ ہے ۔ اے کبیرہ جو انسان الہٰی صفت صلاح کرتا ہے وہی عالم ہے ۔

ਪੰਡਿਤ ਹੋਇ ਸੁ ਅਨਭੈ ਰਹੈ ॥
pandit ho-ay so anbhai rahai.
One who is a Pandit, a religious scholar, must remain fearless.
پنّڈِت ہوءِ سُ انبھےَ رہےَ ॥
پنڈت ۔ عالم ۔علم جاننے والا۔
وہ بے خوف ہو جاتا ہے پنڈتوں کے لئے پڑھانا کاروبار ہے

ਪੰਡਿਤ ਲੋਗਹ ਕਉ ਬਿਉਹਾਰ ॥
pandit logah ka-o bi-uhaar.
It is the business of the scholarly person to join letters.
پنّڈِت لوگہ کءُ بِئُہار ॥
۔ مگر عالموں کے لئے حقیقت اور اصلیت کی پہچان کا وسیلہ اور ذریعہ ہے ۔

ਗਿਆਨਵੰਤ ਕਉ ਤਤੁ ਬੀਚਾਰ ॥
gi-aanvant ka-o tat beechaar.
The spiritual person contemplates the essence of reality.
گِیانۄنّت کءُ تتُ بیِچار
گیانونت۔ عالم فاضل۔ تت۔ حقیقت ۔ اصلیت ۔ویچار۔ سوچتا اور سمجھتا ہے ۔ جاکے جیہہ ۔ جس کے دل میں
کبیر صاحب کا فرمان جیسی کسی انسان کی سوچ سمجھ اور عقل ہے وہ ان حرفوں کے وسیلے سے ویسا ہی سمجھے گا۔

ਜਾ ਕੈ ਜੀਅ ਜੈਸੀ ਬੁਧਿ ਹੋਈ ॥
jaa kai jee-a jaisee buDh ho-ee.
According to the wisdom within the mind,
جا کےَ جیِء جیَسیِ بُدھِ ہوئیِ
۔ جیسی بدھ ہوئے ۔ جیسی اس کی عقل ہے ۔
عقل کے مطابق دماغ کے اندر جیسی سمجھ ہوتی ہے

ਕਹਿ ਕਬੀਰ ਜਾਨੈਗਾ ਸੋਈ ॥੪੫॥
kahi kabeer jaanaigaa so-ee. ||45||
says Kabeer, so does one come to understand. ||45||
کہِ کبیِر جانیَگا سوئیِ
کہہ کبیر۔ اے کبیر بتادے جانےگا سوئی ۔ ویسا ہی وہ سمجھتا ہے
کبیر کہتا ہے ، تو سمجھ میں آتا ہے ۔

ੴ ਸਤਿਗੁਰ ਪ੍ਰਸਾਦਿ ॥
ik-oNkaar satgur parsaad.
One Universal Creator God. By The Grace Of The True Guru:
ستِگُر پ٘رسادِ ॥
ایک آفاقی خالق خدا۔ سچے گرو کی فضل سے

ਰਾਗੁ ਗਉੜੀ ਥਿਤੀ ਕਬੀਰ ਜੀ ਕੀ ॥
raag ga-orhee thiteeN kabeer jee keeN.
Raag Gauree, T’hitee ~ The Lunar Days Of Kabeer Jee:
راگُ گئُڑیِ تھِتیِ کبیِر جیِ کیِ ॥
پندرہ تھتی۔ چاند کے پندرہ دن ہوتے ہیں اور ہفتے کے سات روز ۔ کبیر صاحب فرماتے ہیں کہ جو اس بات کو سوچتے کہ یہ دن اچھا اور یہ برا ہے ۔

ਸਲੋਕੁ ॥
salok.
Shalok:
سلوکُ ॥

ਪੰਦ੍ਰਹ ਥਿਤੀ ਸਾਤ ਵਾਰ ॥
pandreh thiteeN saat vaar.
There are fifteen lunar days, and seven days of the week.
پنّد٘رہ تھِتیِٹ਼ سات ۄار ॥
اروار ۔ نہ اُرے کنارے انہ پار۔ پارے کنارے (۔)
پندرہ قمری دن ہیں ، اور ہفتے کے سات دن ہیں ۔

