Urdu-Raw-Page-38

ਮੁੰਧੇ ਕੂੜਿ ਮੁਠੀ ਕੂੜਿਆਰਿ ॥
munDhay koorh muthee koorhi-aar.
O’ misled soul-bride, you have been deceived by mirage of worldly entanglements. (Unless you wake up, you are not going to be able to meet the Almighty, your Groom)
مُنّدھےکوُڑِمُٹھیِکوُڑِیارِ
مندھے ۔اگے محو عورت ۔ انسان ۔ مھٹی ۔لٹی ہوئی ۔ کوڑ۔جھوٹ
اے مست نوجوان جھوٹ نے تجھے لوٹ کر جھوٹا بنا دیا

ਪਿਰੁ ਪ੍ਰਭੁ ਸਾਚਾ ਸੋਹਣਾ ਪਾਈਐ ਗੁਰ ਬੀਚਾਰਿ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥
pir parabh saachaa sohnaa paa-ee-ai gur beechaar. ||1|| rahaa-o.
O’ Soul-Bride, you can meet that eternal God (handsome Groom) by contemplating upon the Guru’s Word.
پِرُپ٘ربھُساچاسوہنھاپائیِئےَگُربیِچارِ
تیرا آقا ۔خاوند خدا خوبصورت ہے ۔ جس سے سبق مرشد سے ملاپ ہو سکتا ہے

ਮਨਮੁਖਿ ਕੰਤੁ ਨ ਪਛਾਣਈ ਤਿਨ ਕਿਉ ਰੈਣਿ ਵਿਹਾਇ ॥
manmukh kant na pachhaan-ee tin ki-o rain vihaa-ay.
The self-willed Souls-brides do not recognize their spouse (God); how can they be liberated?. (They will stay engrossed in worldly attachments)
منمُکھِکنّتُنپچھانھئیِتِنکِءُریَنھِۄِہاءِ
تین کیوں رین وہائے ۔ان کی رات کیسے بسر ہو گذرے
خودی پسند خودارادی کواپنے آقا کی پہنچان نہیں اور آقا ان سے بے نیاز ہے ۔ ان کی زندگی کے لئے گذرے

ਗਰਬਿ ਅਟੀਆ ਤ੍ਰਿਸਨਾ ਜਲਹਿ ਦੁਖੁ ਪਾਵਹਿ ਦੂਜੈ ਭਾਇ ॥
garab atee-aa tarisnaa jaleh dukh paavahi doojai bhaa-ay.
Filled with ego, the conceited souls burn in the fire of desire and suffer because of duality.
گربِاٹیِیات٘رِسناجلہِدُکھُپاۄہِدوُجےَبھاءِ
گربھ اٹیا ۔غرور سے بھری ہوئی ۔ ترشنا جلے ۔خواہشات کی آگ میں جلتی ہے ۔دوبے بھائے ۔ غیروں سے پیار
وہ تکبر اور غرور سے لبالب بھرے ہوئے ہیں اور خواہشات کی آگ میں جلتے ہیں اورد نیاوی دؤلت کی محبت مین عذاب پاتی ہیں

ਸਬਦਿ ਰਤੀਆ ਸੋਹਾਗਣੀ ਤਿਨ ਵਿਚਹੁ ਹਉਮੈ ਜਾਇ ॥
sabad ratee-aa sohaaganee tin vichahu ha-umai jaa-ay.
Happy are the soul-brides who contemplate on the Guru’s Word and thus get rid of their ego.
سبدِرتیِیاسوہاگنھیِتِنۄِچہُہئُمےَجاءِ
شبد رتیا ۔کلام میں ایمان والے
جنہیں میں کلام سے پیار ہے اپنائیا ہے انکے دل سے خودی ختم ہو جاتی ہے

