Urdu-Raw-Page-10

ਜਿਨਿ ਦਿਨੁ ਕਰਿ ਕੈ ਕੀਤੀ ਰਾਤਿ ॥
jin din kar kai keetee raat.
The One who created the day also created the night.
جِنِدِنُکرِکےَکیِتیِراتِ
جتنےدن اور رات بنائے ہیں

ਖਸਮੁ ਵਿਸਾਰਹਿ ਤੇ ਕਮਜਾਤਿ ॥
khasam visaareh tay kamjaat.
Those who forget their Lord and Master are vile and despicable.
کھسمُۄِسارہِتےکمجاتِ
کھسم وسارہ ۔ جو مالک کو بھولتا ہے ۔کمجات ۔ کمینہ۔
جو مالک کو بھلاتا ہے کمینہ ہے

ਨਾਨਕ ਨਾਵੈ ਬਾਝੁ ਸਨਾਤਿ ॥੪॥੩॥
naanak naavai baajh sanaat. ||4||3||
O Nanak, without the Name, they are wretched outcasts. ||4||3||
نانکناۄےَباجھُسناتِ
نانک نام کے بغیر کمینہ نہیں
سنات نیچ

ਰਾਗੁ ਗੂਜਰੀ ਮਹਲਾ ੪ ॥
raag goojree mehlaa 4.
Raag Goojaree, Fourth Mehl:
راگُگوُجریِمہلا

ਹਰਿ ਕੇ ਜਨ ਸਤਿਗੁਰ ਸਤਪੁਰਖਾ ਬਿਨਉ ਕਰਉ ਗੁਰ ਪਾਸਿ ॥
har kay jan satgur satpurkhaa bina-o kara-o gur paas.
O humble servant of the Lord, O True Guru, O True Primal Being: I offer my humble prayer to You, O Guru.
ہرِکےجنستِگُرستپُرکھابِنءُکرءُگُرپاسِ
ہرکے جن۔ الہّٰی خادم۔ ستگرو ۔ سچا مرشد ۔ست پرکھا ۔ سچا انسان
اے الہّٰی خادم ۔ سچے مرشد سچے انسان میں مرشد سے عرض گذارتا ہوں

ਹਮ ਕੀਰੇ ਕਿਰਮ ਸਤਿਗੁਰ ਸਰਣਾਈ ਕਰਿ ਦਇਆ ਨਾਮੁ ਪਰਗਾਸਿ ॥੧॥
ham keeray kiram satgur sarnaa-ee kar da-i-aa naam pargaas. ||1||
I am a mere insect, a worm. O True Guru, I seek Your Sanctuary. Please be merciful, and bless me with the Light of the Naam, the Name of the Lord. ||1||
ہمکیِرےکِرمستِگُرسرنھائیِکرِدئِیانامُپرگاسِ
کیرے کرم،کیڑے ۔ نا چیز ۔ ناتواں۔
۔ ہم ناتواں ۔ ناچیز سچے مرشد کی پناہ میں ہیں از راہ کرم و عنایت الہّٰی نام کی حق و حقیقت کی روشنی پیدا کیجئے

ਮੇਰੇ ਮੀਤ ਗੁਰਦੇਵ ਮੋ ਕਉ ਰਾਮ ਨਾਮੁ ਪਰਗਾਸਿ ॥
mayray meet gurdayv mo ka-o raam naam pargaas.
O my Best Friend, O Divine Guru, please enlighten me with the Name of the Lord.
میرےمیِتگُردیۄموکءُرامنامُپرگاسِ
۔رام نام پرگاس ۔ الہّٰی نام کا نور روشن کر
ناچیز تیری پناہ آیا ہوں ۔اے میرے دوست مرشد مجھے الہّٰی نام کی روشنی ۔نور عنایت کر۔