ਕਹਿ ਕਬੀਰ ਉਰਵਾਰ ਨ ਪਾਰ ॥
kahi kabeer urvaar na paar.
Says Kabeer, it is neither here nor there.
کہِ کبیِر اُرۄار ن پار ॥
کبیر کہتے ہیں ، یہ نہ تو یہاں ہے اور نہ ہی وہیں

ਸਾਧਿਕ ਸਿਧ ਲਖੈ ਜਉ ਭੇਉ ॥
saaDhik siDh lakhai ja-o bhay-o.
When the Siddhas and seekers come to know the Lord’s mystery,
سادھِک سِدھ لکھےَ جءُ بھیءُ ॥
جب سدھوں اور متلاشیوں کو خداوند کا بھید معلوم ہوا

ਆਪੇ ਕਰਤਾ ਆਪੇ ਦੇਉ ॥੧॥
aapay kartaa aapay day-o. ||1||
they themselves become the Creator; they themselves become the Divine Lord. ||1||
آپے کرتا آپے دیءُ ॥੧॥
وہ خود ہی پیدہ کرتا ہے اور خود ہی عطاکرتا ہے

ਥਿਤੀ ॥
thiteeN.
T’hitee:
تھِتیِٹ਼॥

ਅੰਮਾਵਸ ਮਹਿ ਆਸ ਨਿਵਾਰਹੁ ॥
ammaavas meh aas nivaarahu.
On the day of the new moon, give up your hopes.
انّماۄس مہِ آس نِۄارہُ ॥
اماوس۔ وہ رات جو بالکل اندھیری ہوتی ہے چاند بالکل دکھائی نہیں دیتا۔
نئے چاند کے دن ، اپنی امیدوں کو ترک کردیں

ਅੰਤਰਜਾਮੀ ਰਾਮੁ ਸਮਾਰਹੁ ॥
antarjaamee raam samaarahu.
Remember the Lord, the Inner-knower, the Searcher of hearts.
انّترجامیِ رامُ سمارہُ ॥
رب کو یاد رکھو جو باطن کا جاننے والا ہے ، دلوں کو تلاش کرنے والا ہے

ਜੀਵਤ ਪਾਵਹੁ ਮੋਖ ਦੁਆਰ ॥
jeevat paavhu mokh du-aar.
You shall attain the Gate of Liberation while yet alive.
جیِۄت پاۄہُ موکھ دُیار ॥
موکھ ۔ نجات ۔
آپ زندہ رہتے ہوئے آزادی کا دروازہ حاصل کریں گے

ਅਨਭਉ ਸਬਦੁ ਤਤੁ ਨਿਜੁ ਸਾਰ ॥੧॥
anbha-o sabad tat nij saar. ||1||
You shall come to know the Shabad, the Word of the Fearless Lord, and the essence of your own inner being. ||1||
انبھءُ سبدُ تتُ نِجُ سار
انبھؤ۔ ذہنی سوچ۔ سبد۔ کلام۔ تت حقیقت ۔ نج شخسی ۔ساز۔ حقیقت کی سمجھ
آپ نڈر رب کا کلام ، اور اپنے ہی اندر کے وجود کا جوہر معلوم کریں گے

ਚਰਨ ਕਮਲ ਗੋਬਿੰਦ ਰੰਗੁ ਲਾਗਾ ॥
charan kamal gobind rang laagaa.
One who enshrines love for the Lotus Feet of the Lord of the Universe
چرن کمل گوبِنّد رنّگُ لاگا ॥
چرن کمل گوبند۔ پائے پاک الہٰی ۔ رنگ لاگا۔ پیار پیدا ہوا۔
جس انسان کی محبت پائے پاک خدا سے ہوجاتی ہے ۔ ۔

