Urdu-Raw-Page-129

ਅਹਿਨਿਸਿਪ੍ਰੀਤਿਸਬਦਿਸਾਚੈਹਰਿਸਰਿਵਾਸਾਪਾਵਣਿਆ॥੫॥
ahinis pareet sabad saachai har sar vaasaa paavni-aa. ||5||
Day and night, through the Guru’s word, he develops love for God and keep dwelling in the divine pool of Naam.
ਗੁਰੂਦੇਸ਼ਬਦਦੀਰਾਹੀਂਉਹਦਿਨਰਾਤਸਦਾ-ਥਿਰਪਰਮਾਤਮਾਵਿਚਪ੍ਰੀਤਿਪਾਂਦਾਹੈ, ਤੇਇਸਤਰ੍ਹਾਂਪਰਮਾਤਮਾਸਰੋਵਰਵਿਚਨਿਵਾਸਹਾਸਲਕਰੀਰੱਖਦਾਹੈ l
اہِنِسِپ٘ریِتِسبدِساچےَہرِسرِۄاساپاۄنھِیا॥੫॥
رات ۔ ساچے ۔ خدا
وہ الہٰی کلام کے ذریعے دن رات خدا سے پیار کرتا ہے (5)

ਮਨਮੁਖੁਸਦਾਬਗੁਮੈਲਾਹਉਮੈਮਲੁਲਾਈ॥
manmukh sadaa bag mailaa ha-umai mal laa-ee.
The self-willed person is always filthy like a crane, smeared with the filth of ego. ਜੇਹੜਾਮਨੁੱਖਆਪਣੇਮਨਦੇਪਿੱਛੇਤੁਰਦਾਹੈ, ਉਹ, ਮਾਨੋ, ਬਗਲਾਹੈ, ਉਹਹਉਮੈਦੀਮੈਲਵਿਚਸਦਾਮੈਲਾਹੈ l
منمُکھُسدابگُمیَلاہئُمےَملُلائیِ
بگ۔ بگلا۔
خودی پسند ۔ من کا مرید وہ بگلے کی مانند ہمیشہ نا پاک ہے اسے خودی کی غلاظت لگی ہوئی ہے ۔

ਇਸਨਾਨੁਕਰੈਪਰੁਮੈਲੁਨਜਾਈ॥
isnaan karai par mail na jaa-ee.
He may bathe at holy places, but filth of ego does not go away.
ਉਹਤੀਰਥਾਂਉੱਤੇਇਸ਼ਨਾਨਭੀਕਰਦਾਹੈਪਰਇਸਤਰ੍ਹਾਂਉਸਦੀਹਉਮੈਦੀਮੈਲਦੂਰਨਹੀਂਹੁੰਦੀ।
اِسنانُکرےَپرُمیَلُنجائیِ॥
پاکھنڈی ۔ پر لیکن ۔ مگر (6)
غسل تو کرتا ہے مگر غلاظت دور نہیں ہوتی

ਜੀਵਤੁਮਰੈਗੁਰਸਬਦੁਬੀਚਾਰੈਹਉਮੈਮੈਲੁਚੁਕਾਵਣਿਆ॥੬॥
jeevat marai gur sabad beechaarai ha-umai mail chukaavani-aa. ||6||
One who dies while yet alive (who gives up the sense of ego while still doing his worldly duties), and reflects on the Guru’s word, is rid off this filth of ego.
ਜੇਹੜਾਮਨੁੱਖਦੁਨੀਆਦੇਕਾਰ-ਵਿਹਾਰਕਰਦਾਹੋਇਆਹੀਆਪਾ-ਭਾਵਵੱਲੋਂਮਰਿਆਰਹਿੰਦਾਹੈ, ਜੇਹੜਾਗੁਰੂਦੇਸ਼ਬਦਨੂੰਆਪਣੇਅੰਦਰਟਿਕਾਈਰੱਖਦਾਹੈ, ਉਹਆਪਣੇਅੰਦਰੋਂਹਉਮੈਦੀਮੈਲਦੂਰਕਰਲੈਂਦਾਹੈ l
جیِۄتُمرےَگُرسبدُبیِچارےَہئُمےَمیَلُچُکاۄنھِیا॥੬॥
۔ سبق مرشد سے زندگی کی منزل مقصود کے بدلے خودی ختم کرکے عاجزی و انکساری میں بدلنے سے جو دی ختم ہوتی ہے (6)