ਗੁਰਮਤਿ ਨਾਮੁ ਮੇਰਾ ਪ੍ਰਾਨ ਸਖਾਈ ਹਰਿ ਕੀਰਤਿ ਹਮਰੀ ਰਹਰਾਸਿ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥
gurmat naam mayraa paraan sakhaa-ee har keerat hamree rahraas. ||1|| rahaa-o.
Through the Guru’s Teachings, the Naam is my breath of life. The Kirtan of the Lord’s Praise is my life’s occupation. ||1||Pause||
گُرمتِنامُمیراپ٘رانسکھائیِہرِکیِرتِہمریِرہراسِ رہاءُ
رہر اس۔ زندگی کے سفر کا سرمایہ پران سکھائی ۔ زندگی کا ساتھی۔ہرکیرت ہمری رہراس ۔ الہّٰی صفت صلاح میری زندگی کے سفر کا سرمایہ ہے
سبق مرشد کے وسیلے سے ملا ہو نام زندگی کا ساتھی ہے۔ اورالہّٰی صفت صلاح میری زندگی کا سرمایہ۔رہاؤ ۔

ਹਰਿ ਜਨ ਕੇ ਵਡ ਭਾਗ ਵਡੇਰੇ ਜਿਨ ਹਰਿ ਹਰਿ ਸਰਧਾ ਹਰਿ ਪਿਆਸ ॥
har jan kay vad bhaag vadayray jin har har sarDhaa har pi-aas.
The servants of the Lord have the greatest good fortune; they have faith in the Lord, and a longing for the Lord.
ہرِجنکےۄڈبھاگۄڈیرےجِنہرِہرِسردھاہرِپِیاس
۔ جب الہّٰی ۔ نام انہیں حاصل ہو جاتا ہے اُنکی خواہشات مٹ جاتی ہیں۔

ਹਰਿ ਹਰਿ ਨਾਮੁ ਮਿਲੈ ਤ੍ਰਿਪਤਾਸਹਿ ਮਿਲਿ ਸੰਗਤਿ ਗੁਣ ਪਰਗਾਸਿ ॥੨॥
har har naam milai tariptaasahi mil sangat gun pargaas. ||2||
Obtaining the Name of the Lord, Har, Har, they are satisfied; joining the Sangat, the Blessed Congregation, their virtues shine forth. ||2||
ہرِہرِنامُمِلےَت٘رِپتاسہِمِلِسنّگتِگُنھپرگاسِ
رپتا رہاؤ سے ۔ تسکین ۔ تسلی
پاکدامن ساتھیوں کی صحبت و قربت سے ملکر اوصاف پیدا ہوتے ہیں

ਜਿਨ ਹਰਿ ਹਰਿ ਹਰਿ ਰਸੁ ਨਾਮੁ ਨ ਪਾਇਆ ਤੇ ਭਾਗਹੀਣ ਜਮ ਪਾਸਿ ॥
jin har har har ras naam na paa-i-aa tay bhaagheen jam paas.
Those who have not obtained the Sublime Essence of the Name of the Lord, Har, Har, Har, are most unfortunate; they are led away by the Messenger of Death.
جِنہرِہرِہرِرسُنامُنپائِیاتےبھاگہیِنھجمپاسِ
مگر جنہوں نے الہّٰی نام کا لطف نہیں لیا ۔

ਜੋ ਸਤਿਗੁਰ ਸਰਣਿ ਸੰਗਤਿ ਨਹੀ ਆਏ ਧ੍ਰਿਗੁ ਜੀਵੇ ਧ੍ਰਿਗੁ ਜੀਵਾਸਿ ॥੩॥
jo satgur saran sangat nahee aa-ay Dharig jeevay Dharig jeevaas. ||3||
Those who have not sought the Sanctuary of the True Guru and the Sangat, the Holy Congregation-cursed are their lives, and cursed are their hopes of life. ||3||
جوستِگُرسرنھِسنّگتِنہیِآۓدھ٘رِگُجیِۄےدھ٘رِگُجیِۄاسِ
۔ دھرگ جہوے۔ زندگی نعمت ہے
وہ بدقسمت ہیں انہیں الہّٰی سپاہ کی سپردگی میں جانا پڑیگا جنہوں نے سچے مرشد کی صحبت و قربت نہیں کی اُنکی زندگی لعنت ہے اور اُن کا جینا بھی لعنت ہے