ਸੰਤ ਪ੍ਰਸਾਦਿ ਭਏ ਮਨ ਨਿਰਮਲ ਹਰਿ ਕੀਰਤਨ ਮਹਿ ਅਨਦਿਨੁ ਜਾਗਾ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥
sant parsaad bha-ay man nirmal har keertan meh an-din jaagaa. ||1|| rahaa-o.
– by the Grace of the Saints, her mind becomes pure; night and day, she remains awake and aware, singing the Kirtan of the Lord’s Praises. ||1||Pause||
سنّت پ٘رسادِ بھۓ من نِرمل ہرِ کیِرتن مہِ اندِنُ جاگا
سنت۔ پرساد۔ رحمت مرشد پاکدامن۔ من نرمل دل پاک ہوا۔ ہر کیرتن صفت صلاح خدا۔ میہہ ۔ میں اندن ۔ روز وشب ۔ جاگا۔ بیدار رہا
رحمت مرشد سے اس کا من و قلب پاک ہوجاتا ہے ۔ الہٰی صفت صلاح میں محو ہوکر گناہوں بدیوں اور بدکاریون سے بچ جاتا ہے اور ہر وقت خبردار رہتا ہے

ਪਰਿਵਾ ਪ੍ਰੀਤਮ ਕਰਹੁ ਬੀਚਾਰ ॥
parivaa pareetam karahu beechaar.
On the first day of the lunar cycle, contemplate the Beloved Lord.
پرِۄا پ٘ریِتم کرہُ بیِچار
پروا۔ ایکم۔ پہلی تتھ۔ پریتم۔ پیارے ۔ویچار۔ سوچو۔ سمجھو۔
چاند کی پہلی تتھ کے روز خدا کے بارے سوچو ۔ سمجھو

ਘਟ ਮਹਿ ਖੇਲੈ ਅਘਟ ਅਪਾਰ ॥
ghat meh khaylai aghat apaar.
He is playing within the heart; He has no body – He is Infinite.
گھٹ مہِ کھیلےَ اگھٹ اپار ॥
گھٹ ۔ دل ۔ اکھٹ بے گھٹ ۔ بلاتن بدن۔ جسم اپار۔ اعداد و شمار سے بعید۔
اور اس کا خیال کرو جو اس کا خیال کرتا ہے یاد کرتا ہے موت فکر و تشویش اس کے نزدیک نہیں پھٹکتی

ਕਾਲ ਕਲਪਨਾ ਕਦੇ ਨ ਖਾਇ ॥
kaal kalpanaa kaday na khaa-ay.
The pain of death never consumes that person
کال کلپنا کدے ن کھاءِ
کال موت ۔ کلپنا ۔ فکر۔
۔ موت کا درد کبھی بھی اس شخص کو نہیں کھاتا ہے۔

ਆਦਿ ਪੁਰਖ ਮਹਿ ਰਹੈ ਸਮਾਇ ॥੨॥
aad purakh meh rahai samaa-ay. ||2||
who remains absorbed in the Primal Lord God. ||2||
آدِ پُرکھ مہِ رہےَ سماءِ
اد پرکھ۔ روز ازل سے پہلے کی ہستی ۔ سمائے ۔ محوومجذوب قائنات قدرت ۔ دوسری الہٰی وحدت یا واحد خدا۔
جو اصلی خداوند خدا میں مشغول رہتا ہے

ਦੁਤੀਆ ਦੁਹ ਕਰਿ ਜਾਨੈ ਅੰਗ ॥
dutee-aa duh kar jaanai ang.
On the second day of the lunar cycle, know that there are two beings within the fiber of the body.
دُتیِیا دُہ کرِ جانےَ انّگ
رمے ۔ بستا ہے ۔
قمری چکر کے دوسرے دن ، جان لیں کہ جسم کے ریشہ میں دو مخلوق ہیں ۔