ਸਦਾ ਪਿਰੁ ਰਾਵਹਿ ਆਪਣਾ ਤਿਨਾ ਸੁਖੇ ਸੁਖਿ ਵਿਹਾਇ ॥੨॥
sadaa pir raaveh aapnaa tinaa sukhay sukh vihaa-ay. ||2||
They enjoy their husband God forever and their life is full of peace and spiritual bliss.
سداپِرُراۄہِآپنھاتِناسُکھےسُکھِۄِہاءِ
پر وا ویہہ ۔ اپنے آقاکی خدمت سے سکھ حاصل کرنا
اور وہ خدا تک رسائی حاصل کر لیتے ہیں ۔ اور آرام و آسائش پاتے ہیں

ਗਿਆਨ ਵਿਹੂਣੀ ਪਿਰ ਮੁਤੀਆ ਪਿਰਮੁ ਨ ਪਾਇਆ ਜਾਇ ॥
gi-aan vihoonee pir mutee-aa piram na paa-i-aa jaa-ay.
Those Soul-brides who are without the divine knowledge, cannot earn God’s love.
گِیانۄِہوُنھیِپِرمُتیِیاپِرمُنپائِیاجاءِ
گیان دھونی ۔ لا علم ۔ پرمتیاں ۔ خاوند کی طلاقی
لا علم ۔ منافق و منکر پیار اور پریم حاصل نہیں کر سکتے ۔

ਅਗਿਆਨ ਮਤੀ ਅੰਧੇਰੁ ਹੈ ਬਿਨੁ ਪਿਰ ਦੇਖੇ ਭੁਖ ਨ ਜਾਇ ॥
agi-aan matee anDhayr hai bin pir daykhay bhukh na jaa-ay.
Being intoxicated with ignorance, they remain in darkness; without meeting God their desires do not go away
اگِیانمتیِانّدھیرُہےَبِنُپِردیکھےبھُکھنجاءِ.
لا علمی جہالت ہے مگر دیدار الہٰی کے بغیر خواہشات اور اُمیدوں کی بھوک ختم نہیں ہوتی

ਆਵਹੁ ਮਿਲਹੁ ਸਹੇਲੀਹੋ ਮੈ ਪਿਰੁ ਦੇਹੁ ਮਿਲਾਇ ॥
aavhu milhu sahayleeho mai pir dayh milaa-ay.
O’ my Soul-friends, help me meet God. (husband)
آۄہُمِلہُسہیلیِہومےَپِرُدیہُمِلاءِ
ساتھیوں دوستوں آؤ ملو میں تمہیں آقاخداوند کریم سے ملاپ کراؤ

ਪੂਰੈ ਭਾਗਿ ਸਤਿਗੁਰੁ ਮਿਲੈ ਪਿਰੁ ਪਾਇਆ ਸਚਿ ਸਮਾਇ ॥੩॥
poorai bhaag satgur milai pir paa-i-aa sach samaa-ay. ||3||
She who meets the True Guru, by perfect good fortune, finds God (Husband)and enters state of perpetual spiritual bliss||3||
پوُرےَبھاگِستِگُرُمِلےَپِرُپائِیاسچِسماءِ
جیسے بلند قسمت سے مرشد مل جاتا ہے ۔ اُسکا خداوند کریم سے ملاپ ہو جاتا ہے ۔ وہ اس سے پریم کرتا ہے

ਸੇ ਸਹੀਆ ਸੋਹਾਗਣੀ ਜਿਨ ਕਉ ਨਦਰਿ ਕਰੇਇ ॥
say sahee-aa sohaaganee jin ka-o nadar karay-i.
Those upon whom He bestows His Grace, become His happy soul-brides.
سےسہیِیاسوہاگنھیِجِنکءُندرِکرےءِ
ان دوستوں کی خدا تکرسائی ہو جاتی ہے جن پر اسکی نظر عنایت ہے

ਖਸਮੁ ਪਛਾਣਹਿ ਆਪਣਾ ਤਨੁ ਮਨੁ ਆਗੈ ਦੇਇ ॥
khasam pachhaaneh aapnaa tan man aagai day-ay.
They recognize God as the supreme master, and surrender their mind, body and soul to Him.
کھسمُپچھانھہِآپنھاتنُمنُآگےَدےءِ
وہ اپنے آقا کو سمجھ کر دل و جان اُسے پیش کر دیتا ہے