ਰਤਨੁਪਦਾਰਥੁਘਰਤੇਪਾਇਆ॥ਪੂਰੈਸਤਿਗੁਰਿਸਬਦੁਸੁਣਾਇਆ॥
ratan padaarath ghar tay paa-i-aa. poorai satgur sabad sunaa-i-aa.
He, to whom the perfect Guru has recited the holy word, has obtained the jewel like precious wealth of Naam within his heart.
ਜਿਸਮਨੁੱਖਨੂੰਅਭੁੱਲਗੁਰੂਨੇ (ਪਰਮਾਤਮਾਦੀਸਿਫ਼ਤ-ਸਾਲਾਹਦਾ) ਸ਼ਬਦਸੁਣਾਦਿੱਤਾ।ਉਸਨੇ (ਪ੍ਰਭੂਦਾਨਾਮ) ਕੀਮਤੀਰਤਨਆਪਣੇਹਿਰਦੇਵਿਚੋਂਹੀਲੱਭਲਿਆ l
رتنُپدارتھُگھرتےپائِیا॥پوُرےَستِگُرِسبدُسُنھائِیا॥
گھرتے ۔ دل میں ۔ ستگر ۔ سچا مرشد
سے کامل مرشد نے اپنے کلام سبق سنایا اسے اپنے قلب دل میں ہی قیمتی نعمتیں حاصل ہو گئیں

ਗੁਰਪਰਸਾਦਿਮਿਟਿਆਅੰਧਿਆਰਾਘਟਿਚਾਨਣੁਆਪੁਪਛਾਨਣਿਆ॥੭॥
gur parsaad miti-aa anDhi-aaraa ghat chaanan aap pachhaanni-aa. ||7||
By Guru’s Grace, the darkness of spiritual ignorance is dispelled; he has come to recognize the Divine Light within his own heart.
ਗੁਰੂਦੀਕਿਰਪਾਨਾਲਉਸਦੇਅੰਦਰੋਂਅਗਿਆਨਤਾਦਾਹਨੇਰਾਮਿਟਗਿਆ, ਉਸਨੇਹਿਰਦੇਵਿਚਆਤਮਕਜੀਵਨਵਾਲਾਚਾਨਣਪਛਾਣਲਿਆ l
گُرپرسادِمِٹِیاانّدھِیاراگھٹِچاننھُآپُپچھاننھِیا॥੭॥
۔ پرساد۔ رحمت سے ۔ مہربانی سے ۔ آپ ۔ خود
۔ اور مرشد کی رحمت و کرم و عنایت سے جہالت اور لا علمی کا اندھیرا ختم ہو گیا ۔ اور دل پر نور ہوا ۔ اور خویش پہچان ہوئی اور روحانی زندگی کی سمجھ آئی ۔

ਆਪਿਉਪਾਏਤੈਆਪੇਵੇਖੈ॥
aap upaa-ay tai aapay vaykhai.
God Himself creates, and He Himself takes care of the creation.
ਪਰਮਾਤਮਾਆਪ (ਸਭਜੀਵਾਂਨੂੰ) ਪੈਦਾਕਰਦਾਹੈਅਤੇਆਪਹੀ (ਸਭਦੀ) ਸੰਭਾਲਕਰਦਾਹੈ।
آپِاُپاۓتےَآپےۄیکھےَ॥
اُپائے ۔ پیدا کرے ۔ ویکھے ۔ نگران کرئے
خدا نے خود عالم پیدا کیا ہے اور خود ہی اسکا نگراں بھی ہے

ਸਤਿਗੁਰੁਸੇਵੈਸੋਜਨੁਲੇਖੈ॥
satgur sayvai so jan laykhai.
The one who follows the true Guru’steachings is approvedin God’s court.
ਜੇਹੜਾਮਨੁੱਖਗੁਰੂਦਾਆਸਰਾਲੈਂਦਾ, ਉਹ (ਪਰਮਾਤਮਾਦੀਦਰਗਾਹਵਿਚ) ਕਬੂਲਹੋਜਾਂਦਾਹੈ।
ستِگُرُسیۄےَسوجنُلیکھےَ॥
جو سچے مرشد کی خدمت کرتا ہے مقبول ہو جاتا ہے

ਨਾਨਕਨਾਮੁਵਸੈਘਟਅੰਤਰਿਗੁਰਕਿਰਪਾਤੇਪਾਵਣਿਆ॥੮॥੩੧॥੩੨॥
naanak naam vasai ghat antar gur kirpaa tay paavni-aa. ||8||31||32||
O’ Nanak, the Naam dwells deep within the heart; by Guru’s Grace, it is realized.
ਹੇਨਾਨਕ! ਪਰਮਾਤਮਾਦਾਨਾਮਹਿਰਦੇਵਿਚਵੱਸਦਾਹੈ, ਗੁਰੂਦੀਕਿਰਪਾਨਾਲਪ੍ਰਭੂਦਾਨਾਮਪਰਾਪਤਹੁੰਦਾਹੈ l
نانکنامُۄسےَگھٹانّترِگُرکِرپاتےپاۄنھِیا
۔ اے نانک جس کے دل میں الہٰی نام بس جاتا ہے ۔ رحمت مرشد سے اسے الہٰی ملاپ حاصل ہو جاتا ہے