ਮਾਇਆ ਬ੍ਰਹਮ ਰਮੈ ਸਭ ਸੰਗ ॥
maa-i-aa barahm ramai sabh sang.
Maya and God are blended with everything.
مائِیا ب٘رہم رمےَ سبھ سنّگ
سب سنگ ۔ سب کے ساتھ ۔
مایا اور خدا ہر چیز میں گھل مل جاتے ہیں

ਨਾ ਓਹੁ ਬਢੈ ਨ ਘਟਤਾ ਜਾਇ ॥
naa oh badhai na ghattaa jaa-ay.
God does not increase or decrease.
نا اوہُ بڈھےَ ن گھٹتا جاءِ
وہ خدا نہ بڑھتا ہے نہ گھتٹا ہے ۔

ਅਕੁਲ ਨਿਰੰਜਨ ਏਕੈ ਭਾਇ ॥੩॥
akul niranjan aykai bhaa-ay. ||3||
He is unknowable and immaculate; He does not change. ||3||
اکُل نِرنّجن ایکےَ بھاءِ
اکل ۔ کل رہت۔ بلا خاندان۔ نرنجن۔ بیداغ
ہمیشہ یکساں حالت میں رہتا ہے

ਤ੍ਰਿਤੀਆ ਤੀਨੇ ਸਮ ਕਰਿ ਲਿਆਵੈ ॥
taritee-aa teenay sam kar li-aavai.
On the third day of the lunar cycle, one who maintains his equilibrium amidst the three modes
ت٘رِتیِیا تیِنے سم کرِ لِیاۄےَ
تریتا۔ تیجی تتھ۔ تینے ۔ دنیاوی دولت کے تینوں اوصاف ۔ ترقی ۔ قوت یا لالچ ۔ سم کر لیاوے ۔ پر سکون ۔ حیثیت میں رکھے ،، مراد متزلزل نہ ہو۔ آنند کامل سکون۔
قمری چکر کے تیسرے دن ، جو تین طریقوں کے درمیان اپنا توازن برقرار رکھے۔

ਆਨਦ ਮੂਲ ਪਰਮ ਪਦੁ ਪਾਵੈ ॥
aanad mool param pad paavai.
finds the source of ecstasy and the highest status.
آند موُل پرم پدُ پاۄےَ
پرمپد۔ بلند سے بلند روحانی رتبہ یا
ماخذ اور اعلی مقام حاصل کرتا ہے۔ وہ شخص روحانییت کا بلند ترین درجہ حاصل کر سکتا ہے جو روحانی سکون کا سر چشمہ ہے

ਸਾਧਸੰਗਤਿ ਉਪਜੈ ਬਿਸ੍ਵਾਸ ॥
saaDhsangat upjai bisvaas.
In the Saadh Sangat, the Company of the Holy, faith wells up.
سادھسنّگتِ اُپجےَ بِس٘ۄاس
سادھ سنگت۔ صحبت و قربت پاکدامناں ۔ اُپجے بسوا ۔ یقین پیدا ہوتا ہے ۔
پاکدامنوں عارفوں کی صحت و قربت میں رہ کر انسان کے دل میں یقین وشواس اور عقیدت پیدا ہوتی ہے

ਬਾਹਰਿ ਭੀਤਰਿ ਸਦਾ ਪ੍ਰਗਾਸ ॥੪॥
baahar bheetar sadaa pargaas. ||4||
Outwardly, and deep within, God’s Light is always radiant. ||4||
باہرِ بھیِترِ سدا پ٘رگاس
باہر بھیتر۔ اندر۔ باہر ۔ سدا پرگاس۔ ہمیشہ روشنی
کہ خدا ہر سو ۔ اندر ۔باہر ہر جگہ موجود ہے ۔ (4

ਚਉਥਹਿ ਚੰਚਲ ਮਨ ਕਉ ਗਹਹੁ ॥
cha-othahi chanchal man ka-o gahhu.
On the fourth day of the lunar cycle, restrain your fickle mind,
چئُتھہِ چنّچل من کءُ گہہُ
چنچل ۔ شیطان ۔ گہو۔ پکڑؤ۔ قابو رکھا۔
چوتھی تتھی کے روز ۔شیطان من کو زیر ضبط رکھو ۔