ਘਰਿ ਵਰੁ ਪਾਇਆ ਆਪਣਾ ਹਉਮੈ ਦੂਰਿ ਕਰੇਇ ॥
ghar var paa-i-aa aapnaa ha-umai door karay-i.
When God is met in our heart, all ego is dispelled.
گھرِۄرُپائِیاآپنھاہئُمےَدوُرِکرےءِ
گھرور۔ اندرونی ذہن
وہ اپنے ذہن سے خودی نکال دیتا ہے اور اُسے اپنے ذہن میں الہٰی ملاپکا شرف حاصل ہو جاتا ہے

ਨਾਨਕ ਸੋਭਾਵੰਤੀਆ ਸੋਹਾਗਣੀ ਅਨਦਿਨੁ ਭਗਤਿ ਕਰੇਇ ॥੪॥੨੮॥੬੧॥
naanak sobhaavantee-aa sohaaganee an-din bhagat karay-i. ||4||28||61||
O’ Nanak, such souls (Brides) who contemplate on God day and night are highly exalted.
نانکسوبھاۄنّتیِیاسوہاگنھیِاندِنُبھگتِکرےءِ
اے نانک پاکدامن خدا رسیدہ ہر وقت الہٰی حمد و ثناہ میں مصروف رہتے ہیں۔

ਸਿਰੀਰਾਗੁ ਮਹਲਾ ੩ ॥
sireeraag mehlaa 3.
Siree Raag, by the Third Guru:

ਇਕਿ ਪਿਰੁ ਰਾਵਹਿ ਆਪਣਾ ਹਉ ਕੈ ਦਰਿ ਪੂਛਉ ਜਾਇ ॥
ik pir raaveh aapnaa ha-o kai dar poochha-o jaa-ay.
Seeing her other friends in spiritual bliss, the soul-bride wonders how she can attain the union with God (spouse).
اِکِپِرُراۄہِآپنھاہءُکےَدرِپوُچھءُجاءِ
پرراوے ۔خدا سے محفوظ ہونا
ایک ایسے ہیں جنکا خدا سے رشتہ ہے ۔ ملاپ ہے مین کس در پر جاکر دریافت کرؤں ؟

ਸਤਿਗੁਰੁ ਸੇਵੀ ਭਾਉ ਕਰਿ ਮੈ ਪਿਰੁ ਦੇਹੁ ਮਿਲਾਇ ॥
satgur sayvee bhaa-o kar mai pir dayh milaa-ay.
I contemplate on Guru with deep love that he may lead me to Union with God (Husband)
ستِگُرُسیۄیِبھاءُکرِمےَپِرُدیہُمِلاءِ
بھاؤ کر۔ پریم پیار سے ۔ پر ۔خاوند ۔خدا
مرشد کی خدمت پریم سے پیار کرنسے وہ تھے میرے آقا خدا سے ملا دے گا

ਉਪਾਏ ਆਪੇ ਵੇਖੈ ਕਿਸੁ ਨੇੜੈ ਕਿਸੁ ਦੂਰਿ ॥
sabh upaa-ay aapay vaykhai kis nayrhai kis door.
God created all and He Himself watches over His creation; He is omnipresent.
سبھُاُپاۓآپےۄیکھےَکِسُنیڑےَکِسُدوُرِ
اُپائے۔۔پیدا کئے
خدا سب کوپیدا کرکے ان کی خود ہی نگرانی اورسنبھال کرتا ہے۔ کسی کے لئے نزد اور کوئی دور خیال کرتا ہے

ਜਿਨਿ ਪਿਰੁ ਸੰਗੇ ਜਾਣਿਆ ਪਿਰੁ ਰਾਵੇ ਸਦਾ ਹਦੂਰਿ ॥੧॥
jin pir sangay jaani-aa pir raavay sadaa hadoor. ||1||
She who knows God (Husband) to be always with her, enjoys His Constant Presence. ||1||
جِنِپِرُسنّگےجانھِیاپِرُراۄےسداہدوُرِ
پرراوے ۔خدا سے محفوظ ہونا ۔
جسنے خدا کو حاصرو ناظر سمجھا وہ اُسے حاضر وناظرسمجھکر دلمیں بساتا ہے