ਜਿਨ ਹਰਿ ਜਨ ਸਤਿਗੁਰ ਸੰਗਤਿ ਪਾਈ ਤਿਨ ਧੁਰਿ ਮਸਤਕਿ ਲਿਖਿਆ ਲਿਖਾਸਿ ॥
jin har jan satgur sangat paa-ee tin Dhur mastak likhi-aa likhaas.
Those humble servants of the Lord who have attained the Company of the True Guru, have such pre-ordained destiny inscribed on their foreheads.
جِنہرِجنستِگُرسنّگتِپائیِتِندھُرِمستکِلِکھِیالِکھاسِ
مستک ۔ پیشانی۔
جنہوں نے سچے مرشد کی صحبت وقربتحاصل کی اُن کی پیشانی پر الہّٰی حضور سے درج ہے

ਧਨੁ ਧੰਨੁ ਸਤਸੰਗਤਿ ਜਿਤੁ ਹਰਿ ਰਸੁ ਪਾਇਆ ਮਿਲਿ ਜਨ ਨਾਨਕ ਨਾਮੁ ਪਰਗਾਸਿ ॥੪॥੪॥
Dhan Dhan satsangat jit har ras paa-i-aa mil jan naanak naam pargaas. ||4||4||
Blessed, blessed is the Sat Sangat, the True Congregation, where the Lord’s Essence is obtained. Meeting with His humble servant, O Nanak, the Light of the Naam shines forth. ||4||4||
دھنُدھنّنُستسنّگتِجِتُہرِرسُپائِیامِلِجننانکنامُپرگاسِ
۔مل جن۔ خادمان الہٰٗی سے ملاپ ۔
آفرین ہے سچا ساتھ ۔ جسمیں الہّٰی نام کا لطف ملتا ہے ۔جہاں خادمان کے ملاپ سے دل میں الہّٰی نام بس جاتا ہے۔

ਰਾਗੁ ਗੂਜਰੀ ਮਹਲਾ ੫ ॥
raag goojree mehlaa 5.
Raag Goojaree, Fifth Mehl:
راگُگوُجریِمہلا 5

ਕਾਹੇ ਰੇ ਮਨ ਚਿਤਵਹਿ ਉਦਮੁ ਜਾ ਆਹਰਿ ਹਰਿ ਜੀਉ ਪਰਿਆ ॥
kaahay ray man chitvahi udam jaa aahar har jee-o pari-aa.
Why, O mind, do you plot and plan, when the Dear Lord Himself provides for your care?
کاہےرےمنچِتۄہِاُدمُجاآہرِہرِجیِءُپرِیا
کاہے۔ کیوں ۔ چتو ہے ۔ کیوں سوچتا ہے ۔ کیوں شکل یا فکر محسوس کرتا ہے اسکے لئے اُوم ۔جہد ۔آہر ۔ تردد کرتا ہے اسمیں پڑا ہے
اے دل تو کیوں فکر مند ہے ۔ خدا خود اس کام میں لگا ہوا ہے

ਸੈਲ ਪਥਰ ਮਹਿ ਜੰਤ ਉਪਾਏ ਤਾ ਕਾ ਰਿਜਕੁ ਆਗੈ ਕਰਿ ਧਰਿਆ ॥੧॥
sail pathar meh jant upaa-ay taa kaa rijak aagai kar Dhari-aa. ||1||
From rocks and stones He created living beings; He places their nourishment before them. ||1||
سیَلپتھرمہِجنّتاُپاۓتاکارِجکُآگےَکرِدھرِیا
پتھر میں جاندار پیدا کئے ہیں۔ ان کا رزق بھی اُنکو پہنچاتا ہے
جو جاندار پتھرؤں میں پیدا کیئے ہوئے ہیں اُنکے لئے رزق پہلے ہی مہیا کیا ہوا ہے

