Urdu-Raw-Page-19

Page 19

ਦਰਿ ਘਰਿ ਢੋਈ ਨ ਲਹੈ ਦਰਗਹ ਝੂਠੁ ਖੁਆਰੁ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥
dar ghar dho-ee na lahai dargeh jhooth khu-aar. ||1|| rahaa-o.
In this world, you shall not find any shelter; in the world hereafter, being false, you shall suffer. ||1||Pause||
درِگھرِڈھوئیِنلہےَدرگہجھوُٹھُکھُیارُ॥੧॥رہاءُ॥
ڈہوئی ۔ سہارا
خاوند یعنی خدا کے بغیر ٹھکانہ نہیں ملتا ۔الہٰی درگاہ میں جھوٹے ثابت ہوگے اور ذلیل ہو نگے۔

ਆਪਿ ਸੁਜਾਣੁ ਨ ਭੁਲਈ ਸਚਾ ਵਡ ਕਿਰਸਾਣੁ ॥
aap sujaan na bhul-ee sachaa vad kirsaan.
The True Lord Himself knows all; He makes no mistakes. He is the Great Farmer of the Universe.
آپِسُجانھُنبھُلئیِسچاۄڈکِرسانھُ॥
۔ سُبحانھ ۔ دانشمند۔
۔ خدا ایک بھاری دانشمند کسان ہے جو سچا ہے وہ بھولتا نہیں پہلے زمین کی صفائی کرتا ہے

ਪਹਿਲਾ ਧਰਤੀ ਸਾਧਿ ਕੈ ਸਚੁ ਨਾਮੁ ਦੇ ਦਾਣੁ ॥
pahilaa Dhartee saaDh kai sach naam day daan.
First, He prepares the ground, and then He plants the Seed of the True Name.
پہِلادھرتیِسادھِکےَسچُنامُدےدانھُ॥
سادھ کے۔ پاک بناکے ۔
۔ اُسمیں سَچا الہٰی نام سچ ۔ حق و حقیقت بیج بوتا ہے

ਨਉ ਨਿਧਿ ਉਪਜੈ ਨਾਮੁ ਏਕੁ ਕਰਮਿ ਪਵੈ ਨੀਸਾਣੁ ॥੨॥
na-o niDh upjai naam ayk karam pavai neesaan. ||2||
The nine treasures are produced from Name of the One Lord. By His Grace, we obtain His Banner and Insignia. ||2||
نءُنِدھِاُپجےَنامُایکُکرمِپۄےَنیِسانھُ॥੨॥
کرم۔ بخشش۔نیسان ۔ راہداری
۔ انسانی من کی صفائی کے بعد ۔ زمین اور کسان کی تشبیح دی ہے وہاں نام اُگتا ہے ۔یعنینو خزانے الہٰی نام کرم و عنایت سے قبول ہوتا ہے ۔جو انسان سمجھتے ہوئے نہیں سمجھتا اُسے اُسکی تمام زندگی کج روی میں گذر جاتی ہے ۔

ਗੁਰ ਕਉ ਜਾਣਿ ਨ ਜਾਣਈ ਕਿਆ ਤਿਸੁ ਚਜੁ ਅਚਾਰੁ ॥
gur ka-o jaan na jaan-ee ki-aa tis chaj achaar.
Some are very knowledgeable, but if they do not know the Guru, then what is the use of their lives?
گُرکءُجانھِنجانھئیِکِیاتِسُچجُاچارُ॥
۔ چج ۔ سلیقہ ۔ آچار ۔ اخلاق
اُس جاہل نے الہٰی نام بھلائیا ہے۔

ਅੰਧੁਲੈ ਨਾਮੁ ਵਿਸਾਰਿਆ ਮਨਮੁਖਿ ਅੰਧ ਗੁਬਾਰੁ ॥
anDhulai naam visaari-aa manmukh anDh gubaar.
The blind have forgotten the Naam, the Name of the Lord. The self-willed manmukhs are in utter darkness.
انّدھُلےَنامُۄِسارِیامنمُکھِانّدھگُبارُ॥
۔منمکھ ۔ خودی پسند ۔اندھغُبار۔ بھاری اندھیر
خودی پسند ہمیشہ جہالت میں گذر اوقات کرتا ہے ۔ وہ فہم و اخلاق سے بے بہرہ ہے