ਮੁੰਧੇ ਤੂ ਚਲੁ ਗੁਰ ਕੈ ਭਾਇ ॥
munDhay too chal gur kai bhaa-ay.
O’ Soul, you should Live in harmony with the Guru’s Will.
مُنّدھےتوُچلُگُرکےَبھاءِ
اے انسانمرشد کی رضامین راضی رہ

ਅਨਦਿਨੁ ਰਾਵਹਿ ਪਿਰੁ ਆਪਣਾ ਸਹਜੇ ਸਚਿ ਸਮਾਇ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥
an-din raaveh pir aapnaa sehjay sach samaa-ay. ||1|| rahaa-o.
The souls who contemplate on God day and night, intuitively merge into the True One. ||1||Pause||
اندِنُراۄہِپِرُآپنھاسہجےسچِسماءِ رہاءُ
سہجے ۔قدرتی
اور روز شباسے یاد کر تاکہ قدرتاً ہی حقیقت اور سچائی پاے

ਸਬਦਿ ਰਤੀਆ ਸੋਹਾਗਣੀ ਸਚੈ ਸਬਦਿ ਸੀਗਾਰਿ ॥
sabad ratee-aa sohaaganee sachai sabad seegaar.
The Soul-brides who are happily united with their spouse, adorn themselves with Naam.
سبدِرتیِیاسوہاگنھیِسچےَسبدِسیِگارِ
شبد رتیا کلام سے پرم سے
جن انسانوں کا کلام مرشد سے پیار ہے ۔ وہ خوش قسمت ہیں وہ ہمیشہ الہٰی صفت صلاح کے کلام سے اپنی زندگی کوراہ راست پر لے آتے ہیں

ਹਰਿ ਵਰੁ ਪਾਇਨਿ ਘਰਿ ਆਪਣੈ ਗੁਰ ਕੈ ਹੇਤਿ ਪਿਆਰਿ ॥
har var paa-in ghar aapnai gur kai hayt pi-aar.
Through their love for the Guru, they find their God (Spouse) in their heart.

ہرِۄرُپائِنِگھرِآپنھےَگُرکےَہیتِپِیارِ
ہر ور ۔ خداوند
وہ مرشد کے پریم پیار سے خدا کو اپنے ذہن میں ہی تلاش کر لیتے ہیں

ਸੇਜ ਸੁਹਾਵੀ ਹਰਿ ਰੰਗਿ ਰਵੈ ਭਗਤਿ ਭਰੇ ਭੰਡਾਰ ॥
sayj suhaavee har rang ravai bhagat bharay bhandaar.
Their Spouse lovingly enjoys the beauteous bed (of their hearts), whose storehouses are are filled with devotion.
سیجسُہاۄیِہرِرنّگِرۄےَبھگتِبھرےبھنّڈار
سیج سہادی خوبصورتقلب
اور ان کے ذہن میں ہی پریم سے نمودار ہو جاتا ہے عیال ہو جاتا ہے اور الہٰی پیار کے خزانے بھر جاتے ہیں ۔

ਸੋ ਪ੍ਰਭੁ ਪ੍ਰੀਤਮੁ ਮਨਿ ਵਸੈ ਜਿ ਸਭਸੈ ਦੇਇ ਅਧਾਰੁ ॥੨॥
so parabh pareetam man vasai je sabhsai day-ay aDhaar. ||2||
That Beloved God abides in their minds; He provides sustenance to all. ||2||
سوپ٘ربھُپ٘ریِتمُمنِۄسےَجِسبھسےَدےءِادھارُ
بے سھیسے ۔جو سب کو
جو انسان خدا کی حمد و ثناہ کرتے ہیں اور سب کا مدد گار خدا دل میں آبستا ہے