ਮਾਝਮਹਲਾ੩॥
maajh mehlaa 3.
Maajh Raag by the Third Guru:
ماجھمہلا੩॥

ਮਾਇਆਮੋਹੁਜਗਤੁਸਬਾਇਆ॥
maa-i-aa moh jagat sabaa-i-aa.
The entire world is engrossed in emotional attachment to Maya.
ਮਾਇਆਦਾਮੋਹਸਾਰੇਜਗਤਨੂੰਵਿਆਪਰਿਹਾਹੈ l
مائِیاموہُجگتُسبائِیا॥
سبایا۔ بیشمار ۔ بہت زیادہ ۔
سارے عالم میں دولت کی محبت کا تاثر زوروں پر ہے

ਤ੍ਰੈਗੁਣਦੀਸਹਿਮੋਹੇਮਾਇਆ॥
tarai gundeeseh mohay maa-i-aa.
Everybody seems to be under the influence of the three traits of Maya.
ਸਾਰੇਹੀਜੀਵਤਿੰਨਾਂਗੁਣਾਂਦੇਪ੍ਰਭਾਵਹੇਠਹਨ, ਮਾਇਆਦੇਮੋਹੇਹੋਏਹਨ।
ت٘رےَگُنھدیِسہِموہےمائِیا॥
نریگن ۔ تین اوصاف
۔ تمام جانداروں پر تینوں دنیاوی دولت کے اوصاف ، ترقی ، لالچ اور سچائی کے تاثرات غالب نظر آتے ہیں

ਗੁਰਪਰਸਾਦੀਕੋਵਿਰਲਾਬੂਝੈਚਉਥੈਪਦਿਲਿਵਲਾਵਣਿਆ॥੧॥
gur parsaadee ko virlaa boojhai cha-uthai pad liv laavani-aa. ||1||
By Guru’s grace, only a rare one recognize this truth. Subduing these impulses, he attunes his mind to the fourth state of spiritual exaltation called Turya.
ਗੁਰੂਦੀਕਿਰਪਾਨਾਲਕੋਈਵਿਰਲਾਮਨੁੱਖ (ਇਸਗੱਲਨੂੰ) ਸਮਝਦਾਹੈ।ਉਹਇਹਨਾਂਤਿੰਨਾਂਗੁਣਾਂਦੀਮਾਰਤੋਂਉਤਲੀਆਤਮਕਅਵਸਥਾਵਿਚਟਿਕਕੇਪਰਮਾਤਮਾਦੇਚਰਨਾਂਵਿਚਸੁਰਤਜੋੜੀਰੱਖਦਾਹੈ
گُرپرسادیِکوۄِرلابوُجھےَچئُتھےَپدِلِۄلاۄنھِیا॥੧॥
چوتھے پد۔ چوتھا مرتبہ ۔ روحانیت کی بلندی۔ پہلے تینوں اوصاف سے روحانیت کا بلند رتبہ
۔ اسکو رحمت مرشد کبھی کبھار کوئی سمجھتا ہے ۔ جو ان تینوں اوصاف سے بلند ہوکر روحانی عالم میں روحانیت سے رشتہ قائم کرتا ہے

ਹਉਵਾਰੀਜੀਉਵਾਰੀਮਾਇਆਮੋਹੁਸਬਦਿਜਲਾਵਣਿਆ॥
ha-o vaaree jee-o vaaree maa-i-aa moh sabad jalaavani-aa.
I dedicate myself to those, who burn their attachment to maya, by following the Guru’s word. ਮੈਂਉਹਨਾਂਮਨੁੱਖਾਂਤੋਂਸਦਾਸਦਕੇਹਾਂਕੁਰਬਾਨਹਾਂ, ਜੇਹੜੇਗੁਰੂਦੇਸ਼ਬਦਵਿਚਜੁੜਕੇ (ਆਪਣੇਅੰਦਰੋਂ) ਮਾਇਆਦਾਮੋਹਸਾੜਦੇਂਦੇਹਨ।
ہءُۄاریِجیِءُۄاریِمائِیاموہُسبدِجلاۄنھِیا॥
قربان ہوں قربان ان پر جو دولت کی محبت کلام کے تاثر سے ختم کر دیتے ہیں۔