ਕਾਮ ਕ੍ਰੋਧ ਸੰਗਿ ਕਬਹੁ ਨ ਬਹਹੁ ॥
kaam kroDh sang kabahu na bahhu.
and do not ever associate with sexual desire or anger.
کام ک٘رودھ سنّگِ کبہُ ن بہہُ
کام۔ شہوت۔ کرودھ۔ غصہ ۔ سنگ ۔ ساتھ ۔ کیہؤ ۔ کبھی بھی ۔ نہ بہو ۔ صحبت نہ کرؤ۔
شہوت اور غصہ والی صحبت و قربت میں نہ رہو۔

ਜਲ ਥਲ ਮਾਹੇ ਆਪਹਿ ਆਪ ॥
jal thal maahay aapeh aap.
On land and sea, He Himself is in Himself.
جل تھل ماہے آپہِ آپ
جل تھل۔ زمین اور پانی ۔ ماہے میں ۔
زمین اور پانی ہر جگہ خدا بستا ہے ۔

ਆਪੈ ਜਪਹੁ ਆਪਨਾ ਜਾਪ ॥੫॥
aapai japahu aapnaa jaap. ||5||
He Himself meditates and chants His Chant. ||5||
آپےَ جپہُ آپنا جاپ
اپیہہ آپ ہے خدا (5)
وہ خود مراقبہ کرتا ہے اور اس کا منتر چکاتا ہے

ਪਾਂਚੈ ਪੰਚ ਤਤ ਬਿਸਥਾਰ ॥
paaNchai panch tat bisthaar.
On the fifth day of the lunar cycle, the five elements expand outward.
پاںچےَ پنّچ تت بِستھار
(پانچے) پانچویں تتھ ۔ تت مادیات۔ وستھار۔ پسارا۔ پھیلاؤ
یہ عالم پانچوں مادیات کا پسار اور پھیلاؤ اور پانچوں مادیات سے بنا ہے

ਕਨਿਕ ਕਾਮਿਨੀ ਜੁਗ ਬਿਉਹਾਰ ॥
kanik kaaminee jug bi-uhaar.
Men are occupied in the pursuit of gold and women.
کنِک کامِنیِ جُگ بِئُہار
کنک۔ سونا۔ سرمایہ ۔ کامنی ۔ عورت ۔ جگ۔ عالم بیوبار۔ کاروبار۔ جگ دنیا۔
۔ سرمایہ اور عورت کے حصول کے کاروبار میں مصروف ہے ۔

ਪ੍ਰੇਮ ਸੁਧਾ ਰਸੁ ਪੀਵੈ ਕੋਇ ॥
paraym suDhaa ras peevai ko-ay.
How rare are those who drink in the pure essence of the Lord’s Love.
پ٘ریم سُدھا رسُ پیِۄےَ کوءِ
پریم ۔ سدھارس۔ پیار کی آب حیات
الہٰی پیار اور نام حیات کوئی ہی نوش کرتا ہے

ਜਰਾ ਮਰਣ ਦੁਖੁ ਫੇਰਿ ਨ ਹੋਇ ॥੬॥
jaraa maran dukh fayr na ho-ay. ||6||
They shall never again suffer the pains of old age and death. ||6||
جرا مرنھ دُکھُ پھیرِ ن ہوءِ
۔ جرابٹر۔ ھاپا۔ مرن۔ موت
۔ اُسے جو پتیا ہے اسے موت اور بڑھاپے کے عزاب سے نجات ملتی ہے (6)