ਮੇਰੇ ਮਾਧਉ ਜੀ ਸਤਸੰਗਤਿ ਮਿਲੇ ਸੁ ਤਰਿਆ ॥
mayray maaDha-o jee satsangat milay so tari-aa.
O my Dear Lord of souls, one who joins the Sat Sangat, the True Congregation, is saved.
میرےمادھءُجیِستسنّگتِمِلےسُترِیا
مادھوجی ۔ اے خدا۔ ست سنگت ۔ سچی صحبت۔ قربت۔ سوتریا۔ وہ کامیاب ہوا
۔ اے خدا جو انسان پاکدامن خدا رسیدوں کی صحبت و قربت کرتے ہیں ۔ وہ رحمت مرشد سے اس فکر و تردد سے بچ جاتے ہیں

ਗੁਰ ਪਰਸਾਦਿ ਪਰਮ ਪਦੁ ਪਾਇਆ ਸੂਕੇ ਕਾਸਟ ਹਰਿਆ ॥੧॥ ਰਹਾਉ ॥
gur parsaad param pad paa-i-aa sookay kaasat hari-aa. ||1|| rahaa-o.
By Guru’s Grace, the supreme status is obtained, and the dry wood blossoms forth again in lush greenery. ||1||Pause||
گُرپرسادِپرمپدُپائِیاسوُکےکاسٹہرِیارہاءُ
گر پرساد۔ رحمت مرشد سے ۔پرم پد ۔ بلند رتبہ ۔سوکے کاسٹ ۔ سوکھی لکڑی ۔ہریا ۔ ہرَ ی ہو گئی ۔رہاؤ
رحمت مرشد سے اونچا رتبہ ملتا ہے اور سو کھا ہرا ہو جاتا ہے ۔رہاؤ

ਜਨਨਿ ਪਿਤਾ ਲੋਕ ਸੁਤ ਬਨਿਤਾ ਕੋਇ ਨ ਕਿਸ ਕੀ ਧਰਿਆ ॥
janan pitaa lok sut banitaa ko-ay na kis kee Dhari-aa.
Mothers, fathers, friends, children and spouses-no one is the support of anyone else.
جننِپِتالوکسُتبنِتاکوءِنکِسکیِدھرِیا
جنس۔ جننے والی ۔جنم دینے والی ۔ ماتا ۔سُت۔ بیٹابنتا ۔ زؤجہ ۔ بیوی۔دھریا۔ آسرا
ماں باپ ۔ بیٹا کسی کو کسی کا سہار انہیں

ਸਿਰਿ ਸਿਰਿ ਰਿਜਕੁ ਸੰਬਾਹੇ ਠਾਕੁਰੁ ਕਾਹੇ ਮਨ ਭਉ ਕਰਿਆ ॥੨॥
sir sir rijak sambaahay thaakur kaahay man bha-o kari-aa. ||2||
For each and every person, our Lord and Master provides sustenance. Why are you so afraid, O mind? ||2||
سِرِسِرِرِجکُسنّباہےٹھاکُرُکاہےمنبھءُکرِیا
سنبا ہے۔ پہنچاتا ہے ۔سرسر ۔ہر ایک کو
اےدل تجھے کونسا خوف ہے پروردگار خدا خود ایک جاندار کو خود روزی دیتا ہے