ਮਾਇਆਮੋਹੁਜਲਾਏਸੋਹਰਿਸਿਉਚਿਤੁਲਾਏਹਰਿਦਰਿਮਹਲੀਸੋਭਾਪਾਵਣਿਆ॥੧॥ਰਹਾਉ॥
maa-i-aa moh jalaa-ay so har si-o chit laa-ay har dar mahlee sobhaa paavni-aa. ||1|| rahaa-o.
He who burns away his attachment to Maya and fixes his mind on God’s lotus feet (remembers God with love and devotion), receives honor in God’s court. ਜੇਹੜਾਮਨੁੱਖਮਾਇਆਦਾਮੋਹਸਾੜਲੈਂਦਾਹੈ, ਉਹਪਰਮਾਤਮਾ(ਦੇਚਰਨਾਂ) ਨਾਲਆਪਣਾਚਿਤਜੋੜਲੈਂਦਾਹੈ, ਉਹਪਰਮਾਤਮਾਦੇਦਰਤੇਪਰਮਾਤਮਾਦੀਹਜ਼ੂਰੀਵਿਚਇੱਜ਼ਤਪਾਂਦਾਹੈ l
مائِیاموہُجلاۓسوہرِسِءُچِتُلاۓہرِدرِمہلیِسوبھاپاۄنھِیا॥੧॥رہاءُ॥
جو دولت کا پیار ختم کرلیتے ہیں وہ خدا سے پیار کرتے ہیں الہٰی در پر شہرت پاتے ہیں ۔

ਦੇਵੀਦੇਵਾਮੂਲੁਹੈਮਾਇਆ॥
dayvee dayvaa mool hai maa-i-aa.
The reason for the creation of gods and goddesses is Maya.
ਇਹਮਾਇਆਹੀ (ਭਾਵ, ਸੁਖਾਂਦੀਕਾਮਨਾਤੇਦੁਖਾਂਤੋਂਡਰ) ਦੇਵੀਆਂਦੇਵਤੇਰਚੇਜਾਣਦਾਕਾਰਨਹੈ।
دیۄیِدیۄاموُلُہےَمائِیا॥
مول۔ بنیاد۔
دبوی۔ دبوتے دنیاوی دولت کی بنیاد ہیں

ਸਿੰਮ੍ਰਿਤਿਸਾਸਤਜਿੰਨਿਉਪਾਇਆ॥
simrit saasat jinn upaa-i-aa.
The Smritis and the Shastras (scriptures) were also composed because of Maya. ਇਸਮਾਇਆਨੇਹੀਸਿਮ੍ਰਿਤੀਆਂਤੇਸ਼ਾਸਤ੍ਰਪੈਦਾਕਰਦਿੱਤੇ l
سِنّم٘رِتِساستجِنّنِاُپائِیا॥
سمرت۔ شاشت۔ دھارمک۔ با مذہبی کتابیں
۔ یعنی اس دولت کے لئے ہی دیوی دیوتے وجود میں آئے ہیں ۔ جنہوں نے سمرتیاں اور شاشتر تحریر کئے ہیں

ਕਾਮੁਕ੍ਰੋਧੁਪਸਰਿਆਸੰਸਾਰੇਆਇਜਾਇਦੁਖੁਪਾਵਣਿਆ॥੨॥
kaam kroDh pasri-aa sansaaray aa-ay jaa-ay dukh paavni-aa. ||2||
Lust and anger are pervading the world and people continue to suffer in the cycles of birth and death.
ਸਾਰੇਸੰਸਾਰਵਿਚਸੁਖਾਂਦੀਲਾਲਸਾਤੇਦੁਖਾਂਤੋਂਡਰਦਾਜਜ਼ਬਾਪਸਰਰਿਹਾਹੈ, ਜਿਸਕਰਕੇਜੀਵਜਨਮਮਰਨਦੇਗੇੜਵਿਚਪੈਕੇਦੁਖਪਾਰਹੇਹਨ l
کامُک٘رودھپسرِیاسنّسارےآۓجاءِدُکھُپاۄنھِیا॥੨॥
۔ کام ۔شہوت۔ کرودھ ۔غصہ ۔ پسریا ۔ پھیلیا (2)۔
۔ غصہ اور شہوت سارے عالم میں پھیلا ہوا ہے جس سے انسان تناسخ با آواگون میں پڑکر عذاب پا رہا ہے (2)

ਤਿਸੁਵਿਚਿਗਿਆਨਰਤਨੁਇਕੁਪਾਇਆ॥
tis vich gi-aan ratan ik paa-i-aa.
God has also placed the jewel of divine wisdom in this world.
ਇਸਜਗਤਵਿਚਹੀਇਕਰਤਨਭੀਹੈ, ਉਹਹੈਪਰਮਾਤਮਾਨਾਲਡੂੰਘੀਸਾਂਝਦਾਰਤਨ।
تِسُۄِچِگِیانرتنُاِکُپائِیا॥
گیان۔علم ۔ رتن ۔ قیمتی اشیا۔
اس انسان میں علم کا چراغ خدا سے روشن کیا ہے

ਗੁਰਪਰਸਾਦੀਮੰਨਿਵਸਾਇਆ॥
gur parsaadee man vasaa-i-aa.
By the Guru’s grace, it is enshrined within the mind.
ਇਹਰਤਨਗੁਰੂਦੀਕਿਰਪਾਨਾਲਆਪਣੇਮਨਵਿਚਟਿਕਾਇਆਜਾਂਦਾਹੈ।
گُرپرسادیِمنّنِۄسائِیا॥
۔ جو رحمت مرشد سے اسے دل میں بساتا ہے