ਛਠਿ ਖਟੁ ਚਕ੍ਰ ਛਹੂੰ ਦਿਸ ਧਾਇ ॥
chhath khat chakar chhahoo-aN dis Dhaa-ay.
On the sixth day of the lunar cycle, the six chakras run in six directions.
چھٹھِ کھٹُ چک٘ر چھہوُنّ دِس دھاءِ
چھٹھ ۔ چھٹی تھتھ۔ کھٹ۔ چھ ۔کھٹ چکر۔ پانچ گیان اندرے ۔ پانچ اعضائے احساس اور چھٹا من۔ چھہوں دس۔ چار طرفین پانچواں اکاس اور زمین ۔دھائے ۔ بھٹکتا ہے
چندر چکر کے چھٹے دن ، چھ چکر چھ سمتوں سے چلتے ہیں اور چھٹا من سارے دنیاوی نعمتوں کے لالچ میں بھٹکھتے ہیں

ਬਿਨੁ ਪਰਚੈ ਨਹੀ ਥਿਰਾ ਰਹਾਇ ॥
bin parchai nahee thiraa rahaa-ay.
Without enlightenment, the body does not remain steady.
بِنُ پرچےَ نہیِ تھِرا رہاءِ
۔ بن پرچے ۔ بغیر مصروفیت ۔ تھر ۔ مستقل ۔ نہ رہائے ۔ نہیں رہتا ۔
روشن خیالی کے بغیر ، جسم مستحکم نہیں رہتا ہے انسان مستقل مزاج نہیں ہو سکتا

ਦੁਬਿਧਾ ਮੇਟਿ ਖਿਮਾ ਗਹਿ ਰਹਹੁ ॥
dubiDhaa mayt khimaa geh rahhu.
So erase your duality and hold tight to forgiveness,
دُبِدھا میٹِ کھِما گہِ رہہُ
دبدھا۔ دوئی ۔ دوخیالی ۔ دؤیش ۔ مٹ ختم کرکے ۔ کھما برداشت سنجیدگی ۔ مستقل مزاجی ۔ گیہہ۔ پکڑو۔ رہو۔ برداشت کرنا اختیار
۔ انسان کو چاہیے کہ دوچتی مٹا کر برداشت کا مداشہ اپنائے

ਕਰਮ ਧਰਮ ਕੀ ਸੂਲ ਨ ਸਹਹੁ ॥੭॥
karam Dharam kee sool na sahhu. ||7||
and you will not have to endure the torture of karma or religious rituals. ||7||
کرم دھرم کیِ سوُل ن سہہُ
کرؤ۔ کرم ۔اعمال ۔ دھرم۔ فرض۔ سول۔ عذاب۔
۔ اعمال اور فرائض کی ادائیگی کے عذاب کو چھوڑ دو۔

ਸਾਤੈਂ ਸਤਿ ਕਰਿ ਬਾਚਾ ਜਾਣਿ ॥
saataiN sat kar baachaa jaan.
On the seventh day of the lunar cycle, know the Word as True,
ساتیَں ستِ کرِ باچا جانھِ
قمری چکر کے ساتویں دن اے انسان الہٰی کلام کو سچا سمجھ ۔

ਆਤਮ ਰਾਮੁ ਲੇਹੁ ਪਰਵਾਣਿ ॥
aatam raam layho parvaan.
and you shall be accepted by the Lord, the Supreme Soul.
آتم رامُ لیہُ پرۄانھِ
۔ الہٰی روح اسے قبول کر لیتی ہے ۔

ਛੂਟੈ ਸੰਸਾ ਮਿਟਿ ਜਾਹਿ ਦੁਖ ॥
chhootai sansaa mit jaahi dukh.
Your doubts shall be eradicated, and your pains eliminated,
چھوُٹےَ سنّسا مِٹِ جاءِ دُکھ
اس سے روحانی تشویش اور فکر مندی ختم ہو جاتی عذاب مٹ جاتے ہیں

ਸੁੰਨ ਸਰੋਵਰਿ ਪਾਵਹੁ ਸੁਖ ॥੮॥
sunn sarovar paavhu sukh. ||8||
and in the ocean of the celestial void, you shall find peace. ||8||
سُنّن سروۄرِ پاۄہُ سُکھ
۔ کامل روحانی سکون کے سمندر کا سکھ ملتا ہے