ਪਿਰੁ ਸਾਲਾਹਨਿ ਆਪਣਾ ਤਿਨ ਕੈ ਹਉ ਸਦ ਬਲਿਹਾਰੈ ਜਾਉ ॥
pir saalaahan aapnaa tin kai ha-o sad balihaarai jaa-o.
I am forever a sacrifice to such bride-souls who praise God. (Their Groom)
پِرُسالاہنِآپنھاتِنکےَہءُسدبلِہارےَجاءُ
میں ان پر قربان ہوںاور وہ خوش قسمت ہو جاتے ہیں

ਮਨੁ ਤਨੁ ਅਰਪੀ ਸਿਰੁ ਦੇਈ ਤਿਨ ਕੈ ਲਾਗਾ ਪਾਇ ॥
man tan arpee sir day-ee tin kai laagaa paa-ay.
I offer to them my body, soul and head, and touch their feet (in reverence)
منُتنُارپیِسِرُدیئیِتِنکےَلاگاپاءِ
من تن ۔۔دل وجان
اور دل وجان پیش کرکے اور سرحوالے کو کے پاؤں پڑتا ہوں

ਜਿਨੀ ਇਕੁ ਪਛਾਣਿਆ ਦੂਜਾ ਭਾਉ ਚੁਕਾਇ ॥
jinee ik pachhaani-aa doojaa bhaa-o chukaa-ay.
because they have recognized the One and renounced the love of duality.
جِنیِاِکُپچھانھِیادوُجابھاءُچُکاءِ
دو جا بھاؤ۔غیروں سے پیار
جنہونں نے دوئی دوئش ختم کرکے واحد حقیقت کی پہچان کی ہے

ਗੁਰਮੁਖਿ ਨਾਮੁ ਪਛਾਣੀਐ ਨਾਨਕ ਸਚਿ ਸਮਾਇ ॥੩॥੨੯॥੬੨॥
gurmukh naam pachhaanee-ai naanak sach samaa-ay. ||3||29||62||
The Guru’s follower recognizes the Naam, O’ Nanak, and is absorbed into the True One. ||3||29||62||
گُرمُکھِنامُپچھانھیِئےَنانکسچِسماءِ
اے نانک الہٰی حضور مین حاضر ہوکر اُسکی محبت میں سر شاد ہوکر ہی نام کی پہچان ہو سکتی ہے ۔

ਸਿਰੀਰਾਗੁ ਮਹਲਾ ੩ ॥
sireeraag mehlaa 3.
Siree Raag, by the Third Guru:

ਹਰਿ ਜੀ ਸਚਾ ਸਚੁ ਤੂ ਸਭੁ ਕਿਛੁ ਤੇਰੈ ਚੀਰੈ ॥
har jee sachaa sach too sabh kichh tayrai cheerai.
O’ God, you are omnipresent, all pervading and your power reins over the whole world.
ہرِجیِسچاسچُتوُسبھُکِچھُتیرےَچیِرےَ
چیرئے ۔ دائرہ اختیار
اے خدا تو سچا ہے صدیوں اور سچ ہے اور سب کچھ تیرے اختیار میں ہے

ਲਖ ਚਉਰਾਸੀਹ ਤਰਸਦੇ ਫਿਰੇ ਬਿਨੁ ਗੁਰ ਭੇਟੇ ਪੀਰੈ ॥
lakh cha-oraaseeh tarasday firay bin gur bhaytay peerai.
Millions keep longing for union with you and are lost because without taking spiritual guidance from the Guru, they are not able to meet you.
لکھچئُراسیِہترسدےپھِرےبِنُگُربھیٹےپیِرےَ
بھیٹے ۔ بغیر ملے ۔ پیڑئے۔ پیر ۔ مرشد
اور بغیرمرشد ۔پیر کے ملاپ کے جوراسی لاکھ اقسام کے جاندار خدا کو سجھنے سے قاصر بھٹکتے ہیں