ਜਤੁਸਤੁਸੰਜਮੁਸਚੁਕਮਾਵੈਗੁਰਿਪੂਰੈਨਾਮੁਧਿਆਵਣਿਆ॥੩॥
jat sat sanjam sach kamaavai gur poorai naam Dhi-aavani-aa. ||3||
He who meditates on God’s Name, through the perfect Guru’s teachings, earns the merits of celibacy, truthful living, and self-discipline.
ਉਹਮਨੁੱਖਪੂਰੇਗੁਰੂਦੀਰਾਹੀਂਪਰਮਾਤਮਾਦਾਨਾਮਸਿਮਰਦਾਹੈਉਹਮਨੁੱਖ, ਮਾਨੋ, ਸਦਾਟਿਕੇਰਹਿਣਵਾਲਾਜਤਕਮਾਰਿਹਾਹੈਸਤਕਮਾਰਿਹਾਹੈਤੇਸੰਜਮਕਮਾਰਿਹਾਹੈ l
جتُستُسنّجمُسچُکماۄےَگُرِپوُرےَنامُدھِیاۄنھِیا॥੩॥
جت۔ شہوت پر ضبط ۔ ست۔ سچائی ۔ سنجم۔ پرہیز گاری ۔ سچ۔ سچائی (3)
وہ شہوت پر ضبط ، سچائی ، پرہیز گاری اور سچے کام کرتا ہے اور کامل مرشد کی وساطت سے الہٰی نام سچ حق و حقیقت کی ریاض کرتا ہے (3)

ਪੇਈਅੜੈਧਨਭਰਮਿਭੁਲਾਣੀ॥
pay-ee-arhai Dhan bharam bhulaanee.
In this world, the soul-bride who has been deluded by doubt.
ਜੇਹੜੀਜੀਵ-ਇਸਤ੍ਰੀਇਸਲੋਕਵਿਚਮਾਇਆਦੀਭਟਕਣਾਵਿਚਪੈਕੇਕੁਰਾਹੇਪਈਰਹਿੰਦੀਹੈ l
پیئیِئڑےَدھنبھرمِبھُلانھیِ॥
دھن۔ عورت
اس عال میں انسان وہم و گمان میں گمراہ یا بھولا رہا

ਦੂਜੈਲਾਗੀਫਿਰਿਪਛੋਤਾਣੀ॥
doojai laagee fir pachhotaanee.
Attached to duality, she later comes to regret it.
ਉਹਸਦਾਮਾਇਆਦੇਮੋਹਵਿਚਮਗਨਰਹਿੰਦੀਹੈਤੇਆਖ਼ਿਰਪਛੁਤਾਂਦੀਹੈ।
دوُجےَلاگیِپھِرِپچھوتانھیِ॥
۔ دوئی ۔ دویش اور دنیاوی دولت کی محبت میں لگ کر پچھتاتا ہے

ਹਲਤੁਪਲਤੁਦੋਵੈਗਵਾਏਸੁਪਨੈਸੁਖੁਨਪਾਵਣਿਆ॥੪॥
halat palatdovai gavaa-ay supnai sukh na paavni-aa. ||4||
She forfeits both this world and the next, and even in her dreams, she does not find peace. ਉਹਜੀਵ-ਇਸਤ੍ਰੀਇਹਲੋਕਤੇਪਰਲੋਕਦੋਵੇਂਗਵਾਲੈਂਦੀਹੈ, ਉਸਨੂੰਸੁਪਨੇਵਿਚਭੀਆਤਮਕਆਨੰਦਨਸੀਬਨਹੀਂਹੁੰਦਾ l
ہلتُپلتُدوۄےَگۄاۓسُپنےَسُکھُنپاۄنھِیا॥੪॥
۔ ہلت پلت ۔ دونوں جہاں ۔
۔ دونوں عالموں میں اپنی سنہری زندگی کے مواقعات ضائع کر دیے ۔ اس لئے خواب میں بھیروحانی زندگی حاصل نہ وہگیذہنی آرام و آسائش حاصل نہ ہوگا (4)

ਪੇਈਅੜੈਧਨਕੰਤੁਸਮਾਲੇ॥
pay-ee-arhai Dhan kant samaalay.
The soul-bride who remembers her Husband-God in this world,
ਜੇਹੜੀਜੀਵ-ਇਸਤ੍ਰੀਇਸਲੋਕਵਿਚਖਸਮ-ਪ੍ਰਭੂਨੂੰ (ਆਪਣੇਹਿਰਦੇਵਿਚ) ਸੰਭਾਲਰੱਖਦੀਹੈ,
پیئیِئڑےَدھنکنّتُسمالے
پیڑے ۔ اس جہان میں (4)
کنت۔خاوند۔ خدا ۔ سمالے ۔ دل میں بسائے (5)
جو انسان خدا وند کریم کو اس عالم میں اپنے دل میں بساتے ہیں