ਆਵਣੁ ਜਾਣੁ ਨ ਚੁਕਈ ਮਰਿ ਜਨਮੈ ਹੋਇ ਖੁਆਰੁ ॥੩॥
aavan jaan na chuk-ee mar janmai ho-ay khu-aar. ||3||
Their comings and goings in reincarnation do not end; through death and rebirth, they are wasting away. ||3||
آۄنھُجانھُنچُکئیِمرِجنمےَہوءِکھُیارُ॥੩॥
۔چُکئی ۔ ختمنہ ہونا ۔
۔اُسکا تناسخ ختم نہیں ہوتا ۔اور ذلیل و خوار ہوتا ہے

ਚੰਦਨੁ ਮੋਲਿ ਅਣਾਇਆ ਕੁੰਗੂ ਮਾਂਗ ਸੰਧੂਰੁ ॥
chandan mol anaa-i-aa kungoo maaNg sanDhoor.
The bride may buy sandalwood oil and perfumes, and apply them in great quantities to her hair;
چنّدنُمولِانھائِیاکُنّگوُماںگسنّدھوُرُ॥
مول۔ قیمتاً ۔ انائیا ۔ منگوائیا ۔
عورت نے اپنے خاوند کو خوش کرنیکے لئے چندن قیمتاً منگوائیا کیسر منگوایا اور سر میں چیر خوبصورت بنانے کے لئے سند ھور منگوائیا ۔

ਚੋਆ ਚੰਦਨੁ ਬਹੁ ਘਣਾ ਪਾਨਾ ਨਾਲਿ ਕਪੂਰੁ ॥
cho-aa chandan baho ghanaa paanaa naal kapoor.
she may sweeten her breath with betel leaf and camphor,
چویاچنّدنُبہُگھنھاپانانالِکپوُرُ॥
چویا۔ عطر۔
مگر اگر عورت خاوند کو نہ بھائی اچھی نہ لگی تو اُسے عطر ۔ چندن پان اور کپور جو اُسنے منگوایا

ਜੇ ਧਨ ਕੰਤਿ ਨ ਭਾਵਈ ਤ ਸਭਿ ਅਡੰਬਰ ਕੂੜੁ ॥੪॥
jay Dhan kant na bhaav-ee ta sabh adambar koorh. ||4||
but if this bride is not pleasing to her Husband Lord, then all these trappings are false. ||4||
جےدھنکنّتِنبھاۄئیِتسبھِاڈنّبرکوُڑُ॥੪॥
اڈنبر ۔ دکھاوا ۔۔
تب اُسکے یہ دکھاوے کی تمام کوششیں بیکار ہیں ۔

ਸਭਿ ਰਸ ਭੋਗਣ ਬਾਦਿ ਹਹਿ ਸਭਿ ਸੀਗਾਰ ਵਿਕਾਰ ॥
sabh ras bhogan baad heh sabh seegaar vikaar.
Her enjoyment of all pleasures is futile, and all her decorations are corrupt.
سبھِرسبھوگنھبادِہہِسبھِسیِگارۄِکار॥
خدا کو محض دکھاوے سے اَور مذہبی کوششوں سےاُسکی خوشنودی حاصل نہیں ہو سکتی ۔ تمام لذتوں کو لطف جھگڑا ہے ۔اور تمام سجاوٹیں و آرائش بیکار ہے

ਜਬ ਲਗੁ ਸਬਦਿ ਨ ਭੇਦੀਐ ਕਿਉ ਸੋਹੈ ਗੁਰਦੁਆਰਿ ॥
jab lag sabad na bhaydee-ai ki-o sohai gurdu-aar.
Until she has been pierced through with the Shabad, how can she look beautiful at Guru’s Gate?
جبلگُسبدِنبھیدیِئےَکِءُسوہےَگُردُیارِ॥
۔ جب تک انسان کے دل پر سبق مرشد اثر پذیرنہیں ہوجاتا ۔در دولت مرشد پر شہرت یافتہ نہیں ہوتا ۔