ਅਸਟਮੀ ਅਸਟ ਧਾਤੁ ਕੀ ਕਾਇਆ ॥
astamee asat Dhaat kee kaa-i-aa.
On the eighth day of the lunar cycle, the body is made of the eight ingredients.
اسٹمیِ اسٹ دھاتُ کیِ کائِیا
اشٹمی ۔ آٹھویں چان کی تتھ۔ کایئیا۔ بدن جم۔ اشٹ دھات آٹھ دھاتوں۔
انسانی جسم آٹھ دھاتوں کا مرکب ہے اسمیں وہ خدا بستا ہے

ਤਾ ਮਹਿ ਅਕੁਲ ਮਹਾ ਨਿਧਿ ਰਾਇਆ ॥
taa meh akul mahaa niDh raa-i-aa.
Within it is the Unknowable Lord, the King of the supreme treasure.
تا مہِ اکُل مہا نِدھِ رائِیا
جس کی کوئی ذات پات نہیں ۔ جو تمام اوصاف کا خزانہ ہے ۔

ਗੁਰ ਗਮ ਗਿਆਨ ਬਤਾਵੈ ਭੇਦ ॥
gur gam gi-aan bataavai bhayd.
The Guru, who knows this spiritual wisdom, reveals the secret of this mystery.
گُر گم گِیان بتاۄےَ بھید
۔ بھید۔ الہٰی راز۔ بتاوے ۔ بتائے
جسے ایسے خدا رسیدہ مرشد سے یہ روحانی واخلاقی ، علوم حاصل ہو جائے اور یہ راز اورر بھید بتاوے

ਉਲਟਾ ਰਹੈ ਅਭੰਗ ਅਛੇਦ ॥੯॥
ultaa rahai abhang achhayd. ||9||
Turning away from the world, He abides in the Unbreakable and Impenetrable Lord. ||9||
اُلٹا رہےَ ابھنّگ اچھید
۔ ابھنگ ۔ لافناہ ۔ اچھید۔ جسے پابند نہ کیا جا سکے(9)
وہ انسان جسم کی محبت کو الٹا کرکے لافناہ خدا کی محبت میں اپنا من لگالیاتا ہے

ਨਉਮੀ ਨਵੈ ਦੁਆਰ ਕਉ ਸਾਧਿ ॥
na-umee navai du-aar ka-o saaDh.
On the ninth day of the lunar cycle, discipline the nine gates of the body.
نئُمیِ نۄےَ دُیار کءُ سادھِ
انسانی جسم کے نو دروازے ، نو ے دوآر۔ سادھ۔ پاک بناو۔ بدیؤں اور گناہوں سے روکو

ਬਹਤੀ ਮਨਸਾ ਰਾਖਹੁ ਬਾਂਧਿ ॥
bahtee mansaa raakho baaNDh.
Keep your pulsating desires restrained.
بہتیِ منسا راکھہُ باںدھِ
بہتی ۔ رواں داواں زیادہ۔ منسا۔ منشا۔ ارادے ۔ راکھو باندھ۔ پابندیاں لگاؤ روکو۔ لالچ اور دنیاوی دولت کو ۔
اے انسان اپنے اعضائے جسمانی کو زیر ضبط رکھو اور پاک بناؤ اور ارادوں اور خواہشات کو قابو رکھو

ਲੋਭ ਮੋਹ ਸਭ ਬੀਸਰਿ ਜਾਹੁ ॥
lobh moh sabh beesar jaahu.
Forget all your greed and emotional attachment;
لوبھ موہ سبھ بیِسرِ جاہُ
وسر جاہو۔ بھلا دو ۔ جگ جگ ۔ صدیو جیو ہو۔ زندگی ۔ امر پھل۔ ایسا پھل ج صدیوی ہے۔ جیو ہو۔ زندگی ۔ امر پھل ۔ ایسا پھل جو صدیوی ہے۔
لالچ اور دنیاوی محبت ترک کرؤ۔ اس سے صدیوں ایسے اچھے نتائج برآمد ہوں گے جو صدیوی رہیں گے اور سکون پاؤگے۔