ਹਰਿ ਜੀਉ ਬਖਸੇ ਬਖਸਿ ਲਏ ਸੂਖ ਸਦਾ ਸਰੀਰੈ ॥
har jee-o bakhsay bakhas la-ay sookh sadaa sareerai.
But when the dear Almighty grants His grace, the soul finds lasting peace.
ہرِجیِءُبکھسےبکھسِلۓسوُکھسداسریِرےَ
جس پر اے خدا تیری رحمت و عنایت ہے اُسکے دلمیں ہمیشہ خوشی و سکون رہتا ہے

ਗੁਰ ਪਰਸਾਦੀ ਸੇਵ ਕਰੀ ਸਚੁ ਗਹਿਰ ਗੰਭੀਰੈ ॥੧॥
gur parsaadee sayv karee sach gahir gambheerai. ||1||
I wish that by Guru’s Grace, I am able to serve the True One (by contemplation on Naam), who is Immeasurably Deep and Profound. ||1||
گُرپرسادیِسیۄکریِسچُگہِرگنّبھیِرےَ
گہر گنبھرے ۔ نہایت سنجیدہ
۔ رحمت مرشد سے سچے سچ اور نہایت سنجیدہ خدا کی خدمت کیجئے

ਮਨ ਮੇਰੇ ਨਾਮਿ ਰਤੇ ਸੁਖੁ ਹੋਇ ॥
man mayray naam ratay sukh ho-ay.
O’ my mind, attuned to the Naam, you shall find peace.

منمیرےنامِرتےسُکھُہوءِ
اے دل نام سچ ۔حق وحقیقت اپنانے سے سکھ حاصل ہوگا

ਗੁਰਮਤੀ ਨਾਮੁ ਸਲਾਹੀਐ ਦੂਜਾ ਅਵਰੁ ਨ ਕੋਇ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥
gurmatee naam salaahee-ai doojaa avar na ko-ay. ||1|| rahaa-o.
Follow the Guru’s Teachings, and praise the Naam; there is no other way.
گُرمتیِنامُسلاہیِئےَدوُجااۄرُنکوءِرہاءُ
سبق مرشد سے صفت صلاح کرؤاسکے علاوہ کوئی دوسرا نہیں

ਧਰਮ ਰਾਇ ਨੋ ਹੁਕਮੁ ਹੈ ਬਹਿ ਸਚਾ ਧਰਮੁ ਬੀਚਾਰਿ ॥
Dharam raa-ay no hukam hai bahi sachaa Dharam beechaar.
Complete justice is always administered under God’s Command.
دھرمراءِنوہُکمُہےَبہِسچادھرمُبیِچارِ
دھرم رائے ۔ الہٰی منصف
الہٰی منصف کوالہٰی حکم ہے کہ سچا انصاف کرئے

ਦੂਜੈ ਭਾਇ ਦੁਸਟੁ ਆਤਮਾ ਓਹੁ ਤੇਰੀ ਸਰਕਾਰ ॥
doojai bhaa-ay dusat aatmaa oh tayree sarkaar.
Those evil souls, enticed and mislead by the love of worldly attachments, are subject to Your Command. (You can award them appropriate punishment)
دوُجےَبھاءِدُسٹُآتمااوہُتیریِسرکار
دشٹ آغا ۔ بد کردار روح
گناہگاروں ۔ بد کاریوں ۔ منکروںو منافقوں پر اسکی حکومت ہے

ਅਧਿਆਤਮੀ ਹਰਿ ਗੁਣ ਤਾਸੁ ਮਨਿ ਜਪਹਿ ਏਕੁ ਮੁਰਾਰਿ ॥
aDhi-aatmee har gun taas man jaapeh ayk muraar.
But the spiritually inclined souls contemplate on One God who is the Treasure of Excellence.
ادھِیاتمیِہرِگُنھتاسُمنِجپہِایکُمُرارِ
اوھیاغی ۔ روحانی زندگی کا مالک
پاک روحیں الہٰی وصفوں میں ملبوس ہیں اور اوصاف کا خزانہ خدا ان میں بستا ہے