ਨਾਨਕ ਧੰਨੁ ਸੁਹਾਗਣੀ ਜਿਨ ਸਹ ਨਾਲਿ ਪਿਆਰੁ ॥੫॥੧੩॥
naanak Dhan suhaaganee jin sah naal pi-aar. ||5||13||
O Nanak, blessed is that fortunate bride, who is in love with her Husband Lord. ||5||13||
نانکدھنّنُسُہاگنھیِجِنسہنالِپِیارُ
اے نانک وہ خدا رسیدہ انسان مبارکباد کے مستحق جنکا اپنےخدا سے پیار ہے ۔

ਸਿਰੀਰਾਗੁ ਮਹਲਾ ੧ ॥
sireeraag mehlaa 1.
Siree Raag, First Mehl:
سِریِراگُمہلا੧॥

ਸੁੰਞੀ ਦੇਹ ਡਰਾਵਣੀ ਜਾ ਜੀਉ ਵਿਚਹੁ ਜਾਇ ॥
sunjee dayh daraavanee jaa jee-o vichahu jaa-ay.
The empty body is dreadful, when the soul goes out from within.
سُنّجنْیِدیہڈراۄنھیِجاجیِءُۄِچہُجاءِ॥
سُنجی ۔ غیر آباد ۔دیہہ۔ جسم ۔
جب روح پرواز کر جاتی ہے تو یہ جسم مرجھا جاتا ہے ۔اور شکل ڈراؤنی ہو جاتی ہے

ਭਾਹਿ ਬਲੰਦੀ ਵਿਝਵੀ ਧੂਉ ਨ ਨਿਕਸਿਓ ਕਾਇ ॥
bhaahi balandee vijhvee Dhoo-o na niksi-o kaa-ay.
The burning fire of life is extinguished, and the smoke of the breath no longer emerges.
بھاہِبلنّدیِۄِجھۄیِدھوُءُننِکسِئوکاءِ॥
بھاہے۔ آگ ۔وجھوی۔ بجھ گئی۔ دھوؤ۔ دھوآں ۔نکسیؤنہ نہ نکلا
جو زندگی کی آگ جلتی تھی بُجھ جاتی ہے ۔سانس نکلنا بند ہو جاتا ہے

ਪੰਚੇ ਰੁੰਨੇ ਦੁਖਿ ਭਰੇ ਬਿਨਸੇ ਦੂਜੈ ਭਾਇ ॥੧॥
panchay runnay dukh bharay binsay doojai bhaa-ay. ||1||
The five relatives (the senses) weep and wail painfully, and waste away through the love of duality. ||1||
پنّچےرُنّنےدُکھِبھرےبِنسےدوُجےَبھاءِ॥੧॥
۔پنچے۔ پانچوں گیان اندرے ، ڈوبے بھائے ۔دوئی۔ دویش ۔ انسے دنیاوی دولت کی محبتیں مٹ گئے
پانچوں گیان اندرےجو دنیاوی دکھ سے بھر کر روئے کیونکہ دوئی دویش میں مشغول رہے

ਮੂੜੇ ਰਾਮੁ ਜਪਹੁ ਗੁਣ ਸਾਰਿ ॥
moorhay raam japahu gun saar.
You fool: chant the Name of the Lord, and preserve your virtue.
موُڑےرامُجپہُگُنھسارِ॥
۔سار۔ سنبھالنا
۔ اے نادان خدا کو یاد کرؤ اور اوصاف کو سنبھالوں۔

ਹਉਮੈ ਮਮਤਾ ਮੋਹਣੀ ਸਭ ਮੁਠੀ ਅਹੰਕਾਰਿ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥
ha-umai mamtaa mohnee sabh muthee ahaNkaar. ||1|| rahaa-o.
Egotism and possessiveness are very enticing; egotistical pride has plundered everyone. ||1||Pause||
ہئُمےَممتاموہنھیِسبھمُٹھیِاہنّکارِ॥੧॥رہاءُ॥
۔ ہوتمے۔ خودی ۔ ممتا ۔ میری ۔موہنی ۔ دلربا۔ دل کو لبھانے والی ۔مٹھی۔ٹھگی ۔ دہوکا ۔اہنگار ۔ تکبر ۔ غرور ۔ گھمنڈ ۔
خودی دوئی ۔ دؤیش اور تکبر نے سب کو لوٹلیا ہے ۔

ਜਿਨੀ ਨਾਮੁ ਵਿਸਾਰਿਆ ਦੂਜੀ ਕਾਰੈ ਲਗਿ ॥
jinee naam visaari-aa doojee kaarai lag.
Those who have forgotten the Naam, the Name of the Lord, are attached to affairs of duality.
جِنیِنامُۄِسارِیادوُجیِکارےَلگِ॥
جنہوں نے دوسرے کاموںمیں مشغول ہوکر خدا کو بھلائیا