ਗੁਰਪਰਸਾਦੀਵੇਖੈਨਾਲੇ॥
gur parsaadee vaykhai naalay.
by Guru’s grace, sees Him close at hand.
ਗੁਰੂਦੀਕਿਰਪਾਨਾਲਉਸਨੂੰਆਪਣੇਅੰਗ-ਸੰਗਵੱਸਦਾਵੇਖਦੀਹੈ,
گُرپرسادیِۄیکھےَنالے॥
وہ رحمت مرشد سے اپنے ساتھ پاتے ہیں اور دیدار کرتے ہیں

ਪਿਰਕੈਸਹਜਿਰਹੈਰੰਗਿਰਾਤੀਸਬਦਿਸਿੰਗਾਰੁਬਣਾਵਣਿਆ॥੫॥
pir kai sahj rahai rang raatee sabad singaar banaavani-aa. ||5||
Embellishing herself with Husband-God’s love through the Guru’s word, she intuitively remains imbued with the love of her beloved.
ਉਹਗੁਰੂਦੇਸ਼ਬਦਦੀਰਾਹੀਂਪ੍ਰਭੂ-ਪਤੀਦੇਪ੍ਰੇਮਨੂੰਆਪਣੇਆਤਮਕਜੀਵਨਦਾਸਿੰਗਾਰਬਣਾਂਦੀਹੈ l ਆਤਮਕਅਡੋਲਤਾਵਿਚਟਿਕੀ, ਉਹਪ੍ਰਭੂ-ਪਤੀਦੇਪ੍ਰੇਮ-ਰੰਗਵਿਚਰੰਗੀਰਹਿੰਦੀਹੈ l
پِرکےَسہجِرہےَرنّگِراتیِسبدِسِنّگارُبنھاۄنھِیا॥੫॥
۔ وہ خداوند کریم کے پیار میں محو رہتے ہیں اور کلام الہٰی ان کا ایک سجاوٹ کے لئے زیور ہو جاتا ہے (5)

ਸਫਲੁਜਨਮੁਜਿਨਾਸਤਿਗੁਰੁਪਾਇਆ॥
safal janam jinaa satgur paa-i-aa.
Successful is the human-birth of those who meet with the true Guru.
ਜਿਨ੍ਹਾਂ (ਵਡ-ਭਾਗੀਮਨੁੱਖਾਂ) ਨੂੰਸਤਿਗੁਰੂਮਿਲਪਿਆ, ਉਹਨਾਂਦਾਮਨੁੱਖਾ-ਜਨਮਕਾਮਯਾਬਹੋਜਾਂਦਾਹੈ।
سپھلُجنمُجِناستِگُرُپائِیا॥
جنہوں نے مرشد کا ملاپ حاصل کر لیا انہوں نے اپنی زندگی کامیاب نالی ۔

ਦੂਜਾਭਾਉਗੁਰਸਬਦਿਜਲਾਇਆ॥
doojaa bhaa-o gur sabad jalaa-i-aa.
Through the Guru’s word, they burn their love of duality.
ਗੁਰੂਦੇਸ਼ਬਦਵਿਚਜੁੜਕੇਉਹ (ਆਪਣੇਅੰਦਰੋਂ) ਮਾਇਆਦਾਪਿਆਰਸਾੜਲੈਂਦੇਹਨ।
دوُجابھاءُگُرسبدِجلائِیا
دوجا بھاؤ ۔ خدا کے علاوہ غیروں سے محبت
اور کلام مرشد سے دولت کی محبت ختم کر دی

ਏਕੋਰਵਿਰਹਿਆਘਟਅੰਤਰਿਮਿਲਿਸਤਸੰਗਤਿਹਰਿਗੁਣਗਾਵਣਿਆ॥੬॥
ayko rav rahi-aa ghat antar mil satsangat har gun gaavani-aa. ||6||
Joining the holycongregation, they sing God’s Praises who is pervading deep within their heart.
ਸਾਧਸੰਗਤਨਾਲਜੁੜਕੇਉਹਇਕਵਾਹਿਗੁਰੂਦਾਜੱਸਗਾਇਨਕਰਦੇਹਨਜੋਉਹਨਾਂਦੇਹਿਰਦੇਅੰਦਰਰਮਿਆਹੋਇਆਹੈ।
ایکورۄِرہِیاگھٹانّترِمِلِستسنّگتِہرِگُنھگاۄنھِیا॥੬॥
۔ گھٹ ۔ دل ۔من۔قلب ۔ ایکو ۔ واحد خدا۔ ست ستگت۔ سچے ۔پاکدامنوں کی صحبت و قربت (6)
۔ دل میں واحد خدا بستا ہے ۔ پاکدامنوں کی سچی صحبت و قربت میں الہٰی حمد و ثناہ کرتا ہے (6)