ਊਡੇ ਊਡਿ ਆਵੈ ਸੈ ਕੋਸਾ ਤਿਸੁ ਪਾਛੈ ਬਚਰੇ ਛਰਿਆ ॥
ooday ood aavai sai kosaa tis paachhai bachray chhari-aa.
The flamingoes fly hundreds of miles, leaving their young ones behind.
اوُڈےاوُڈِآۄےَسےَکوساتِسُپاچھےَبچرےچھرِیا
۔اُوڑے ۔ اُڑتی ہیں۔ سلئے ۔ سینکڑے ۔ تس پاچھے ۔ اُسکے پیچھے ۔ بچرتے ۔بچے ۔ چھریا۔ چھوڑ آئے
سارس سینکڑوں میلو ں سے اڑ کر آتی ہے اور اپنے بچے پیچھےچھوڑ آتی ہے

ਤਿਨ ਕਵਣੁ ਖਲਾਵੈ ਕਵਣੁ ਚੁਗਾਵੈ ਮਨ ਮਹਿ ਸਿਮਰਨੁ ਕਰਿਆ ॥੩॥
tin kavan khalaavai kavan chugaavai man meh simran kari-aa. ||3||
Who feeds them, and who teaches them to feed themselves? Have you ever thought of this in your mind? ||3||
تِنکۄنھُکھلاۄےَکۄنھُچُگاۄےَمنمہِسِمرنُکرِیا
کون چگاوے ۔ کون کھلاتا ہے ۔سمرن ۔دھیان ۔ یاد کرنا
اُن کو کون کھلاتا ہے۔ کون چوگادیتا ہے ۔وہ اپنے بچوں کو دل میں یاد کرتی ہے

ਸਭਿ ਨਿਧਾਨ ਦਸ ਅਸਟ ਸਿਧਾਨ ਠਾਕੁਰ ਕਰ ਤਲ ਧਰਿਆ ॥
sabh niDhaan das asat sidhaan thaakur kar tal Dhari-aa.
All the nine treasures, and the eighteen supernatural powers are held by our Lord and Master in the Palm of His Hand.
سبھِنِدھاندساسٹسِدھانٹھاکُرکرتلدھرِیا
سب ندھان ۔ سارے خزانے ۔ دس اسٹ ۔ سدھان ۔ اَٹھاراں ۔ سدھیان ۔ کرمائی طاقتیں ۔ ٹھاکر کرتل دھریا۔ آقا کے ہاتھوں کی ہتھیلی پرہیں
سارے خزانے اور اٹھاراں کر ماتی طاقتیں اُس مالک کے ہاتھ کی ہتھیلی پر ہیں مراد اُسکے زیر احکام ہیں

ਜਨ ਨਾਨਕ ਬਲਿ ਬਲਿ ਸਦ ਬਲਿ ਜਾਈਐ ਤੇਰਾ ਅੰਤੁ ਨ ਪਾਰਾਵਰਿਆ ॥੪॥੫॥
jan naanak bal bal sad bal jaa-ee-ai tayraa ant na paraavari-aa. ||4||5||
Servant Nanak is devoted, dedicated, forever a sacrifice to You, Lord. Your Expanse has no limit, no boundary. ||4||5||
جننانکبلِبلِسدبلِجائیِئےَتیراانّتُنپاراۄرِیا
۔ خادم نانک سو بار قربان ہے ۔ تیرا انت نہ پائے اوریا ۔ اے خدا تیرا شمار نہیں ہو سکتا تو لا محدود ہے ۔
خادم نانک سو بار قربان ہے اُن پر اَے خدا تیرے اعداد و شمار لا محدود ہیں

ਰਾਗੁ ਆਸਾ ਮਹਲਾ ੪ ਸੋ ਪੁਰਖੁ
raag aasaa mehlaa 4 so purakh
Raag Aasaa, Fourth Mehl, So Purakh ~ That Primal Being:
راگُآسامہلاسوپُرکھُ

ੴ ਸਤਿਗੁਰ ਪ੍ਰਸਾਦਿ ॥
ik-oNkaar satgur parsaad.
One Universal Creator God. By The Grace Of The True Guru:
اک اونکارستِگُرپ٘رسادِ
ایک عمودی حقیقت تمام تخلیقات میں ظاہر ہےاسکا نام ابدی سچائی ہے رحمت مرشد سے اسکی سمجھ آتی ہے