ਦੁਬਿਧਾ ਲਾਗੇ ਪਚਿ ਮੁਏ ਅੰਤਰਿ ਤ੍ਰਿਸਨਾ ਅਗਿ ॥
dubiDhaa laagay pach mu-ay antar tarisnaa ag.
Attached to duality, they putrefy and die; they are filled with the fire of desire within.
دُبِدھالاگےپچِمُۓانّترِت٘رِسنااگِ॥
دُبدھا۔ دوچتی۔ پچ۔ خوآر ۔ ذلالت۔
دوئی اور دبدھا میں خواہشات کی آگ میں بھٹکتے رہے اور آخر روحانی موت ہوگئی

ਗੁਰਿ ਰਾਖੇ ਸੇ ਉਬਰੇ ਹੋਰਿ ਮੁਠੀ ਧੰਧੈ ਠਗਿ ॥੨॥
gur raakhay say ubray hor muthee DhanDhai thag. ||2||
Those who are protected by the Guru are saved; all others are cheated and plundered by deceitful worldly affairs. ||2||
گُرِراکھےسےاُبرےہورِمُٹھیِدھنّدھےَٹھگِ॥੨॥
اُبھرے بچے
جنکی مرشد نے حفاظت کی وہ بچ گئے انہیں دنیاوی کاروبار نے لوٹ لیا

ਮੁਈ ਪਰੀਤਿ ਪਿਆਰੁ ਗਇਆ ਮੁਆ ਵੈਰੁ ਵਿਰੋਧੁ ॥
mu-ee pareet pi-aar ga-i-aa mu-aa vair viroDh.
Love dies, and affection vanishes. Hatred and alienation die.
مُئیِپریِتِپِیارُگئِیامُیاۄیَرُۄِیرودھُ॥
ویرؤدھ ۔ ضبط ۔ روک
جو انسان ان گیان اندریوں پر ضبط رکھتا ہے

ਧੰਧਾ ਥਕਾ ਹਉ ਮੁਈ ਮਮਤਾ ਮਾਇਆ ਕ੍ਰੋਧੁ ॥
DhanDhaa thakaa ha-o mu-ee mamtaa maa-i-aa kroDh.
Entanglements end, and egotism dies, along with attachment to Maya, possessiveness and anger.
دھنّدھاتھکاہءُمُئیِممتامائِیاک٘رودھُ॥
موئی ۔ ختم ہوئی
الجھاؤ ختم ہوجاتا ہے ، اور مایا سے لگاؤ ، ملکیت اور غصے کے ساتھ ہی غرور ختم ہوجاتا ہے۔

ਕਰਮਿ ਮਿਲੈ ਸਚੁ ਪਾਈਐ ਗੁਰਮੁਖਿ ਸਦਾ ਨਿਰੋਧੁ ॥੩॥
karam milai sach paa-ee-ai gurmukh sadaa niroDh. ||3||
Those who receive His Mercy obtain the True One. The Gurmukhs dwell forever in balanced restraint. ||3||
کرمِمِلےَسچُپائیِئےَگُرمُکھِسدانِرودھُ॥੩॥
کرم۔ بخشش ۔گورمکھ۔ مر ید مرشد۔ وسیلہ مرشد
اُسے الہٰی کرم و عنایت سے اُسکا خدا سے ملاپ ہو جاتا ہے

ਸਚੀ ਕਾਰੈ ਸਚੁ ਮਿਲੈ ਗੁਰਮਤਿ ਪਲੈ ਪਾਇ ॥
sachee kaarai sach milai gurmat palai paa-ay.
By true actions, the True Lord is met, and the Guru’s Teachings are found.
سچیِکارےَسچُمِلےَگُرمتِپلےَپاءِ॥
سچے اعمال سے سچا رب مل جاتا ہے ، اور گرو کی تعلیمات پائی جاتی ہیں

ਸੋ ਨਰੁ ਜੰਮੈ ਨਾ ਮਰੈ ਨਾ ਆਵੈ ਨਾ ਜਾਇ ॥
so nar jammai naa marai naa aavai naa jaa-ay.
Then, they are not subject to birth and death; they do not come and go in reincarnation.
سونرُجنّمےَنامرےَناآۄےَناجاءِ॥
اُسکا تناسخ ختم ہو جاتا ہے