ਸਤਿਗੁਰੁਨਸੇਵੇਸੋਕਾਹੇਆਇਆ॥
satgur na sayvay so kaahay aa-i-aa.
Those who do notfollow the teachings of the True Guru, why did they even come into this world?
ਜੇਹੜਾਮਨੁੱਖਗੁਰੂਦਾਆਸਰਾਪਰਨਾਨਹੀਂਲੈਂਦਾ, ਉਹਦੁਨੀਆਵਿਚਜਿਹਾਆਇਆਜਿਹਾਨਾਹਆਇਆ।
ستِگُرُنسیۄےَسوکاہےآئِیا॥
ستگر سچا مرشد ۔
جو خدمت مرشد نہیں کرتا اسکا پیدا ہونا ہی بیفائدہ ہے

ਧ੍ਰਿਗੁਜੀਵਣੁਬਿਰਥਾਜਨਮੁਗਵਾਇਆ॥
Dharig jeevan birthaa janam gavaa-i-aa.
Accursed is his life, and uselesslywasted is this human life.
ਉਸਦਾਸਾਰਾਜੀਵਨਫਿਟਕਾਰਜੋਗਹੋਜਾਂਦਾਹੈ, ਉਹਆਪਣਾਮਨੁੱਖਾਜਨਮਵਿਅਰਥਗਵਾਜਾਂਦਾਹੈ।
دھ٘رِگُجیِۄنھُبِرتھاجنمُگۄائِیا॥
دتھرگ۔ لعنت زدہ ۔ ملامت زدہ (7)
۔ اسکی زندگی ایک لعنت ہے وہ اپنی زندگی بیکار گنوا لیتا ہے ۔

ਮਨਮੁਖਿਨਾਮੁਚਿਤਿਨਆਵੈਬਿਨੁਨਾਵੈਬਹੁਦੁਖੁਪਾਵਣਿਆ॥੭॥
manmukh naam chit na aavai bin naavai baho dukh paavni-aa. ||7||
The self-willed person does not remember Naam. Without the Naam, he suffers in terrible pain.
ਮਨਮੁਖਦੇਚਿਤਵਿਚ (ਕਦੇ) ਪਰਮਾਤਮਾਦਾਨਾਮਨਹੀਂਵੱਸਦਾ, ਨਾਮਤੋਂਖੁੰਝਕੇਉਹਬਹੁਤਦੁੱਖਸਹਿੰਦਾਹੈ l
منمُکھِنامُچِتِنآۄےَبِنُناۄےَبہُدُکھُپاۄنھِیا॥੭॥
من کے مرید کے دل میں نام نہیں بستا اور نام سچ حق وحقیقت کے بغیر عذاب پاتا ہے (7)

ਜਿਨਿਸਿਸਟਿਸਾਜੀਸੋਈਜਾਣੈ॥
jin sisat saajee so-ee jaanai.
The One who created the Universe, He alone knows all about it.
ਜਿਸਪਰਮਾਤਮਾਨੇਇਹਜਗਤਰਚਿਆਹੈ, ਉਹੀ (ਮਾਇਆਦੇਪ੍ਰਭਾਵਦੀਇਸਖੇਡਨੂੰ) ਜਾਣਦਾਹੈ।
جِنِسِسٹِساجیِسوئیِجانھےَ॥
سٹ ساجی ۔ عالم بنایا ۔ دنیاپیدا کی ۔ سوئی ۔ وہی ۔
جسے یہ عالم پیدا کیا ہے وہی سمجھتا ہے

ਆਪੇਮੇਲੈਸਬਦਿਪਛਾਣੈ॥
aapay maylai sabad pachhaanai.
He unites those with Himself, who realize Him through the Guru’s word.
ਉਹਆਪਹੀ (ਜੀਵਾਂਦੀਆਂਲੋੜਾਂ) ਪਛਾਣਕੇਗੁਰੂਦੇਸ਼ਬਦਦੀਰਾਹੀਂਉਹਨਾਂਨੂੰ (ਆਪਣੇਚਰਨਾਂਵਿਚ) ਮਿਲਾਂਦਾਹੈ।
آپےمیلےَسبدِپچھانھےَ॥
سبد۔ کلام۔
۔ وہی (ضرورتوں) کو سمجھکر پہچان کر کلام مرشد کے ذریعے ملاپ کراتا ہے ۔