ਸੋ ਪੁਰਖੁ ਨਿਰੰਜਨੁ ਹਰਿ ਪੁਰਖੁ ਨਿਰੰਜਨੁ ਹਰਿ ਅਗਮਾ ਅਗਮ ਅਪਾਰਾ ॥
so purakh niranjan har purakh niranjan har agmaa agam apaaraa.
That Primal Being is Immaculate and Pure. The Lord, the Primal Being, is Immaculate and Pure. The Lord is Inaccessible, Unreachable and Unrivalled.
سوپُرکھُنِرنّجنُہرِپُرکھُنِرنّجنُہرِاگمااگماپارا
سوپر کھ ۔ نرنجن ۔ وہ پاک خدا جو تمام آلائشوں سے پاک ہے اور انسانی رسائی سے بالادست ہے
خدا آلائش سے پاک بیداغ ،انسانیرسائی سے بالادست اَور لا محدود ہے

ਸਭਿ ਧਿਆਵਹਿ ਸਭਿ ਧਿਆਵਹਿ ਤੁਧੁ ਜੀ ਹਰਿ ਸਚੇ ਸਿਰਜਣਹਾਰਾ ॥
sabh Dhi-aavahi sabh Dhi-aavahi tuDh jee har sachay sirjanhaaraa.
All meditate, all meditate on You, Dear Lord, O True Creator Lord.
سبھِدھِیاۄہِسبھِدھِیاۄہِتُدھُجیِہرِسچےسِرجنھہارا
سب سبھ دھیادیہہ ۔جسکی سارے ریا ض کرتے ہیں۔ ہر سچے سرجنہار ۔ اَے سچے ساز گار ،کارساز
۔ اے خدا سارے تجھ میں دھیان لگاتے ہیں ۔

ਸਭਿ ਜੀਅ ਤੁਮਾਰੇ ਜੀ ਤੂੰ ਜੀਆ ਕਾ ਦਾਤਾਰਾ ॥
sabh jee-a tumaaray jee tooN jee-aa kaa daataaraa.
All living beings are Yours-You are the Giver of all souls.
سبھِجیِءتُمارےجیِتوُنّجیِیاکاداتارا
داتار، رازق
اَے سچے سازندہ خدا سارے جاندار تیرے ہیں تو جانداروں کارازق ہے

ਹਰਿ ਧਿਆਵਹੁ ਸੰਤਹੁ ਜੀ ਸਭਿ ਦੂਖ ਵਿਸਾਰਣਹਾਰਾ ॥
har Dhi-aavahu santahu jee sabh dookh visaaranhaaraa.
Meditate on the Lord, O Saints; He is the Dispeller of all sorrow.
ہرِدھِیاۄہُسنّتہُجیِسبھِدوُکھۄِسارنھہارا
وسارنھار ۔ بھلا نیوالا
۔سارے خدا رسیدہ پاکدامن تجھ میں دھیان لگاتے ہیں۔تو سب کے عذاب مٹا نیوالا ہے

ਹਰਿ ਆਪੇ ਠਾਕੁਰੁ ਹਰਿ ਆਪੇ ਸੇਵਕੁ ਜੀ ਕਿਆ ਨਾਨਕ ਜੰਤ ਵਿਚਾਰਾ ॥੧॥
har aapay thaakur har aapay sayvak jee ki-aa naanak jant vichaaraa. ||1||
The Lord Himself is the Master, the Lord Himself is the Servant. O Nanak, the poor beings are wretched and miserable! ||1||
ہرِآپےٹھاکُرُہرِآپےسیۄکُجیِکِیانانکجنّتۄِچارا
ہر آپے ٹھا کر آقا ہے ۔ آپے سیوک۔ خود ہی خادم جنت ۔ جاندار
اَے خدا تو خود ہی آقا ہے خود ہی خادم ۔ عاجز نانک کیا ہے ۔