ਨਾਨਕ ਦਰਿ ਪਰਧਾਨੁ ਸੋ ਦਰਗਹਿ ਪੈਧਾ ਜਾਇ ॥੪॥੧੪॥
naanak dar parDhaan so dargahi paiDhaa jaa-ay. ||4||14||
O Nanak, they are respected at the Lord’s Gate; they are robed in honor in the Court of the Lord. ||4||14||
نانکدرِپردھانُسودرگہِپیَدھاجاءِ
اے نانک وہ الہٰی در پر سرخرو ہوتا ہے اور خلعتیں پاتا ہے

ਸਿਰੀਰਾਗੁ ਮਹਲ ੧ ॥
sireeraag mahal 1.
Siree Raag, First Mehl:
سِریِراگُمہل੧॥

ਤਨੁ ਜਲਿ ਬਲਿ ਮਾਟੀ ਭਇਆ ਮਨੁ ਮਾਇਆ ਮੋਹਿ ਮਨੂਰੁ ॥
tan jal bal maatee bha-i-aa man maa-i-aa mohi manoor.
The body is burnt to ashes; by its love of Maya, the mind is rusted through.
تنُجلِبلِماٹیِبھئِیامنُمائِیاموہِمنوُرُ॥
منور۔ گندا لوہا ۔یا لوہے کی میل ۔
جسم جل کر خاک ہو گیا اور من میل خور لوہے کی مانند ہو گیا

ਅਉਗਣ ਫਿਰਿ ਲਾਗੂ ਭਏ ਕੂਰਿ ਵਜਾਵੈ ਤੂਰੁ ॥
a-ugan fir laagoo bha-ay koor vajaavai toor.
Demerits become one’s enemies, and falsehood blows the bugle of attack.
ائُگنھپھِرِلاگوُبھۓکوُرِۄجاۄےَتوُرُ॥
کھور ۔ باجہ ۔کور ۔ جہوٹھ ۔
۔دولت کے عشق میں بد اعمال ساتھ نہیں چہوڑتے وہ ابھی بھی جھوٹمیں محو شادمانی کرتا ہے۔

ਬਿਨੁ ਸਬਦੈ ਭਰਮਾਈਐ ਦੁਬਿਧਾ ਡੋਬੇ ਪੂਰੁ ॥੧॥
bin sabdai bharmaa-ee-ai dubiDhaa dobay poor. ||1||
Without the Word of the Shabad, people wander lost in reincarnation. Through the love of duality, multitudes have been drowned. ||1||
بِنُسبدےَبھرمائیِئےَدُبِدھاڈوبےپوُرُ॥੧॥
دبدھا۔ دوچتی ۔ بھر مایئے ۔ بھٹکتے رہنا ۔
اور سبق مرشد سے محروم بھٹکتا ہے۔ اور اس دوچتی میں گروہ کے گروہ ڈوب گئے۔

ਮਨ ਰੇ ਸਬਦਿ ਤਰਹੁ ਚਿਤੁ ਲਾਇ ॥
man ray sabad tarahu chit laa-ay.
O mind, swim across, by focusing your consciousness on the Shabad.
منرےسبدِترہُچِتُلاءِ॥
شبد۔ کلام ۔گورمکھ۔ مرید مرشد۔مرشد کے ذریعے ۔
اے دل دل میں سبق مرشد بساؤ ۔

ਜਿਨਿ ਗੁਰਮੁਖਿ ਨਾਮੁ ਨ ਬੂਝਿਆ ਮਰਿ ਜਨਮੈ ਆਵੈ ਜਾਇ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥
jin gurmukh naam na boojhi-aa mar janmai aavai jaa-ay. ||1|| rahaa-o.
Those who do not become Gurmukh do not understand the Naam; they die, and continue coming and going in reincarnation. ||1||Pause||
جِنِگُرمُکھِنامُنبوُجھِیامرِجنمےَآۄےَجاءِ॥੧॥رہاءُ॥
جسنے مرشد کے ذریعے نام نہ سمجھا، سچ حق و حقیقت کی سمجھ نہ آئیوہ تناسخ میں پڑ رہتا ہے