ਨਾਨਕਨਾਮੁਮਿਲਿਆਤਿਨਜਨਕਉਜਿਨਧੁਰਿਮਸਤਕਿਲੇਖੁਲਿਖਾਵਣਿਆ॥੮॥੧॥੩੨॥੩੩॥
nanak naam mili-aa tin jan ka-o jin Dhur mastak laykh likhaavani-aa. ||8||1||32||33||
O’ Nanak, only those receive the gift of Naam who are so predestined.
ਹੇਨਾਨਕ! ਉਹਨਾਂਨੂੰਨਾਮਪ੍ਰਾਪਤਹੁੰਦਾਹੈਜਿਨ੍ਹਾਂਦੇਮੱਥੇਉੱਤੋਂਧੁਰੋਂਪ੍ਰਭੂਦੇਹੁਕਮਅਨੁਸਾਰਨਾਮਦੀਪ੍ਰਾਪਤੀਦਾਲੇਖਲਿਖਿਆਜਾਂਦਾਹੈ
نانکنامُمِلِیاتِنجنکءُجِندھُرِمستکِلیکھُلِکھاۄنھِی
دھر۔ الہٰی حضور سے ۔ مستک ۔ پیشانی (8)
اے نانک: ان انسانوں کو ملتا ہے جنکی پیشانی پر خداوند کریم نے تحریر کر رکھا ہے الہٰی فرمان سے ملتا ہے

ਮਾਝਮਹਲਾ੪॥
maajh mehlaa 4.
Maajh Raag, by the fourth Guru:
ماجھمہلا੪॥

ਆਦਿਪੁਰਖੁਅਪਰੰਪਰੁਆਪੇ॥
aad purakh aprampar aapay.
The primal Being is farther than the farthest; everywhere He is all by Himself.
ਪ੍ਰਭੂਸਭਦਾਮੁੱਢਹੈ, ਸਰਬ-ਵਿਆਪਕਹੈ, ਉਸਦੀਹਸਤੀਦਾਪਾਰਲਾਬੰਨਾਨਹੀਂਲੱਭਸਕਦਾ, ਉਹਆਪਣੇਵਰਗਾਆਪਹੀਹੈ l
آدِپُرکھُاپرنّپرُآپے॥
آو۔ آغاز۔ پہلا۔ اپر نپر ۔ زیادہ سے زیادہ ، دور سے دور
خدا سب کا آغاز اور بنیاد ہے جو لا محدود ہے

ਆਪੇਥਾਪੇਥਾਪਿਉਥਾਪੇ॥
aapay thaapay thaap uthaapay.
He Himself creates and He Himself destroys.
ਉਹਆਪਹੀ (ਜਗਤਨੂੰ) ਰਚਦਾਹੈ, ਰਚਕੇਆਪਹੀਇਸਦਾਨਾਸਕਰਦਾਹੈ।
آپےتھاپےتھاپِاُتھاپے॥
۔ تھاپے ۔ پیدا کرے ۔ اتھاپے ۔ مٹائے ۔ ختم کرئے
وہ خود ہی پیدا کرنیوالا اور مٹانے والا ہے ۔

ਸਭਮਹਿਵਰਤੈਏਕੋਸੋਈਗੁਰਮੁਖਿਸੋਭਾਪਾਵਣਿਆ॥੧॥
sabh meh vartai ayko so-ee gurmukh sobhaa paavni-aa. ||1||
The same One pervades in all beings, but the one whofollows the Guru’s teachings attains glory at His door.
ਉਹਪਰਮਾਤਮਾਸਭਜੀਵਾਂਵਿਚਮੌਜੂਦਹੈ (ਫਿਰਭੀਉਹੀਮਨੁੱਖਉਸਦੇਦਰਤੇ) ਸੋਭਾਪਾਂਦਾਹੈਜੋਗੁਰੂਦੇਸਨਮੁਖਰਹਿੰਦਾਹੈ
سبھمہِۄرتےَایکوسوئیِگُرمُکھِسوبھاپاۄنھِیا॥੧॥
۔ درتے ۔ بستا ۔ گورمکھ ۔ مرید مرشد ۔ مرشد کے ذریعے ۔ سوبھا ۔ اچھی شہرنرنکاری ۔ بلاوجود کی پرستس کرنیوالے ۔
سب میں واحد خدا بستا ہے مرید مرشد الہٰی در پر شہرت پاتا ہے ۔

ਹਉਵਾਰੀਜੀਉਵਾਰੀਨਿਰੰਕਾਰੀਨਾਮੁਧਿਆਵਣਿਆ॥
ha-o vaaree jee-o vaaree nirankaaree naam Dhi-aavani-aa.
I dedicate myself to those who meditate on the Name of the formless God with love and devotion.
ਮੈਂਉਹਨਾਂਬੰਦਿਆਂਤੋਂਸਦਾਸਦਕੇਕੁਰਬਾਨਹਾਂ, ਜੇਹੜੇਨਿਰਾਕਾਰਪਰਮਾਤਮਾਦਾਨਾਮਸਿਮਰਦੇਹਨ।
ہءُۄاریِجیِءُۄاریِنِرنّکاریِنامُدھِیاۄنھِیا॥
نام دھیاونیا۔ نام کی ریاض کرنے والے ۔
قربان ہوں قربان ان پر جو بلا وجود بلا آکار خدا کی جسکا نام سچ حق و حقیقت ہے ریاضت و پرستش کرتے ہیں ۔