ਤਨੁ ਸੂਚਾ ਸੋ ਆਖੀਐ ਜਿਸੁ ਮਹਿ ਸਾਚਾ ਨਾਉ ॥
tan soochaa so aakhee-ai jis meh saachaa naa-o.
That body is said to be pure, in which the True Name abides.
تنُسوُچاسوآکھیِئےَجِسُمہِساچاناءُ॥
سوچا ۔ پا ک۔
سچا پاک جسماُسے کہا جائے جسمیں سچا نام بستا ہے ۔

ਭੈ ਸਚਿ ਰਾਤੀ ਦੇਹੁਰੀ ਜਿਹਵਾ ਸਚੁ ਸੁਆਉ ॥
bhai sach raatee dayhuree jihvaa sach su-aa-o.
One whose body is imbued with the Fear of the True One, and whose tongue savors Truthfulness,
بھےَسچِراتیِدیہُریِجِہۄاسچُسُیاءُ॥
بھے ۔ خوف۔ سچ۔ حقیقت۔
جسکے اندر الہٰی خوف اور جسم سچ سے لبریز ہو زبان سچ سے مخمور ہو کر بالذت ہو

ਸਚੀ ਨਦਰਿ ਨਿਹਾਲੀਐ ਬਹੁੜਿ ਨ ਪਾਵੈ ਤਾਉ ॥੨॥
sachee nadar nihaalee-ai bahurh na paavai taa-o. ||2||
is brought to ecstasy by the True Lord’s Glance of Grace. That person does not have to go through the fire of the womb again. ||2||
سچیِندرِنِہالیِئےَبہُڑِنپاۄےَتاءُ॥੨॥
ایسے انسان کو بارگاہالہٰی میں پاک نظر سے دیکھا جاتا ہے اُس پر نظر عنایت ہوتی ہے اور عذاب نہیں ملتا

ਸਾਚੇ ਤੇ ਪਵਨਾ ਭਇਆ ਪਵਨੈ ਤੇ ਜਲੁ ਹੋਇ ॥
saachay tay pavnaa bha-i-aa pavnai tay jal ho-ay.
From the True Lord came the air, and from the air came water.
ساچےتےپۄنابھئِیاپۄنےَتےجلُہوءِ॥
ساچے یعنی خدا سے ہوا پیدا ہوئی اور ہوا سے پانی پید ا ہوا

ਜਲ ਤੇ ਤ੍ਰਿਭਵਣੁ ਸਾਜਿਆ ਘਟਿ ਘਟਿ ਜੋਤਿ ਸਮੋਇ ॥
jal tay taribhavan saaji-aa ghat ghat jot samo-ay.
From water, He created the three worlds; in each and every heart He has infused His Light.
جلتےت٘رِبھۄنھُساجِیاگھٹِگھٹِجوتِسموءِ॥
۔ تربھون۔ تینوں عالم ۔ساجیا ۔ بنائیا ۔سموئے۔ پرویش
اور پانی سے تینوں عالم وجود میں آئے اور دل میں الہٰی غور بسا

ਨਿਰਮਲੁ ਮੈਲਾ ਨਾ ਥੀਐ ਸਬਦਿ ਰਤੇ ਪਤਿ ਹੋਇ ॥੩॥
nirmal mailaa naa thee-ai sabad ratay pat ho-ay. ||3||
The Immaculate Lord does not become polluted. Attuned to the Shabad, honor is obtained. ||3||
نِرملُمیَلاناتھیِئےَسبدِرتےپتِہوءِ॥੩॥
راتی۔ متاثر ۔
وہ ہمیشہ پاک رہتا ہے کبھی ناپاک نہیں ہوتا کلام کی محویت سے عزت پاتا ہے

ਇਹੁ ਮਨੁ ਸਾਚਿ ਸੰਤੋਖਿਆ ਨਦਰਿ ਕਰੇ ਤਿਸੁ ਮਾਹਿ ॥
ih man saach santokhi-aa nadar karay tis maahi.
One whose mind is contented with Truthfulness, is blessed with the Lord’s Glance of Grace.
اِہُمنُساچِسنّتوکھِیاندرِکرےتِسُماہِ॥
جب یہ دل سچا اور صابر ہو جاتا ہے اس پر نظر عنانت ہو جاتی ہے